nzkiani

نعت رسولِ مقبول

Rate this Entry
یہ کائناتوں کا سلسلہ دور و نزد ممدود اُن کی خاطر
وہ حرفِ کُن تھا اُنہیں کے صدقے، یہ ہست یہ بود اُن کی خاطر

حبیبِ معبود بھی وہی ہیں، جہانِ مقصود بھی وہی ہیں
یہ عرش سے فرش کا تعلق ہوا ہے مشہود اُن کی خاطر

وہی ہیں جن کے پیام نے جگمگا کے رکھا ہے ہر سمے کو
جہانِ گزراں اُنہیں کے دم سے، زمانِ موجود اُن کی خاطر

خدا نے اُن کو بشر بنایا سو اُس کے نزدیک ہو گئی تھی
عزیز تخلیق کے جہاں میں بشر کی بہبود اُن کی خاطر

حضور معراج پر گئے تھے تو چشمِ ہر دو جہاں نے دیکھا
درود پڑھتے ہوئے فرشتے، نگاہیں مسجود اُن کی خاطر

بلندیوں کو بھی بخشی جائے گی سرفرازی اُنہیں کے باعث
خدا نے مخصوص کر دیا ہے مقامِ محمود اُن کی خاطر

جو رب نے کہنا تھا کہہ دیا ہے نزول کر کے مرے نبی پر
رہِ نبوت بھی تا قیامت ہوئی ہے مسدود اُن کی خاطر

Submit "نعت رسولِ مقبول" to Digg Submit "نعت رسولِ مقبول" to del.icio.us Submit "نعت رسولِ مقبول" to StumbleUpon Submit "نعت رسولِ مقبول" to Google

Comments