’اب بحران میں بولنے والی کوئی نہیں ہو گی‘

ایمبولینس کے چلنے سے قبل اس کے آگے وکلا اور سماجی کارکنان نے الوداعی نعروں کے ساتھ ایک دوسرے سے عہد لیا کہ وہ عاصمہ جہانگیر کا مشن جاری رکھیں گے۔