PDA

View Full Version : ایک سوال



Qartaas
19-03-2009, 11:53 PM
ایک ٹیکنکل سوال لے کر حاضر ہوا ہوں دماغ کی ساخت کے مطابق دماغ کے
کچھ حصے ہوتے ہیں حرام مغر ، سیری بلیم سامنے کا دماغ یا
دماغی حصہ
اور کام کرنے کے لہاظ سے شعور تحت الشعور اور لا شعو
مزاج کی رو سے شعور وہ ہے جو کے ہے ، تحت الشعور شعور اور لا شعور کے
درمان رابطہ ہے لا شعور لا نہیں بلکہ سب کچھ ہے ۔یہ وہ ہے جس کے متعلق ہم سوچ نہیں رہے ہوتے یا ہمارے تحت الشعور کی دسترس میں نہیں لایا گیا ہوتا
پوچھنا یہ ہے کے آج سے کی سال پہلے میں نے ٹیلی پیتھی کی مشکات کرنا
شروع کی تھیں ، مجھے نیند آنا بند ہو گئ دو دو دن میں نہیں سو سکتا تھا ، آنکھوں کے آگے تارے سے ناچنے لگتے تھے ، جیسے ہی میں نے یہ سب کرنا چھوڑا مجھے شدت کے ساتھ نکسیر پھوٹنا شروع ہو گی جو تقرینا" ایک سال تک گایے بگاے جاری رہی ، یہ بہت پرانا واقع ہے ، مجھے آپ سے صرف یہ پوچھنا ہے کہ کیا شمع بینی نقطہ بینی یا ما بنینی ہمارے اندر ارتقاز توجہ کی صلاحیت پیدا کر سکتی ہے نیز سائنس کی رو سے کیا عمل مرتب ہوتا ہے


نیز یہ بتائں ہیبرو فوبیا یا ہیپرو فوبیا کیا ہے ،

Noor-ul-Ain Sahira
20-03-2009, 12:09 AM
ھمممممممممممم
مجھے پتہ ھے کوئی بھی میری بات کا یقین نھی کرے گا اور اسکو گپ بازی ھے سمجھیں گے۔
جب میں ھائی سکول میں تھی تو میں نے ان سب چیزوں کی بہت پریکٹس کر لی تھی اور چپکے چپکے سکول میں کلاس فیلوز پر اپنانا بھی شروع کر دیا تھا۔ اور کم سے کم 5 لوگوں کو میں نے ساری کلاس کے سامنے سلا کر چھوٹے موٹے راز بھی اگلوا لئے تو ھر طرف میری دھوم مچ گئی اور بات ٹیچرز تک پہنچ گئی۔ خیر ان کو یقین نھی آتا تھا مگر تجربے کے لئے کیا ھمارے سامنے کرو تو میں نے ایک دوست کو سلا دیا ان سب کے سامنے۔ سارے حیران رہ گئے اور سمجھے میں نے اس لڑکی کو ڈرامہ کرنے کو پہلے سے تیار کیا ھوا ھے۔
مگر اصل ڈرامہ تو اس وقت ھوا جب میرے جگانے پر وہ لڑکی کسی صورت جاگ کر نہ دے اور سوتی کی سوتی رھی۔ لاکھ مارا پیٹا۔ پانی ڈالا۔سب کچھ کیا مگر وہ جاگ ھی نھی رھی تھی۔ بس وہ ھی میری لائف کا ٹرننگ پوائنٹ تھا اس حوالے سے۔ میرے گھر والوں کو خبر کی گئی اور مجھ سے قسم لے لی گئی کہ دوبارہ پوری زندگی ایسی کوئی حرکت نھی کروں گی اور اس طرح کے سارے پراسرار علوم پر مشتمل میرے ذخیرہ کتب کو بڑی بے دردی سے جلا دیا گیا تھا۔ بعد میں وہ بڑی مشکل سے جاگی لیکن میں تب تک قسم کھا چکی تھی۔
مجھے ان مشقوں کو کرنے میں کوئی شکایت نھی ھوئی تھی۔ بس تب سے ڈر بھت لگنے لگا ھے اندھیرے سے اکیلے پن سے اور کوئی بات نھی مگر زندگی میں اور بہت فائدے دیکھے ھیں اسکے۔ جیسا کی میں ایک ھی وقت میں بہت سے مختلف کاموں پر بہت اچھا ارتکاز کر لیتی ھوں۔
میری یاد داشت بھی ایک قسم کی ویزیبل ھو گئی ھے، مطلب مجھے کسی بھی چیز کی تصویر دل میں کافی حد تک یاد رھ جاتی ھے۔اگر غور سے دیکھ لوں۔ زندگی بھر پیپر بھی ایسے ھی دئے تھے میں آنکھیں بند کرتی تھی اور کتاب کا صفحہ سامنے آ جاتا تھا۔۔

Qartaas
20-03-2009, 12:21 AM
ھمممممممممممم
مجھے پتہ ھے کوئی بھی میری بات کا یقین نھی کرے گا اور اسکو گپ بازی ھے سمجھیں گے۔
جب میں ھائی سکول میں تھی تو میں نے ان سب چیزوں کی بہت پریکٹس کر لی تھی اور چپکے چپکے سکول میں کلاس فیلوز پر اپنانا بھی شروع کر دیا تھا۔ اور کم سے کم 5 لوگوں کو میں نے ساری کلاس کے سامنے سلا کر چھوٹے موٹے راز بھی اگلوا لئے تو ھر طرف میری چھوم مچ گئی اور بات ٹیچرز تک پہنچ گئی۔ خیر ان کو یقین نھی آتا تھا مگر تجربے کے لئے کیا ھمارے سامنے کرو تو میں نے ایک دوست کو سلا دیا ان سب کے سامنے۔ سارے حیران رہ گئے اور سمجھے میں نے اس لڑکی کو ڈرامہ کرنے کو پہلے سے تیار کیا ھوا ھے۔
مگر اصل ڈرامہ تو اس وقت ھوا جب میرے جگانے پر وہ لڑکی کسی صورت جاگ کر نہ دے اور سوتی کی سوتی رھی۔ لاکھ مارا پیٹا۔ پانی ڈالا۔سب کچھ کیا مگر وہ جاگ ھی نھی رھی تھی۔ بس وہ ھی میری لائف کا ٹرننگ پوائنٹ تھا اس حوالے سے۔ میرے گھر والوں کو خبر کی گئی اور مجھ سے قسم لے لی گئی کہ دوبارہ پوری زندگی ایسی کوئی حرکت نھی کروں گی اور اس طرح کے سارے پراسرار علوم پر مشتمل میرے ذخیرہ کتب کو بڑی بے دردی سے جلا دیا گیا تھا۔ بعد میں وہ بڑی مشکل سے جاگی لیکن میں تب تک قسم کھا چکی تھی۔
مجھے ان مشقوں کو کرنے میں کوئی شکایت نھی ھوئی تھی۔ بس تب سے ڈر بھت لگنے لگا ھے اندھیرے سے اکیلے پن سے اور کوئی بات نھی مگر زندگی میں اور بہت فائدے دیکھے ھیں اسکے۔ جیسا کی میں ایک ھی وقت میں بہت سے مختلف کاموں پر بہت اچھا ارتکاز کر لیتی ھوں۔
میری یاد داشت بھی ایک قسم کی ویزیبل ھو گئی ھے، مطلب مجھے کسی بھی چیز کی تصویر دل میں کافی حد تک یاد رھ جاتی ھے۔اگر غور سے دیکھ لوں۔ زندگی بھر پیپر بھی ایسے ھی دئے تھے میں آنکھیں بند کرتی تھی اور کتاب کا صفحہ سامنے آ جاتا تھا۔۔

میں نے یقین کر لیا بہن اس چیز جس کو آپ کرتی تھی اس کا نام ہے ایپنا ٹاہز کرنا
اور یہ خیال خوانی سے حاصل ہو جاتا ہے نیز ایک بوتل میں دھواں ڈال کر اسے اپنی آنکھوں کے اشارے سے ادھر اُدھر (دھویں) کرنے سے دوسروں پر عمل کرنے کی صلاحیت پیدا ہو سکتی ہے

TaiYang
20-03-2009, 12:26 AM
میں نے یقین کر لیا بہن اس چیز جس کو آپ کرئی تھی اس کا نام ہے ایپنا ٹاہز کرنا
اور یہ خیال خوانی سے حاصل ہو جاتا ہے نیز ایک بوتل میں دھواں ڈال کر اسے اپنی آنکھوں کے اشارے سے ادھر اُدھر (دھویں) کو کرنے سے دوسروں پر عمل کرنے کی صلاحیت پیدا ہو سکتی ہے

قرطاس بھای ایپناٹایز نہیں ہوتا ۔ ہپناٹایز ہو تا ہے۔

اور دوسری بات یہ کہ یہ خیال خوانی سے حاصل نہیں ہوتا بلکہ خیال خوانی کیلیے یہ مدد گار ثابت ہو سکتا ہے۔

اور ہپناٹزم خیال خوانی کی طرح کوی ماورای چیز نہیں ہے بلکہ یہ تو نفسیات کا ایک علم ہے۔

ویسے ان مشقوں کو عام لوگوں کو بغیر کسی ماہر استاد کے نہیں کرنا چاہیے ۔

یہ سب وہی لوگ کرنے کی کوشش کرتے ہیں جو ٹیلی پیتھی پابندی سے پڑھتے ہیں اور فرہاد علی تیمور بننا چاہتے ہیں۔

Qartaas
20-03-2009, 12:29 AM
آپ تو واقعی بہادر ہیں شمع بینی کے دوران اکثر چیزیں ہمارے لاشعور سے نکل کر ہمارے
سامنے آتی رہتی ہیں ، اگر اندھیرے کا خوف ہو تو کوئی جن بھی آنکھوں کے سامنے آسکتا ہے ، ،، ، یہ حقیقی جن نہیں ہوتے بلکہ ہمارے خیال کے جن ہوتے ہیں جو لا شعور سے کود کر شعور میں آ جاتے ہیں اور ہمارا ترا نکل جاتا ہے ( ہم ڈر جاتے ہیں

Qartaas
20-03-2009, 12:37 AM
قرطاس بھای ایپناٹایز نہیں ہوتا ۔ ہپناٹایز ہو تا ہے۔

اور دوسری بات یہ کہ یہ خیال خوانی سے حاصل نہیں ہوتا بلکہ خیال خوانی کیلیے یہ مدد گار ثابت ہو سکتا ہے۔

اور ہپناٹزم خیال خوانی کی طرح کوی ماورای چیز نہیں ہے بلکہ یہ تو نفسیات کا ایک علم ہے۔

ویسے ان مشقوں کو عام لوگوں کو بغیر کسی ماہر استاد کے نہیں کرنا چاہیے ۔

یہ سب وہی لوگ کرنے کی کوشش کرتے ہیں جو ٹیلی پیتھی پابندی سے پڑھتے ہیں اور فرہاد علی تیمور بننا چاہتے ہیں۔

فرہاد علی تیمور کی کتاب میں ذیادہ افسانہ ہے میں اس ہپنا ٹائز کی بات کر رہا
ہوں جس کے محرکات شمع بینی ہیں ، شمع بینی بھی حقیقی سائنس ہے
اس میں بھی سائنسی محرکات کار فرما ہیں ، ہپنا ٹائز کئ طرح کے ہوتے ہیں
استاد سحت مزاج ہے بچے کلاس میں شور کر رہے ہیں استاد اچانک کلاس روم میں داخل ہوتا ہے ، بچے خوف کے مارے جہاں کھڑے ہیں وہیں کھڑے رہ جاتے ہیں کچھ بچوں نے بھاگ کر اپنی جگوں پر بیٹھنے کی کوشش کی مگر وہ ایک قدم بھی نہ اٹھا سکے ، بچوں کے ساتھ کیا ہوا تھا جناب بچے ہپناٹائز ہو گے تھے ،

Qartaas
20-03-2009, 12:49 AM
ٹیلی پیتھی کی مشقیں کرنے کا ایک ہی وقت رکھا جاتا ہے اگر ہم نے پہلے دن رات کے سات بجے مشق شروع کی تھی تو دوسرے دن بھی سات بجے ہی شروع کرنی چاہیے ورنہ فائدے کی بجائے نقصان ہو گا

talha2c
20-03-2009, 12:55 AM
ٹیلی پیتھی کی مشقیں کرنے کا ایک ہی وقت رکھا جاتا ہے اگر ہم نے پہلے دن رات کے سات بجے مشق شروع کی تھی تو دوسرے دن بھی سات بجے ہی شروع کرنی چاہیے ورنہ فائدے کی بجائے نقصان ہو گا
یہ کیا انٹی بائیو ٹیکس ہے۔ ہیں جی،

Almas Saifi
20-03-2009, 02:12 AM
اسلام علیکم!۔

تو پھر ذھنی ارتکاز حاصل کرنے کا مؤثر اور محفوظ ترین طریقہ کیا ھے؟
اور یاداشت کیسے بہتر بنائ جائے؟

فراز
20-03-2009, 03:21 AM
ھمممممممممممم
مجھے پتہ ھے کوئی بھی میری بات کا یقین نھی کرے گا اور اسکو گپ بازی ھے سمجھیں گے۔
جب میں ھائی سکول میں تھی تو میں نے ان سب چیزوں کی بہت پریکٹس کر لی تھی اور چپکے چپکے سکول میں کلاس فیلوز پر اپنانا بھی شروع کر دیا تھا۔ اور کم سے کم 5 لوگوں کو میں نے ساری کلاس کے سامنے سلا کر چھوٹے موٹے راز بھی اگلوا لئے تو ھر طرف میری دھوم مچ گئی اور بات ٹیچرز تک پہنچ گئی۔ خیر ان کو یقین نھی آتا تھا مگر تجربے کے لئے کیا ھمارے سامنے کرو تو میں نے ایک دوست کو سلا دیا ان سب کے سامنے۔ سارے حیران رہ گئے اور سمجھے میں نے اس لڑکی کو ڈرامہ کرنے کو پہلے سے تیار کیا ھوا ھے۔
مگر اصل ڈرامہ تو اس وقت ھوا جب میرے جگانے پر وہ لڑکی کسی صورت جاگ کر نہ دے اور سوتی کی سوتی رھی۔ لاکھ مارا پیٹا۔ پانی ڈالا۔سب کچھ کیا مگر وہ جاگ ھی نھی رھی تھی۔ بس وہ ھی میری لائف کا ٹرننگ پوائنٹ تھا اس حوالے سے۔ میرے گھر والوں کو خبر کی گئی اور مجھ سے قسم لے لی گئی کہ دوبارہ پوری زندگی ایسی کوئی حرکت نھی کروں گی اور اس طرح کے سارے پراسرار علوم پر مشتمل میرے ذخیرہ کتب کو بڑی بے دردی سے جلا دیا گیا تھا۔ بعد میں وہ بڑی مشکل سے جاگی لیکن میں تب تک قسم کھا چکی تھی۔
مجھے ان مشقوں کو کرنے میں کوئی شکایت نھی ھوئی تھی۔ بس تب سے ڈر بھت لگنے لگا ھے اندھیرے سے اکیلے پن سے اور کوئی بات نھی مگر زندگی میں اور بہت فائدے دیکھے ھیں اسکے۔ جیسا کی میں ایک ھی وقت میں بہت سے مختلف کاموں پر بہت اچھا ارتکاز کر لیتی ھوں۔
میری یاد داشت بھی ایک قسم کی ویزیبل ھو گئی ھے، مطلب مجھے کسی بھی چیز کی تصویر دل میں کافی حد تک یاد رھ جاتی ھے۔اگر غور سے دیکھ لوں۔ زندگی بھر پیپر بھی ایسے ھی دئے تھے میں آنکھیں بند کرتی تھی اور کتاب کا صفحہ سامنے آ جاتا تھا۔۔

ساحرہ باجی ، آپ نہ کریں ، ہمیں تھوڑا سا سکھا دیں پلـــــــــــــیز!!۔
;d

Noor-ul-Ain Sahira
20-03-2009, 05:43 AM
ساحرہ باجی ، آپ نہ کریں ، ہمیں تھوڑا سا سکھا دیں پلـــــــــــــیز!!۔
;d


دیکھئے آپ لوگ ایسےچکروں میں نہ ھی پڑیں تو اچھا ھو گا۔ اور زبردستی ھے تو کوئی استاد ڈھونڈ لیں۔ ورنہ پاگل ھونے کے 100% چانسز ھوتے ھیں۔ جو استاد ھوتے ھیں وہ ریڑھ کی ھڈی کی حثیت رکھتے ھیں اس معاملے میں۔ ویسے میرا مشورہ ھے آپ یہ باتیں چھوڑیں۔
میں یاد داشت اور ارتکاز کی مشقیں ویسے بتا دیتی ھوں۔ ان سے بہت اچھا فائدہ ھو گا آپکو۔
آپ کوئی ایک کام کرنے کے لئے چن لیں، صرف ایک اور پھر کوشش کریں دماغ بہت پرسکون ھو اور اپ اپنا دھیان صرف اور صرف اسی ایک کام میں رکھیں اور پوری کوشش کریں آپکا دھیان ایک سیکنڈ بھی اس سے ھٹنے نہ پائے۔ شروع میں آپکو بھت مشکل ھو گی۔ بار بار ھر لمحے دھیان ضرور بھٹکے گا۔آپ نے ھمت نھی ہارنی اور بار بار اپنی توجہ صرف اسی کام پر وآپس لانی ھے۔ 2یا3 ھفتے کی سخت پریکٹس سے آپ کا ذھن کافی حد تک مرتکز ھونا سیکھ لے گا۔ جب آپ ایک خیال پر مرتکز ھونا سیکھ لیں تو پھر ایک ساتھ 2 مختلف باتیں سوچنا شروع کر دیں پوری تفصیل کے ساتھ اور وہ بھی ایسے کہ دونوں کا خیال ساتھ بہ ساتھ تو چلے مگر آپس میں گڈ مڈ نہ ھونے پائے مثلا آپ ایک چولہے پر چائے بنانا شروع کریں اور ساتھ میں کوئی کتاب پڑھنا شروع کر دیں۔ اب آپکو اتنا پرفیکٹ ھونا چاھئے کہ نا تو آپ کتاب میں اس قدر مگن ھو جایئں کہ چائے ابل جائے اور نہ ھی کتاب چھوڑ کر صرف چائے کی کیتلی کو دیکھ رھے ھیں ، بلکہ دونوں کام بہت سہولت سے ساتھ ساتھ ھو رھے ھوں۔ جب بہت پریکٹس ھو جائے گی تو آپ بہت کچھ ایک وقت میں کرنے لگیں گے
اور ان شاءاللہ سب کے سب کام بھی پرفیکیٹ ھوں گے۔
یاد داشت کے لئے صبح صبح باہر واک کرنے جایئں نماز کے بعد اور راستے میں جو جو نظر آئے روزانہ گھر میں آ کر لکھیں۔ آپ یہ دیکھ کے حیران ھوں گے روز آپکو پہلے سے زیادہ زیادہ چیزیں یاد رھتی ھیں اور آپکا ارتکاز بھی بڑھتا ھی جائے گا
اس کے لئے گھر سے باہر جانا ضروری نھی ھے آپ یہ سب کام اپنے کمرے اپنے گھر یا اپنے آفس میں بھی بیٹھے بیٹھے کر سکتے ھیں۔ ایک نظر ساری چیزوں کو دیکھیں اور پھر کاپی پر لکھیں۔ ھر بار آپ کو پہلے سے ذیادہ یاد آتی جایئں گی اور اسی طرح آپ ارتکاز کرنا سیکھ جایئں گے۔۔
روز صبح سات بھیگے ھوئے بادام بھی کھایا کریں اور درودھ شریف کا ھر وقت پڑھنا اگر عادت بن جائے تو کیا بات ھے اس سے زندگی میں اور بھی بہت سے فائدے حاصل ھوتے ھیں۔۔

Sajjad_Sarwar
20-03-2009, 11:16 AM
یاداشت تیز کرنے کا ایک مجرب عمل میرے پاس ھے۔

کسی بھی اسلامی مہینے کی پہلی تاریخ کو یہ وظیفہ شروع کرنا ھے۔ اور مہینے کے ستائیس تاریخ تک جاری رھے گا۔

پہلے دن عشا کی نماز کے بعد ایک تسبیح درود شریف کی پھر ایک تسبیح رب اشرح لی صدری ویسرلی امری واحلل عقدۃ من لسانی یفقھو قولی ۔ آخر میں ایک تسبیح پھر درود پاک کی۔

دوسرے دن اسی طرح اول آخر ایک ایک تسبیح درود پاک کی ۔ اور آیت مبارکہ کی دو تسبیحات

چودہ تاریخ تک اسی طرح ھر روز آیت مبارکہ کی تسبیحات بڑھاتے جایئں
پندرہ تاریخ سے آیت مبارکہ کی تسبیحات کم کرنی شروع کر دیں

یعنی 1 2 3 4 5 6 7 8 9 10 11 12 13 14 13 12 11 10 9 8 7 6 5 4 3 2 1

Durre Nayab
20-03-2009, 02:02 PM
اس ٹاپک کو میں اسٹک کر رہی ہوں یہاں نفسیاتی گپ شپ و گفتگو کریں۔

Noor-ul-Ain Sahira
20-03-2009, 06:46 PM
اس ٹاپک کو میں اسٹک کر رہی ہوں یہاں نفسیاتی گپ شپ و گفتگو کریں۔



سجاد یا ساجد بھائی بہت اچھی تسبیح بتائی ھے آپ نے کرنے کے لئے۔
دری تم اگر اس کو اسلامی سیکشن میں کوٹ کر دو تو بہت اچھا ھو گا اور بہت لوگوں کا بھلا بھی ھو گا۔
شکریہ

TaiYang
20-03-2009, 07:59 PM
دیکھئے آپ لوگ ایسےچکروں میں نہ ھی پڑیں تو اچھا ھو گا۔ اور زبردستی ھے تو کوئی استاد ڈھونڈ لیں۔ ورنہ پاگل ھونے کے 100% چانسز ھوتے ھیں۔ جو استاد ھوتے ھیں وہ ریڑھ کی ھڈی کی حثیت رکھتے ھیں اس معاملے میں۔ ویسے میرا مشورہ ھے آپ یہ باتیں چھوڑیں۔
میں یاد داشت اور ارتکاز کی مشقیں ویسے بتا دیتی ھوں۔ ان سے بہت اچھا فائدہ ھو گا آپکو۔
آپ کوئی ایک کام کرنے کے لئے چن لیں، صرف ایک اور پھر کوشش کریں دماغ بہت پرسکون ھو اور اپ اپنا دھیان صرف اور صرف اسی ایک کام میں رکھیں اور پوری کوشش کریں آپکا دھیان ایک سیکنڈ بھی اس سے ھٹنے نہ پائے۔ شروع میں آپکو بھت مشکل ھو گی۔ بار بار ھر لمحے دھیان ضرور بھٹکے گا۔آپ نے ھمت نھی ہارنی اور بار بار اپنی توجہ صرف اسی کام پر وآپس لانی ھے۔ 2یا3 ھفتے کی سخت پریکٹس سے آپ کا ذھن کافی حد تک مرتکز ھونا سیکھ لے گا۔ جب آپ ایک خیال پر مرتکز ھونا سیکھ لیں تو پھر ایک ساتھ 2 مختلف باتیں سوچنا شروع کر دیں پوری تفصیل کے ساتھ اور وہ بھی ایسے کہ دونوں کا خیال ساتھ بہ ساتھ تو چلے مگر آپس میں گڈ مڈ نہ ھونے پائے مثلا آپ ایک چولہے پر چائے بنانا شروع کریں اور ساتھ میں کوئی کتاب پڑھنا شروع کر دیں۔ اب آپکو اتنا پرفیکٹ ھونا چاھئے کہ نا تو آپ کتاب میں اس قدر مگن ھو جایئں کہ چائے ابل جائے اور نہ ھی کتاب چھوڑ کر صرف چائے کی کیتلی کو دیکھ رھے ھیں ، بلکہ دونوں کام بہت سہولت سے ساتھ ساتھ ھو رھے ھوں۔ جب بہت پریکٹس ھو جائے گی تو آپ بہت کچھ ایک وقت میں کرنے لگیں گے
اور ان شاءاللہ سب کے سب کام بھی پرفیکیٹ ھوں گے۔
یاد داشت کے لئے صبح صبح باہر واک کرنے جایئں نماز کے بعد اور راستے میں جو جو نظر آئے روزانہ گھر میں آ کر لکھیں۔ آپ یہ دیکھ کے حیران ھوں گے روز آپکو پہلے سے زیادہ زیادہ چیزیں یاد رھتی ھیں اور آپکا ارتکاز بھی بڑھتا ھی جائے گا
اس کے لئے گھر سے باہر جانا ضروری نھی ھے آپ یہ سب کام اپنے کمرے اپنے گھر یا اپنے آفس میں بھی بیٹھے بیٹھے کر سکتے ھیں۔ ایک نظر ساری چیزوں کو دیکھیں اور پھر کاپی پر لکھیں۔ ھر بار آپ کو پہلے سے ذیادہ یاد آتی جایئں گی اور اسی طرح آپ ارتکاز کرنا سیکھ جایئں گے۔۔
روز صبح سات بھیگے ھوئے بادام بھی کھایا کریں اور درودھ شریف کا ھر وقت پڑھنا اگر عادت بن جائے تو کیا بات ھے اس سے زندگی میں اور بھی بہت سے فائدے حاصل ھوتے ھیں۔۔

واہ جی ساحرہ ، تم تو کمال کی ہو ۔ بالکل نفسیاتی ماہر کی طرح مشورے اور مسقیں بتا رہی ہو۔
آپ نے بہت ہی اچھی مشقیں بتای ہیں لیکن میرے خیال میں پہلے والے میں تو بہت سخت محنت کی ضرورت ہوگی ورنہ تو ناممکن ہی ہے بہت سارے کام ایک ہی وقت میں پرفیکٹ طریقے سے کرنا۔

اچھا میں بھی ارتکاز اور یاداشت بہتر بنا نے کیلیے ایک مشق بتاتا ہوں ۔

جب بھی آپ رات کو سونے کیلیے لیٹے اور آنکھیں بند کر لے آس پاس کے ماحول کا پرسکون ہونے سے اور بھی بہت اچھے نتایج آسکتے ہیں۔

اب یہ سوچنا شروع کر دے کہ صبح جب آپ اٹھے تھے تو کیا کام کیا تھا ، یعنی ااٹھنے کے وقت بسم اللہ یا جاگنے کی دعا اگر پڑھی تو اسی سے شروع کر دے یا اگر آنکھیں مل کر کچھ اور کہا یا سنا ہو یا تھوڑی دیر سستانے کے بعد اُٹھ کر تولیا لیا اور باتھ روم شاور لینے کیلیے داخل ہوے ہو پھر شاور لیتے وقت کی ساری جزییات ، جسم خشک کرنا پھر بالوں میں برش کنگھی تیل کریم کوی خوشبو یہ سارے ، پھر ناشتے کے ٹیبل پر پھر ناشتہ کیسے شروع کیا ، کیا کیا کھایا یا پیا اس طرح سے سارے کاموں کی فلم کو اپنے ذہن کے پردے پر پلے کرے ۔ پہلے پہلے آپ دیکھنگے کہ بہت جلدی سارے دن کی ریکاڈنگ ختم ہو جاییگی اور اس میں سے بہت سارے کام ایسے بھی ہونگے جو یاد ہی نہ آے ہونگے۔ لیکن آہستہ آہستہ اسی طرح کرنے سے آپ کو روزانہ کے سارے افعال جیسے ہی آپ سوچنا شروع کرینگے یاد آتے جاینگے۔

کبھی کبھی آپ سوچتے سوچتے ایک کام کو بھول کر دوسرے کام کو یاد کر رہے ہونگے تب وہ پچھلے والا کام بھی یاد آجاییگا، تو آپ فلم کو ادھر ہی سٹاپ کر کے دوبارہ اسی جگہ سے شروع کر دے جہاں سے کوی کام پہلے سوچنے سے رہ گیا تھا اور اب یاد آگیا ہے۔ اسی طرح پھر آگے سوچتے جاے۔

اس سے ایک تو چند ہفتوں کی کوشش کے بعد آپ اپنے ارتکاز اور یاداشت میں حیرت انگیزتبدیلی پاینگے تو دوسری طرف اپنے احتساب کا بھی بہترین موقع ملے گا کہ کتنے کام اللہ کے احکامات اور رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کی نافرمانی کے کیے ہیں اور کتنا ظلم یا دوسروں کی حق تلفی یا بدتمیزی یا زیادتی کی ہے۔ اس سے بھی آیندہ بچنے کی کوشش کی جا سکتی ہے اور اپنی غلطیوں کو سدھارا جا سکتا ہے۔

TaiYang
20-03-2009, 08:16 PM
آپ دونوں بہت اچھی مشقین بتا رہے ہو
پر ہم جیسے سست لوگ کیا کریں
اتنییییییییی محنت
کوئی آسان طریقہ بھی بتائیں ناں


واہ جی آپکی سستی کی بھی کیا بات ہے ، ہم کوی چلانگیں مارنے اور بھاری بھاری وزن اُٹھانے والے ایکسرسایز تو نہیں بتا رہے۔

یہ تو اتنے آسان اور دلچسپ ہوتے ہیں ۔ صرف بیڈ پر لیٹے لیٹے سوچنا ہے ، جیسے کو فلم دیکھ رہا ہو۔ اس میں تو سستی کی کوی بات ہی نہیں ۔ پہلے پہلے ہو سکتا ہے کہ تھوڑی بہت مشکل ہو لیکن جب آپ ایک دفعہ شروع کرینگی تو بہت ہی آسان لگنے لگے گا اور چند ہی دنوں کے بعد آپ بغیر کسی مشقت کے کر لیا کریگی۔
کیا آپ نے کبھی اپنی روزمرہ کی کوی وڈیو کر کے دیکھی ہے ؟ کتنی دلچسپ ہوتی ہے ۔ یہ بھی بالکل ایسے ہی لگے گا جیسے کسی نے آپکے سارے دن کی وڈیو ریکاڈنگ کی ہو اور آپ وہ دیکھ رہی ہے۔

اور یہ یقیناً دلچسپی سے خالی نہیں ہوگا۔

Qartaas
20-03-2009, 09:00 PM
اسلام علیکم!۔

تو پھر ذھنی ارتکاز حاصل کرنے کا مؤثر اور محفوظ ترین طریقہ کیا ھے؟
اور یاداشت کیسے بہتر بنائ جائے؟
ارتکاز توجہ حاصل کرنے کا عام سا طریقہ یہ ہے کے ہر وقت اپنے ارد گرد کا ہوش رکھیں ۔ آپ جس راہ پر جا رہے ہوں راستے میں لگے سارے پول ارد گرد کی تمام
چیزوں کی طرف توجہ دیں غائب دماغ نہ ہوں ، اس سے آپ میں یہ حس پیدا ہو جائے گی کے آپ کی توجہ نہ بٹے گی

Qartaas
20-03-2009, 10:44 PM
اسلام علیکم!۔

تو پھر ذھنی ارتکاز حاصل کرنے کا مؤثر اور محفوظ ترین طریقہ کیا ھے؟
اور یاداشت کیسے بہتر بنائ جائے؟



ذہین کو بہترین بنانے کا طریقے یہ ہیں
جس چیز کو آپ نے یاد کرنا ہے اسے بار بار پڑھیں اگر سکول کالج کا کام یاد کرنا ہو تو
بہتر ہے جو کچھ یاد کریں اسے لکھیں اس طرح ہماری دو حسیں کام کرتی ہیں اور یاد
کرنے اور اور فراموشی سے بچنے کا بہترین طریقہ یہ ہے کے ہم اونچھی آواز میں سبق یاد کریں اونچی آواز سے سبق یاد کرنے کی کوشش کریں یاد کرتے ہوئے اس بات کا خیال رکھیں کے ہم سمجھ کر یاد کر رہیں ہیں رٹنیں کے عمل کا نقصان یہ ہے کے اگر ہم ایک لفظ یا لائن بھول جائیں تو سب کچھ بھول جاتا ہے
غیر ضروری باتوں اور چیزوں کو زیادہ دماغ میں جگہ نہ دیں جس طرح ایک کاٹ کباڑ میں ضرورت کی اصلی شے تلاش کرتے وقت لگتا ہے اس طرح اپنے دماغ میں بھی فالتو چیزوں کو نکال دیں
یاد کرنے اور یاد رکھنے کی قصدا" کوشش کریں
صبح کی سیر کریں اور سانس کی مشق کریں یہ آپ کے دماغ کو تازگی دیتی ہے
دن کے کسی ٹائم کوشش کریں کے اس وقت میں نے کچھ نہیں سوچنا تھوڑی سی پرکٹس کے بعد آپ کرنے میں کامیاب ہو جائیں کے
غصے ، حسد ، اور کُڑتے رہنے کی عادت ترک کریں

Qartaas
20-03-2009, 11:09 PM
یک دم شمع بینی خطرناک ثابت ہو سکتی ہے شروات ماہ بینی سے کریں یا سورج
بینی سے صبح سویرے جب سورج سرخ رنگ کا دکھائی دے آپ اس کی طرف دیکھنا شروع کر دیں آپ کی آنکھیں جپکنے نہ پائیں ، پہلے پہل آپ کچھ سیکنڈ تک دیکھ سکنے میں کامیاب ہوں گے ، بہتر ارتقاز توجہ کے لئے ضروری ہے کے آپ سانس کی مشق کر لیں کھلے میدان میں تھوڑی سی چہل قدمی کر لیں ، آپ اپنے ناک کی ایک نال بند کر کے دوسری نال سے سانس اندر کھنچیں جب ہوا سینں میں داخال ہو جائے تو اسے کچھ دیر روکے رکھیں پھر ہوا منہ سے خارج کر دیں اسی طرح یہ مشق کئ بار کریں اس کے بعد ناک کی دوسری نال سے سانس اندر کھینچ کر یہی عمل کریں آپ کو اپنے دماغ میں گرانی محسوس ہو گی اب سورج کی طرف دیکھنا شروع کر دیں سورج کو دیکھتے ہوئے اگر آپ یہ تصور کریں کے سورج کا یہ گولہ مزید بڑا ہو رہا ہے یا اس کی سرخ رنگت آپ کی آنکھوں میں سما رہی ہے تو آپ زیادہ وقت تک سورج کو دیکھ سکنے میں کامیاب ہوں گے
سورج جب مکمل نکل آئے اپنی سرخی کھو دے تب سورج کی طرف ہر گز نہ دیکھیں
ما بینی یعنی چاند کو دیکھنا اس کا عمل بھی اسی طرح کریں لیکن آپ ما بینی معض چند دنوں تک کر سکتے ہیں چاند کی اپنے نصف سے زیادہ ہونا ضروری ہے ،
ایک چیز کا خاص خیال رکھیں ایک خاص وقت رکھ لیں جس وقت آپ نے یہ سب کرنا
ہے ، ہو سکتا ہے شعور اور لا شعور کے درمیان اس نئ راہ کی بیچ کنی کے دوران آپ کو ڈراونے خواب آنا شروع ہو جائیں مگر آپ نے اسے اپنے دماغ کی کرشمہ سمجھنا ہے ڈرپوک بندہ یہ عمل ہر گز نہ کرے کیونکہ اسے فائدے کی بجائے نقصان ہونے کا ڈر ہے ، کھانا نہ زیادہ کھائیں اور نہ کم

Qartaas
20-03-2009, 11:20 PM
قربان جاوں دن بھر کے وقت میں سے کچھ منٹس اور صبح خیری ہوا خوری سے
آپ کی صحت بھی بہترین رہے کی سانس کی مشقیں یوگا کی مشقوں میں سے
ہیں جو آپ کو ہر پل جوان اور حاضر دماغ رکھیں گی آزمائش شرط ہے

TaiYang
20-03-2009, 11:39 PM
یک دم شمع بینی خطرناک ثابت ہو سکتی ہے شروات ماہ بینی سے کریں یا سورج
بینی سے صبح سویرے جب سورج سرخ رنگ کا دکھائی دے آپ اس کی طرف دیکھنا شروع کر دیں آپ کی آنکھیں جپکنے نہ پائیں ، پہلے پہل آپ کچھ سیکنڈ تک دیکھ سکنے میں کامیاب ہوں گے ، بہتر ارتقاز توجہ کے لئے ضروری ہے کے آپ سانس کی مشق کر لیں کھلے میدان میں تھوڑی سی چہل قدمی کر لیں ، آپ اپنے ناک کی ایک نال بند کر کے دوسری نال سے سانس اندر کھنچیں جب ہوا سینں میں داخال ہو جائے تو اسے کچھ دیر روکے رکھیں پھر ہوا منہ سے خارج کر دیں اسی طرح یہ مشق کئ بار کریں اس کے بعد ناک کی دوسری نال سے سانس اندر کھینچ کر یہی عمل کریں آپ کو اپنے دماغ میں گرانی محسوس ہو گی اب سورج کی طرف دیکھنا شروع کر دیں سورج کو دیکھتے ہوئے اگر آپ یہ تصور کریں کے سورج کا یہ گولہ مزید بڑا ہو رہا ہے یا اس کی سرخ رنگت آپ کی آنکھوں میں سما رہی ہے تو آپ زیادہ وقت تک سورج کو دیکھ سکنے میں کامیاب ہوں گے
سورج جب مکمل نکل آئے اپنی سرخی کھو دے تب سورج کی طرف ہر گز نہ دیکھیں
ما بینی یعنی چاند کو دیکھنا اس کا عمل بھی اسی طرح کریں لیکن آپ ما بینی معض چند دنوں تک کر سکتے ہیں چاند کی اپنے نصف سے زیادہ ہونا ضروری ہے ،
ایک چیز کا خاص خیال رکھیں ایک خاص وقت رکھ لیں جس وقت آپ نے یہ سب کرنا
ہے ، ہو سکتا ہے شعور اور لا شعور کے درمیان اس نئ راہ کی بیچ کنی کے دوران آپ کو ڈراونے خواب آنا شروع ہو جائیں مگر آپ نے اسے اپنے دماغ کی کرشمہ سمجھنا ہے ڈرپوک بندہ یہ عمل ہر گز نہ کرے کیونکہ اسے فائدے کی بجائے نقصان ہونے کا ڈر ہے ، کھانا نہ زیادہ کھائیں اور نہ کم


السلام علیکم

قرطاس بھای ، شمع بینی شروع میں بالکل بھی خطرناک ہوسکتی ہے۔

اس کے بجاے اگر نکتہ بینی کی جاے تو زیادہ مناسب رہے گا۔

یہ بھی ارتکاز کیلیے ایک اچھی مشق ہوگی

اس میں ایک سفید کاغذ پر اس کے سنٹر میں اس پر سکہ جتنا کالا دایرہ جو بالکل گول اور کالا ہو بنا لیا جاے ۔ اور اسکو اپنے سامنے دیوار یا کسی چیز پر لگایا جاے۔ یوگا کی مشہور بیٹھک والی پوزیشن میں گردن کو سیدھا کر کے اس کو تکنا شروع کریں ۔ کاغذ دیوار وغیرہ پر بالکل آنکھوں کے سیدھ پر سامنے ہو ، نیچے اوپر نہ ہو۔ فاصلہ تقریباً 80 سنٹی میٹر ہو۔
یہ مشق اندھیرے میں ہوگی اور کمرے میں صرف دور کہیں ایک شمع روشن ہوگی۔

اب اس کالے دایرے کو تکتے ہوے یہ سوچنا ہوگا کہ اس دایرے کے ارد گرد روشنی ہو رہی ہے ، اور آہستہ آہستہ یہ سوچیں کہ یہ روشنی بڑھ رہی ہے اور پھر اس کو اتنا بڑھانا ہوگا کہ اس کالے دایرے پر بھی غالب ہو جاے اور اس سفید کاغذ پر کوی کالا دایرہ نظر نہ آے بلکہ وہ صرف سفید ہی رہے اور یا روشنی نظر آے۔

ایسا کرنا اتنا آسان نہیں ہوگا لیکن کچھ دنوں کے بعد واقعی اسی طرح ہونا شروع ہو جاے گا۔ روزانہ صرف 5 منٹ مشق کرنی ہے آہستہ آہستہ بڑھا کر پھر 10 یا 15 منٹ تک کی جاے ۔ اس سے زیادہ نہیں کرنی چاہیے اور ایک ہی دن میں یہ سب حاصل کرنے کی کوشش نہ کی جاے بلکہ اسکو مستقل مزاجی سے کرتے رہنا چاہیے۔

Qartaas
21-03-2009, 12:13 AM
بہت بہترین نکتہ بینی بینی بھی بہت ہی بہترین عمل ہے ، لیکن اس کی ترتیب میرے علم کے مطابق تھوڑی سی جدا ہے آپ ایک دم ہی سکہ جتنا بڑا داہرہ
بنائیں گے اسے آپ کی نظروں سے غائب ہونے کے لئے ہم از کم 9 منٹس کا ارتقاز چاہیے اور اتنا ارتقاز پانے کا مطلب ہوتا ہے 15 منٹس مسلسل نکتے کو گھورتے رہنا
اس کا آسان طریقہ یہ ہے کے پہلے پہل کاغز پر نکتہ چھوٹا بنائیں جسے رفتہ رفتہ بڑا کیا جائے اور عام کاغز کی بجائے ڈرائنگ کا چکنا کاغز استعمال کیا جانا زیادہ بہتر ہے ، نکتہ بینی سے پہلے سانس کی مشق کر لی جائے تو زیادہ بہتر ہو گا

Noor-ul-Ain Sahira
21-03-2009, 12:14 AM
نقطہ بینی شمع بینی یہ بینی وہ بینی وغیرہ بہت مشکل کام ھیں۔ میں آپ سب کو بہت ھی آسان کام بتاتی ھوں جس پر عمل کرتے ھی آپ چھا جائیں گے اور لوگ بھی آپ سے ڈر ڈر کے زیر اثر رھا کریں گے۔
تو آپ ان سب کو چھوڑ کر صرف
نقطہ چینی
کرنا سیکھ لیں۔
( آم کے آم اور گھٹلیوں کے دام۔)

فراز
21-03-2009, 02:44 AM
بھیا حالات کو اور محرکات کو دیکھتے ھوئے میں نے خود یہ اصطلاحی لفظ بنایا ھے۔ ویسے اگر آپ اسی پوسٹ میں خود پر لکھے گئے شعر کو بھی پڑھ لیتے تو اچھا ھوتا جی۔
صحیح!،
ویسے یہ اردو کا بورڈ نہیں ہے پر عادت سے مجبور ہو کر ٹانگ اڑا رہوں
اصل میں نکتہ بینی جو استعمال کیا جارہا ہے اس تھریڈ پر ،اس کی صحیح املا نقطہ بینی ہے ،
نکتہ بین کا مطلب باریک بین ہوتا ہے۔

اور باجی شعر کے متعلق تو مجھے ایک ہی مصرعہ یاد آرہاہے ہے
نہ چھیڑ ملنگاں نو
;d ;d

Lubna Khan
31-03-2009, 12:11 PM
yaqeen nai ata aisa bhi hota hy.,.,.,.,.,lakin duniya mein kia nai ho sakta wow,.,.sahira.???kisi ko ilm hy islami point of view sey iss ilm ki kia hasiat hey......:o

kaf_ali
02-04-2009, 02:31 AM
sahira je kia ap in ulum per urdu mean bookes ke link de sekti hain. mughe kafi ersy se in ke talash hai per yahan saudia mean nahi milty......................please

Qartaas
25-04-2009, 11:10 PM
روحانی ڈائجیسٹ

حسن نظامی
25-06-2009, 02:07 AM
السلام علیکم ! امید کرتا ہوں کہ ون اردو کے تمام ممبران بہ خیریت ہوں گے ۔۔۔

یہاں قرطاس بھائی کا شروع کیا ہوا موضوع دیکھا ۔۔ چوں کہ میری دلچسپی کا موضوع ہے کچھ میں بھی لکھنا چاہوں گا ۔۔

ہم بات کو انسان سے شروع کرتے ہیں ۔۔۔


انسان کی تخلیق کے بارے میں ہم یعنی مسلمانوں کا نقطۂ نظر یہ ہے :کہ اللہ تعالٰی نے نے اپنی ربوبیت کا اظہار کرنا چاہا اور یہ چاہا کہ میں پہچانا جاؤں تو اس نے کائنات تخلیق کی اور اس کائنات کا سردار اور اس کی جملہ مخلوقات میں اشرف و افضل آدم کو یعنی انسان کو قرار دیا ۔ اور ساتھ ہی اس کی افضلیت کی وجہ بھی بیان کر دی اور وہ وجہ اس کا علم ہے ۔۔

جس کا پتہ ہمیں سورۂ بقرہ کی یہ آیت دیتی ہے ۔۔۔

وعلمک آدم الاسماء کلھا

اور اللہ نے آدم علیہ السلام کو تمام چیزوں کا علم عطا کیا ۔

یہ علم انسانی ذہن کا کمال ہے ۔ اور انسانی ذہن ایک عجوبہ ہے ۔۔ سائنس آج بھی انسانی ذہن کے جملہ معاملات کو سمجھنے سے قاصر ہے ۔۔۔

اور دوسرا عنصر روح ہے ۔۔

روح کیا ہے قرآن کہتا ہے ۔۔۔

یسئلونک عن الروح قل الروح من امر ربی وما اوتیتم من العلم الا قلیلا

اور یہ لوگ آپ سے روح کے متعلق پوچھتے ہیں کہہ دیجیے کہ روح تو امر ربی ہے اور تمہیں قلیل علم دیا گیا ہے (روح کے بارے میں)وہ قلیل بھی بہت ہے علماءنے بہت کچھ لکھا ہے ۔۔

جیسے علامہ ابن قیم کی کتاب الروح ۔۔۔

ماورائی علوم کا تعلق انہی دو چیزوں سے ہے ۔۔۔

اور ماورائی علوم جدید زبان میں ۔۔۔

ٹیلی پیتھی ، ہپنا ٹزم، مسمریزم، وغیرہ جیسے ناموں سے موسوم ہیں ۔

ہندو اسے گیان دھیان اور یوگا وغیرہ کا نام دیتے ہیں ۔

وغیرہ وغیرہ ۔۔۔

مسلمانوں کے ہاں تھوڑا جدا نظریہ ہے ۔

ہم مسلمانوں کے نزدیک انسان کا مقصد اصلی معرفت الٰہی ہے اور وہ در حقیقت اللہ کی طرف اپنے قلب و نظر کو لگانے سے حاصل ہوتی ہے ۔ کامل عبودیت اور بندگی سے حاصل ہوتی ہے ۔

یہ قلب و نظر کیا چیز ہیں ۔۔ یہی میڈیٹیشن ۔۔ کنسنٹریشن ، ٹیلی پیتھی،ہپناٹزم، مسمریزم ،ہے اور
صوفی لوگوں کے ہاں اس کا نام مراقبہ ہے ۔۔ اس سے جو چیزیں حاصل ہوتی ہیں !ان کےسامنے یہ تمام چیزیں ہیچ ہیں ۔

کبھی میں نے بھی ان موضوعات پر پڑھا ۔ مشقیں کیں اور بالآخر نتیجہ یہی نکلا کہ ان سب چیزوں کا حصول کوئی حیثیت نہیں رکھتا اصل تو خدا کی معرفت ہے ۔۔ عارف باللہ شخص کے لیے یہ سب بچوں کے کھیل ہیں ۔۔

مراقبہ کیا ہے ۔۔۔ یہاں (http://www.alqlm.org/forum/showthread.php?t=2349) میں نے کبھی کچھ تحریر کیا تھا۔۔۔ اگر کوئی مطالعہ کرے تو اس کے لیے یقینا نئی معلومات ہوں گی ۔۔

یکسوئی پیدا کرنے کے لیے مراقبہ سب سے بہترین چیز ہے ۔۔

اور ان تمام علوم کا باپ ہے ۔

مراقبہ کرنے والے کو یہ تمام چیزیں خود بخود حاصل ہو جاتی ہیں ۔۔

شرط صرف اتنی ہے ۔۔

کہ ذہنی اور جسمانی طور پر پاک صاف رہے اور مخلوق خدا سے پیار محبت رکھنے کے ساتھ ساتھ ان کی خدمت میں جتا رہے ۔۔ اور اللہ کی وحدانیت ، رسول اللہ کی رسالت کا اقرار کرے صرف قولی نہیں بلکہ عملی ۔۔

مزید ان شاءاللہ پھر کبھی لکھوں گا ۔

کہ میں نے کیا کیا مشقیں کیں اور نتائج کیا کیا نکلے ۔۔

بس اتنا کہے دیتا ہوں کہ سب کچھ مراقبہ میں پوشیدہ ہے جو نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی سنت مقدسہ ہے ۔۔

والسلام علی من تبع الھدی

Qartaas
01-07-2009, 10:47 PM
اعنایت
اللہ کے لیے خود کو فنا کرنے والے ٹیلی پیتھی یا باقی مشقوں سے حاصل
ہونے والی صلاحتوں سے کئ گنا بڑھ کر ہوتے ہیں ، ان اللہ کے پیاروں پر
اللہ کی خاص رحمت اور فضل ہوتا ہے ،
اس طرح کی مشقیں کر کے ہر کوئی اپنی قوت ارادی یا لاشعور
کی طاقت سے عجیب العقل کام کر سکتا ہے ، مگر اللہ کے لئے فنا وہی
ہوتے ہیں جن پر اللہ کا فضل اور اعنایت بہت زیادہ ہوتی ہے ، ہم مراقبے کو
بالکل السلامی مشق نہیں کہہ سکتے ، تصور جس چیز کا کیا جائے مراقبہ
اُسی طرز کا ہوتا ہے ، ہر چیز کو بھلا کر اپنی سوچ ایک چیز کی طرف کر لینا

حسن نظامی
03-07-2009, 03:21 PM
اعنایت
اللہ کے لیے خود کو فنا کرنے والے ٹیلی پیتھی یا باقی مشقوں سے حاصل
ہونے والی صلاحتوں سے کئ گنا بڑھ کر ہوتے ہیں ، ان اللہ کے پیاروں پر
اللہ کی خاص رحمت اور فضل ہوتا ہے ،
اس طرح کی مشقیں کر کے ہر کوئی اپنی قوت ارادی یا لاشعور
کی طاقت سے عجیب العقل کام کر سکتا ہے ، مگر اللہ کے لئے فنا وہی
ہوتے ہیں جن پر اللہ کا فضل اور اعنایت بہت زیادہ ہوتی ہے ، ہم مراقبے کو
بالکل السلامی مشق نہیں کہہ سکتے ، تصور جس چیز کا کیا جائے مراقبہ
اُسی طرز کا ہوتا ہے ، ہر چیز کو بھلا کر اپنی سوچ ایک چیز کی طرف کر لینا


سلام مسنون !جناب من

میں آپ کی بات سمجھ نہیں سکا ۔

مراقبہ ۔۔۔ ٹیلی پیتھی ،ہپناٹزم اور مسمریزم وغیرہ جیسے علوم سے جدا ایک چیز ہے ۔

ہم مراقبہ کو ان کے ساتھ ملا نہیں سکتے ۔

بلکہ ٹیلی پیتھی ، ہپناٹزم ، مسمریزم کے پیچھے پڑنے کی قطعا ضرورت نہیں ۔ عبادات ، انسان کے اندر وہ تمام صلاحیتیں خود بخود پیدا کر دیتی ہے ۔ اگر اس کے ساتھ انسان اپنے ذہن و جسم کو پاک صاف رکھے ۔
جسے آپ ہپناٹزم کے ذریعے حاصل کرنا چاہتے ہیں ۔ وہ عبادت یعنی مراقبہ کے ذریعے نہایت آسانی سے حاصل ہو سکتی ہے ۔اس سے دو فائدے ہوں گے ایک تو آپ کو صلاحیت حاصل ہو جائے گی دوسرا اللہ تعالٰی راضی ہو گا۔
والسلام

Qartaas
08-07-2009, 12:00 AM
مراقبہ کوئی خالص السلامی علم نہیں ہے یقین کریں ، اھل مغرب عسائی
وغیرہ بھی مراقبہ کرنے اور اس کے افوائد کے ماننے والے ہیں ، آ
مسلمان مراقبہ لیاقت حاصل کرنے کے بعد مکہ و مدینہ کا تصور کر سکتا ہے ، بدمت ، عسائی اور ہندمت میں بھی مراقبہ عام ہے ، آپ اسے صرف السلام کا حصہ ثابت کیوں
کرنا چاہتے ہیں ،

ٹیلی پیتھی ، ہپناٹزم ، مسمریزم کی طرح آپ اگر اسے بھی قوت ارادی سے حاصل ہونے
والی ایک صلاحیت کہتے تو زیادہ مناسب تھا

حسن نظامی
08-07-2009, 09:06 PM
مراقبہ کوئی خالص السلامی علم نہیں ہے یقین کریں ، اھل مغرب عسائی وغیرہ بھی مراقبہ کرنے اور اس کے افوائد کے ماننے والے ہیں


قرطاس بھائی میں نے پوسٹ نمبر 57 میں ایک لنک دیا تھا ۔ جس میں ایک مضمون کی طرف اشارہ تھا ۔ اگر آپ نے اس لنک کو پڑھ لیا ہو تو کم از کم یہ تو واضح ہو جاتا کہ مراقبہ ہوتا کیا ہے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

دراصل مراقبہ تو لفظ ہی عربی کا ہے جس کے معنی ہیں ۔۔۔۔۔ کھوج لگانا ، تاڑنا، آپ نے لفظ رقیب تو سناہو گا۔۔۔ اس کو رقیب اسی لیے کہتے ہیں کہ یہ کسی اور کی محبوبہ کی کھوج تاڑ میں رہتا ہے ۔۔۔۔۔

ہم اس پربات نہیں کررہے کہ مراقبہ خالص اسلامی عبادت ہے ۔۔۔ اسلام میں کوئی بھی عبادت جس نام سے بھی ہو ۔۔ وہ ایک انفرادی حیثیت رکھتی ہے ۔ اور اس عبادت میں حقیقی روح نظر آتی ہے جو کسی اور مذہب میں نہیں ۔۔۔۔۔۔۔۔۔

مراقبہ کا لفظ اسلام میں جس عبادت کے لیے بولا جاتا ہے وہ خالص اسلامی ہے غیر اسلامی نہیں ۔۔۔۔۔




مسلمان مراقبہ لیاقت حاصل کرنے کے بعد مکہ و مدینہ کا تصور کر سکتا ہے ، بدمت ، عسائی اور ہندمت میں بھی مراقبہ عام ہے ، آپ اسے صرف السلام کا حصہ ثابت کیوں کرنا چاہتے ہیں . ٹیلی پیتھی ، ہپناٹزم ، مسمریزم کی طرح آپ اگر اسے بھی قوت ارادی سے حاصل ہونےوالی ایک صلاحیت کہتے تو زیادہ مناسب تھا


مراقبہ کی لیاقت حاصل کرنے کے بعد کا کیا مطلب ہوا ۔۔۔۔ مراقبہ کی لیاقت تو حاصل ہی اس طرح ہوتی ہے کہ آپ یکسوئی کی مشق کریں ۔ اور اسلام میں تمام تر توجہات کا مرکز ذات خداوندی اور اس کے حبیب کریم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم ہیں ۔
بدھ مت ، ہندو مت، عیسائیت، یہودیت سب میں مراقبہ جیسی عبادت موجود ہے ۔ مگر اس کے نام جدا ہیں ۔ اسی طرح جدید سائنس (مابعدالطبیعات)میٹا فزکس میں بھی یہ چیز موجود ہے مگر وہی بات کہ اسے ہپناٹزم ، مسمریزم ، یوگ ، دھیان ، رہبانیت، یا اسی طرح کی کئی چیزوں کا نام دے دیا گیا ہے ۔ اور اس کی روح بھی باقی نہیں رہی ۔

امید ہے اب آپ کا تشنگی دور ہو گئی ہو گی ۔ اور اب آپ مراقبہ اور ہپناٹزم ، مسمریزم اور دوسری چیزوں میں فرق کر سکیں گے ۔

آپ کے لیے امام غزالی کی کتاب مراقبہ پڑھنا بہت ضروری ہے ۔ آپ اسے ضرور پڑھیے گا۔ اور پوسٹ نمبر 57 میں جو لنک دیا گیا ہے اس کو بھی ضرور پڑھیے گا ۔


قرطاس بھائی سرخ الفاظ املاءکی غلطیاں ہیں ۔ ان پر توجہ کریں مجھے مفہوم سمجھنے میں کافی دشواری ہوئی ۔۔۔۔۔۔

Qartaas
27-07-2009, 01:10 AM
جی میں اس ہی طرح لکھا کرتا ہوں عادت سمجھ لیجیے حالانکہ ایم اے اردو فرسٹ
ڈوین میں پاس کی تھی ماشاء اللہ ، مجھے کچھ سمجھ نہیں آرہی میں مراقبے کہ
افوائد سے انکار نہیں کر رہا ، بس صرف یہ کہہ رہا ہوں بلکہ عرض کر رہا ہوں اسے
السلام کا حصہ نہ سمجھیں ، السلام وہی ہے جس پر آپ صلی اللہ چلے یا آپ صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم نے کسی چیز کو دیکھ کر اس سے منا نہیں فرمایا ،
اگر آپ بات سمجھ گے ہیں تو اللہ آپ کے علم میں مزید برکت عطا فرمائے

اور اگر نہیں سمجھے ہیں تو میں اپنے آپ کو ایک عاجز اور کم علم
سمجھتا ہوں گے آپ کو نہیں سمجھا سکتا