1UM-TeamUrdu

پرانے گھر کو گرایا تو باپ رونے لگا

Rate this Entry
فادرز ڈے کی مناسبت سے یہ کلام پہلے ایک غزل کے طور پر پیش کیا گیا تھا۔ بہت زیادہ پسندیدگی اور مزید لکھنے کی فرمائش پر اب چار غزلوں کی صورت میں پیش کیا جا رہا ہے۔ ہر غزل باپ کے ایک المیے کی طرف اشارہ کرتی ہے۔ بوڑھے باپ کو چار بنیادی المیے درپیش ہوتے ہیں۔
اپنی دن بدن بگڑتی ہوئی جسمانی حالت کا بحران
زمانے ، حالات ، ثقافت اور معاشرتی اقدار کے بدلنے کا بحران
تنہائی اور جذباتی بحران
مالی بحران

ان میں سے کچھ پہلوؤں پر ہم اپنے باپ کا درد کچھ کم کر سکتے ہیں اور کچھ پہلوؤں کے لیے ہم چاہ کر بھی کچھ نہیں کر سکتے۔ جہاں بہتری ہو سکے وہ ضرور کیجیے۔ خدا آپ کے والد کو آپ سے ہمیشہ راضی رکھے۔ آمین
شکریہ۔
#FathersDay
#FathersDay2017
#HappyFathersDay
.
.
.
*** // *** // *** // *** // *** // *** // *** // *** //
غزل نمبر 1
*** // *** // *** // *** // *** // *** // *** // *** //
پرانے گھر کو گرایا تو باپ رونے لگا
(باپ کا جذباتی بحران)

پرانے گھر کو گرایا تو باپ رونے لگا
خوشی نے دِل سا دُکھایا تو باپ رونے لگا

جو اَمی نہ رہیں تو کیا ہُوا کہ ہم سب ہیں
جواب بن نہیں پایا تو باپ رونے لگا

نہ جانے کب سے وُہ نمبر ملا رَہا تھا مرا
کہ جونہی فون اُٹھایا تو باپ رونے لگا

ہزار بار اُسے روکا تھا میں نے سگریٹ سے
جو آج چھین بجھایا تو باپ رونے لگا

کئی عزیزوں کے مرنے پہ باپ رویا نہیں
جو آج نہ رہا تایا تو باپ رونے لگا

اَکیلے پن کے شکنجے میں اِتنا بے بس تھا
گھڑی نے ایک بجایا تو باپ رونے لگا

نہ جانے قیسؔ نے کس جذبے سے یہ کیا لکھا
کہ جونہی پڑھ کے سنایا تو باپ رونے لگا
شاعر: #شہزادقیس ، مجموعہ کلام: #غزل
#QaisGhazal #ShahzadQais
.
*** // *** // *** // *** // *** // *** // *** // *** //
غزل نمبر 2
*** // *** // *** // *** // *** // *** // *** // *** //
نیا زَمانہ جو آیا تو باپ رونے لگا
(باپ کا زَمانی بحران: غزل)

نیا زَمانہ جو آیا تو باپ رونے لگا
پرانا کچھ بھی نہ پایا تو باپ رونے لگا

کل اُس کے دوست کو باہر سے ٹالنے کے بعد
اُسے فقیر بتایا تو باپ رونے لگا

سمجھ میں آئے نہ بوڑھے کے فون کے فیچرز
مذاق میں نے اُڑایا تو باپ رونے لگا

کباڑئیے کو بمشکل بہت سا کاٹھ کباڑ
جو آج بیچ کے آیا تو باپ رونے لگا

کل ایک شہر زَدہ کو میں گاؤں لے کے گیا
جو گاؤں ، گاؤں نہ پایا تو باپ رونے لگا

پرانی چیزوں کی بوسیدہ سی دُکان میں قیسؔ
جب آئینہ نظر آیا تو باپ رونے لگا
شاعر: #شہزادقیس ، مجموعہ کلام: #غزل
#QaisGhazal #ShahzadQais
.
*** // *** // *** // *** // *** // *** // *** // *** //
غزل نمبر 3
*** // *** // *** // *** // *** // *** // *** // *** //
حکیم کو جو دِکھایا تو باپ رونے لگا
(باپ کا مالی بحران: غزل)

حکیم کو جو دِکھایا تو باپ رونے لگا
علاج سستا کرایا تو باپ رونے لگا

ہمیں بنا دِیئے کمرے خود اُس کو ٹی وی پر
مدینہ جب نظر آیا تو باپ رونے لگا

بہن رَوانگی سے پہلے پیار لینے گئی
جو کچھ بھی دے نہیں پایا تو باپ رونے لگا

تمام کمرے تو بچوں میں ہو گئے تقسیم
گلی میں اُس کو سُلایا تو باپ رونے لگا

بٹھا کے رِکشے میں ، کل شب رَوانہ کرتے ہُوئے
دِیا جو میں نے کرایہ تو باپ رونے لگا

کیا ہی کیا ہے بھلا آج تک ہمارے لیے
سوال جونہی اُٹھایا تو باپ رونے لگا

دوائی لے کے وُہ آیا تھا اَب بھی یاد ہے قیسؔ
جو مانگا میں نے بقایا تو باپ رونے لگا
شاعر: #شہزادقیس ، مجموعہ کلام: #غزل
#QaisGhazal #ShahzadQais
.
*** // *** // *** // *** // *** // *** // *** // *** //
غزل نمبر 4
*** // *** // *** // *** // *** // *** // *** // *** //
چھڑی سے چلنا سکھایا تو باپ رونے لگا
(باپ کا جسمانی بحران: غزل)

چھڑی سے چلنا سکھایا تو باپ رونے لگا
سہارا دے کے بٹھایا تو باپ رونے لگا

یہ رات کھانستے رہتے ہیں کوفت ہوتی ہے
بہو نے سب میں جتایا تو باپ رونے لگا

جوان بیٹے کو دیکھا تو کھلکھلا اُٹھا
جب آئینہ نظر آیا تو باپ رونے لگا

اَذان بیٹے کے کانوں میں دے رہا تھا میں
اَذان دیتے جو پایا تو باپ رونے لگا

مریضِ قلب کو گاڑی میں ڈالنے کے لیے
جو رات گود اُٹھایا تو باپ رونے لگا

طبیب کہتا تھا پاگل کو کچھ بھی یاد نہیں
گلے سے میں نے لگایا تو باپ رونے لگا

یہ غالبا میرے اَشکوں کی ٹیس تھی کہ قیسؔ
لَحَد میں اُس کو لٹایا تو باپ رونے لگا
شاعر: #شہزادقیس ، مجموعہ کلام: #غزل
#QaisGhazal #ShahzadQais
.
*** *** *** *** *** *** *** ***
اس کا کُل متن بھی یہاں پر ہے
http://sqais.com/QaisGhazal.html
پُرسکون اور مسکراتے رہیں
#شہزادقیس

Submit "پرانے گھر کو گرایا تو باپ رونے لگا" to Digg Submit "پرانے گھر کو گرایا تو باپ رونے لگا" to del.icio.us Submit "پرانے گھر کو گرایا تو باپ رونے لگا" to StumbleUpon Submit "پرانے گھر کو گرایا تو باپ رونے لگا" to Google

Categories
ShahzadQais

Comments

  1. Khusroo's Avatar
    بہت ہی درد بھری شاعری ہے۔
    نم آنکھوں کے ساتھ پورا پڑھا

    اللہ تعالی سب کے والدین کو صحت وتندرستی کے ساتھ لمبی عمر عطا فرمائے اور جن کے والدین گزر چکے ہیں اللہ ان کی مغفرت فرما کر جنت الفردوس میں اعلی مقام عطا فرمائے۔ آمین
  2. Rose's Avatar
    بہت عمدگی سے اس احساس پہلو کی نشاندہی کی گئی ہے،،،،،اللہ تعالیٰ سب کو والدین کا خدمت گزار بننے کی توفیق دے۔آمین
  3. Ahmed Lone's Avatar
    بہت ہی درد بھری ہے
    بہت کم شاعری باپ کے بارے میں ملتی ہے
    بے شک آپ کی یہ شاعری اس میں سرفہرست ہے کافی بار سنی کافی بار پڑھی
  4. KishTaj's Avatar
    Buhtt umda ...
  5. 1UM-TeamUrdu's Avatar
    Quote Originally Posted by Khusroo
    بہت ہی درد بھری شاعری ہے۔
    نم آنکھوں کے ساتھ پورا پڑھا

    اللہ تعالی سب کے والدین کو صحت وتندرستی کے ساتھ لمبی عمر عطا فرمائے اور جن کے والدین گزر چکے ہیں اللہ ان کی مغفرت فرما کر جنت الفردوس میں اعلی مقام عطا فرمائے۔ آمین
    آمین ۔ جزاک اللہ ۔ بہت شکریہ بھائی سدا سلامت رھیے
  6. 1UM-TeamUrdu's Avatar
    Quote Originally Posted by Rose
    بہت عمدگی سے اس احساس پہلو کی نشاندہی کی گئی ہے،،،،،اللہ تعالیٰ سب کو والدین کا خدمت گزار بننے کی توفیق دے۔آمین

    آمین۔ بہت نوازش ۔ سدا ممتاز و سر بلند رھیے
  7. 1UM-TeamUrdu's Avatar
    Quote Originally Posted by Ahmed Lone
    بہت ہی درد بھری ہے
    بہت کم شاعری باپ کے بارے میں ملتی ہے
    بے شک آپ کی یہ شاعری اس میں سرفہرست ہے کافی بار سنی کافی بار پڑھی
    بہت شکریہ بھائی ۔ سدا شاداب و خرسند رھیے۔ آمین
  8. 1UM-TeamUrdu's Avatar
    Quote Originally Posted by KishTaj
    Buhtt umda ...
    بہت شکریہ کشتاج ۔ سدا ممتاز و خرسند رھیے۔
  9. Kainat's Avatar
    نہ جانے کب سے وُہ نمبر ملا رَہا تھا مرا
    کہ جونہی فون اُٹھایا تو باپ رونے لگا
    ۔۔۔۔
    بٹھا کے رِکشے میں ، کل شب رَوانہ کرتے ہُوئے
    دِیا جو میں نے کرایہ تو باپ رونے لگا
    ۔۔۔۔۔
    ماشاءاللہ، بہت خوب،
    ایک سے بڑھ کر ایک حقیقت کی عکاسی کرتے اشعار