مائننگ کے لیے بجلی کے خرچے کا مسئلہ تو تقریبا” ہر جگہہ ہی ہے سوائے جرمنی اور اس جیسے چند ممالک کے۔
ویسے اس کا متبادل سولر پینل ہے۔ اک دفعہ کا خرچا اور محنت ہے اور بعد میں سُکھ ہی سُکھ۔ ( ہمارا تو بہت فائدہ ہوا اس سے) جس بھائی صاحب کا ذکر
کیا ہے یہ دُبئ میں انجینئیر کے طور پر کام کرتے رہے پھر واپس پاکستان جا کر جاب کے علاوہ یہ کام شروع کر دیا ان کا آبادی سے قدرے ہٹ کر فارم ہاؤس ٹائپ گھر تھا تو انہوں نے مائننگ کے ساتھ سولر پینل کا طریقہ کار سکھانے میں بھی فورم پر بہت سوں کی مدد کی تھی۔ اور یہ ان دنوں کی بات ہے جب مائننگ ریگیولر لیپ ٹاپ پر بھی ہو جایا کرتی تھی۔ مُشکل تو پچھلے چند سالوں میں ہوا ہے جب بٹ کوائین کی قیمت دو ڈھائی سو ڈالر سے اُوپر نکل گئی تھی۔
ویسے اب بٹ کوائین کے علاوہ دوسری بہت سی کرنسی ہیں جو فائدہ مند ہیں اور اُوپر جارہی ہیں۔ ان کی مائننگ قدرے آسان بھی ہے۔

میاں منشاء کی کمپنی کا گیپ اور گیس برانڈ کے ساتھ بھی کانٹریکٹ ہے اور تجارت میں شاید اسی لیے فائدہ کہا جاتا ہے کہ منافع ہاتھوں ہاتھ ملتا ہے۔
Guess
Gap