Page 1 of 9 123 ... LastLast
Results 1 to 15 of 124

Thread: سفرِ سوات 2016 ۔ تصویری سفرنامہ

  1. #1
    Site Managers

    Join Date
    Jun 2007
    Location
    پاکستان
    Posts
    54,986

    سفرِ سوات 2016 ۔ تصویری سفرنامہ

    بسم اللہ الرحمٰن الرحیم
    سوات کو ہم نے آخری بار سنہ 2000 میں زمانہِ طالبعلمی میں دیکھا تھا۔ اس سال جون کے بالکل آغاز میں ہم پھر سے عازمِ سوات ہوئے۔ چار دن کے اس ٹرپ میں کالام سے پہلے پہلے بے تحاشا گرمی کھائی۔ البتہ کالام میں موسم شاندار اور خوشگوار تھا۔ کالام کے علاوہ مہوڈنڈ جھیل کی سیر بھی کی اور واپسی پہ شانگلہ پاس کے راستے سے آئے۔ شانگلہ پاس والا راستہ میں نے پہلی بار دیکھا اور یہ بلاشبہ بہت خوبصورت علاقہ ہے۔ بلکہ اگر میں یہ کہوں کہ کالام سے مہوڈنڈ جھیل کے راستے کے علاوہ اس پورے سفر میں خوبصورت ترین علاقہ شانگلہ پاس خصوصاً الپوری کے آس پاس کا تھا تو کچھ ایسا غلط نہ ہو گا۔


    سفر کی تفصیل کچھ یوں رہی۔
    پہلا دن: صبح راولپنڈی سے براستہ موٹروے روانگی۔ رشکئی انٹرچینج پہ موٹروے سے اتر کر مردان، تخت بھائی، درگئی، مالاکنڈ پاس سے ہوتے ہوئے مینگورہ میں فضاگٹ پارک گئے، جس کو دیکھ کے ازحد مایوسی ہوئی۔ مینگورہ سے کچھ آگے ایک ہوٹیل میں رات گزاری۔


    دوسرا دن: صبح اٹھ کر میاندم گئے جہاں 16 سال قبل بھی گئے تھے۔ تاہم حیرانی، مایوسی اور کچھ خوشی بھی ہوئی کہ میاندم میں ایک بھی سیاح نہیں تھا۔ نیز یہ کہ گرمی بھی کافی تھی۔ میاندم سے نکلے تو مدین، بحرین سے ہوتے ہوئے کالام کی راہ لی۔ بحرین تک سڑک شاندار ہے۔ البتہ بحرین سے آگے کالام تک سڑک کا نام و نشان بھی نہیں ہے۔ بحرین سے آگے 34 کلومیٹر کا یہ سفر پونے تین گھنٹے میں طے ہوا۔ میں نے اس سے بدترین سڑک کبھی نہیں دیکھی۔ ہماری گاڑی نے ہمیں کافی بددعائیں دی ہوں گی۔
    مزید المناک بات یہ سامنے آئی کہ کالام کی اپنی حالت بھی غیر تھی۔ وہاں بھی صرف گنتی کے ٹورسٹ دکھائی دے رہے تھے۔ کالام کے مین بازار کا کافی حصہ 2010 کے سیلاب میں دریا برد ہو گیا تھا، اور ابھی تک اسی حالت میں ہے۔ جو حصہ بچ گیا تھا، وہ بھی کافی حد تک ویران دکھائی دے رہا تھا۔ یہ وہ کالام نہیں تھا جو ہم نے جون 2000 میں دیکھا تھا۔ اس وقت تو یہاں ایسی رونق دیکھی تھی جیسی اب ناران وغیرہ میں ہوتی ہے۔


    تیسرا دن: یہ سارا دن مہوڈنڈ جھیل کے لئے وقف تھا۔ اس راستے پہ بہت سے گلیشیئر ابھی بھی موجود تھے تو اپنی گاڑی پہ جانا ہنوز ممکن نہ تھا، لہٰذا جیپ ہائر کی گئی۔ ہم چونکہ سیاحتی سیزن کے آغاز سے قبل ہی آ گئے تھے اور مہوڈنڈ کا راستہ کھلے ہوئے بھی تقریباً دو ہفتے ہی ہوئے تھے تو ابھی زیادہ رش بھی نہیں تھا اور ابھی تک یہ علاقہ اس گند اور کوڑا کرکٹ سے بھی بچا ہوا تھا جو کہ سیاحت کے سیزن کے دوران ہمارے تمام خوبصورت علاقوں میں ضرور دکھائی دیتا ہے۔ یہ دن بہت شاندار رہا۔ موسم بھی شاندار تھا اور یہ علاقہ بھی جنت سے کم نہیں۔


    چوتھا دن: اس دن واپسی کی راہ لی۔ اللہ اللہ کر کے کالام سے بحرین کا سفر اڑھائی گھنٹے سے کچھ کم میں مکمل کیا۔ بحرین سے خواضخیلہ اور وہاں سے بائیں جانب یعنی شانگلہ پاس کو جانے والی سڑک پکڑی۔یہ بہت ہی شاندار سڑک تھی۔ شانگلہ ٹاپ تک جانے کا تو گویا پتا ہی نہیں چلا۔ شانگلہ ٹاپ کے بعد اصل خوبصورت علاقہ شروع ہوتا ہے۔ ضلع شانگلہ کے صدر مقام یعنی الپوری کی لوکیشن تو کمال کی ہے۔ خیر تقریباً 3 گھنٹے میں خواضخیلہ سے بشام پہنچے۔ بشام کے مقام پہ آ کے ہم قراقرم ہائی وے سے آ ملے۔ قراقرم ہائی وے سے راولپنڈی کا سفر شروع کیا جو کہ تقریباً 8 گھنٹے میں مکمل ہوا۔ بشام سے راولپنڈی کے راستے میں تھاکوٹ، بٹگرام، چھتر پلین، شنکیاری، مانسہرہ، ایبٹ آباد، ہری پور، حسن ابدال وغیرہ آتے ہیں۔ نیز یہ کہ ان مہینوں میں شنکیاری سے حسن ابدال تک اس سڑک پہ بے تحاشا بلکہ بے تحاشا ترین رش ہوتا ہے۔


    تصویری کوریج: سالِ گزشتہ کے تلخ تجربے (جس میں ہمارے پھسڈی کیمرے کی بیٹری وفات پا گئی تھی) اس دفعہ ہم کافی پہلے ایک عدد ڈی ایس ایل آر کیمرہ یعنی نائیکون ڈی 5200 لے چکے تھے۔ لینز سادہ سا ہی تھا یعنی اٹھارہ پچپن ایم ایم والا ۔ اگرچہ ڈی ایس ایل آر کے استعمال میں ہم ابھی مبتدی کی سٹیج پہ ہی ہیں۔ تاہم اس ٹرپ کے دوران زیادہ تر فل آٹو میٹک موڈ کی مدد سے ہی تصویر کشی کی۔ جس کی وجہ سے کچھ تصاویر اوور ایکسپوز اور کچھ انڈر ایکسپوز بھی ہوئیں، تاہم چونکہ ہم نے تقریباً ہر مقام پہ مختلف سیٹنگز کے ساتھ تصاویر بنائیں تو کافی تصاویر قابلِ قبول یا اس سے کچھ بہتر کوالٹی کی بھی رہیں۔
    اگلی پوسٹس میں تصاویر بمعہ مختصر تفصیل پیشِ خدمت ہیں۔

  2. #2
    Site Managers

    Join Date
    Jun 2007
    Location
    پاکستان
    Posts
    54,986
    پہلے دن اتنی گرمی تھی کہ راستے میں کہیں رکنے کی ہمت نہ ہوئی اور پہلا باقاعدہ سٹاپ عین مینگورہ پہنچ کر فضاگٹ پارک میں ہوا۔ اور سفر کی پہلی تصویر بھی فضاگٹ پارک میں ہی کھینچی۔ فضاگٹ پارک کے بارے میں میں نے مختلف لوگوں کے سفرناموں میں پڑھا تھا اور چونکہ سولہ سال پہلے کے سفر میں یہ پارک نہیں دیکھ سکے تھے تو ابھی تک اس پہ پچھتایا کرتے تھے کہ کیوں ایسا جنت نظیر پارک مس کر دیا۔ میرا خیال تھا کہ یہ کافی بڑا پارک ہو گا اور عین دریا کے کنارے واقع ہو گا۔ اب جو دیکھا تو شدید مایوسی ہوئی۔ ایک تو پارک توقعات سے بہت ہی چھوٹا تھا، یعنی کئی چھوٹے شہروں کی رہائشی کالونیوں کے پارک اس سے بڑے ہوں گے۔ دوسرا یہ کہ پارک دریا کنارے تو تھا، لیکن دریا سے کافی عمودی بلندی پہ تھا، یعنی دریا میں جانا یا دریا کے پانی کو چھونا اسی صورت ممکن تھا جب کوئی آپ کو پیچھے سے دھکا دے دے، یا آپ خود ہی آتما ہتیا وغیرہ کا ارادہ رکھتے ہوں۔
    خیر یہ رہیں فضاگٹ پارک میں لی گئی تصاویر




  3. #3
    Site Managers

    Join Date
    Jun 2007
    Location
    پاکستان
    Posts
    54,986
    مزید فضاگٹ




  4. #4
    Site Managers

    Join Date
    Jun 2007
    Location
    پاکستان
    Posts
    54,986
    مینگورہ سے کچھ آگے نکلے تو دریا کنارے ایک ریسٹورنٹ دیکھ کر وہیں کھانا کھانے کو رک گئے۔ یہ جگہ فضاگٹ سے بہتر لگی کہ یہاں دریا کے ٹھنڈے ٹھار پانی میں جا کے گرمی دور کرنا ممکن تھا۔







  5. #5
    Site Managers

    Join Date
    Jun 2007
    Location
    پاکستان
    Posts
    54,986
    اگلے دن پہلے میاندم گئے۔ میاندم جانے کے لئے فتح پور نامی جگہ سے دائیں مڑ کر تقریباً آدھے گھنٹے کی ڈرائیو ہے۔ سڑک کافی بہتر حالت میں ہے، تاہم میاندم بذاتِ خود زیادہ بہتر حالت میں نہیں ہے (سیاحت کے نکتہ نظر سے)۔





  6. #6
    Site Managers

    Join Date
    Jun 2007
    Location
    پاکستان
    Posts
    54,986
    میاندم میں پی ٹی ڈی سی ریسٹ ہاؤس کے باہر ایک بورڈ پر لوکل ٹریکس کی کچھ تفصیل درج تھی۔


  7. #7
    Site Managers

    Join Date
    Jun 2007
    Location
    پاکستان
    Posts
    54,986
    میاندم سے واپس سوات کی مین روڈ پہ آئے اور کالام کی جانب سفر کا آغاز کیا۔ بحرین تک سڑک بہت شاندار حالت میں ہے۔




  8. #8
    Site Managers

    Join Date
    Jun 2007
    Location
    پاکستان
    Posts
    54,986
    مدین اور بحرین کے قرب و جوار میں وادیِ سوات اور دریا کے مناظر





  9. #9
    Site Managers

    Join Date
    Jun 2007
    Location
    پاکستان
    Posts
    54,986
    مدین اور بحرین کے قرب و جوار میں وادیِ سوات اور دریا کے مناظر





  10. #10
    Site Managers

    Join Date
    Apr 2008
    Location
    Qatar
    Posts
    31,953
    Blog Entries
    16
    بہت زبردست سفرنامہ ہے یاز بھائی
    اور تصاویر تو ماشاء اللہ بہت اچھی ہیں
    ایسا لگا جیسے ہم بھی وہیں کہیں موجود تھے

  11. #11
    Site Managers

    Join Date
    Jun 2007
    Location
    پاکستان
    Posts
    54,986
    مدین کا بازار





  12. #12
    Site Managers

    Join Date
    Jun 2007
    Location
    پاکستان
    Posts
    54,986
    بحرین میں دریا کے پل سے اطراف کے مناظر





  13. #13
    Site Managers

    Join Date
    Jun 2007
    Location
    پاکستان
    Posts
    54,986
    بحرین سے آگے نکلے تو ہمارے اور شاید گاڑی کے بھی چودہ طبق روشن ہو گئے۔ سڑک کا یہ عالم ہے کہ 5 فیصد سڑک ٹوٹی ہوئی ہے، جبکہ باقی 95 فیصد سڑک ٹوٹی ہوئی نہیں ہے۔ کیونکہ سڑک ہو گی تو اس پہ ٹوٹی ہوئی کی تہمت لگ سکے گی۔


  14. #14
    Site Managers

    Join Date
    Jun 2007
    Location
    پاکستان
    Posts
    54,986
    تاہم سوات کی اصل خوبصورتی اور الپائن سبزہ بحرین سے آگے ہی شروع ہوتے ہیں۔ بعض مقامات پر ایسے خوبصورت مناظر آئے کہ رک کر تصویر لیتے ہی بنی۔





  15. #15
    Site Managers

    Join Date
    Jun 2007
    Location
    پاکستان
    Posts
    54,986
    کالام کے نزدیک پہنچتے ہوئے۔



Page 1 of 9 123 ... LastLast

Tags for this Thread

Bookmarks

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •