یوں نہ ہو پھر کوئی بے رحم ہَوا کا جھونکا
لے اُڑے کشتیِ دِل موجۂ طُوفاں کی طرح

جُرم اِتنا، کہ نہ تھا غمزۂ خُوباں کا دماغ
قید اِس شہر میں ہیں یُوسفِ کنعاں کی طرح

مجیب خیر آبادی