PDA

View Full Version : رمضان المبارک کا آخری عشرہ



Pardaisi
05-06-2018, 01:48 PM
رمضان المبارک کا آخری عشرہ ۔۔ جہنم کی آگ سے نجات کا عشرہ

یوں تو رمضان کا پورا مہینہ دیگر مہینوں میں ممتاز اور خصوصی مقام کا حامل ہے، لیکن رمضان شریف کے آخری دس دنوں (آخری عشرہ) کے فضائل اور بھی زیادہ ہیں۔ نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم رمضان کے آخری عشرہ میں عبادت وطاعت ، شب بیداری اور ذکر و فکر میں اور زیادہ منہمک ہوجاتے تھے۔



https://www.arynews.tv/ud/wp-content/uploads/2016/06/copyy.jpg


احادیث میں ذکر ہے!حضرت عائشہ رضی اللہ عنہا فرماتی ہیں کہ جب آخری عشرہ شروع ہوجاتا تو نبی صلی اللہ علیہ وسلم رات بھر بیدار رہتے اور اپنی کمرکس لیتے اوراپنے گھروالوں کو بھی جگاتے تھے۔ (صحیح بخاری ، حدیث :1884، صحیح مسلم، حدیث :2008)رمضان المبارک کے آخری عشرہ کی ایک اہم خصوصیت اعتکاف ہے، اعتکاف سے مراد ہے کہ ماہِ رمضان کے آخری دس دنوں میں گھر چھوڑ کر مسجد کے اندر ہی قیام کیا جائے اور اللہ کی عبادت میں مشغول رہا جائے۔ اس طرح عاجز بندہ اللہ تبارک و تعالیٰ کے قریب تر رہتا ہے۔حضرت ابو ہریرہ رضی اللہ عنہ بیان فرماتے ہیں کہ نبی کریم حضرت محمد صلی اللہ علیہ والہ وسلم ہر رمضان میں دس دن کا اعتکاف فرمایا کرتے تھے ، مگر جس سال آپ کا انتقال ہوا ، آپ نے بیس دن اعتکاف فرمایا۔ (روایت صحیح بخاری شریف)

Pardaisi
05-06-2018, 02:15 PM
https://awazepakistan.files.wordpress.com/2015/07/lailatulqadr.jpg?w=474&h=284

Pardaisi
05-06-2018, 02:16 PM
https://scontent.ffjr1-1.fna.fbcdn.net/v/t1.0-9/34504466_10155847887283043_1788151402523000832_n.j pg?_nc_fx=ffjr1-1&_nc_cat=0&_nc_eui2=AeGDEnqyedvFaunR8tz2Gb5mZBP9M8Rpk6D2QJYy9 b_AUcvDWcT0SQvWBspx57xHRRZ5umFw568FCWfOJM_Ku512_9o JqDA8ebYehtnmTtpF5Q&oh=de217ca901c64975ecbb35a1e2631e36&oe=5B7C1108

Pardaisi
11-06-2018, 12:48 PM
https://scontent.ffjr1-4.fna.fbcdn.net/v/t1.0-9/34984886_10155861157188043_2939596632380932096_n.j pg?_nc_fx=ffjr1-4&_nc_cat=0&oh=35487fe33a44f43b3ead8443f05f9d1a&oe=5BA6A215

Pardaisi
11-06-2018, 12:52 PM
اے ماہِ رمضان ذرا آہستہ چل
ابھی کافی قرض چکانا ہے،
''اللہ'' کو کرنا ہے راضی
اور گناہوں کو بخشوانا ہے ،
کُچھ خواب ہیں جن کو لکھنا ہے
اور تعبیروں کو پانا ہے ،
کُچھ لوگ ہیں اُجڑے دل والے
اُن دلوں میں پیار بسانا ہے،
اور خزاں رسیدہ آنگن میں
خوشیوں کا دیپ جلانا ہے،
کُچھ توبہ کرنی باقی ہے
اور ''رب'' کو ہمیں منانا ہے،
جنّت کا کرنا ہے سودا
دوزخ سے خود کو بچانا ،
اے ماہِ رمضان ذرا آہستہ چل
ابھی کافی قرض چُکانا ہے
اے ماہِ رمضان ذرا آہستہ چل

ابو لبابہ
12-06-2018, 01:59 AM
جزاک اللہ خیر
اللہ تعالی ہمیں رمضان کے باقی چند ایام میں زیادہ سے زیادہ نیک اعمال کی توفیق عطا فرمائے۔ آمین

ابو لبابہ
12-06-2018, 04:45 AM
جزاک اللہ خیر
اللہ تعالی ہمیں رمضان کے باقی چند ایام میں زیادہ سے زیادہ نیک اعمال کی توفیق عطا فرمائے۔ آمین

Pardaisi
12-06-2018, 02:37 PM
الحمدللہ کل رات 27 رمضان المبارک ہماری مسجد میں قرآن پاک مکمل ہوا۔


اللہ تعالی سے دعا ہے کہ وہ ہم سب کی عبادات اور روزں کو قبول و مقبول فرمائے۔ آمین

Pardaisi
12-06-2018, 02:44 PM
سعودی عرب میں رہنے والے جانتے ہیں کہ آخری عشرے میں یہاں قیام اللیل ہوتا ہے۔ تراویح کو دو حصوں میں تقسیم کر دیا جاتا ہے۔ آدھی تراویح عشاء کی نماز کے ساتھ اور آدھی تراریح اور وتر رات 12بجے کے بعد ہوتیں ہیں۔ اسی کو قیام لیل کہا جاتا ہے۔ رات کو ہونے والی تراویح میں لمبے لمبے رکوع و سجود ہوتے ہیں۔ رات کو ہماری مسجد میں 10 تراویح اور 3 وتر دو گھنٹوں میں مکمل ہوئے۔ الحمدللہ

Pardaisi
12-06-2018, 05:06 PM
​https://scontent.ffjr1-2.fna.fbcdn.net/v/t1.0-9/35059965_10155863790248043_6996248472437391360_n.j pg?_nc_fx=ffjr1-3&_nc_cat=0&oh=0858dfaa55ac9a45f5c0fb89734c63dd&oe=5BB60DED

Pardaisi
13-06-2018, 12:53 PM
آج رات اس رمضان المبارک کی آخری طاق رات ہو گی۔ رمضان المبارک اتنی جلدی سے گزرا کہ پتہ بھی نہ چلا اور دو دن باقی رہ گئے ہیں۔


اَللّٰھُمَّ اِنَّکَ عَفُوّ تُحِبُّ العَفوَفَاعفُ عَنِّی ”اے اللہ! بے شک تو معاف کرنے والا ہے اور معافی کو درست رکھتا ہے مجھے بھی معاف کر دے“

Pardaisi
14-06-2018, 12:49 PM
عید کا دن جہاں خوشی و مسرت کے اظہار اور میل ملاپ کا دن ہوتا ہے وہاں عید کی رات میں کی جانے والی عبادت کی فضیلت عام دنوں میں کی جانے والے عبادت سے کئی گنا بڑھ کر ہے۔ حضرت ابو امامہ رضی اللہ عنہ سے مروی ہے کہ حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے فرمایا :


مَنْ قَامَ لَيْلَتَیِ العِيْدَيْنِ مُحْتَسِبًاِﷲِ لَمْ يَمُتْ قَلْبُهُ يَوْمَ تَمُوْتُ الْقُلُوْب.


ابن ماجه، السنن، کتاب الصيام، باب فيمن قام فی ليلتی العيدين، 2 : 377، رقم : 1782


’’جو شخص عید الفطر اور عید الاضحی کی راتوں میں عبادت کی نیت سے قیام کرتا ہے، اس کا دل اس دن بھی فوت نہیں ہوگا جس دن تمام دل فوت ہو جائیں گے۔‘‘


حضرت معاذ بن جبل رضی اللہ عنہ سے مروی ہے کہ حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے فرمایا :


مَنْ أَحْيَا اللَّيَالِی الْخَمْسَ، وَجَبَتْ لَهُ الْجَنَّةُ : لَيْلَةَ التَّرْوِيَة، وَلَيْلَةَ عَرَفَةَ، وَلَيْلَةَ النَّحْرِ، ولَيْلَةَ الْفِطْرِ، وَلَيْلَةَ النِّصْفِ مِنْ شَعْبَانَ.


منذری، الترغيب والترهيب، 1 : 182


’’جو شخص پانچ راتیں عبادت کرے، اس کے لئے جنت واجب ہوجاتی ہے۔ وہ راتیں یہ ہیں : آٹھ ذو الحجہ، نو ذوالحجہ (یعنی عید الاضحیٰ)، دس ذوالحجہ، عید الفطر اور پندرہ شعبان کی رات (یعنی شبِ برات)۔‘‘