PDA

View Full Version : Competition2...''بذریعہ شعر تصویر کو عنوان دیجئے"...Competition2



سلمان سلّو
27-01-2009, 08:33 AM
بسم اللہ الرحمن الرحیم


السلام علیکم قارئین۔۔



مقابلہ''بذریعہ شعر تصویر کو عنوان دیجئے" کے سلسلے کے دوسرے مقابلے کے ساتھ حاضر ہوں۔
مقابلے کے فارمٹ کے بارئے میں تو آپکو پتہ ہے جن کو نہیں پتہ انکو کو بتاتا ہوں یہ مقابلہ ہے بذریعہ شعر تصویرکوعنوان دینے کا یعنی تصویر دیکھ کر شعر موزوں کرنا ہوتا ہے۔۔
امید کرتا ہوں پچھلے مقابلے کی طرح آپ اس مقابلے میں بھی بڑھ چڑھ کرشرکت کروگے۔۔

قوانین:
ایک ممبر 3 سے 5 شعر کہہ سکتا ہے۔
ایڈیٹ کی اجازت نہیں۔۔۔۔
یہ مقابلہ ہے بذریعہ شعر عنوان دینے کا،آپ قطعات بھی پوسٹ کرسکتے ہیں لیکن نظم یا غزل پوسٹ کرنے سے گریز کرئے۔۔۔۔
اشعار سارئے ایک ساتھ بھی پوسٹ کئے جاسکتے ہیں اور ایک ایک دو،دو کر کے بھی لیکن اس صورت میں پھر اوپر نمبر ڈالنا ضروری ہوگا۔۔۔۔
اشعار صرف اردو زبان میں ہونے چاہیں رومن اردو میں لکھے ہوئےاشعار قابل قبول نہیں ہونگے۔۔۔
اشعار پوسٹ کرتے ہوئے اس بات کا خاص خیال رکھے کہ آپکا سیگنچر آف ہوں{پوسٹ نیو تریڈ والے بکس میں نیچے چیک / ان چیک کا آپشن ہے وہاں سے آف کر دے}
قوانین کا احترام کیجئے یہ نہ صرف آپکا اخلاقی فرض ہے بلکہ آپکی جیت کی ضمانت بھی ہے، صرف ان ممبرز کے شعروں کا انتخاب کیا جائے گا جنھوں نے مکمل طور پر رولز کو فالو کیا ہوگا۔

انعامات:
تین بہترین اشعارکا انتخاب کیا جائے گا
اس بار پرائز بذریعہ چیک دیئےجاینگے انشاءاللہ
پہلا انعام ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ ۔۔۔۔۔300 پوائنٹس کا چیک
دوسرا انعام۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ ۔۔200 پوائنٹس کا چیک
تیسرا انعام۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ 100 پوائنٹس کا چیک۔



مقابلے میں شرکت کرنے کی آخری تاریخ 20 فروری 2009 ھے

تصویر یہ ھے

http://www.urduphoto.com/oucache/in/i44.tinypic.com/29fdtfb.jpg

سلمان سلّو
27-01-2009, 08:36 AM
پہلا شعر:۔۔
داغ فراق، زخم وفا، اشک خوں فشاں
روز اول سے ہیں یہی جاگیریں عشق کی

دانیہ
27-01-2009, 08:46 AM
اوّل

دل عشق میں بے پایاں، سودا ہو تو ایسا ہو
دریا ہو تو ایسا ہو، صحرا ہو تو ایسا ہو

اس درد میں کیا کیا ہے، رسوائی بھی لذّت بھی
کانٹا ہو تو ایسا ہو، چھبتا ہو تو ایسا ہو

دانیہ
27-01-2009, 08:47 AM
دوسرا شعر

گلاب کی طرح عشق میرا مہک رہا ہے
مگر ابھی اس کی کشتِ دل میں کھلا نہیں ہے

Askk
27-01-2009, 10:32 AM
(۱)


میں نے فانی ڈوبتے دیکھی ہے نبض کائنات
جب مزاج یار برہم سا نظر آیا مجھے

اجالا
27-01-2009, 04:55 PM
(1)

وہ سمندر ھے تو پھر میری روح کو سیراب کرے
تشنگی کیوں مجھے دیتا ھے سرابوں کی طرح

رفعت
27-01-2009, 06:57 PM
پہلا شعر

سمندر کے سفر میں اس طرح آواز دے ہم کو
ہوائیں تیز ہوں اور کشتیوں میں شام ہو جائے

اجالے اپنی یادوں کے ہمارے ساتھ رہنے دو
نجانے کس گلی میں زندگی کی شام ہو جائے

رفعت
27-01-2009, 07:00 PM
دوسرا شعر

کہنے کو اس سے عشق کی تفسیر ہے بہت
پڑھ لے تو صرف آنکھ کی تحریر ہے بہت

بیٹھا رہا وہ پاس تو میں سوچتی رہی
خاموشیوں کی اپنی بھی تاثیر ہے بہت

رفعت
27-01-2009, 07:08 PM
سوری ایک بار سگنیچر آف نہیں کیا ایڈیٹ کر دوں کیا

رفعت
27-01-2009, 07:12 PM
3


بہت قریب سے لوٹا ہے دوستوں نے ہمیں
کہ پھول ہاتھ میں اور آستین میں خنجر تھے

رفعت
27-01-2009, 07:15 PM
4


وہ اک لمحہ جسے وقت کی ہوا نہ لگے
خزاں کی دھوپ میں کھلتا ہوا گلاب لگے

یہ اپنی اپنی نظر کا معاملہ ٹھہرا
کسی کو ذرہ،،کسی کو آفتاب لگے

اجالا
27-01-2009, 07:17 PM
(2)

یھی مٹی جو کنارے پہ نظر آتی ھے
اور ھو جاتی ھے پانی میں اتر کر لوگو

اجالا
27-01-2009, 07:21 PM
(3)

یہ جو پانی میں چلا آیا سنھری سا غرور
اس نے دریا میں کھیں پاؤں اتارا ھو گا

اجالا
27-01-2009, 07:25 PM
(4)

ان کی نفرت اور محبت میری ایسا دریا ھے
ساتھ دونوں چلتے ھیں اور پانی مدغم نھیں ھوتا
جب دلوں میں بڑھ جائیں حد سے بڑھ کر رنجشیں
تب میں اور تو ھی رھتا ھے کبھی لفظ"ھم"نھیں ھوتا

اجالا
27-01-2009, 07:30 PM
(5)

اے میرے احساس جنوں کیا مجھے دینا
دریا اسے بخشا ھے تو صحرا مجھے دینا
جب وقت کی مرجھائی ھوئی شاخ سنبھالو
اس شاخ سے ٹوٹا ھوا لمحہ مجھے دینا

فائزہ صدف
27-01-2009, 08:02 PM
پہلا شعر

زندگی تیری راہ میں شب و روز تیری چاہ میں
جو اجڑ گیا وہ بسا نہیں جو بچھڑ گیا وہ ملا نہیں
جو دل و نظر کا سرور تھا میرے پاس رہ کے بھی دور تھا
وہی اک گلاب امید کا میری شاخ جاں پہ کھلا نہیں

Kash
27-01-2009, 09:48 PM
پہلا شعر

عشق نے کیا کیا رنگ سہے ہیں تم کیا جانو
آگ میں کتنے پھول کھلے تم کیا جانو

ہم نے ایک تمہارے نام کی خوشبو سے
کتنے دشت بہار کیے تم کیا جانو

رفعت
27-01-2009, 11:26 PM
سوری ایک ریپلائی میں سیگنیچر آف کرنا بھول گئی کیا اسے ایڈٹ کر سکتی ھوں?


;d;d

anadil
27-01-2009, 11:46 PM
پہلا شعر


اک بہتی ریت کی دہشت ہے
اور ریزہ ریزہ خواب میرے
بس ایک مسلسل حیرت ہے
کیا ساحل کیا گرداب میرے

Meem
28-01-2009, 12:31 AM
شعر # 01

سرگوشیاں لہروں کی اور دور خاموش ساحل
پوچھے وہ گھر مٹی کا میں آج کیوں اکیلا ہوں

Meem
28-01-2009, 12:32 AM
شعر # 02
مٹایا لہر نے جو خاکہٴ دل مٹی کا
دلٍ نامراد کے ٹکڑے ہوئے ہزار
اپنے سپنوں کے ساحل سے ٹکرائی
اور ہوئی میں اپنوں سے لاچار

سلمان سلّو
28-01-2009, 01:39 AM
سوری ایک بار سگنیچر آف نہیں کیا ایڈیٹ کر دوں کیا


سوری ایک ریپلائی میں سیگنیچر آف کرنا بھول گئی کیا اسے ایڈٹ کر سکتی ھوں?


آف کورس آپ کرسکتی ہوں ایڈیٹ نہ کرنے کی اجازت اشعار کے لئے ہیں،رفعت سسٹر آپ نے پہلے دو شعروں کے سوا، دوسرے اشعار کیساتھ نمبرز بھی نہیں ڈالیں ہیں۔۔اس کو بھی آپ ٹھیک کرسکتی ہو۔۔۔۔



;d;d


۔۔>:(۔۔:(۔۔۔۔۔۔۔;)۔۔

Rubi
28-01-2009, 03:34 AM
پہلا شعر
لہروں میں ڈوبتے رہے دریا نہیں ملا
اس سے بچھر کر پھر کوئی ویسا نہیں ملا
وہ بھی بہت اکیلا ہے شاہد میری طرح
اسکو بھی کوئی چاہنے والا نہیں ملا

Raising Moon
28-01-2009, 11:51 AM
شعر نمبر۫۔01
طوفانوں کی دوشمنی سے نہ بچتے تو خیر تھی
ہمیں تو ساحل سے دوستی کے بھرم نے ڈبودیا

رفعت
28-01-2009, 12:34 PM
5





پرکھنا مت ،پرکھنے سے کوئی اپنا نہیں رہتا



کبھی دیر تک آئینے میں چہرہ نہیں رہتا







بڑوں سے ملنے میں ہمیشہ فاصلہ رکھنا



جب دریا سمندر سے ملا،دریا نہیں رہتا

Raising Moon
28-01-2009, 03:32 PM
شعر نمبر۫۔02
میں لفظ ڈھونڈ ڈھونڈ کے تھک گیا عدیم
وہ پھول دے کے پیار کا اظہار کر گیا

Raising Moon
28-01-2009, 03:54 PM
شعر نمبر۫۔03

یہ جال سارے ہیں عارضی, یہ گلاب سارے ہیں کاغذی
گل آرزو کی جو باس تھے وہی لوگ مجھ سے بچھڑ گئے
جنہیں کر سکا نا قبول میں وہی شریک راہ سفر ہوئے
جو میری طلب میرے آس تھے وہی لوگ مجھ سے بچھڑ گئے

Saahil
28-01-2009, 07:34 PM
پہلا شعر ۔۔ ۔ ۔


ساحل کی گیلی ریت پر میں نے
تیری یاد کا ایک پھول رکھا ھے
یہی کام ھے ، اب تو بس ساحل
لہر لے نہ جائے،ھوا سے بچا رکھا ھے


دوسرا شعر۔ ۔ ۔ ۔


گیت گاتی ھے ھوا ساحل کی
تیرے لہجے کا گماں ھوتا ھے
محفل یاد سجا لیتے ھیں
کیا خؤب سما ھوتا ھے


تیسرا شعر۔ ۔ ۔ ۔


ساحل بھی اپنا، طوفاں بھی اپنا
اب پار اتریں یا ڈوب جائیں
بھولی ہوئی بات اِک یاد آئی
لیکن ساحل اب کس کو سنائیں

anadil
28-01-2009, 10:39 PM
دوسرا شعر

گو بہاروں میں چمن ہوتے ہیں آباد مگر
پھول پامالی سے ڈرتے ہیں، کبھی سوچا ہے

anadil
28-01-2009, 10:40 PM
Assalam o alikum
main ne apne oper wale post main signature off nahi kia tha is wajah se edit kia hai or sirf signature ko off kia hai.

aabehayaat
28-01-2009, 11:27 PM
تجھےچاند بن کر ملا تھا جو ، تیرے ساحلوں پہ کھلا تھا جو
وہ تھا ایک دریا وصال کا ، سو اتر گیا اسے بھول جا

Askk
29-01-2009, 12:05 AM
(۲)

جو ہنستے ہو تم نے وصل کے خواب دیکھے ہیں
اسلیے روتے ہیں ہجر کے ہم نے عزاب دیکھے ہیں
بنا کے دل اُس میں پھول رکھ کر ساحل پر
کچھ سوچتے تھے ہم اور آتے سیلاب دیکھے ہیں

Askk
29-01-2009, 12:22 AM
(۳)

ایک لمحے کا تعلق بھی بہت ہوتا ہے
عشق کو سود و زیاں میں نہیں رکھا جاتا

anadil
01-02-2009, 04:16 PM
تیسرا شعر

اک اشک چھلک جائے تو طوفاں اٹھا دے
رکھتا ہوں میں آنکھوں کے پیالوں میں سمندر
اک چاند سے کیا اس کی ملاقات ہوئی ہے
رہتا ہے ہمہ وقت اجالوں میں سمندر

سلمان سلّو
02-02-2009, 12:07 AM
دوسرا شعر:
خشکی و تری پر قادر ہے آسان مری مشکل کردے
ساحل کی طرف کشتی نہ سہی،کشتی کی طرف ساحل کردے

Muhammad Atique
02-02-2009, 09:56 AM
گلاب عشق ہے اور ہے دریا لوگو
کیا کہے کوئ کہ کون ہےتنہا لوگو
فقط اس بات کا رونا نہیں کہ ہوں تنہا
یہ راز بھی ہے کہ وہ ہوا رسوا لوگو


شاعر : عتیق الرحمان

Kainat
02-02-2009, 09:45 PM
ھم کو مٹا سکے یہ زمانے میں دم نھیں

ھم سے خود زمانہ زمانے سےھم نھیں

Rubi
04-02-2009, 01:53 AM
دوسرا شعر۔ ۔ ۔ ۔

کہو دکھ کے سمندر کا سفر اب تک رھا کیسا ?
کہا ، الجھے کناروں کا کوئی امکان دیکھا ھے


کہو دریا کناروں سے بھلا کیا گفتگو ٹھہری?
کہا ، دریا کو اپنے ضبط پہ حیران دیکھا ھے

Rubi
04-02-2009, 02:06 AM
تیسرا شعر

ہر اک رات میری انتظار میں گزری

تمھارے بعد تمھارے ہی خواب میں گزری

میں اک پھول تھی وہ مجھکو رکھ کر بھول گیا

تمام عمر میری اسکی کتاب میں گزری

سلمان سلّو
05-02-2009, 12:25 AM
تیسرا شعر:
ساحل پہ رہ کر ہم کو ریت ہی ملی
ہم ڈوبتے تو گوہر نایاب دیکھتے

Askk
05-02-2009, 12:58 AM
(4)

اب کیا کہیں یہ سنگ دلی ہے کہ بے حسی
دل ہے غموں کی ضد پہ مگر آنکھ نم نہیں

Askk
05-02-2009, 01:04 AM
(5)

وفا کی بستی میں رہنے والوں سے محسن ہم نے یہ طور سیکھا
لبوں پہ صحرا کی تشنگی ہو ، مگر دل میں پنہاں سمندر

Swan
06-02-2009, 04:31 AM
یہ جو رفاقتوں کی خواہشوں میں دل منتظر ہے پڑا ہوا

اسے کیا خبر کہ جدائیوں کے عذاب کتنے شدید ہیں

سوبی
14-02-2009, 05:40 AM
1

تیرے جاگنے کو مہکیں کبھی گلستان کبھی چراغاں
میرے لیے خواب کا اشارہ کبھی سمندر کبھی ستارہ
میرے بھٹکنے پہ جان محسن یہ طنز کیسا اس جہاں میں
ہوئے ہیں بے سمت و بے کنارا کبھی سمندر کبھی ستارہ

2

پھر اس کے بعد تمہیں اور کچھ نہ بھائے گا
ہمارے چہرے کو دیکھو کتاب رہے دو
اب اپنی یاد کی خوشبو بھی ہم سے چھینو گے
کتاب دل میں یہ سوکھا گلاب رہنے دو

3

چھوئیں گے اڑ کے فضاؤں میں ماہ کامل کو
بلند ہو کے نہ دیکھیں گے اب وہ ساحل کو
لگا کے تیر کو ترکش میں ایسا لگتا ہے
نشانہ صرف بنائے گے وہ میرے دل کو

سلمان سلّو
22-02-2009, 05:04 AM
اس مقابلے کا وقت ختم ہوگیا ہے رزلٹ کا اعلان انشاءاللہ بہت جلد کر دیا جائے گا۔۔۔
شکریہ۔۔