Rose

اک رند ہے اور مدحتِ سلطان مدینہ

Rate this Entry
اک رند ہے اور مدحتِ سلطان مدینہ
ہاں کوئی نظر رحمتِ سلطان مدینہ


دامان نظر تنگ و فراوانیِ جلوہ
اے طلعتِ حق طلعتِ سلطانِ مدینہ


اے خاکِ مدینہ تری گلیوں کے تصدق
تو خلد ہے تو جنت ِسلطان مدینہ


اس طرح کہ ہر سانس ہو مصروفِ عبادت
دیکھوں میں درِ دولتِ سلطانِ مدینہ


اک ننگِ غمِ عشق بھی ہے منتظرِ دید
صدقے ترے اے صورتِ سلطان مدینہ


کونین کا غم یادِ خدا ور شفاعت
دولت ہے یہی دولتِ سلطان مدینہ


ظاہر میں غریب الغربا پھر بھی یہ عالم
شاہوں سے سوا سطوتِ سلطان مدینہ


اس امت عاصی سے نہ منھ پھیر خدایا
نازک ہے بہت غیرتِ سلطان مدینہ


کچھ ہم کو نہیں کام جگرؔ اور کسی سے
کافی ہے بس اک نسبت ِسلطان مدینہ


جگر مراد آبادی

Submit "اک رند ہے اور مدحتِ سلطان مدینہ" to Digg Submit "اک رند ہے اور مدحتِ سلطان مدینہ" to del.icio.us Submit "اک رند ہے اور مدحتِ سلطان مدینہ" to StumbleUpon Submit "اک رند ہے اور مدحتِ سلطان مدینہ" to Google

Categories
Uncategorized

Comments

  1. Sabih's Avatar
    اللھم صلی علی سیدنا محمد و علی آل سیدنا محمد و بارک وسلم
  2. Sabih's Avatar
    بہت عمدہ.....
  3. ابو لبابہ's Avatar
    جگر مراد آبادی کی بہت عمدہ نعت۔
    شیئر کرنے کا شکریہ