Thanks Thanks:  14
Likes Likes:  27
Page 180 of 180 FirstFirst ... 80130170178179180
Results 2,686 to 2,692 of 2692

Thread: لفظ "شہر" پر اشعار

  1. #2686
    Senior Member Pardaisi's Avatar

    Join Date
    Sep 2007
    Posts
    69,682
    Blog Entries
    32
    Mentioned
    2 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)
    اپنے کو ہَم اس شہر میں رسوا نہ کریں گے
    اب تک جو ہوا خیر، اب ایسا نہ کریں گے
    کوئی مجبوریاں نہیں ہوتیں
    لوگ یونہی وفا نہیں کرتے


  2. #2687
    Senior Member Pardaisi's Avatar

    Join Date
    Sep 2007
    Posts
    69,682
    Blog Entries
    32
    Mentioned
    2 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)
    اس شہر میں آئندہ نہ دیکھیں گے وہ ہم کو
    کیا کیا نہ کیا عشق میں کیا کیا نہ کریں گے

    ابنِ انشا
    کوئی مجبوریاں نہیں ہوتیں
    لوگ یونہی وفا نہیں کرتے


  3. #2688
    Senior Member Pardaisi's Avatar

    Join Date
    Sep 2007
    Posts
    69,682
    Blog Entries
    32
    Mentioned
    2 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)
    یہ میرے شہر کا اک اور حادثہ ہوگا
    وہ کل یہاں مرا مہمان بن چکا ہوگا
    کوئی مجبوریاں نہیں ہوتیں
    لوگ یونہی وفا نہیں کرتے


  4. #2689
    Senior Member Pardaisi's Avatar

    Join Date
    Sep 2007
    Posts
    69,682
    Blog Entries
    32
    Mentioned
    2 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)
    شاہراہیں دفعتاً شعلے اگلنے لگ گئیں
    گھر کی جانب چل پڑا ہے شہر گھبرا کر تمام


    صبح کے سارے اجالے راستوں میں کھو گئے
    شب کے اندھیاروں میں گم ہیں شام کے منظر تمام
    کوئی مجبوریاں نہیں ہوتیں
    لوگ یونہی وفا نہیں کرتے


  5. #2690
    Senior Member Pardaisi's Avatar

    Join Date
    Sep 2007
    Posts
    69,682
    Blog Entries
    32
    Mentioned
    2 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)
    اب کہاں وہ لوگ وہ رونق وہ نغمے وہ فضا
    شہر کی گلیاں ہیں سونی سونے بام و در تمام
    کوئی مجبوریاں نہیں ہوتیں
    لوگ یونہی وفا نہیں کرتے


  6. #2691
    Senior Member Pardaisi's Avatar

    Join Date
    Sep 2007
    Posts
    69,682
    Blog Entries
    32
    Mentioned
    2 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)
    گیتوں کا شہر ہے کہ نگر سوز و ساز کا
    قلب شکستہ اور یہ عالم گداز کا
    کوئی مجبوریاں نہیں ہوتیں
    لوگ یونہی وفا نہیں کرتے


  7. #2692
    Senior Member Pardaisi's Avatar

    Join Date
    Sep 2007
    Posts
    69,682
    Blog Entries
    32
    Mentioned
    2 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)
    عابدؔ تمام شہر پہ عالم ہے کون سا
    ہر ایک شکل نقش بہ دیوار سی لگے
    کوئی مجبوریاں نہیں ہوتیں
    لوگ یونہی وفا نہیں کرتے


Tags for this Thread

Bookmarks

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •