اسی کو "وصل" کہتے ھیں

میری چھوٹی سی دنیا میں آپ سب کو خوش آمدید
***
اسی کو وصل کہتے ہیں
کوئی کچھ بھی کہے لیکن
مرے نزدیک تو بس اس کا مطلب مختصر سا ہے
کہ اک بپھرا ہوا ساگر ہے"فرقت" جس کو کہتے ہیں
اسی ساگر میں، اک چھوٹی سی ، نازک سی
ابھرتی، ڈوبتی، موجوں سے لڑتی ہوئی ناؤ ہوتی ہے
اسی کو "وصل" کہتے ہیں

  1. محبت زہر کھا کر آئی تھی کیا

    by , 07-01-2019 at 01:10 PM (اسی کو "وصل" کہتے ھیں)
    یہ پیہم تلخ کامی سی رہی کیا
    محبت زہر کھا کر آئی تھی کیا


    مجھے اب تم سے ڈر لگنے لگا ہے
    تمہیں مجھ سے محبت ہو گئی کیا



    شکستِ اعتمادِ ذات کے
    ...
  2. ریت اس نگر کی ہےاور جانے کب سے ہے

    by , 15-02-2018 at 01:09 PM (اسی کو "وصل" کہتے ھیں)
    تتلیوں کے موسم میں نوچنا گلابوں کا ، ریت اِس نگر کی ہے اور جانے کب سے ہے
    دیکھ کر پرندوں کو باندھنا نشانوں کا ،
    ...
    Categories
    میری پسند
  3. ذرا سے لُطف پہ آنکھیں بھر آئیاں کیا کیا

    by , 26-08-2016 at 12:56 PM (اسی کو "وصل" کہتے ھیں)
    خُوشی سے دل نے سہیں بےوفائیاں کیا کیا
    ذرا سے لُطف پہ آنکھیں بھر آئیاں کیا کیا

    نہ اب رقیب ، نہ ناصح ، نہ غم گسار کوئی
    ...