Thanks Thanks:  0
Likes Likes:  0
Results 1 to 5 of 5

Thread: آسیبی عمارات اور مکان

  1. #1
    Senior Member

    Join Date
    Aug 2008
    Posts
    3,012
    Mentioned
    0 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)

    آسیبی عمارات اور مکان

    ھمارے گردونواح یا مشاہدے میں کہیں نہ کہیں ایسا مکان یہ عمارت ہوگی جو کہ آسیبی یا جنوں کے حوالے سے مشہور ہو-

    میرے پرانے محلے میں بھی ایک ایسی جگہ ہے جو کہ آسیب کے حوالے سے مشہور ہے۔ وہاں پر چند کشمیری چوکیدار ڈیرۃ بنا کر رہتے تھے اسی مکاں کے صحن میں ایک درخت تھا جس کے بارے میں مشہور تھا کہ اس پر کسی کا سایہ ہے (آللہ حقیقت بہتر جانتا ہے) انہی چوکیداروں میں سےایک نے وہ درخت کاٹ دیا درخت کٹنے کے واقعے کے کچھ عرصے بعد اس چوکیدار کا پراسرار طور پر قتل ہو گیا
    اس واقعے کے بعد کافی سالوں تک وہ جگہ ویران رہی اس کے بعد جب اس جگہ پر ایک عمارت کی تعمیر کا آغاز ہوا جو کہ دو منزلوں سے زیادہ بن نہ پائی ۔ یہاں پر اس بلڈنگ کی تعمیر کے دوراں کئی پراسرار واقعات رونما ہوئے کئی مزدور دوران تعمیر نامعلوم وجہ سے زخمی ہوئے ایک بچے کی لاش اس بلڈنگ کی پانی کی ٹنکی سے برآمد ہوئی اب بھی وہ عمارت ویراں ہے گراؤنڈ فلور پر چند دکانیں آباد ہے مگر وہ بھی مجبوری کے عالم میں وھاں بیٹھے ہیں۔ یہ جگہ کراچی شھر کے وسط میں واقع آرام باغ کے علاقے میں ہے اس علاقے میں آپ کو کوئی فلیٹ باآسانی دستیاب نہیں ہو گا مگر اس عمارت میں کوئی مفت میں بھی رہائش پذیر ہونے کو تیار نہیں
    [SIGPIC][/SIGPIC]

  2. #2
    Senior Member

    Join Date
    Jan 2008
    Posts
    12,833
    Mentioned
    1 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)

    Re: آسیبی عمارات اور مکان

    Quote Originally Posted by mfqadir View Post
    ھمارے گردونواح یا مشاہدے میں کہیں نہ کہیں ایسا مکان یہ عمارت ہوگی جو کہ آسیبی یا جنوں کے حوالے سے مشہور ہو-

    میرے پرانے محلے میں بھی ایک ایسی جگہ ہے جو کہ آسیب کے حوالے سے مشہور ہے۔ وہاں پر چند کشمیری چوکیدار ڈیرۃ بنا کر رہتے تھے اسی مکاں کے صحن میں ایک درخت تھا جس کے بارے میں مشہور تھا کہ اس پر کسی کا سایہ ہے (آللہ حقیقت بہتر جانتا ہے) انہی چوکیداروں میں سےایک نے وہ درخت کاٹ دیا درخت کٹنے کے واقعے کے کچھ عرصے بعد اس چوکیدار کا پراسرار طور پر قتل ہو گیا
    اس واقعے کے بعد کافی سالوں تک وہ جگہ ویران رہی اس کے بعد جب اس جگہ پر ایک عمارت کی تعمیر کا آغاز ہوا جو کہ دو منزلوں سے زیادہ بن نہ پائی ۔ یہاں پر اس بلڈنگ کی تعمیر کے دوراں کئی پراسرار واقعات رونما ہوئے کئی مزدور دوران تعمیر نامعلوم وجہ سے زخمی ہوئے ایک بچے کی لاش اس بلڈنگ کی پانی کی ٹنکی سے برآمد ہوئی اب بھی وہ عمارت ویراں ہے گراؤنڈ فلور پر چند دکانیں آباد ہے مگر وہ بھی مجبوری کے عالم میں وھاں بیٹھے ہیں۔ یہ جگہ کراچی شھر کے وسط میں واقع آرام باغ کے علاقے میں ہے اس علاقے میں آپ کو کوئی فلیٹ باآسانی دستیاب نہیں ہو گا مگر اس عمارت میں کوئی مفت میں بھی رہائش پذیر ہونے کو تیار نہیں
    یہ جگہ کدھر ہے ؟؟ صدر کے علاقے میں ؟

    سید فراز محمود
    Ph.D, MS, MBBS, FRCS,
    FCPS, MBA, MSc. Chem.,
    MSPD, FDDI, TCP, HDMI

    ڈگری ڈگری ہوتا ہے ،اصلی ہو یا جعلی

    زنبیل


    http://s.faraz.mahmood.googlepages.com/website-2-24.pnghttp://www.linkedin.com/img/webpromo/btn_in_20x15.gif http://s.faraz.mahmood.googlepages.com/blog-24.png

    ┐─────────┌

    └─────────┘

  3. #3
    Senior Member

    Join Date
    Aug 2008
    Posts
    3,012
    Mentioned
    0 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)

    Re: آسیبی عمارات اور مکان

    یہ جگہ ھمدرد دواخانہ آرام باغ کی پچھلی گلی میں واقع ہے۔ اسی گلی کے نکڑ پر جناح اسپورٹس بھی ہے اس عمارت کے برابر میں ایک میمن کمیونٹی کا میٹرنٹیم ہوم بھی ہے
    [SIGPIC][/SIGPIC]

  4. #4
    Senior Member

    Join Date
    Mar 2008
    Posts
    4,756
    Mentioned
    0 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)

    Re: آسیبی عمارات اور مکان

    hmmm app gae kabhi kiya wahan
    ہاں تیرا سایہ تو میں ہوں پر سنگ تیرے نہ رہ سکوں
    ہاں اس سفر میں تو میں ہوں پر سنگ تیرے نہ رک سکوں

  5. #5
    Senior Member

    Join Date
    Mar 2008
    Posts
    1,722
    Mentioned
    0 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)

    Re: آسیبی عمارات اور مکان

    اللہ کا لاکھ لاکھ شکر ھے کہ میرے ساتھ کوئی واقعہ پیش نہیں آیا لیکن گھروں کے حوالے بہت سارے واقعات شیئر کرسکتی ھوں جس میں سے کچھ میں نے اپنی امی اور کچھ اپنے شوہر سے سنے ھیں
    میرے شوہر کے بچپن میں یہ لوگ جس گھر میں رہا کرتے تھے وہ آسیب زدہ تھا یہ بات ان لوگوں کو گھر میں موو ھونے کے کچھ عرصے بعد پتا چلی ۔ھوتا یہ تھا کہ یہ جس کمرے میں سویا کرتے تھے بقول ان کے رات کو سوتے میں جب بھی میری آنکھ کھلتی تھی ایک باریش بزرگ ھمیشہ نماز پڑھتے ھوئے نظر آتے تھے اور ان کی جائے نماز ھمیشہ ھوا میں معلق ھوا کرتی تھی ۔اس وقت میرے شوہر اپنی امی کو صبح اٹھ کر بتایا کرتے تھے کہ امی رات کو دادا آئے تھے(اس وقت یہ یہی سمجھتے تھے)۔لیکن جب تک یہ اس گھر میں رھے ان بزرگ نے ان لوگوں کو کبھی نقصان نہیں پہچایا

Bookmarks

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •