Trueman

جب وہ آئیں تو کیا تماشا ہو

Rate this Entry
جب وہ آئیں تو کیا تماشا ہو
پھر نہ جائیں تو کیا تماشا ہو
رہ بنائیں تو کیا تماشا ہو
کہکشائیں تو کیا تماشا ہو

وہ مناتے مناتے آج ہمیں
روٹھ جائیں تو کیا تماشا ہو
جاتے جاتے وہ روٹھ کر ہم سے
پلٹ آئیں تو کیا تماشا ہو
شبِ ہجراں میں جب ہمارے اشک
جگمگائیں تو کیا تماشا ہو
شہر آباد کر رہے ہیں لوگ
دل بسائیں تو کیا تماشا ہو
آئنوں کی طرح پتھر بھی
چوٹ کھائیں تو کیا تماشا ہو
کسی مفتی کو میکدہ میں آج
گھیر لائیں تو کیا تماشا ہو

انتخاب : راستے میں شام
توقیر علی زئی
1953-2001

Submit "جب وہ آئیں تو کیا تماشا ہو" to Digg Submit "جب وہ آئیں تو کیا تماشا ہو" to del.icio.us Submit "جب وہ آئیں تو کیا تماشا ہو" to StumbleUpon Submit "جب وہ آئیں تو کیا تماشا ہو" to Google

Categories
راستے میں شام

Comments

  1. ابو لبابہ's Avatar
    عمدہ انتخاب
  2. Trueman's Avatar
    Quote Originally Posted by Khusroo
    عمدہ انتخاب
    شکریہ پاء جی
    میرے ابو جی کی ہے۔
  3. Sabih's Avatar
    عمدہ یا اخی.
  4. IN Khan's Avatar
    بہت خوب چھوٹے بھائی
  5. Trueman's Avatar
    پسندیدگی کے اظہار کے لئے ممنون ہوں صبیح پاء جی۔
  6. Trueman's Avatar
    لالہ بہت شکریہ اظہار پسندیدگی کے لئے۔
    ہمیشہ خوش رہیں۔
    امین
  7. zar's Avatar
    Very nice poetry
  8. Trueman's Avatar
    پسندیدگی کے لیے مشکور ہوں۔