Thanks Thanks:  14
Likes Likes:  27
Page 123 of 149 FirstFirst ... 2373113121122123124125133 ... LastLast
Results 1,831 to 1,845 of 2234

Thread: لفظ "شہر" پر اشعار

  1. #1831
    Senior Member Pardaisi's Avatar

    Join Date
    Sep 2007
    Posts
    66,375
    Blog Entries
    31
    Mentioned
    2 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)
    جو شہر چھوڑ کے ' زنجیر توڑ کے نکلا
    پلَٹ کے دشت سے جانا ' کبھی نہ چاہتا تھا
    کوئی مجبوریاں نہیں ہوتیں
    لوگ یونہی وفا نہیں کرتے


  2. #1832
    Sisters Society Rose's Avatar

    Join Date
    Feb 2008
    Location
    Karachi
    Posts
    40,182
    Blog Entries
    27
    Mentioned
    15 Post(s)
    Tagged
    3 Thread(s)
    یہ شہر ایسے حریصوں کا شہر ھے کہ یہاں
    فقیر بھیک لیے بِن دُعا نہیں کرتا
    اپنی آنکھوں کو قناعت کی طرف لا اے شخص
    اس سے پہلے کہ کوئی خواب بڑا ہو جائے



  3. #1833
    Senior Member Pardaisi's Avatar

    Join Date
    Sep 2007
    Posts
    66,375
    Blog Entries
    31
    Mentioned
    2 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)
    ایک ہی شہر میں رہنا ہے مگر ملنا نہیں
    دیکھتے ہیں یہ ازیت بھی گوارا کر کے
    کوئی مجبوریاں نہیں ہوتیں
    لوگ یونہی وفا نہیں کرتے


  4. #1834
    Senior Member Pardaisi's Avatar

    Join Date
    Sep 2007
    Posts
    66,375
    Blog Entries
    31
    Mentioned
    2 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)
    میں شہرِ درد کی حد سے نکلنا چاہتا ہوں
    نکلنے دیتا نہیں ہے ترا حصار مجھے
    کوئی مجبوریاں نہیں ہوتیں
    لوگ یونہی وفا نہیں کرتے


  5. #1835
    Sisters Society Rose's Avatar

    Join Date
    Feb 2008
    Location
    Karachi
    Posts
    40,182
    Blog Entries
    27
    Mentioned
    15 Post(s)
    Tagged
    3 Thread(s)
    اک شہر آرزو سے کسی دشت غم تلک
    دل جا چکا تھا اور یہ ہجرت عجیب تھی
    اپنی آنکھوں کو قناعت کی طرف لا اے شخص
    اس سے پہلے کہ کوئی خواب بڑا ہو جائے



  6. #1836
    Sisters Society Rose's Avatar

    Join Date
    Feb 2008
    Location
    Karachi
    Posts
    40,182
    Blog Entries
    27
    Mentioned
    15 Post(s)
    Tagged
    3 Thread(s)
    تمھارے شہر کے پھولوں کا پھر بنے گا کیا
    ہمیں بھی پڑ گئی عادت جو مسکرانے کی
    اپنی آنکھوں کو قناعت کی طرف لا اے شخص
    اس سے پہلے کہ کوئی خواب بڑا ہو جائے



  7. #1837
    Senior Member Pardaisi's Avatar

    Join Date
    Sep 2007
    Posts
    66,375
    Blog Entries
    31
    Mentioned
    2 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)
    آساں سمجھ رہے تھے اُسے شہرِ جاں کے لوگ
    مشکل تھا اِس قدر، کہ مِرے اپنے فن سا تھا

    وہ گفتگو تھی اُس کی، اُسی کے لیے ہی تھی!
    کہنے کو، یوں تو میں بھی شریکِ سُخن سا تھا
    کوئی مجبوریاں نہیں ہوتیں
    لوگ یونہی وفا نہیں کرتے


  8. #1838
    Senior Member Pardaisi's Avatar

    Join Date
    Sep 2007
    Posts
    66,375
    Blog Entries
    31
    Mentioned
    2 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)
    ہر شام یہاں شامِ ویراں، آسیب زدہ رستے گلیاں
    جس شہر کی دھُن میں نکلے تھے، وہ شہر دلِ برباد کہاں

    صحرا کو چمن، بَن کو گلشن، بادل کو رِدا کیا لکھنا

    ظلمت کو ضیاء صر صر کو صبا بندے کو خدا کیا لکھنا
    کوئی مجبوریاں نہیں ہوتیں
    لوگ یونہی وفا نہیں کرتے


  9. #1839
    Senior Member Pardaisi's Avatar

    Join Date
    Sep 2007
    Posts
    66,375
    Blog Entries
    31
    Mentioned
    2 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)
    جو بھی ملا اسی کا دل حلقہ بگوشِ یار تھا
    اس نے تو سارے شہر کو کرکے غلام رکھ دیا

    فراز





    کوئی مجبوریاں نہیں ہوتیں
    لوگ یونہی وفا نہیں کرتے


  10. #1840
    Senior Member Pardaisi's Avatar

    Join Date
    Sep 2007
    Posts
    66,375
    Blog Entries
    31
    Mentioned
    2 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)
    بڑھ جائیں گے کچھ اور لہو بیچنے والے
    ہو جائے اگر شہر میں مہنگائی ذرا اور
    اک ڈوبتی دھڑکن کی صدا لوگ نہ سن لیں
    کچھ دیر کو بجنے دو یہ شہنائی ذرا اور
    کوئی مجبوریاں نہیں ہوتیں
    لوگ یونہی وفا نہیں کرتے


  11. #1841
    Senior Member Pardaisi's Avatar

    Join Date
    Sep 2007
    Posts
    66,375
    Blog Entries
    31
    Mentioned
    2 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)
    افسوس کہ یہ شہر جنہیں پال رہا ہے
    دیمک کی طرح شہر کو کھانے میں لگے ہیں

    عباس تابش
    کوئی مجبوریاں نہیں ہوتیں
    لوگ یونہی وفا نہیں کرتے


  12. #1842
    Senior Member Pardaisi's Avatar

    Join Date
    Sep 2007
    Posts
    66,375
    Blog Entries
    31
    Mentioned
    2 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)
    شہروں میں تو بارودوں کا موسم ہے
    گاؤں چلیں، امرودوں کا موسم ہے
    کوئی مجبوریاں نہیں ہوتیں
    لوگ یونہی وفا نہیں کرتے


  13. #1843
    Senior Member Pardaisi's Avatar

    Join Date
    Sep 2007
    Posts
    66,375
    Blog Entries
    31
    Mentioned
    2 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)
    مصلحت پیش نظر ہے سب کے
    جاں نثاری کوئی قربانی کیا
    تماشا بن گئے ہیں شہر جاں میں
    پڑھا تھا فلسفہ ہم نے خودی کا
    کوئی مجبوریاں نہیں ہوتیں
    لوگ یونہی وفا نہیں کرتے


  14. #1844
    Senior Member Pardaisi's Avatar

    Join Date
    Sep 2007
    Posts
    66,375
    Blog Entries
    31
    Mentioned
    2 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)
    اب ڈوبنا ہے بیچ سمندر میں دیکھنا
    گرداب سامنے ہے ،کوئی بادباں نہ اب
    جتنے بھی ہم سفر ہیں وہ قزاقِ شہر ہیں
    پہنچے گا منزلوں پہ کوئی کارواں نہ اب
    کوئی مجبوریاں نہیں ہوتیں
    لوگ یونہی وفا نہیں کرتے


  15. #1845
    Senior Member Pardaisi's Avatar

    Join Date
    Sep 2007
    Posts
    66,375
    Blog Entries
    31
    Mentioned
    2 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)
    ہر لقمہِ تر خون میں تر ہے تو عجب کیا
    ہم رزق نہیں ظلم کمانے میں لگے ہیں


    افسوس کہ یہ شہر جنہیں پال رہا ہے
    دیمک کی طرح شہر کو کھانے میں لگے ہیں
    کوئی مجبوریاں نہیں ہوتیں
    لوگ یونہی وفا نہیں کرتے


Tags for this Thread

Bookmarks

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •