Thanks Thanks:  0
Likes Likes:  0
Page 2 of 2 FirstFirst 12
Results 16 to 26 of 26

Thread: [Afsana 032]عقلمند از ساحرہ

  1. #16
    Senior Member

    Join Date
    Feb 2008
    Posts
    11,946
    Mentioned
    0 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)

    Re: افسانہ نگاری کا دوسرا مقابلہ

    ساحرہ بہن ،بہت ہی اچھا لکھا آپ نے بہت باتیں واضع کی جیسے وقتی طور پر نا اتفاقی سے رشتے نہیں ٹھوٹتے برے ٹائم میں اپنے ہی کام آتے ہیں اور ایسے وقت ہی دوست کی آزمایش اور پہچان ہوتی ہے ۔ آپ نے مشرق اور مغرب کا فرق بھی اچھے سے بتایا ہے عورت تو جیسے مسائل سے نپٹتے رہنا اس کا مقدر ہے ،بہت خوب
    دیر سے لکھرہی ہوں دراصل جمرات جمعہ کو یہاں چھٹی ریتی ہے گھر پر سب رہتے ہیں تو کم ہی آتی ہوں یہاں

  2. #17
    Section Managers

    Join Date
    Jul 2007
    Posts
    27,433
    Mentioned
    1 Post(s)
    Tagged
    1 Thread(s)

    Re: افسانہ نگاری کا دوسرا مقابلہ


    032- عقلمند از ساحرہ

    ویری نائس ساحرہ۔ ۔ ۔ میاں بیوی کے رشتے میں کافی فیزز آتے ہیں۔ ۔ ۔ اور کئی تو اُن میں سے پار نکل جاتے ہیں اور کئی وہیں ڈوب جاتے ہیں۔
    آپکی ایمن بھی بس ڈوبتے ڈوبتے بچ ہی گئی۔ ۔ ۔
    اور جان بچی تو ۔ ۔ ۔ لاکھوں پائے۔ ۔۔

    لیکن مجھے شوہر کے اوپر حیرت ہوئی کہ ایک دم سے کیسے بدل گیا۔ ۔۔ اور ویسے مجھے لگ رہا تھا دونوںکا سٹار Scorpio تھا۔ ۔ ۔ ۔
    وہ کیوں؟ اس لئے کہ دونوں ہی بڑے انتہا پسند لگے۔
    پہلے امریکہ کے اصول و ضوابط سکھانے میں بھی اُس نے کسی اعتدال سے کام نہیں لیا اور بعد میں جیلس ہو کر نفریتیں بڑھانے میں بھی میاں جی نے کوئی جلد بازی کے رکارڈ بنانے کی کسر نہیں چھوڑی۔ ۔ ۔

    اور بیوی صاحبہ کا تو کیا ہی کہوں۔ ۔ ۔ اُس کے گھر والے نہیں تھے نا وہاں تبھی شادی کے بعد کسی کی بیوی ہوتے ہوئے بھی وہ سیکنڈ آپشن کا سوچ رہی ہے۔ بھئی تم خوش نہیں تو بس اکیلی ہو جاوٴ۔ ۔۔ چھوڑ دو۔ ۔ ۔ فوری substitute کیا اتنا ضروری تھا؟
    یہ بھی کتنی انتہائی بات ہے۔ بہت غصہ آیا مجھے لڑکی پر۔ ۔ ۔


    ھاھاھا لیکن آپ پر نہیں آیا۔ ۔۔ بلکہ بہت ہی اچھا افسانہ لکھا آپ نے۔ پڑھ کر اچھا لگا۔
    وش یو آل دا بیسٹ۔ ۔ ۔ ۔


    033-ضمیر از دلپسند


    بہت ہی زبردست دلپسند بھائی۔ ۔ ۔ انسان کا اپنا ضمیر ہی اُس کا سب سے بڑا رکھوالا ہوتا ہے اگر انسان نے اُسے زندہ رکھا ہو تو۔ اور اُسے فراموش کرنے پر۔ ۔ ۔ وہ آپ کی ذات کو کس غلاظت کے ڈھیر تک لے جاتا ہے اُس کا بیان آپکے افسانے نے بہتتت ہی بہتر طریقے سے کیا۔
    بہت الگ سا سبجیکٹ رہا۔ ۔ ۔ اور بہت ہی عُمدگی سے اُس کے ساتھ انصاف کیا آپ نے۔ گُڈ لک جناب۔


    034- مقصد حیات از وش


    ھاھاھا اس افسانے پر میں کیا کہوں؟
    چلیں کچھ آپ لوگوں کے لئے بھی چھوڑ دیتی ہوں نا۔ یہ نہ ہو پھر کوئی شکوہ کرے کہ ہمارے لئے نہیں چھوڑا کچھ۔ ۔ ۔

    ;d
    [SIGPIC][/SIGPIC]

  3. #18
    Senior Member

    Join Date
    Jan 2008
    Posts
    12,232
    Mentioned
    0 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)

    Re: افسانہ نگاری کا دوسرا مقابلہ

    عقلمند
    اچھا میری بات غور سے سنو۔ عامر اپنی نئی نویلی دلہن ایمن کو سمجھاتے ہوئے بولا!
    "تمھیں آج سے بہت سے نئے سبق سیکھنا ہوں گے۔ یہاں جاب پر لوگ تمھاری خوبصورتی کی تعریف کریں گے تو برا مان کر چانٹا مت مار دینا اور نہ ہی بدلے میں یہ کہنے لگ جانا پلیزکہ " گھر میں تمھاری ماں بہنیں نہیں ہیں کیا " ۔


    ساحرہ بہت اچھی تحریر ہے
    اب بات وہی آمنہ جی والی کہ عقلمند کون
    تمہاری کہانی میں مشرقی رنگ نمایا ں ہے مرد کے کردار میں بھی کیونکہ اس نے بھی آخر میں بیوی کا ساتھ دیا
    چاہے ذہنی طور پر دونوں میں دوری آچکی تھی لیکن اعتبار کا رشتہ شاید ابھی بھی قائم تھا ورنہ مرد کہاں برداشت کرتے ہیں یہ سب
    اس کہانی میں شوہر بھی عقلمند تھا اور بیوی بھی

    ویل ڈن لیکن یہ کیا
    بغیر کسی ریسیپی کے افسانہ مکمل نہیں لگ رہا ایسا کرو یہ پیرا گراف ایڈ کر دو

    ایمن آفس سے آئی تو عامر کا منہ پھولا ہوا دیکھ کر اس نے سوچا کہ اس کو منانے کا اچھا طریقہ ہے کہ اچھا سا ڈنر کراتی ہوں
    بس یہ سوچ کر اس نے کمر کس لی اور کچن میں گھس گئی
    گوشت نکالا۔ایک چولہے پر مسالہ کاٹ کر گوشت چڑھایا دوسرے پر چاول رکھے تیسرے پر کھیر بننے رکھ دی
    اب چوتھا چولہا فارغ تھا تو اس نے سوچا کہ اس پر بھی کچھ نہ کھ چڑھاتی ہوں
    تو اس نے قیمہ نکال کر وہ چڑھا دیا
    ساتھ ہی روٹی بنانے لگی
    پندرہ منٹ میں شاندار ڈنر تیار تھا


    اس کے بغیر یہ ساحرہ کا افسانہ نہیں لگ رہا;d

  4. #19
    Senior Member

    Join Date
    Dec 2008
    Posts
    13,631
    Mentioned
    0 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)

    Re: افسانہ نگاری کا دوسرا مقابلہ

    ساحرہ آپا۔

    آپ نے اچھا افسانہ تحریر کیا ہے۔ایک بات بہت اچھی لکھی کہ *اپنا اصل نہیں بھولنا چاہیے، جنتے بھی لبادے اوڑھ لیں آپ کا اصل ،اصل ہی رہتا ہے۔ کسی بھی ملک کسی بھی کلچر میں اس پر کوئی اثر نہیں پڑتا *
    اسلامی روایات کے میسج کو بھی بہت اچھے انداز سے پیش کیا۔مشرقی بیوی کی وفا شعاری بھی خوب بیان کی۔

    مگر مجھے ایک دو باتوں پر اعتراض بھی ہے۔

    آپ نے لکھا کہ * مغرب میں محبت ایسے کی جاتی ہے *مجھے اس بات پر اعتراض ہے۔جس قسم کی کہانی آپ نے بیان کی ہے ایسا ماحول اگرپاکستان میں جاب کرتے کسی کپل کے ساتھ بھی ہوتا تو یہی نتیجہ نکلنا تھا۔ اس میں مغرب کو کیوں بدنام کیا گیا ہے؟

    آپ نے انڈین اولڈ موویز نہیں دیکھیں جس میں امیتاب اور اس کی وائف ایک ہی جگہ کام کرتے ہیں اور پھر وہ اپنی ہی بیوی سے چڑنے لگتا ہے اس کی کامیابی کی وجہ سے۔ بتانے کا مقصد یہ ہے کہ ایسی سچوایشن جہاں بھی ہو گی وہاں نتیجہ ایسا ہی ہو گا۔ مغرب کیا اور مشرق کیا۔

    دوسری بات۔ آپ نے یہ تو مینشن ہی نہیں کیا کہ عامر کے دل میں ایمن کے لیے واپس محبت کس طرح پیدا ہوئی۔اس کا محرک کیا بنا۔ اُس کے رویے اور دل میں پہلے دل کھول کر نفرت بھر دی اور بعد میں ویکیوم کیے بغیر ہی آپ نے اینڈ میں اس کی محبت شو کر دی۔

    آخری بات۔ جم بھی تو مرد تھا پھر اس کی عقل کو کیا ہوا؟ اور عامر کی اپنی عقل کو اس وقت کیا ہوا جب وہ اپنی بیوی کو مِس انڈرسٹینڈ کر رہا تھا؟

    معذرت کے ساتھ مجھے جو کچھ لگا میں نے وہ لکھا۔ اب آپ کو اگر بُرا لگے تو درگزر کیجیے گا۔
    ************


    I was upset .. I could not sleep ..
    You came .. I cried .. Got light ..
    And slept ...

  5. #20
    Senior Member

    Join Date
    Aug 2008
    Posts
    25,159
    Mentioned
    1 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)

    Re: افسانہ نگاری کا دوسرا مقابلہ

    Quote Originally Posted by Silversand. View Post
    ساحرہ آپا۔

    آپ نے اچھا افسانہ تحریر کیا ہے۔ایک بات بہت اچھی لکھی کہ *اپنا اصل نہیں بھولنا چاہیے، جنتے بھی لبادے اوڑھ لیں آپ کا اصل ،اصل ہی رہتا ہے۔ کسی بھی ملک کسی بھی کلچر میں اس پر کوئی اثر نہیں پڑتا *
    اسلامی روایات کے میسج کو بھی بہت اچھے انداز سے پیش کیا۔مشرقی بیوی کی وفا شعاری بھی خوب بیان کی۔

    مگر مجھے ایک دو باتوں پر اعتراض بھی ہے۔

    آپ نے لکھا کہ * مغرب میں محبت ایسے کی جاتی ہے *مجھے اس بات پر اعتراض ہے۔جس قسم کی کہانی آپ نے بیان کی ہے ایسا ماحول اگرپاکستان میں جاب کرتے کسی کپل کے ساتھ بھی ہوتا تو یہی نتیجہ نکلنا تھا۔ اس میں مغرب کو کیوں بدنام کیا گیا ہے؟

    آپ نے انڈین اولڈ موویز نہیں دیکھیں جس میں امیتاب اور اس کی وائف ایک ہی جگہ کام کرتے ہیں اور پھر وہ اپنی ہی بیوی سے چڑنے لگتا ہے اس کی کامیابی کی وجہ سے۔ بتانے کا مقصد یہ ہے کہ ایسی سچوایشن جہاں بھی ہو گی وہاں نتیجہ ایسا ہی ہو گا۔ مغرب کیا اور مشرق کیا۔

    دوسری بات۔ آپ نے یہ تو مینشن ہی نہیں کیا کہ عامر کے دل میں ایمن کے لیے واپس محبت کس طرح پیدا ہوئی۔اس کا محرک کیا بنا۔ اُس کے رویے اور دل میں پہلے دل کھول کر نفرت بھر دی اور بعد میں ویکیوم کیے بغیر ہی آپ نے اینڈ میں اس کی محبت شو کر دی۔

    آخری بات۔ جم بھی تو مرد تھا پھر اس کی عقل کو کیا ہوا؟ اور عامر کی اپنی عقل کو اس وقت کیا ہوا جب وہ اپنی بیوی کو مِس انڈرسٹینڈ کر رہا تھا؟

    معذرت کے ساتھ مجھے جو کچھ لگا میں نے وہ لکھا۔ اب آپ کو اگر بُرا لگے تو درگزر کیجیے گا۔
    بہت شکریہ جرار پہلے تو افسانہ پڑھنے کا:۔ بڑی مہربانی ھے آپکی ۔ اتنا وقت دیا۔ اسکے بعد اس میں سے پوزیٹیو پوائینٹ کو سمجھنے اور نوٹ کرنے کا بھی بہت شکریہ۔ امید ھے میری طرح سب پردیسی بھی اس حقیقت کو اچھی طرح سے سمجھتے ہوں گے۔

    آجکل امریکہ میں ریسیشن کی حالت کا تمھیں کچھ اندازہ نہیں ھے۔ اس قدر پریشانی ھے کہ کچھ حد نہیں۔ سالوں کے دوست چھوٹ رھے ہیں۔ اپنی اپنی جاب بچانے کے لئے دوسرے پیارے دوستوں کو دھوکے سے فائر اور لے آف کروانے کی کوشش کس قدر بڑھ چکی ھے۔ ہر کسی کو جاب کی ضرورت اپنی زندگی کی طرح پیاری ہو رھی ھے،۔ اس میں رشتے ناطے بہت ثانوی ہو چکے ہیں۔ میں نے اس طرح کھبی رشتوں کو بدلتے نہیں دیکھا۔ دوستیوں کو ٹوٹتے نہیں دیکھا تھا پہلے۔ اس ٹاپک نے بھی مجھے اندر اندر سے کافی پریشان اور ہراساں کیا ہوا ھے۔
    اس افسانے میں بہت سے مختلف پہلو ایک ساتھ دیکھانے کی کوشش کی ھے میں نے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
    ہر ایک خیال کا بنیادی خاکہ بنایا ھے اور اگر سب کو بالکل الگ الگ تفصیل سے بتانے بیٹھ جاتی تو یہ افسانے کی جگہ ایک بہٹ بڑا ناول بن جاتا۔ جو کہ ابھی نہیں بنایا جا سکتا تھا ۔اس لئے ہر بات جملوں سے ایکسپلین کرنے کی بجائے میں نے مین آئیڈیا دے کرباقی کہانی کو سمجھنا قاری کی ذھنی استعداد پر چھوڑ دیا کیونکہ افسانہ میں تھوڑی سی تشنگی تو بہت ضروری ہوتی ھے نا:۔
    میں کوشش کرتی ہوں تمھیں بتا پاؤں۔

    میں آجکل جاب کی ان سیکیورٹی اور دوستوں کے روئے سے بے حد شاکی ہوں ان دنوں اور حیران ہوں وہ سب اپنی اپنی جاب بچانے کو کیسے دوسروں کو پھنسا کر اپنا راستہ صاف کرنے مں لگے ہیں
    ۔
    عامر ایمن سے شروع سے ہی بہت پیار کرتا تھا۔ اس نے ایمن سے کھبی بھی نفرت نہیں کی تھی بلکہ اگر وہ خفا تھا تو صرف اسکے باس بن جانے سے۔ وہ صرف اسکے عہدے کو برداشت نہیں کر پا رہا تھا ورنہ ذاتی طور پر ایمن سے کوئی نفرت نہیں تھی اور جب اس نے اپنی بیوی کو مشکل میں دیکھا تو اسکا پیار امڈ آیا۔۔
    پھر میں نے یہ بھی لکھا کہ وہ شیشے کے پار ایک دوسرے کے فیس ایکسپریشین دیکھ سکتے تھے مگر سن نہیں سکتے تھے ۔ صرف ایک دوسرے کو دیکھ کر اندازے لگاتے تھے کہ دوسرا کیا کر رھا ھے اس وقت۔ اور اس نے بار بار دیکھا تھا کہ ایمن جیسے جم کو ڈانٹتی ھے اور آفس سے نکلنے کا کہتی ھے بار بار۔ پھر وہ اسکے ساتھ کھبی بھی کہیں باہر نہیں گئ تھی جو کہ اسکی پاکبازی کا سب سے بڑا ثبوت تھا۔
    ایمن نے یہ فیصلہ کھبی نہیں کیا کہ مغربی محبت ایسی ہوتی ھے یا یہ ٓاخری فیصلہ ھے۔ اسکے بجائے وہ پریشانی میں صرف اپنے آپ سے پوچھتی تھی بار بار کیا ایسا ہوتا ھے؟ اس نے کہیں نہیں کہا مغرب میں یہی محبت کا معیار ھے8)۔

    حقیقت میں میری اپنی سہیلی انجلا امریکن ھے اور اس نے اپنے فیانسی کے مرنے کے بعد خودکشی کے لئے خود کو گولی مار لی تھی۔ ایسی فرینڈ ہوتے ہوئے میں ایسا کیسے کہ سکتی ہوں بھلا؟

    جم کی حالت تو میں نے پہلے بتا دی کہ جاب لیس ہونے کا خوف کسقدر بڑھ چکا ھے اور اسکے سامنے باقی رشتوں کی کوئی اہمیت نہیں رہ رھی۔ یہی سب کچھ میں آجکل اپنی آنکھوں سے دیکھ رھی ہوں اور اسی پوائینٹ کو بیس بنا کر یہ لکھا ھے۔

    امید ھے اب میں نے ان سب پوائینٹس کو اچھے سے کلئیر کر دیا ھے۔ اگر ابھی بھی نہیں تو بتانا ۔پھر سے کوشش کرتی ہوں;d۔

  6. #21
    Senior Member

    Join Date
    Dec 2008
    Posts
    13,631
    Mentioned
    0 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)

    Re: افسانہ نگاری کا دوسرا مقابلہ

    بہت شکریہ ساحرہ آپا آپ نے اپنا موقف کلیئر کیا۔اور کافی بادل میرے ذہن کے آسمان سے بھی چھٹ گئے۔اب مطلع کسی حد تک صاف ہے۔

    میں نے تو ایز ریڈر جو محسوس کیا وہ لکھ دیا۔ اور پوچھنا یا اعتراض کرنا اس لیے اچھا رہتا ہے کہ کلیئر کرنے والا 2 اضافی باتیں بھی بتا دیتا ہے جو افسانے میں بیان نہیں کی گئی ہوتیں۔جیسے آپ نے بتائیں۔

    بہت اچھا لکھا ہے آپ نے کیپ رائٹنگ۔ گڈ لک۔
    ************


    I was upset .. I could not sleep ..
    You came .. I cried .. Got light ..
    And slept ...

  7. #22
    Senior Member

    Join Date
    Aug 2008
    Posts
    25,159
    Mentioned
    1 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)

    Re: افسانہ نگاری کا دوسرا مقابلہ

    سب سے اہم انفارمیشین
    یہ میری کہانی بالکل نہیں ھےجیساکہ اکثر لوگوں کو شک ہو رہا تھا;d۔البتہ میرے اردگرد ایسا ضرور ہوا ھے اور ہو رہا ھے جس سے متاثر ہو کر لکھا ھے~۔

  8. #23
    Senior Member

    Join Date
    Oct 2007
    Posts
    1,408
    Mentioned
    0 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)

    Re: افسانہ نگاری کا دوسرا مقابلہ

    http://www.urdupoint.com/adab/urdu-498.html

    humary one urdu writers kisi sey kam nahi, Wish u Good Luck Sahira

  9. #24
    Senior Member

    Join Date
    May 2009
    Posts
    17,348
    Blog Entries
    4
    Mentioned
    4 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)

    Re: افسانہ نگاری کا دوسرا مقابلہ

    بہت بہت مبارک ہو جی۔

  10. #25
    Senior Member

    Join Date
    Sep 2008
    Posts
    16,873
    Mentioned
    0 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)

    Re: افسانہ نگاری کا دوسرا مقابلہ

    واو ماشاءاللہ
    ساحرہ مبارک ہو

    لیکن وہ تصویر کس ختون کی ہے؟؟؟

  11. #26
    Senior Member

    Join Date
    Aug 2008
    Posts
    25,159
    Mentioned
    1 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)

    Re: افسانہ نگاری کا دوسرا مقابلہ

    لبنی میں نے یہ تصویر نہیں دی۔ان لوگوں نے خود اپنی مرضی سے معلوم نہیں کس کی ڈال دی ساتھ میں۔۔۔۔۔۔۔
    "There is no market for emotions.
    So,
    Never advertise feelings,
    Just display attitude"

Page 2 of 2 FirstFirst 12

Bookmarks

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •