PDA

View Full Version : جناتی بیت بازی



HarfeDua
01-03-2009, 01:49 AM
السلام علیکم
یہاں وہ اشعار شئر کریں جن میں جن، بھوت، سایہ۔ ۔ ۔ آتا ہو۔ پر اسرار قسم کے اشعار۔ اور اگر ساتھ ہی ایکسپلین بھی کردیں تو ہم سب شکر گزار ہونگے کے شعر کا جنات سے کیا رلیشن ہے۔

;d
پہلا شعر میری طرف سے

جن دوستوں کی کمی ہے آج حیات میں
وہ اپنے درمیاں تھے ابھی کل کی بات ہے
کچھ حادثوں سے گرگئے انجم زمین پر
ہم رشکِ آسماں تھے ابھی کل کی بات ہے۔


اب ذرا غور کریں۔ ۔ ۔ یہ شعر جنوں کے بارے میں ہے کیونکہ وہ ہمارے بیچ میں ہوتے ہوئے بھی نظر نہیں آتے۔ ۔ ۔اور ایک جن نے انجم صاحب کو گرادیا۔۔۔۔
:( بیچارے

Frndz4Ever
01-03-2009, 01:51 AM
جن جن نے دیکھے نہیں ہیں اب تک جن۔۔۔۔
ان سے کہہ دو کے رات کو شیشہ دیکھ لیں۔۔۔

دانیہ
01-03-2009, 01:53 AM
کیا جن جن کی بات کرتے ہو
یونہی صبح و شام تمام کرتے ہو
گر وہ وہ سامنے آ گیا تو
دور سے ہی سلام کرتے ہو

HarfeDua
01-03-2009, 01:54 AM
پیشنٹ:
اندھیری رات میں یہ سایہ ہو نہیں سکتا
یہ کون ہے جو میرے ساتھ ساتھ چلتا ہے

ڈاکٹر:
اندھیری رات میں یہ سایہ ہو نہیں سکتا
کوئی جن بھوت ہے جو تیرے ساتھ ساتھ چلتا ہے
;d
کیسا ہے ابھی ابھی لکھا ہے؟

دانیہ
01-03-2009, 01:58 AM
پیشنٹ:
اندھیری رات میں یہ سایہ ہو نہیں سکتا
یہ کون ہے جو میرے ساتھ ساتھ چلتا ہے

ڈاکٹر:
اندھیری رات میں یہ سایہ ہو نہیں سکتا
کوئی جن بھوت ہے جو تیرے ساتھ ساتھ چلتا ہے
;d
کیسا ہے ابھی ابھی لکھا ہے؟

بہت اچھا

یہ ایک اور سنو ابھی ابھی نزول ہوا ہے


میں دور تک اکیلا جانا چاہتا تھا
رستے جانے کیوں ہمسفر ہوئے
جن کی خاطر یہ شہر چھوڑا
وہ ہیں آج تک پیچھا لئے ہوئے

IN Khan
01-03-2009, 01:58 AM
ہم تھے "جن "کے سہارے، وہ ہوئے نہ ہمارے
ڈوبی جب دل کی نیا، سامنے تھے کنارے

دانیہ
01-03-2009, 01:59 AM
‎دانیہ (http://www.urduphoto.com/oucache/in/www.oneurdu.com/forums/member.php?u=43329)*, ‎NayyarImran (http://www.urduphoto.com/oucache/in/www.oneurdu.com/forums/member.php?u=46067)+, ‎Frndz4Ever (http://www.urduphoto.com/oucache/in/www.oneurdu.com/forums/member.php?u=60132)

آہ ہا عمران بھائی
چلیں جلدی سے کوئی شعر لکھیں جن والا

IN Khan
01-03-2009, 02:03 AM
وہ جن پہ تکیہ کئے بیٹھے تھےکبھی ہم یارو
چھوڑ کے آج ہمیں، بھری دنیا میں تنہا کرگئے

یہ بھی ابھی ابھی نزول ہوا ہے

دانیہ
01-03-2009, 02:05 AM
باغباں نے آگ دی جب آشیانے کو مرے
جن پتوں پہ تکیہ تھا وہی پتے ہوا دینے لگے

HarfeDua
01-03-2009, 02:07 AM
یہ مت سوچنا کے ہم بھول جائیں گے تمہیں
دور رہ کربھی ہمیشہ چاہیں گے تمہیں
اگر دوست بن کر راس نہ آئے تو
بھوت بن کر ڈرائیں گے تمہیں

;d

دانیہ
01-03-2009, 02:08 AM
شاعر صاحب سے معذرت کے ساتھ

جن کے دیکھے سے جو آجاتی ہے منہ پر رونق
وہ سمجھتے ہیں بیمار کا حال اچھا ہے

IN Khan
01-03-2009, 02:09 AM
جن پہ فاختاؤں کے گیت پھول بنتے ہوں
آؤ ان درختوں پر نام لکھ کے آتے ہیں

HarfeDua
01-03-2009, 03:07 AM
آہٹ سی کوئی آئے تو لگتا ہے کہ تم ہو
ہوا کوئی لحرائے تو لگتا ہے کہ تم ہو
اب تم ہی بتاؤ۔ ۔ ۔
کیا تم کسی بھوت سے کم ہو؟

رفعت
01-03-2009, 03:07 AM
اک ادھوری سی ملاقات ہوئی تی"جن "سے
جانے اب ان سے ملاقات کبھی ہو کہ نہ ہو

pert
01-03-2009, 03:21 AM
اب ان کے قافلے تو کہیں دور جا چکے
جن کی طلب میں آئے تھے صحرا گزار کر

IN Khan
01-03-2009, 03:23 AM
چلی تھی جن سے یہاں رسم ِخود نگہداری
انہیں عزیز ہوا ذکر ِخود کشی اب تو

pert
01-03-2009, 03:24 AM
رچی ہے رتجگوں کی چاندنی جن کی جبینوں میں
قتیل اک عمر گزری ہے ہماری ان حسینوں میں

pert
01-03-2009, 03:27 AM
وہ جن کے آنچلوں سے زندگی تخلیق ہوتی ہے
دھڑکتا ھے ہمارا دل ابھی تک ان حسینوں میں

IN Khan
01-03-2009, 03:43 AM
وہ جن کے آنچلوں سے زندگی تخلیق ہوتی ہے
دھڑکتا ھے ہمارا دل ابھی تک ان حسینوں میں
اس وقت دعا سس یہ شعر سن کر یقینآ یہی کہتی کہ جن کے "آنچل"کب سے ہونے لگے۔۔۔;d

دانیہ
01-03-2009, 03:53 AM
اس وقت دعا سس یہ شعر سن کر یقینآ یہی کہتی کہ جن کے "آنچل"کب سے ہونے لگے۔۔۔;d
;d;d




دلِ حزیں کو تِری یاد سے بچا نہ سکے
ہزار بار بُھلایا ، مگر بُھلا نہ سکے
ارادہ تھا کہ سُنائیں گے حالِ دل جن کو
ہم اُن کے سامنے آنسو مگر بہا نہ سکے

IN Khan
01-03-2009, 03:56 AM
;d;d




دلِ حزیں کو تِری یاد سے بچا نہ سکے
ہزار بار بُھلایا ، مگر بُھلا نہ سکے
ارادہ تھا کہ سُنائیں گے حالِ دل جن کو
ہم اُن کے سامنے آنسو مگر بہا نہ سکے



دانی سس ۔۔۔۔۔۔جن کے سامنے تو ویسے ہی گھگھی بندھ گئی ہوگئی۔کجا کہ آنسو بہانا۔۔۔۔۔;d

pert
01-03-2009, 03:56 AM
اس وقت دعا سس یہ شعر سن کر یقینآ یہی کہتی کہ جن کے "آنچل"کب سے ہونے لگے۔۔۔;d

ہوتے ہیں ناں۔۔۔وہ آپ نے موویز میں دیکھے نہیں بڑے بڑے چوغے والے جن تو ;dمیل جن کے چوغے ہوتے ہیں اور فیمیل جننیوں کے "آنچل"

دانیہ
01-03-2009, 03:57 AM
جن کی سوچ میں ہوں دیکھیئے دیتے ہیں*کیا فریب
وہ پھر سے مِل رہے ہیں بڑی سادگی کے ساتھ

HarfeDua
01-03-2009, 03:58 AM
نہ پوچھ کتنے محبت کے زخم کھائے ہیں
کہ "جن" کو سوچ کے دل سوگوار آج بھی ہے

IN Khan
01-03-2009, 04:02 AM
وہ کہ جن کے ہاتھ میں تقدیر ِفصل ِگل رہی
دے گئے سوکھے ہوئے پتوں کا نذرانہ ہمیں

IN Khan
01-03-2009, 04:05 AM
نہ پوچھ کتنے محبت کے زخم کھائے ہیں
کہ "جن" کو سوچ کے دل سوگوار آج بھی ہے


جن کو سوچ کر کیا کوئی خوش بھی ہوسکتا ہے سس:)

دانیہ
01-03-2009, 04:05 AM
جب شاعری پردہ ہے فراز اپنے جنوں کا
پھر کیوں*مجھے رسوا کیا اشعار نے میرے

دانیہ
01-03-2009, 04:12 AM
فراز تیرے جنوں کا خیال ہے ورنہ
یہ کیا ضرور وہ صورت سبھی کو پیاری لگے

IN Khan
01-03-2009, 04:15 AM
فراز تیرے جنوں کا خیال ہے ورنہ
یہ کیا ضرور وہ صورت سبھی کو پیاری لگے

یہ تو اب معلوم ہوا کہ فراز نے بھی جن رکھ چھوڑے تھے:eek:

Rubab
01-03-2009, 04:18 AM
فراز تیرے جنوں کا خیال ہے ورنہ
یہ کیا ضرور وہ صورت سبھی کو پیاری لگے
:o :o :eek:

;d ;d

دانیہ
01-03-2009, 04:21 AM
یہ تو اب معلوم ہوا کہ فراز نے بھی جن رکھ چھوڑے تھے:eek:

:o :eek:

;d
ابھی پوسٹ کرتے وقت میں بھی یہی سوچ رہی تھی کہ ہر شعر فراز کا ہی کیوں ہے جنوںوالا
اب یہ تو آپ وہ والے فراز یا اپنے فراز بھائی سے پوچھئے کہ ماجرا??? کیا ہے

سلمان سلّو
01-03-2009, 05:24 AM
اس تشنگی کے ساتھ کہ آئے گی اب بہار
ہم نے تمام عمر بتا دی،خزاں کے سنگ

اس تشنگی کے ساتھ کہ آئے گی اب پری
ہم نے تمام عمر بتا دی،چڑیل کے سنگ

یہ راز بہار گلشن ہے اس راز کو سمجھے کیا کوئی
شبنم کو رُلایا پھولوں نے یا رات کو شبنم خود روئی

یہ راز بہار گلشن ہے اس راز کو سمجھے کیا کوئی
شبنم کو رُلایا جنوں نے یا رات کو شبنم خود روئی

HarfeDua
01-03-2009, 07:48 AM
اور اک بار پکارو کہ بھرے فورم میں

عین ممکن ہے، کہیں سے کوئی جن بولے



اور اک بار پکارو کہ بھری دنیا میں
عین ممکن ہے، کہیں سے کوئی انساں بولے

Frndz4Ever
01-03-2009, 07:58 AM
ایک بگاڑا ہوا شعر۔۔۔:cool:

یہ جن جو ہیں عجیب سے، تو میں بھی ہوں عجیب طر۔۔۔۔ انہیں چڑیلوں کی خبر نہیں، مجھے انسانوں کا پتا نہیں۔۔۔۔

HarfeDua
01-03-2009, 08:06 AM
ایک بگاڑا ہوا شعر۔۔۔:cool:

یہ جن جو ہیں عجیب سے، تو میں بھی ہوں عجیب طر۔۔۔۔ انہیں چڑیلوں کی خبر نہیں، مجھے انسانوں کا پتا نہیں۔۔۔۔
;d
اچھا ہے حور۔
جنوں اب تک وہی بچپن وہی تخریب کاری ہے
میں خطرہ مول لیتا ہوں، چڑیلیں چھیڑ دیتا ہوں


عدیم اب تک وہی بچپن وہی تخریب کاری ہے
قفس کو تو دیتا ہوں، پرندہ چھوڑ دیتا ہوں

یہ کیسا ہے؟
;d

SmyleAgain
01-03-2009, 08:09 AM
;d
جنوں اب تک وہی بچپن وہی تخریب کاری ہے
میں خطرہ مول لیتا ہوں، چڑیلیں چھیڑ دیتا ہوں


عدیم اب تک وہی بچپن وہی تخریب کاری ہے
قفس کو تو دیتا ہوں، پرند چھوڑ دیتا ہوں

یہ کیسا ہے؟
;d
بہت ہی آسیب زدہ;)

HarfeDua
01-03-2009, 08:10 AM
بہت ہی آسیب زدہ;)
;d
آپ بھی کچھ لکھیں نا۔۔۔

SmyleAgain
01-03-2009, 08:12 AM
خوابوں میں خواب اس کے، یادوں میں یاد اس کی
نیندوں میں گھل گیا ہو جیسے کہ جن کہیں کا

خوابوں میں خواب اس کے، یادوں میں یاد اس کی
نیندوں میں گھل گیا ہو جیسے کہ رتجگا سا

Frndz4Ever
01-03-2009, 08:35 AM
سنو۔۔۔۔ تم وہ جن ہو، جو ڈراتا ہے، گھوپ اندھیرے میں، معصوم بچوں کو۔۔۔۔
http://www.urduphoto.com/oucache/in/i259.photobucket.com/albums/hh295/H-angel786/emoz/__Laie_91B.gif




سنو۔۔۔۔ تم وہ دعا ہو، جو مانگی جاتی ہے، سخت گرمیوں میں، بارشوں کے لیے۔۔۔۔

SmyleAgain
01-03-2009, 08:38 AM
یاد اسکی اتنی خوب نہیں میر باز آ
جن پھر وہ جی سے بھلایا نہ جائے گا

رفعت
01-03-2009, 10:41 AM
جنوں سے ڈرتے ہو؟
جن تو تم بھی ہو، جن تو ہم بھی ہیں!
آدمی خونخوار بھی ہے، آدمی خوفناک بھی ہے،
اس سے تم نہیں ڈرتے!
ظلم اور دھوکے کے رشتہ ہائے آہن سے، آدمی ھے وابستہ
آدمی کے دامن سے درندگی ہے وابستہ
اس سے تم نہیں ڈرتے!

“جنوں” سے ڈرتے ہو
جو کبھی دکھا نہیں،اس جن سے ڈرتے ہو

HarfeDua
01-03-2009, 11:22 PM
احمد فراز سے معزرت کے ساتھ۔ ۔ ۔ آج کی تازہ غزل:


سنا ہے لوگ اسے آٓنکھ بند کرکے دیکھتے ہیں
سو اس قبرستان سے اک رات گزر گے دیکھتے ہیں

سنا ہے ربط ہے اس کو خوف کے ماروں سے
سو اس کے دوستوں کو اب ڈرا کے دیکھتے ہیں

سنا ہے دہشت کی نشانی ہے بھوت بنگلہ اس کا
سو ہم بھی اس کی گلی سے گزر کے دیکھتے ہیں

سنا ہے اس کو بھی ہے شعر و شاعری سے شغف
سو ہم جناتی بیت بازی کرکے دیکھتے ہیں

سنا ہے جن کی آنکھوں سے شعلے نکلتے ہیں
یہ بات ہے تو پانی چھڑک کے دیکھتے ہیں

سنا ہے چلے تو پاؤں میں گھنگرو بجتے ہیں
کہ مردے قبروں سے نکل نکل کے دیکھتے ہیں

سنا ہے حشر اٹھادیتے ہیں ان کے الٹے پاؤں
تو ہم بھی الٹی چال چل کے دیکھتے ہیں

سنا ہے رات کو گھر سے چیخنے کی آوازیں آتی ہیں
تو ہم بھی ان کی گھنٹی بجا کے دیکھتے ہیں

سنا ہے اس کی سیاہ چشمگی قیامت ہے
سو اس کے میک اپ کا راز پوچھ کے دیکھتے ہیں

سنا ہے اس کے دانتوں سے خون بہتا ہے
تو ہم ڈینٹونک پہ الزام دھر کے دیکھتے ہیں

سنا ہے بھوت عاشق ہوتے ہیں چڑیلوں کے
جو سادہ لڑکیاں ہیں بن سنور کے دیکھتی ہیں

وہ برگد کا شجر ہے مگر آباد نہیں
مگر اب اس شجر پہ بھوت اترتے دیکھتے ہیں

سنا ہے اک نگاہ سے بھسم کرتا ہے قافلہ ان کا
تو ہم فائر پروف جیکٹ پہن کے دیکھتے ہیں

سنا ہے بھوت دیوار کے آٓر پار دیکھ لیتے ہیں
مکیں اُدھر کے بھی جلوے اِدھر کے دیکھتے ہیں

سنا ہے دشمن پہ بھوت عاشق ہوگیا ہے
یہ بات ہے تو اسے جھاڑو سے پیٹ کے دیکھتے ہیں

کیا ضرورت تھی ہمیں ایسی غزل لکھنے کی
ہر آہٹ پہ در و دیوار گھر کے دیکھتے ہیں

سنا ہے بی بی صاحبہ بیٹھتی ہیں پراسرار سیکشن میں
چلو اب ان سے مدد لے کے دیکھتے ہیں

کہانیاں ہی سہی سب مبالغے ہی سہی
اگر وہ خواب ہے تعبیر کرکے دیکھتے ہیں

اب اس کے شہر میں ٹھہریں کہ خاموشی سے گزر جائیں
اب آگئے ہیں تو جن اور چڑیلوں سے مل کے دیکھتے ہیں

شاعرہ : حرفِ دُعا

دانیہ
01-03-2009, 11:38 PM
اگر فراز ہی کی شاعری کو مشق سخن بنانا ہے تو ایک اور حاضر ہے

چلو کہ کوچئہ جنّات چل کے دیکھتے ہیں
کسے کسے ہے یہ آزار چل کے دیکھے ہیں
سنا ہے ایسا جن کہیں سے آیا ہے
کہ اس کو شہر کے بھوت چل کے دیکھتے ہیں
سارے جنّات چڑیلوں کو بھوتوں کو لے کر
ہے کون رونق بازار چل کے دیکھتےہیں
سنا ہے دن میں تو وہ نہیں *ملتا
سو اب کے اس کو اندھیرے میں چل کے دیکھتے ہیں
اس ایک جن کو دیکھو تو آنکھ بھرتی نہیں
اس ایک جن کو ہر بار چل کے دیکھتے ہیں
وہ شہر کا کرے قصد جب تو سائے سے
سارے جنّات اُٹھ اُٹھ کے دیکھتے ہیں
فراز اسیر ہے اس کا کہ وہ فراز کا ہے
ہے کون؟ کس کا گرفتار؟ چل کے دیکھتے ہیں

دانیہ
01-03-2009, 11:49 PM
رفعت سے معذرت کے ساتھ

ان کے سگنیچر والے شعر کو دیکھ کر نازل ہوا ہے


رستے میں چڑیل تو ہو گی جو چل سکو تو چلو
جنّات بھی ہیں بھیڑ میں تم بھی نکل سکو تو چلو

کسی کے واسطے راہیں کب بدلتی ہیں
اُس چڑیل سے نمٹ سکو تو چلو

Mohsina
02-03-2009, 02:04 PM
جن کے آنگن میں امیری کا شجر لگتا ہے
ان کا ہر عیب زمانے کو ہنر لگتا ہے

IN Khan
02-03-2009, 08:53 PM
احمد فراز سے معزرت کے ساتھ۔ ۔ ۔ آج کی تازہ غزل:


سنا ہے لوگ اسے آٓنکھ بند کرکے دیکھتے ہیں
سو اس قبرستان سے اک رات گزر گے دیکھتے ہیں

سنا ہے ربط ہے اس کو خوف کے ماروں سے
سو اس کے دوستوں کو اب ڈرا کے دیکھتے ہیں

سنا ہے دہشت کی نشانی ہے بھوت بنگلہ اس کا
سو ہم بھی اس کی گلی سے گزر کے دیکھتے ہیں

سنا ہے اس کو بھی ہے شعر و شاعری سے شغف
سو ہم جناتی بیت بازی کرکے دیکھتے ہیں

سنا ہے جن کی آنکھوں سے شعلے نکلتے ہیں
یہ بات ہے تو پانی چھڑک کے دیکھتے ہیں

سنا ہے چلے تو پاؤں میں گھنگرو بجتے ہیں
کہ مردے قبروں سے نکل نکل کے دیکھتے ہیں

سنا ہے حشر اٹھادیتے ہیں ان کے الٹے پاؤں
تو ہم بھی الٹی چال چل کے دیکھتے ہیں

سنا ہے رات کو گھر سے چیخنے کی آوازیں آتی ہیں
تو ہم بھی ان کی گھنٹی بجا کے دیکھتے ہیں

سنا ہے اس کی سیاہ چشمگی قیامت ہے
سو اس کے میک اپ کا راز پوچھ کے دیکھتے ہیں

سنا ہے اس کے دانتوں سے خون بہتا ہے
تو ہم ڈینٹونک پہ الزام دھر کے دیکھتے ہیں

سنا ہے بھوت عاشق ہوتے ہیں چڑیلوں کے
جو سادہ لڑکیاں ہیں بن سنور کے دیکھتی ہیں

وہ برگد کا شجر ہے مگر آباد نہیں
مگر اب اس شجر پہ بھوت اترتے دیکھتے ہیں

سنا ہے اک نگاہ سے بھسم کرتا ہے قافلہ ان کا
تو ہم فائر پروف جیکٹ پہن کے دیکھتے ہیں

سنا ہے بھوت دیوار کے آٓر پار دیکھ لیتے ہیں
مکیں اُدھر کے بھی جلوے اِدھر کے دیکھتے ہیں

سنا ہے دشمن پہ بھوت عاشق ہوگیا ہے
یہ بات ہے تو اسے جھاڑو سے پیٹ کے دیکھتے ہیں

کیا ضرورت تھی ہمیں ایسی غزل لکھنے کی
ہر آہٹ پہ در و دیوار گھر کے دیکھتے ہیں

سنا ہے بی بی صاحبہ بیٹھتی ہیں پراسرار سیکشن میں
چلو اب ان سے مدد لے کے دیکھتے ہیں

کہانیاں ہی سہی سب مبالغے ہی سہی
اگر وہ خواب ہے تعبیر کرکے دیکھتے ہیں

اب اس کے شہر میں ٹھہریں کہ خاموشی سے گزر جائیں
اب آگئے ہیں تو جن اور چڑیلوں سے مل کے دیکھتے ہیں

شاعرہ : حرفِ دُعا




ویسے دعا سس۔۔۔آپ رئیلی پیروڈی میں بہت شاندار کام کرسکتی ہیں۔۔یہ خدا داد صلاحیت موجود ہے آپ میں:)

Minha Malik
05-03-2009, 04:53 PM
آہا جی
میں نے تو یہ ٹاپک ابھی دیکھا ہے
جہاں شاعری وہاں میں
لیجئے پہلا قطعہ حاضر ہے

خاموش رہ کر پکارتی ہے
وہ چڑیل کتنی شرارتی ہے
میں جتنا جنوں سے ڈرتی ہوں
وہ اتنی ہی چیخیں مارتی ہے

HarfeDua
05-03-2009, 07:32 PM
آہا جی
میں نے تو یہ ٹاپک ابھی دیکھا ہے
جہاں شاعری وہاں میں
لیجئے پہلا قطعہ حاضر ہے

خاموش رہ کر پکارتی ہے
وہ چڑیل کتنی شرارتی ہے
میں جتنا جنوں سے ڈرتی ہوں
وہ اتنی ہی چیخیں مارتی ہے
;d;d
یہ تو بہتتت اچھی لکھی منہا۔
اسے آگے بھی بڑائیں نا۔۔۔شرارتی چڑیل اور کیا کیا کرتی ہے۔
;d

Durre Nayab
05-03-2009, 11:59 PM
یہ الفاظ اس کے ہیں جس پر جن عاشق ہوا

بات کرنی مجھے مشکل کبھی ایسی تو نہ تھی
جیسی اب ہے میری حالت کبھی ایسی تو نہ تھی
لے گیا چھین کہ وہ آج میرا صبروقرار
بیقراری مجھے اے جن کبھی ایسی تو نہ تھی

KishTaj
07-03-2009, 04:34 PM
مرزا غالب کی روح سے معزرت کے ساتھ

کوئی امید بر نہیں آتی
کوئی صورت نطر نہیں آتی

جانتی ہوں نظر نہیں آتے
پر طبیعت سنور نہیں پاتی

پہلے پازیب کھنکتے تھے فقد
اب تو چیخیں بھی رک نہیں پاتی

ہر کوئی بھوت دکھائی دیتا
کہیں انسانیت نظر نہیں آتی

بھرے بازار میں بھی اب ڈر لگتا ہے
مارے خوف کے میں آئینہ نہیں لاتی

جنوں بھوتوں سے دور جاکر بھی
نیند کیوں رات بھر نہیں آتی

Neha
07-03-2009, 05:15 PM
اور اب تو میرےچہرےسےابھرآتا ہے وہ
آئینہ میں دیکھتا ہوں اور نظر آتا ہے وہ


حال دل کہنے کو بارش کی ضرورت ہے مجھے
اور میرے گھر ہوا کےدوش پر آتا ہے وہ


رات کو دل سے کوئی آوازآتی ہے مجھے
جسم کی دیوار سے کیسے گزر آتا ہے وہ


وقت کھو جاتا ہے میرے انجمن میں اس لیے
اپنےبازو پر گھڑی باندھ کر آتا ہے وہ


آخری زینےتلک کوئی خبر ہوتی نہیں
دل کے تہہ خانے میں چپکےسےآتا ہے وہ


میں ہوا کی گفتگو لکھتا ہوں برگ شام پر
جو کسی کو بھی نہیں آتا ہنرآتا ہے وہ

سربریدوں کو تنک کر رات سورج نے کہا
اور جب شانوں پہ رکھ کر اپنا سرآتا ہے وہ


وہ نکلتا ہی نہیں منصور تیری ذات سے
ذکرآئے تو سہی آنکھوں میں در آتا ہے وہ

HarfeDua
31-08-2010, 11:28 PM
;d
یہ تھریڈ بھی کافی مزے کا تھا۔


پھر اسی راہگزر پر شاید
ہم کبھی مل سکیں مگر شاید
جن کے ہم منتظر رہے اُن کو
مل گئے اور ہم سفر شاید

Lubna Ali
31-08-2010, 11:31 PM
آہا جی
میں نے تو یہ ٹاپک ابھی دیکھا ہے
جہاں شاعری وہاں میں
لیجئے پہلا قطعہ حاضر ہے

خاموش رہ کر پکارتی ہے
وہ چڑیل کتنی شرارتی ہے
میں جتنا جنوں سے ڈرتی ہوں
وہ اتنی ہی چیخیں مارتی ہے


ہاہاہاہاہاہاااااااااااااا ۔۔۔۔۔ یہ والا سب سے اچھا ہے ۔۔۔

Ajmal Anjum
24-09-2010, 04:39 PM
;d
یہ تھریڈ بھی کافی مزے کا تھا۔


پھر اسی راہگزر پر شاید
ہم کبھی مل سکیں مگر شاید
جن کے ہم منتظر رہے اُن کو
مل گئے اور ہم سفر شاید



السلام ُ علیکم جی ۔۔۔۔۔۔
اگر یہ " جناتی بیت بازی" ہے تو پھر تو دوسرا شعر کچھ یوں نہیں ہونا چاہیئے تھا


جن رہے اپنے منتظر لیکن
مل گئے اُن کو بھوت پھر شاید

کیا خیال ہے

Shiny Eyes
04-05-2011, 02:25 AM
zabardast......alaaaaaaa....10 points 4 u..

Majzobi
01-07-2011, 10:14 AM
السلام علیکم

جن دوستوں کی کمی ہے آج حیات میں
وہ اپنے درمیاں تھے ابھی کل کی بات ہے
کچھ حادثوں سے گرگئے انجم زمین پر
ہم رشکِ آسماں تھے ابھی کل کی بات ہے۔


اب ذرا غور کریں۔ ۔ ۔ یہ شعر جنوں کے بارے میں ہے کیونکہ وہ ہمارے بیچ میں ہوتے ہوئے بھی نظر نہیں آتے۔ ۔ ۔اور ایک جن نے انجم صاحب کو گرادیا۔۔۔۔
:( بیچارے

;d;d;d