Pardaisi

  1. علامہ اقبال کی شاعری

    کیا عشق ایک زندگئ مستعار کا
    کیا عشق پائیدار سے ناپائیدار کا


    وہ عشق جس کی شمع بجھا دے اجل کی پھونک
    اس میں مزہ نہیں تپش و انتظار کا


    میری بساط
    ...
    Categories
    Uncategorized
  2. مُجھے چاہیے اب، سچ یہاں

    ‏نہ دَبی دَبی سی ، محبتیں!
    نہ ڈھکی چُھپی سی اب، عداوتیں!
    نہ دکھاوے کی اب ، مسکراہٹیں!
    نہ رِوگ جان ، یہ قباحتیں!
    میں تھک گیا ہوں، جھوٹ سے!
    مُجھے چاہیے اب، سچ یہاں!
    گر
    ...
    Categories
    Uncategorized
  3. فاخرہ بتول کی ایک خوبصورت نظم

    ” انا کی بات جانے دو “


    اَنا کی بات جانے دو
    اَنا تو اس گھڑی ہم نے گنوا دی تھی
    تمھیں جس پل کہا اپنا
    ہتھیلی پر
    ...
    Categories
    Uncategorized
  4. فاخرہ بتول کی خوبصورت شاعری

    محبت بھول جاؤ تم

    یہ تم نے کیا کیا؟
    پتھر کے بُت میں دھڑکنوں کو کھوجنا چاہا
    یہ تم نے دل کی دھڑکن میں،
    پرایا
    ...
    Categories
    Uncategorized
  5. فاخرہ بتول کی خوبصورت شاعری

    یہی اب کام کرنا ہے


    ستاروں سے کہو

    اب رات بھر ہم ان سے باتیں کر نہیں سکتے

    کہ ہم اب تھک گئے جاناں!

    ہمیں جی بھر کے سونا ہے

    کسی کا راستہ تکنے کا
    ...
    Categories
    Uncategorized
Page 1 of 3 123 LastLast