جاسوسی کی دنیا میں سیف ہاوس سے مراد کسی ایک ملک کی ایجنسی کا بیرون ممالک وہ ایک خاص گھر یا مقام ہوتا ہے ہو ہر قسم کی ٹیکنالوجی اور اسلحے سے لیس ہوتا ہے۔اس سیف ہاوس میں وہ ملک اپنے مفرور مجرم یا مخالف جاسوسوں کو قید رکھتا ہے۔
مثلا پاکستان میں امریکہ کے بہت سے سیف ہاوسز ہیں جہاں وہ پاکستان سے اغواء شدہ اپنے مجرموں کو وقتی طور پر رکھتے ہیں بعد میں سیف ہاوسزسے ہی امریکا یا افغانستان منتقل کر دیتے ہیں۔۔ ہماری انٹیلی جنس رپورٹ کے مطابق یہ سیف ہاوسز امریکن ایمبیسی اسلام آباد کے اردگرد ہیں۔۔
یہ تو ہو گیا سیف ہاوس کا پس منظر۔۔اب بات کرتے ہیں سیف ہاوس مووی کی۔۔

ٹوبن فارسٹ (ڈینزل واشنگٹن ) سی آئی اے کا ایک سابقہ ایجنٹ ہے جو کہ سی آئی اے کے مفاد پرست سربراہوں اور ان کی مفاد پرست پالسیوں سے نالان ہو کر سی آئی اے چھوڑ چکا ہے اور اب عالمی مجرم بن چکا ہے۔۔یہ بندہ اپنی تیزی ، چالاکی ، عیاری اور تجربے کی بنا پر پوری سی آئی اے میں بہت مشہور ہے۔۔۔یہ سی آئی اے کو مطلوب مجرموں میں سے ٹاپ لسٹ ہے۔۔لیکن چونکہ یہ سی آئی کا ہی سابقہ ایجنٹ ہے لہذا یہ ہمیشہ ان کو چکما دینے میں کامیاب رہتا ہے ۔۔
جنوبی افریقا میں برطانیہ کی خفیہ سرکاری تنظیم ایم آئی سکس کے ایک مفرور ایجنٹ سے کچھ معلومات کا سودا کرتے ہوئے ٹوبن فارسٹ سی آئی اے کے ہتھے چڑھ جاتا ہے۔۔۔سی آئی اے والے اسے جنوبی افریقہ میں موجود اپنے سیف ہاوس منتقل کر دیتے ہیں جہاں مستقل طور پر ایک ایجنٹ میتھیو واٹسن (ریان رینالڈز) تعین ہوتا ہے،۔۔وہ سی آئی اے میں نیا نیا بھرتی ہوا ہوتا ہے۔۔ایک جانب سی آئی اے کا سب سے شاطر اور چالاک مفرور ایجنٹ جو کہ اب مجرم بن کر قید میں ہے دوسری جانب سی آئی اے کا نیا بھرتی ہونے والا ایجنٹ میتھیو واٹسن
سیف ہاوس پر حملے کی وجہ سے میتھیو کو اکیلے ہی ٹوبن فارسٹ کی ذمہ داری اٹھانی پڑتی ہے اور دوسرے جنوبی افریقہ میں ہی موجود دوسرے سیف ہاوس منتقل کرنے لے جاتا ہے۔
خیر اس کے بعد کے خون ریز ،دل چسپ،سسپنس، تھرل، ایکشن، چالاکیوں ،عیاریوں سے بھرپور واقعات آپ فلم میں دیکھیں۔۔آپ دیکھیں کہ ایک تجربہ کارشاطر عیار ایجنٹ اور ایک نئے ایجنٹ کی جوڑی کیسی رہتی ہے۔۔
یہاں ایک بات واضح کرنا چاہوں گا یہ ہالی وڈ کا ہی جگرا تھا کہ انھوں نے اس فلم کے ذریعے اپنی سی آئی اے کی کالی بھیڑیوں کو بے نقاب کیا ہے۔اس مووی میں بہت سے سی آئی اے والے اہلکار اور بڑے بڑے افسر غدار دکھائے گئے ہیں۔اور امریکن عوام نے اس فلم کو مقبول بنا کر ثابت کر دیا ہے کہ ان میں تنقید سہنے کا حوصلہ ہے۔۔