دا ممی۔۔دو ہزار سترہ

ٹام کروز فلمی دنیا کا ایک بڑا ستارہ ہے۔۔اسے سپر اسٹار کہا جائے تو بے جا نہ ہو گا۔۔اور فلمی دنیا میں دا ممی فلم سیریز بھی اپنا ایک مقام رکھتی ہے۔۔۔خوف ناک اور دہشت ناک مناظر والی ممی سیریز سے ہماری بچپن کی یادیں جڑی ہیں۔۔بچپن میں جب ایک کاکروچ سے بھی ڈر جایا کرتے تھے اس وقت ممی فلم میں بڑے بڑے کیڑے مکوڑوں کی فوج دکھائی جاتی تھی جو پلک جھپکتے میں انسان کو نگل جاتی تھی۔۔۔
جیسے ہی علم ہوا کہ ٹام کروز جیسا بڑا اداکار دا ممی جیسی بہترین مووی سیریز کی اگلی فلم میں آ رہا ہے۔۔اس فلم کا انتظار شروع ہو گیا تھا۔۔۔مصروفیات کی بنا پر یہ فلم سینما میں نہیں دیکھ سکا۔۔۔تو اچھے پرنٹ میں آن لائن اسٹریم لنک مل گیا۔۔۔باوجود اپنے دو بہترین دوستوں(جہانگیر اور جنید) کے منع کرنے کے یہ فلم پوری دیکھی۔۔دونوں دوستوں کا کہنا تھا اس سال کی سب سے بڑی سپر فلاپ فلم اگر کوئی ہے تو دا ممی ہے۔۔۔لیکن پھر بھی میں نے فلم مکمل کی یہ جاننے کو کہ ایسی کیا وجہ ہے یہ فلم اپنا اثر نہیں جما سکی۔۔
اس فلم کا سب سے کمزور نقطہ اس کی گھٹیا اور دلچسپی سی خالی کہانی ہے۔۔دا ممی فلم سیریز کی ہر فلم ایسی رہی ہے کہ شائقین کو لگاتار دس منٹ بھی سکون کا سانس نصیب نہیں ہوتا تھا کوئی نا کوئی دہشت ناک یا تھرل سین آ جاتا تھا لیکن ٹام کروز والی ممی فلم میں اتنی کمزور کہانی ہے کہ فلم اپنا اثر چھوڑنے میں ناکام رہی ہے۔۔۔ ہدایت کار اور کہانی نویس کو شاید علم ہی نہیں ہوتا تھا کہ اگلے سین میں کرنا ہے اور پچھلے سین کو اگلے سے کیسے جوڑنا ہے۔۔۔عراق میں ملی ممی کا تعلق مصر سے ہے لیکن وہ عراق میں کیوں دفنائی گئی۔۔فلم اس بارے خاموش ہے۔۔۔کرشماتی خنجر کا پتھر برطانیہ میں کسی دوسری ممی کے پاس کیوں ہے اور وہ ممی برطانیہ میں کیوں دفن ہے فلم کی کہانی اس بارے بھی خاموش ہے۔۔غرض یہ ہے کہ ٹام کروز کے کیرئیر کی شاید سب سے گھٹیا فلم ہے۔۔اسے دیکھ کر اپنا وقت برباد مت کیجیے گا۔۔اس فلم کو دیکھنے سے اچھا ہے انسان پانامہ کیس کی کوئی سماعت فالو کر لے وہاں دل چسپ مناظر زیادہ ہوں گے۔۔۔