Thanks Thanks:  0
Likes Likes:  0
Page 1 of 3 123 LastLast
Results 1 to 15 of 33

Thread: ایک سوال

  1. #1
    Senior Member

    Join Date
    Feb 2008
    Posts
    3,065
    Mentioned
    0 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)

    ایک سوال

    ایک ٹیکنکل سوال لے کر حاضر ہوا ہوں دماغ کی ساخت کے مطابق دماغ کے
    کچھ حصے ہوتے ہیں حرام مغر ، سیری بلیم سامنے کا دماغ یا
    دماغی حصہ
    اور کام کرنے کے لہاظ سے شعور تحت الشعور اور لا شعو
    مزاج کی رو سے شعور وہ ہے جو کے ہے ، تحت الشعور شعور اور لا شعور کے
    درمان رابطہ ہے لا شعور لا نہیں بلکہ سب کچھ ہے ۔یہ وہ ہے جس کے متعلق ہم سوچ نہیں رہے ہوتے یا ہمارے تحت الشعور کی دسترس میں نہیں لایا گیا ہوتا
    پوچھنا یہ ہے کے آج سے کی سال پہلے میں نے ٹیلی پیتھی کی مشکات کرنا
    شروع کی تھیں ، مجھے نیند آنا بند ہو گئ دو دو دن میں نہیں سو سکتا تھا ، آنکھوں کے آگے تارے سے ناچنے لگتے تھے ، جیسے ہی میں نے یہ سب کرنا چھوڑا مجھے شدت کے ساتھ نکسیر پھوٹنا شروع ہو گی جو تقرینا" ایک سال تک گایے بگاے جاری رہی ، یہ بہت پرانا واقع ہے ، مجھے آپ سے صرف یہ پوچھنا ہے کہ کیا شمع بینی نقطہ بینی یا ما بنینی ہمارے اندر ارتقاز توجہ کی صلاحیت پیدا کر سکتی ہے نیز سائنس کی رو سے کیا عمل مرتب ہوتا ہے


    نیز یہ بتائں ہیبرو فوبیا یا ہیپرو فوبیا کیا ہے ،
    اے اللہ ! ميری عزت کيلۓ يہی کافی ہے کہ ميں تيرا بندہ ہوں اور ميرے فخر کيلۓ يہی کافی ہے کہ تو ميرا پروردگار ہے- تو ويسا ہی ہےجيسا ميں چاہتا ہوں- پس تو مجھے ويسا بنا لے جيسا تو چاہتا ہے

  2. #2
    Senior Member

    Join Date
    Aug 2008
    Posts
    25,159
    Mentioned
    1 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)

    Re: ایک سوال

    ھمممممممممممم
    مجھے پتہ ھے کوئی بھی میری بات کا یقین نھی کرے گا اور اسکو گپ بازی ھے سمجھیں گے۔
    جب میں ھائی سکول میں تھی تو میں نے ان سب چیزوں کی بہت پریکٹس کر لی تھی اور چپکے چپکے سکول میں کلاس فیلوز پر اپنانا بھی شروع کر دیا تھا۔ اور کم سے کم 5 لوگوں کو میں نے ساری کلاس کے سامنے سلا کر چھوٹے موٹے راز بھی اگلوا لئے تو ھر طرف میری دھوم مچ گئی اور بات ٹیچرز تک پہنچ گئی۔ خیر ان کو یقین نھی آتا تھا مگر تجربے کے لئے کیا ھمارے سامنے کرو تو میں نے ایک دوست کو سلا دیا ان سب کے سامنے۔ سارے حیران رہ گئے اور سمجھے میں نے اس لڑکی کو ڈرامہ کرنے کو پہلے سے تیار کیا ھوا ھے۔
    مگر اصل ڈرامہ تو اس وقت ھوا جب میرے جگانے پر وہ لڑکی کسی صورت جاگ کر نہ دے اور سوتی کی سوتی رھی۔ لاکھ مارا پیٹا۔ پانی ڈالا۔سب کچھ کیا مگر وہ جاگ ھی نھی رھی تھی۔ بس وہ ھی میری لائف کا ٹرننگ پوائنٹ تھا اس حوالے سے۔ میرے گھر والوں کو خبر کی گئی اور مجھ سے قسم لے لی گئی کہ دوبارہ پوری زندگی ایسی کوئی حرکت نھی کروں گی اور اس طرح کے سارے پراسرار علوم پر مشتمل میرے ذخیرہ کتب کو بڑی بے دردی سے جلا دیا گیا تھا۔ بعد میں وہ بڑی مشکل سے جاگی لیکن میں تب تک قسم کھا چکی تھی۔
    مجھے ان مشقوں کو کرنے میں کوئی شکایت نھی ھوئی تھی۔ بس تب سے ڈر بھت لگنے لگا ھے اندھیرے سے اکیلے پن سے اور کوئی بات نھی مگر زندگی میں اور بہت فائدے دیکھے ھیں اسکے۔ جیسا کی میں ایک ھی وقت میں بہت سے مختلف کاموں پر بہت اچھا ارتکاز کر لیتی ھوں۔
    میری یاد داشت بھی ایک قسم کی ویزیبل ھو گئی ھے، مطلب مجھے کسی بھی چیز کی تصویر دل میں کافی حد تک یاد رھ جاتی ھے۔اگر غور سے دیکھ لوں۔ زندگی بھر پیپر بھی ایسے ھی دئے تھے میں آنکھیں بند کرتی تھی اور کتاب کا صفحہ سامنے آ جاتا تھا۔۔
    "There is no market for emotions.
    So,
    Never advertise feelings,
    Just display attitude"

  3. #3
    Senior Member

    Join Date
    Feb 2008
    Posts
    3,065
    Mentioned
    0 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)

    Re: ایک سوال

    Quote Originally Posted by ساحرہ View Post
    ھمممممممممممم
    مجھے پتہ ھے کوئی بھی میری بات کا یقین نھی کرے گا اور اسکو گپ بازی ھے سمجھیں گے۔
    جب میں ھائی سکول میں تھی تو میں نے ان سب چیزوں کی بہت پریکٹس کر لی تھی اور چپکے چپکے سکول میں کلاس فیلوز پر اپنانا بھی شروع کر دیا تھا۔ اور کم سے کم 5 لوگوں کو میں نے ساری کلاس کے سامنے سلا کر چھوٹے موٹے راز بھی اگلوا لئے تو ھر طرف میری چھوم مچ گئی اور بات ٹیچرز تک پہنچ گئی۔ خیر ان کو یقین نھی آتا تھا مگر تجربے کے لئے کیا ھمارے سامنے کرو تو میں نے ایک دوست کو سلا دیا ان سب کے سامنے۔ سارے حیران رہ گئے اور سمجھے میں نے اس لڑکی کو ڈرامہ کرنے کو پہلے سے تیار کیا ھوا ھے۔
    مگر اصل ڈرامہ تو اس وقت ھوا جب میرے جگانے پر وہ لڑکی کسی صورت جاگ کر نہ دے اور سوتی کی سوتی رھی۔ لاکھ مارا پیٹا۔ پانی ڈالا۔سب کچھ کیا مگر وہ جاگ ھی نھی رھی تھی۔ بس وہ ھی میری لائف کا ٹرننگ پوائنٹ تھا اس حوالے سے۔ میرے گھر والوں کو خبر کی گئی اور مجھ سے قسم لے لی گئی کہ دوبارہ پوری زندگی ایسی کوئی حرکت نھی کروں گی اور اس طرح کے سارے پراسرار علوم پر مشتمل میرے ذخیرہ کتب کو بڑی بے دردی سے جلا دیا گیا تھا۔ بعد میں وہ بڑی مشکل سے جاگی لیکن میں تب تک قسم کھا چکی تھی۔
    مجھے ان مشقوں کو کرنے میں کوئی شکایت نھی ھوئی تھی۔ بس تب سے ڈر بھت لگنے لگا ھے اندھیرے سے اکیلے پن سے اور کوئی بات نھی مگر زندگی میں اور بہت فائدے دیکھے ھیں اسکے۔ جیسا کی میں ایک ھی وقت میں بہت سے مختلف کاموں پر بہت اچھا ارتکاز کر لیتی ھوں۔
    میری یاد داشت بھی ایک قسم کی ویزیبل ھو گئی ھے، مطلب مجھے کسی بھی چیز کی تصویر دل میں کافی حد تک یاد رھ جاتی ھے۔اگر غور سے دیکھ لوں۔ زندگی بھر پیپر بھی ایسے ھی دئے تھے میں آنکھیں بند کرتی تھی اور کتاب کا صفحہ سامنے آ جاتا تھا۔۔
    میں نے یقین کر لیا بہن اس چیز جس کو آپ کرتی تھی اس کا نام ہے ایپنا ٹاہز کرنا
    اور یہ خیال خوانی سے حاصل ہو جاتا ہے نیز ایک بوتل میں دھواں ڈال کر اسے اپنی آنکھوں کے اشارے سے ادھر اُدھر (دھویں) کرنے سے دوسروں پر عمل کرنے کی صلاحیت پیدا ہو سکتی ہے
    اے اللہ ! ميری عزت کيلۓ يہی کافی ہے کہ ميں تيرا بندہ ہوں اور ميرے فخر کيلۓ يہی کافی ہے کہ تو ميرا پروردگار ہے- تو ويسا ہی ہےجيسا ميں چاہتا ہوں- پس تو مجھے ويسا بنا لے جيسا تو چاہتا ہے

  4. #4
    Senior Member

    Join Date
    Oct 2007
    Posts
    1,771
    Mentioned
    0 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)

    Re: ایک سوال

    Quote Originally Posted by Qartaas View Post
    میں نے یقین کر لیا بہن اس چیز جس کو آپ کرئی تھی اس کا نام ہے ایپنا ٹاہز کرنا
    اور یہ خیال خوانی سے حاصل ہو جاتا ہے نیز ایک بوتل میں دھواں ڈال کر اسے اپنی آنکھوں کے اشارے سے ادھر اُدھر (دھویں) کو کرنے سے دوسروں پر عمل کرنے کی صلاحیت پیدا ہو سکتی ہے
    قرطاس بھای ایپناٹایز نہیں ہوتا ۔ ہپناٹایز ہو تا ہے۔

    اور دوسری بات یہ کہ یہ خیال خوانی سے حاصل نہیں ہوتا بلکہ خیال خوانی کیلیے یہ مدد گار ثابت ہو سکتا ہے۔

    اور ہپناٹزم خیال خوانی کی طرح کوی ماورای چیز نہیں ہے بلکہ یہ تو نفسیات کا ایک علم ہے۔

    ویسے ان مشقوں کو عام لوگوں کو بغیر کسی ماہر استاد کے نہیں کرنا چاہیے ۔

    یہ سب وہی لوگ کرنے کی کوشش کرتے ہیں جو ٹیلی پیتھی پابندی سے پڑھتے ہیں اور فرہاد علی تیمور بننا چاہتے ہیں۔

  5. #5
    Senior Member

    Join Date
    Feb 2008
    Posts
    3,065
    Mentioned
    0 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)

    Re: ایک سوال

    آپ تو واقعی بہادر ہیں شمع بینی کے دوران اکثر چیزیں ہمارے لاشعور سے نکل کر ہمارے
    سامنے آتی رہتی ہیں ، اگر اندھیرے کا خوف ہو تو کوئی جن بھی آنکھوں کے سامنے آسکتا ہے ، ،، ، یہ حقیقی جن نہیں ہوتے بلکہ ہمارے خیال کے جن ہوتے ہیں جو لا شعور سے کود کر شعور میں آ جاتے ہیں اور ہمارا ترا نکل جاتا ہے ( ہم ڈر جاتے ہیں
    اے اللہ ! ميری عزت کيلۓ يہی کافی ہے کہ ميں تيرا بندہ ہوں اور ميرے فخر کيلۓ يہی کافی ہے کہ تو ميرا پروردگار ہے- تو ويسا ہی ہےجيسا ميں چاہتا ہوں- پس تو مجھے ويسا بنا لے جيسا تو چاہتا ہے

  6. #6
    Senior Member

    Join Date
    Feb 2008
    Posts
    3,065
    Mentioned
    0 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)

    Re: ایک سوال

    Quote Originally Posted by taiyang View Post
    قرطاس بھای ایپناٹایز نہیں ہوتا ۔ ہپناٹایز ہو تا ہے۔

    اور دوسری بات یہ کہ یہ خیال خوانی سے حاصل نہیں ہوتا بلکہ خیال خوانی کیلیے یہ مدد گار ثابت ہو سکتا ہے۔

    اور ہپناٹزم خیال خوانی کی طرح کوی ماورای چیز نہیں ہے بلکہ یہ تو نفسیات کا ایک علم ہے۔

    ویسے ان مشقوں کو عام لوگوں کو بغیر کسی ماہر استاد کے نہیں کرنا چاہیے ۔

    یہ سب وہی لوگ کرنے کی کوشش کرتے ہیں جو ٹیلی پیتھی پابندی سے پڑھتے ہیں اور فرہاد علی تیمور بننا چاہتے ہیں۔
    فرہاد علی تیمور کی کتاب میں ذیادہ افسانہ ہے میں اس ہپنا ٹائز کی بات کر رہا
    ہوں جس کے محرکات شمع بینی ہیں ، شمع بینی بھی حقیقی سائنس ہے
    اس میں بھی سائنسی محرکات کار فرما ہیں ، ہپنا ٹائز کئ طرح کے ہوتے ہیں
    استاد سحت مزاج ہے بچے کلاس میں شور کر رہے ہیں استاد اچانک کلاس روم میں داخل ہوتا ہے ، بچے خوف کے مارے جہاں کھڑے ہیں وہیں کھڑے رہ جاتے ہیں کچھ بچوں نے بھاگ کر اپنی جگوں پر بیٹھنے کی کوشش کی مگر وہ ایک قدم بھی نہ اٹھا سکے ، بچوں کے ساتھ کیا ہوا تھا جناب بچے ہپناٹائز ہو گے تھے ،
    اے اللہ ! ميری عزت کيلۓ يہی کافی ہے کہ ميں تيرا بندہ ہوں اور ميرے فخر کيلۓ يہی کافی ہے کہ تو ميرا پروردگار ہے- تو ويسا ہی ہےجيسا ميں چاہتا ہوں- پس تو مجھے ويسا بنا لے جيسا تو چاہتا ہے

  7. #7
    Senior Member

    Join Date
    Feb 2008
    Posts
    3,065
    Mentioned
    0 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)

    Re: ایک سوال

    ٹیلی پیتھی کی مشقیں کرنے کا ایک ہی وقت رکھا جاتا ہے اگر ہم نے پہلے دن رات کے سات بجے مشق شروع کی تھی تو دوسرے دن بھی سات بجے ہی شروع کرنی چاہیے ورنہ فائدے کی بجائے نقصان ہو گا
    اے اللہ ! ميری عزت کيلۓ يہی کافی ہے کہ ميں تيرا بندہ ہوں اور ميرے فخر کيلۓ يہی کافی ہے کہ تو ميرا پروردگار ہے- تو ويسا ہی ہےجيسا ميں چاہتا ہوں- پس تو مجھے ويسا بنا لے جيسا تو چاہتا ہے

  8. #8
    Senior Member

    Join Date
    May 2007
    Posts
    1,785
    Mentioned
    1 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)

    Re: ایک سوال

    Quote Originally Posted by Qartaas View Post
    ٹیلی پیتھی کی مشقیں کرنے کا ایک ہی وقت رکھا جاتا ہے اگر ہم نے پہلے دن رات کے سات بجے مشق شروع کی تھی تو دوسرے دن بھی سات بجے ہی شروع کرنی چاہیے ورنہ فائدے کی بجائے نقصان ہو گا
    یہ کیا انٹی بائیو ٹیکس ہے۔ ہیں جی،
    ”ون اردو ڈاٹ کام“ جان چھڑانا مشکل ہے

  9. #9
    Senior Member

    Join Date
    Feb 2009
    Posts
    2,160
    Mentioned
    0 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)

    Re: ایک سوال

    اسلام علیکم!۔

    تو پھر ذھنی ارتکاز حاصل کرنے کا مؤثر اور محفوظ ترین طریقہ کیا ھے؟
    اور یاداشت کیسے بہتر بنائ جائے؟

  10. #10
    Senior Member

    Join Date
    Jan 2008
    Posts
    12,833
    Mentioned
    1 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)

    Re: ایک سوال

    Quote Originally Posted by ساحرہ View Post
    ھمممممممممممم
    مجھے پتہ ھے کوئی بھی میری بات کا یقین نھی کرے گا اور اسکو گپ بازی ھے سمجھیں گے۔
    جب میں ھائی سکول میں تھی تو میں نے ان سب چیزوں کی بہت پریکٹس کر لی تھی اور چپکے چپکے سکول میں کلاس فیلوز پر اپنانا بھی شروع کر دیا تھا۔ اور کم سے کم 5 لوگوں کو میں نے ساری کلاس کے سامنے سلا کر چھوٹے موٹے راز بھی اگلوا لئے تو ھر طرف میری دھوم مچ گئی اور بات ٹیچرز تک پہنچ گئی۔ خیر ان کو یقین نھی آتا تھا مگر تجربے کے لئے کیا ھمارے سامنے کرو تو میں نے ایک دوست کو سلا دیا ان سب کے سامنے۔ سارے حیران رہ گئے اور سمجھے میں نے اس لڑکی کو ڈرامہ کرنے کو پہلے سے تیار کیا ھوا ھے۔
    مگر اصل ڈرامہ تو اس وقت ھوا جب میرے جگانے پر وہ لڑکی کسی صورت جاگ کر نہ دے اور سوتی کی سوتی رھی۔ لاکھ مارا پیٹا۔ پانی ڈالا۔سب کچھ کیا مگر وہ جاگ ھی نھی رھی تھی۔ بس وہ ھی میری لائف کا ٹرننگ پوائنٹ تھا اس حوالے سے۔ میرے گھر والوں کو خبر کی گئی اور مجھ سے قسم لے لی گئی کہ دوبارہ پوری زندگی ایسی کوئی حرکت نھی کروں گی اور اس طرح کے سارے پراسرار علوم پر مشتمل میرے ذخیرہ کتب کو بڑی بے دردی سے جلا دیا گیا تھا۔ بعد میں وہ بڑی مشکل سے جاگی لیکن میں تب تک قسم کھا چکی تھی۔
    مجھے ان مشقوں کو کرنے میں کوئی شکایت نھی ھوئی تھی۔ بس تب سے ڈر بھت لگنے لگا ھے اندھیرے سے اکیلے پن سے اور کوئی بات نھی مگر زندگی میں اور بہت فائدے دیکھے ھیں اسکے۔ جیسا کی میں ایک ھی وقت میں بہت سے مختلف کاموں پر بہت اچھا ارتکاز کر لیتی ھوں۔
    میری یاد داشت بھی ایک قسم کی ویزیبل ھو گئی ھے، مطلب مجھے کسی بھی چیز کی تصویر دل میں کافی حد تک یاد رھ جاتی ھے۔اگر غور سے دیکھ لوں۔ زندگی بھر پیپر بھی ایسے ھی دئے تھے میں آنکھیں بند کرتی تھی اور کتاب کا صفحہ سامنے آ جاتا تھا۔۔
    ساحرہ باجی ، آپ نہ کریں ، ہمیں تھوڑا سا سکھا دیں پلـــــــــــــیز!!۔
    ;d

    سید فراز محمود
    Ph.D, MS, MBBS, FRCS,
    FCPS, MBA, MSc. Chem.,
    MSPD, FDDI, TCP, HDMI

    ڈگری ڈگری ہوتا ہے ،اصلی ہو یا جعلی

    زنبیل


    http://s.faraz.mahmood.googlepages.com/website-2-24.pnghttp://www.linkedin.com/img/webpromo/btn_in_20x15.gif http://s.faraz.mahmood.googlepages.com/blog-24.png

    ┐─────────┌

    └─────────┘

  11. #11
    Senior Member

    Join Date
    Aug 2008
    Posts
    25,159
    Mentioned
    1 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)

    Re: ایک سوال

    Quote Originally Posted by فراز View Post
    ساحرہ باجی ، آپ نہ کریں ، ہمیں تھوڑا سا سکھا دیں پلـــــــــــــیز!!۔
    ;d

    دیکھئے آپ لوگ ایسےچکروں میں نہ ھی پڑیں تو اچھا ھو گا۔ اور زبردستی ھے تو کوئی استاد ڈھونڈ لیں۔ ورنہ پاگل ھونے کے 100% چانسز ھوتے ھیں۔ جو استاد ھوتے ھیں وہ ریڑھ کی ھڈی کی حثیت رکھتے ھیں اس معاملے میں۔ ویسے میرا مشورہ ھے آپ یہ باتیں چھوڑیں۔
    میں یاد داشت اور ارتکاز کی مشقیں ویسے بتا دیتی ھوں۔ ان سے بہت اچھا فائدہ ھو گا آپکو۔
    آپ کوئی ایک کام کرنے کے لئے چن لیں، صرف ایک اور پھر کوشش کریں دماغ بہت پرسکون ھو اور اپ اپنا دھیان صرف اور صرف اسی ایک کام میں رکھیں اور پوری کوشش کریں آپکا دھیان ایک سیکنڈ بھی اس سے ھٹنے نہ پائے۔ شروع میں آپکو بھت مشکل ھو گی۔ بار بار ھر لمحے دھیان ضرور بھٹکے گا۔آپ نے ھمت نھی ہارنی اور بار بار اپنی توجہ صرف اسی کام پر وآپس لانی ھے۔ 2یا3 ھفتے کی سخت پریکٹس سے آپ کا ذھن کافی حد تک مرتکز ھونا سیکھ لے گا۔ جب آپ ایک خیال پر مرتکز ھونا سیکھ لیں تو پھر ایک ساتھ 2 مختلف باتیں سوچنا شروع کر دیں پوری تفصیل کے ساتھ اور وہ بھی ایسے کہ دونوں کا خیال ساتھ بہ ساتھ تو چلے مگر آپس میں گڈ مڈ نہ ھونے پائے مثلا آپ ایک چولہے پر چائے بنانا شروع کریں اور ساتھ میں کوئی کتاب پڑھنا شروع کر دیں۔ اب آپکو اتنا پرفیکٹ ھونا چاھئے کہ نا تو آپ کتاب میں اس قدر مگن ھو جایئں کہ چائے ابل جائے اور نہ ھی کتاب چھوڑ کر صرف چائے کی کیتلی کو دیکھ رھے ھیں ، بلکہ دونوں کام بہت سہولت سے ساتھ ساتھ ھو رھے ھوں۔ جب بہت پریکٹس ھو جائے گی تو آپ بہت کچھ ایک وقت میں کرنے لگیں گے
    اور ان شاءاللہ سب کے سب کام بھی پرفیکیٹ ھوں گے۔
    یاد داشت کے لئے صبح صبح باہر واک کرنے جایئں نماز کے بعد اور راستے میں جو جو نظر آئے روزانہ گھر میں آ کر لکھیں۔ آپ یہ دیکھ کے حیران ھوں گے روز آپکو پہلے سے زیادہ زیادہ چیزیں یاد رھتی ھیں اور آپکا ارتکاز بھی بڑھتا ھی جائے گا
    اس کے لئے گھر سے باہر جانا ضروری نھی ھے آپ یہ سب کام اپنے کمرے اپنے گھر یا اپنے آفس میں بھی بیٹھے بیٹھے کر سکتے ھیں۔ ایک نظر ساری چیزوں کو دیکھیں اور پھر کاپی پر لکھیں۔ ھر بار آپ کو پہلے سے ذیادہ یاد آتی جایئں گی اور اسی طرح آپ ارتکاز کرنا سیکھ جایئں گے۔۔
    روز صبح سات بھیگے ھوئے بادام بھی کھایا کریں اور درودھ شریف کا ھر وقت پڑھنا اگر عادت بن جائے تو کیا بات ھے اس سے زندگی میں اور بھی بہت سے فائدے حاصل ھوتے ھیں۔۔
    "There is no market for emotions.
    So,
    Never advertise feelings,
    Just display attitude"

  12. #12
    Senior Member

    Join Date
    May 2008
    Posts
    4,943
    Mentioned
    0 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)

    Re: ایک سوال

    یاداشت تیز کرنے کا ایک مجرب عمل میرے پاس ھے۔

    کسی بھی اسلامی مہینے کی پہلی تاریخ کو یہ وظیفہ شروع کرنا ھے۔ اور مہینے کے ستائیس تاریخ تک جاری رھے گا۔

    پہلے دن عشا کی نماز کے بعد ایک تسبیح درود شریف کی پھر ایک تسبیح رب اشرح لی صدری ویسرلی امری واحلل عقدۃ من لسانی یفقھو قولی ۔ آخر میں ایک تسبیح پھر درود پاک کی۔

    دوسرے دن اسی طرح اول آخر ایک ایک تسبیح درود پاک کی ۔ اور آیت مبارکہ کی دو تسبیحات

    چودہ تاریخ تک اسی طرح ھر روز آیت مبارکہ کی تسبیحات بڑھاتے جایئں
    پندرہ تاریخ سے آیت مبارکہ کی تسبیحات کم کرنی شروع کر دیں

    یعنی 1 2 3 4 5 6 7 8 9 10 11 12 13 14 13 12 11 10 9 8 7 6 5 4 3 2 1
    [SIGPIC][/SIGPIC]

  13. #13
    Durre Nayab
    Guest

    Re: ایک سوال

    اس ٹاپک کو میں اسٹک کر رہی ہوں یہاں نفسیاتی گپ شپ و گفتگو کریں۔

  14. #14
    Senior Member

    Join Date
    Aug 2008
    Posts
    25,159
    Mentioned
    1 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)

    Re: ایک سوال

    Quote Originally Posted by Durre Nayab View Post
    اس ٹاپک کو میں اسٹک کر رہی ہوں یہاں نفسیاتی گپ شپ و گفتگو کریں۔


    سجاد یا ساجد بھائی بہت اچھی تسبیح بتائی ھے آپ نے کرنے کے لئے۔
    دری تم اگر اس کو اسلامی سیکشن میں کوٹ کر دو تو بہت اچھا ھو گا اور بہت لوگوں کا بھلا بھی ھو گا۔
    شکریہ
    "There is no market for emotions.
    So,
    Never advertise feelings,
    Just display attitude"

  15. #15
    Senior Member

    Join Date
    Oct 2007
    Posts
    1,771
    Mentioned
    0 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)

    Re: ایک سوال

    Quote Originally Posted by ساحرہ View Post
    دیکھئے آپ لوگ ایسےچکروں میں نہ ھی پڑیں تو اچھا ھو گا۔ اور زبردستی ھے تو کوئی استاد ڈھونڈ لیں۔ ورنہ پاگل ھونے کے 100% چانسز ھوتے ھیں۔ جو استاد ھوتے ھیں وہ ریڑھ کی ھڈی کی حثیت رکھتے ھیں اس معاملے میں۔ ویسے میرا مشورہ ھے آپ یہ باتیں چھوڑیں۔
    میں یاد داشت اور ارتکاز کی مشقیں ویسے بتا دیتی ھوں۔ ان سے بہت اچھا فائدہ ھو گا آپکو۔
    آپ کوئی ایک کام کرنے کے لئے چن لیں، صرف ایک اور پھر کوشش کریں دماغ بہت پرسکون ھو اور اپ اپنا دھیان صرف اور صرف اسی ایک کام میں رکھیں اور پوری کوشش کریں آپکا دھیان ایک سیکنڈ بھی اس سے ھٹنے نہ پائے۔ شروع میں آپکو بھت مشکل ھو گی۔ بار بار ھر لمحے دھیان ضرور بھٹکے گا۔آپ نے ھمت نھی ہارنی اور بار بار اپنی توجہ صرف اسی کام پر وآپس لانی ھے۔ 2یا3 ھفتے کی سخت پریکٹس سے آپ کا ذھن کافی حد تک مرتکز ھونا سیکھ لے گا۔ جب آپ ایک خیال پر مرتکز ھونا سیکھ لیں تو پھر ایک ساتھ 2 مختلف باتیں سوچنا شروع کر دیں پوری تفصیل کے ساتھ اور وہ بھی ایسے کہ دونوں کا خیال ساتھ بہ ساتھ تو چلے مگر آپس میں گڈ مڈ نہ ھونے پائے مثلا آپ ایک چولہے پر چائے بنانا شروع کریں اور ساتھ میں کوئی کتاب پڑھنا شروع کر دیں۔ اب آپکو اتنا پرفیکٹ ھونا چاھئے کہ نا تو آپ کتاب میں اس قدر مگن ھو جایئں کہ چائے ابل جائے اور نہ ھی کتاب چھوڑ کر صرف چائے کی کیتلی کو دیکھ رھے ھیں ، بلکہ دونوں کام بہت سہولت سے ساتھ ساتھ ھو رھے ھوں۔ جب بہت پریکٹس ھو جائے گی تو آپ بہت کچھ ایک وقت میں کرنے لگیں گے
    اور ان شاءاللہ سب کے سب کام بھی پرفیکیٹ ھوں گے۔
    یاد داشت کے لئے صبح صبح باہر واک کرنے جایئں نماز کے بعد اور راستے میں جو جو نظر آئے روزانہ گھر میں آ کر لکھیں۔ آپ یہ دیکھ کے حیران ھوں گے روز آپکو پہلے سے زیادہ زیادہ چیزیں یاد رھتی ھیں اور آپکا ارتکاز بھی بڑھتا ھی جائے گا
    اس کے لئے گھر سے باہر جانا ضروری نھی ھے آپ یہ سب کام اپنے کمرے اپنے گھر یا اپنے آفس میں بھی بیٹھے بیٹھے کر سکتے ھیں۔ ایک نظر ساری چیزوں کو دیکھیں اور پھر کاپی پر لکھیں۔ ھر بار آپ کو پہلے سے ذیادہ یاد آتی جایئں گی اور اسی طرح آپ ارتکاز کرنا سیکھ جایئں گے۔۔
    روز صبح سات بھیگے ھوئے بادام بھی کھایا کریں اور درودھ شریف کا ھر وقت پڑھنا اگر عادت بن جائے تو کیا بات ھے اس سے زندگی میں اور بھی بہت سے فائدے حاصل ھوتے ھیں۔۔
    واہ جی ساحرہ ، تم تو کمال کی ہو ۔ بالکل نفسیاتی ماہر کی طرح مشورے اور مسقیں بتا رہی ہو۔
    آپ نے بہت ہی اچھی مشقیں بتای ہیں لیکن میرے خیال میں پہلے والے میں تو بہت سخت محنت کی ضرورت ہوگی ورنہ تو ناممکن ہی ہے بہت سارے کام ایک ہی وقت میں پرفیکٹ طریقے سے کرنا۔

    اچھا میں بھی ارتکاز اور یاداشت بہتر بنا نے کیلیے ایک مشق بتاتا ہوں ۔

    جب بھی آپ رات کو سونے کیلیے لیٹے اور آنکھیں بند کر لے آس پاس کے ماحول کا پرسکون ہونے سے اور بھی بہت اچھے نتایج آسکتے ہیں۔

    اب یہ سوچنا شروع کر دے کہ صبح جب آپ اٹھے تھے تو کیا کام کیا تھا ، یعنی ااٹھنے کے وقت بسم اللہ یا جاگنے کی دعا اگر پڑھی تو اسی سے شروع کر دے یا اگر آنکھیں مل کر کچھ اور کہا یا سنا ہو یا تھوڑی دیر سستانے کے بعد اُٹھ کر تولیا لیا اور باتھ روم شاور لینے کیلیے داخل ہوے ہو پھر شاور لیتے وقت کی ساری جزییات ، جسم خشک کرنا پھر بالوں میں برش کنگھی تیل کریم کوی خوشبو یہ سارے ، پھر ناشتے کے ٹیبل پر پھر ناشتہ کیسے شروع کیا ، کیا کیا کھایا یا پیا اس طرح سے سارے کاموں کی فلم کو اپنے ذہن کے پردے پر پلے کرے ۔ پہلے پہلے آپ دیکھنگے کہ بہت جلدی سارے دن کی ریکاڈنگ ختم ہو جاییگی اور اس میں سے بہت سارے کام ایسے بھی ہونگے جو یاد ہی نہ آے ہونگے۔ لیکن آہستہ آہستہ اسی طرح کرنے سے آپ کو روزانہ کے سارے افعال جیسے ہی آپ سوچنا شروع کرینگے یاد آتے جاینگے۔

    کبھی کبھی آپ سوچتے سوچتے ایک کام کو بھول کر دوسرے کام کو یاد کر رہے ہونگے تب وہ پچھلے والا کام بھی یاد آجاییگا، تو آپ فلم کو ادھر ہی سٹاپ کر کے دوبارہ اسی جگہ سے شروع کر دے جہاں سے کوی کام پہلے سوچنے سے رہ گیا تھا اور اب یاد آگیا ہے۔ اسی طرح پھر آگے سوچتے جاے۔

    اس سے ایک تو چند ہفتوں کی کوشش کے بعد آپ اپنے ارتکاز اور یاداشت میں حیرت انگیزتبدیلی پاینگے تو دوسری طرف اپنے احتساب کا بھی بہترین موقع ملے گا کہ کتنے کام اللہ کے احکامات اور رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کی نافرمانی کے کیے ہیں اور کتنا ظلم یا دوسروں کی حق تلفی یا بدتمیزی یا زیادتی کی ہے۔ اس سے بھی آیندہ بچنے کی کوشش کی جا سکتی ہے اور اپنی غلطیوں کو سدھارا جا سکتا ہے۔

Page 1 of 3 123 LastLast

Bookmarks

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •