Thanks Thanks:  0
Likes Likes:  0
Results 1 to 7 of 7

Thread: میرا بھی ایک سوال۔

  1. #1
    Senior Member

    Join Date
    Feb 2008
    Posts
    4,419
    Mentioned
    0 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)

    میرا بھی ایک سوال۔

    السلام علیکم:
    میں ایک سوال پوچھنا چاہتا ہوں کافی کوششوں کے بعد بھی مسئلہ حل نہیں ہوسکا تو بالآخر یہاں آگیا۔
    اگر ایک شخص انا پرست ہو مطلب صرف اپنی بات کو صحیح اور دوسروں کی ہر بات کو غلط سمجھتا ہو اور کبھی بھی اپنی غلطی نا مانے ہمیشہ یہ چاہے کہ دوسرا شخص اسکی غلطی کو اپنی غلطی مان کے معافی مانگے اور ایک سب سے اہم ترین نکتہ یہ کہ ہر بات کو مثبت انداز میں سوچنے کیبجائے ہمیشہ منفی انداز میں سوچے تو کیا کرنا چاہیئے?

  2. #2
    Senior Member

    Join Date
    Jan 2009
    Posts
    1,577
    Mentioned
    0 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)

    Re: میرا بھی ایک سوال۔

    انھیں نرگسیت پسند لوگ بھی کہا جاتا ہے، یہ خود سے محبت میں مبتلا ہوتے ہیں،
    خود پرست لوگ دوسروں کا نقطہ نظر نہیں سمجھ پاتے کیونکہ وہ ایسا کرنا ہی نہیں چاہتے، ان کے خیال میں وہ ہمیشہ ٹھیک ہوتے ہیں اور انھیں خود میں تبدیلی لانے کی ضرورت کبھی بھی محسوس نہیں ہوتی، وہ اپنے آپ کو خاص شخصیت تصور کرتے ہیں، وہ پہلے میں پھر کوئی اور کے اصول پر چلتے ہیں، ان کے لئے ان کی خواہشات و ضروریات انتہائی اہمیت کی حامل ہوتی ہیں، انہیں اپنے فائدے اور اپنی خوشی کیلئے جھوٹ اور غلط بات کا سہارا لینا جائز محسوس ہوتا ہے، ان کے ساتھ رہنا ایک مشکل اور زہنی دبائو میں مبتلا کرنے والا کام ہے، اگر آپ انھیں چھوڑ دیں تو وہ بڑی آسانی سے یہ مان لیتے ہیں کہ آپ اس قابل ہی نہیں تھے کہ وہ آپ کے ساتھ رہتے اور اگر ان کے رویہ کے باوجود آپ ان کے ساتھ ہی رہیں تو وہ سوچتے ہیں کہ وہ ہیں ہی اتنے اچھے کہ آپ انھیں چھوڑ ہی نہیں سکتے، عموما ماحول اس رویہ کے فروغٍ کا باعث بنتا ہے، گھر والوں کے رویہ سے عادات پختہ ہوتی چلی جاتی ہیں اور ان میں تبدیلی کی خواہش دیوانے کا خواب محسوس ہوتی ہے

    ان کے ساتھ گزارہ کرنے کیلئے کچھ باتیں ذھن میں رکھیں
    کبھی بھی ان میں تبدیلی لانے کی کوشش نہ کریں،
    ان کے ساتھ ان جیسا رویہ اختیار کرنے کے چکر میں اپنے درجہ سے نیچے نہ اتریں
    ہمیشہ حقیقت پسندی کا مظاہرہ کریں ، کبھی بھی خود کو کمتر محسوس نہ کریں
    یہ مان لیں کہ وہ ایسے ہی ہیں اور آپ کو ان کے ساتھ ایسے ہی رہنا ہے،
    ان کے باتوں اور تکلیف دہ کلمات کو دل پر نہ لیں
    ان سے کسی قسم کی توقعات نہ رکھیں
    ان کے قول و فعل میں تضاد کو آپ ان کے نوٹس میں لانے کی کوشش کریں گے تو وہ مزید جھوٹ بول کر اپنا دفاع کریں گے یا بہت غصہ میں آ جائیں گے
    انھیں مشورہ نہ دیں، کیونکہ وہ اسکی ضرورت محسوس نہیں کرتے
    اپنے جذبات کا ان کے سامنے اظہار کرنے سے گریز کریں

  3. #3
    Sisters Society

    Join Date
    Jun 2008
    Location
    lahore
    Posts
    14,048
    Blog Entries
    2
    Mentioned
    7 Post(s)
    Tagged
    1 Thread(s)

    Re: میرا بھی ایک سوال۔

    السلام علیکم
    نوشین جی بہت اچھا جواب دیا آپ نے۔
    واقعی میں ایسے افراد کو اس سے بہترین طریقے سے ہینڈل نہیں کیا جا سکتا۔
    شکریہ۔

    میں بھی کچھ دنوں میں ایک دو سوالات لے کر آوں گی ان شاءاللہ۔
    ابھی کچھ مصروفیت کی بناء پر ذرا مشکل ہے۔
    کیونکہ سائیکولوجیکل پرابلمز بیان کرنے کے لیے ڈھیر ساری توجہ اور وقت چاہیے۔
    ہمیشہ خوش رہیئے اور اللہ اور اپنوں کی محبتوں میں گھری رہیئے ۔
    آمین۔
    مجھے کسی سے محبت نہیں کسی کے سوا
    میں ہر کسی سے محبت کروں کسی کے لئے
    جذبات کی صداقت کو آزمائش سے مربوط نہیں کرتے کیونکہ آزمائش پر پورا اترنا یا نہ اترنا ہمیشہ جذبات کی پرکھ کا پیمانہ ثابت نہیں ہوتا۔ بعض اوقات جذبوں کی صداقت کے باوجود آزمائش کے وقت دعوے ادھورے رہ جاتے ہیں۔
    ***************************
    Please forgive me but dont forget..

  4. #4
    Senior Member

    Join Date
    Aug 2008
    Posts
    25,159
    Mentioned
    1 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)

    Re: میرا بھی ایک سوال۔

    واہ واہ نوشین
    کیسا اچھا جواب دیا ھے آپ نے اور بہت مکمل بھی۔ میرا ذاتی تجربہ ھے کہ ایسے لوگوں کو سھی اور غلط میں فرق بتانے کی کوشش کرنا بھینس کے آگے بین بجانے کے برابر ھوتا ھے اور الٹا بحث کر کر کے وہ آپکو عاجز کر دیتے ھیں اور اپنے غلط مؤقف سے ایک انچ بھی ہٹنے کو تیار نھی ھوتے۔اپنی غلط کاریوں کو درست ثابت کرنے کے لئے 10000 دلائل پہلے سے جمع کر کے رکھے ھوتے ھیں۔ ایسے لوگوں کو انکے حال پر چھوڑ دینے میں ھی ھمارا بھلا ھے انکو کچھ سمھجانا بھینس کے آگے بین بجانے بلکہ سہی لفظوں میں بھینسے کے آگے لال کپڑا لہرانا ھوتا ھے۔
    آپ جس حد تک ممکن ھے ایسے لوگوں سے الجھنے سے گریز کریں۔ ہاں اگر بات آپکی عزت اور انا تک پہنچ جائے تو پھر کسی نیوٹرل تیسرے بندے کو ثالث بنا لیں۔ خیال رھے وہ بندہ بھی اسی کا چنا ھوا ھو مگر ھو نیوٹرل ورنہ نرگسیت پسند اسکا فیصلہ ماننے سے بھی انکار کر دے گا۔
    ویسے میں دیکھتی ھوں آجکل ذیادہ تر لوگ اسی قبیل سے تعلق رکھتے ھیں اور اپنے خیال سے ایک انچ ھٹنے کو تیار نھی ھوتے خواہ خود اپنی غلطی کا کتنا ھی احساس کیوں نہ ھو اپنے دل میں مگر مانیں گے نھی اور خود اپنے کہے کو حرف آخر سمجھیں گے۔۔
    "There is no market for emotions.
    So,
    Never advertise feelings,
    Just display attitude"

  5. #5
    Senior Member

    Join Date
    Sep 2008
    Posts
    1,674
    Mentioned
    0 Post(s)
    Tagged
    1 Thread(s)

    Re: میرا بھی ایک سوال۔

    Allah aisey logon sey bachye,,,,aisey log tu insan ko ker saktey hein

  6. #6
    katya
    Guest

    Re: میرا بھی ایک سوال۔

    Quote Originally Posted by lubnakhan95 View Post
    Allah aisey logon sey bachye,,,,aisey log tu insan ko ker saktey hein
    mujee ghosa bohat ata hai, what i do please ans me

  7. #7
    Senior Member

    Join Date
    Feb 2009
    Posts
    2,160
    Mentioned
    0 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)

    Re: میرا بھی ایک سوال۔

    http://oneurdu.com/forums/showthread.php?t=43560

    اسلام علیکم!۔
    اوپر دی گئی لنک میں ایک اور تھریڈ میں غصہ (ڈسکس) کیا گیا ہے۔ آپ اسے پڑھ لیں، پھر اگر مزید ضرورت ہو تو اسی تھریڈ میں اپنا غصہ نکال لیں، میرا مطلب ہے کہ سوال پوسٹ کر لیں۔ امید ہے کہ افاقہ ہو گا۔
    نوٹ: اگر آپ کو یہ پوسٹ پڑھ کر غصہ نہیں آیا تو یقیناً آپ کا غصہ قابلِ کنٹرول ہے۔ اس صورت میں آپ اردو کی بورڈ پر جا کر اردو میں اپنی پوسٹ لکھیں۔ دوسری صورت میں فور
    اً اوپر دی گئی لنک پر کلک کریں۔


Bookmarks

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •