PDA

View Full Version : نوشین قریشی سے شیزوفرینیا کے متعلق سوال



Sajjad_Sarwar
11-03-2009, 10:54 AM
کیا یہ قابل علاج مرض ھے?
میری چھوٹی بہن اس عارضہ میں مبتلا ھے۔ تقریبا پانچ سال پہلے ہمیں اس کی بیماری کا پتہ چلا ۔ بہت حد تک نارمل ھونے کے بعد کچھ عرصے میں پھر واپس اسی حالت میں آجاتی ۔

Nosheen Qureshi
13-03-2009, 08:44 AM
آپ کی بہن میں مرض کی شدت کیا تھی اور علامات کیا کیا تھیں ان کی بنا پر ہی زیادہ بہتر بتایا جا سکتا ہے، شیزوفرینیا عام طور پر مکمل ختم نہیں ہوتا، لیکن اس کے بہتر ہونے کا انحصار بہت سے عوامل
پر ہے، لڑکیوں میں اس مرض کے بہتر ہونے کے امکانات کافی زیادہ ہیں، عموما اس مرض کے اثرات سے جلد اور زیادہ آسانی سے نکل سکتی ہیں لیکن اس کا مطلب یہ نہیں کے مرد بہتر نہیں ہو سکتے، مناسب وقت پر صحیح علاج سے ان کے مرض کی شدت بھی کم ہوتی ہے اور یہ بہتر زندگی بھی گزار پاتے ہیں۔
علاج کے 10سال کے اندر 50% مریض عام لوگوں جیسی زندگی گزار پاتے ہیں، اپنی کام انفرادی طور پر اور مکمل آزادی سے کر سکتے ہیں، 25% افراد میں کافی بہتری کے باوجود انھیں مدد اور دوسروں کی توجہ اور ساتھ درکار ہوتا ہے، 15% میں بہت ہی کم بہتری ہوتی ہے اور ان کی ساری زندگی ہسپتال میں ہی گزرتی ہے، 5% لوگ اس سب کے ہاتھوں مایوس ہو کر زندگی کے
خاتمے کی کوشش کرتے ہیں۔
جن لوگوں میں اس مرض کی تشخیص جلدی ہو جاتی ہے ان میں بہتری کے امکانات بھی زیادہ ہوتے ہیں، اگر کسی میں اس کی علامات علاج کے باوجود باربار ظاہر ہوں اس کا مطلب یہ ہے کہ یا تو اس کے علاج میں کمی رہ گئی ہے یا پھر جو حالات اس سب کا باعث بنے ہیں اسے انھی سے دوبارہ گزرنا پڑ رہا ہے
یہ مرض اگر خاندان کے ایک سے زیادہ افراد میں ہو تو بھی بہتری کے امکان کم ہو جاتے ہیں، اس مرض میں عموما دماغ میں تبدیلی آ جاتی ہے اگر ایسا ہو تو مکمل ٹھیک ہونے کی امید کم ہوتی ہے لیکن اگر تبدیلی نہ آئی ہو تو بہتری کے امکانات 100% ہوتے ہیں۔

Sajjad_Sarwar
13-03-2009, 03:34 PM
بانچ سالوں میں علامات تو بہت ساری ھیں جو تبدیل بھی ھوتی رھی ھیں۔
جو زیادہ مستقل ھیں وہ یہ ھیں
سونے جاگنے کے اوقات باقی گھر والوں سے مختلف ھیں ۔ بعض دفعہ ساری ساری رات جاگنا اور بعض دفعہ سارا سارا دن سونا۔
چائے بہت زیادہ پیتی ھے۔ دن میں تقریبا 20 کپ ۔ چائے سے منع کرنے پر مار دھاڑ تک بھی پہنچ جاتی ھے۔
ھر وقت گھر میں ٹہلتی رہتی ھے۔ اور خود کلامی کرتی ھے۔ اور ان باتوں کا کوئی سر پیر نہیں ھوتا۔
گھر کا کوئی کام نہیں کرتی۔ لیکن کھانا پینا کبھی نہیں بھولتی۔ ھر بات میں اس کا نظریہ دوسروں سے علیحدہ ھے اور اسکی دلیل بھی ھے۔
جب دوائی بھی کچھ دن کا ناغہ ھوجائے تو نیند بلکل ختم ھوجاتی ھے۔ اور ھر وقت لڑنے کے لئے تیار رھتی ھے۔

Nosheen Qureshi
16-03-2009, 10:15 AM
سب سے پہلی بات تو یہ ہے کہ دوا ہرگز نہ چھوڑیں کیونکہ اسکے استعمال کے بغیر علامات زیادہ عرصہ تک بہتر نہیں رہ سکتیں، عام طور پر ہم لوگ اس چیز کا دھیان نہیں رکھتے کہ زھنی مریض بہت سی چیزوں اور خیالات میں بےاختیار ہوتے ہیں، ہم انھیں عام لوگوں میں شمار کرتے ہیں اور عام رویہ کی ہی توقع رکھتے ہیں، یہ علامات ان کے مرض کی وجہ سے ہی ہیں، آپ کی ان پر روک ٹوک معاملات و تعلقات کو خراب تو کر سکتی ہے لیکن ٹھیک ہرگز نہیں، معالج سے رابطہ میں رہیں، یہ مرض دنوں میں جانے والا نہیں، رویوں کی شدت عام طور پر مریض پر منفی اثرات مرتب کرتی ہے، اس لئے آپ لوگ اپنے رویہ میں اعتدال لائیں، وہ ایسا جان بوجھ کر نہیں کرتیں، ان کے ساتھ نرم اور خیال رکھنے والا رویہ اختیار کریں، کسی کو یہ اختیار نہ دیں کو وہ ان پر بے جا تنقید کرے، ان کی تنہائیوں میں ساتھی بننے کی کوشش کریں۔

Sundas
09-07-2009, 10:04 PM
salam nosheen... kesi haen app..main nay bhi psychology main masters kia howa hae .lakin practical se 2 saal se door hoon.yaha ap k baray main dekh k acha laga...bhai sajjad sarwar apki behan normal hoo sakti haen lakin unka bilkul theek hona shaeed mumkin na hoo.ager tou yeh cheez dooray ki shakal main hoo tou aur bhi mushkil hoo jata hae..aamtoor pe asy client apni intiha pe puchnay k baad hi clinick main layee jaty haen lakin ager munasib time pe unki properb treetment hoo jaye tou kafi behter hota hae......

Sundas
09-07-2009, 10:05 PM
salam nosheen... kesi haen app..main nay bhi psychology main masters kia howa hae .lakin practical se 2 saal se door hoon.yaha ap k baray main dekh k acha laga...bhai sajjad sarwar apki behan normal hoo sakti haen lakin unka bilkul theek hona shaeed mumkin na hoo.ager tou yeh cheez dooray ki shakal main hoo tou aur bhi mushkil hoo jata hae..aamtoor pe asy client apni intiha pe puchnay k baad hi clinick main layee jaty haen lakin ager munasib time pe unki properb treetment hoo jaye tou kafi behter hota hae......