PDA

View Full Version : امکان بھائی کا انٹرویو



Samreen Waheed
03-12-2008, 10:39 PM
اسلام علیکیم ناظرین میں عائیش آپ سب کو خوش آمدید کہتی ہوں۔ آج جس شخصیت کو مّیں انٹرویو کے لیے دعوت دے رہی ہوں ان کی میں کیا تعریف کروں
تعریف اس خدا کی جس نے امکان کو بنایا۔
ایک مجبور صحافی ، محب الوطن کالم نگار، بقول ان کے جنات بھی قبضے میں رکھتے ہیں۔اپنی منفرد انداز تحریر اور حاظر جوابی کی بنا پر نمایاں حیثیت اختیار کر چکے ہیں۔ مگر کچھ لوگوں کو ان سے شکایت بھی ہے کہ یہ ان کو زبردستی اپنے کالم پڑھنے پر مجبور کرتے اور اپنے جنات کا خوف بھی دلاتے ہیں۔ چلیے آج ان سے ان کی شخصیت کے بارے میں کچھ جانتے ہیں- جی تو امکان صاحب تشریف لایے اور ہمارے سوالات کے جواب دیجیے-

1- آپ کا اصلی نام کیا یے

Samreen Waheed
03-12-2008, 11:51 PM
2-آپ کا نک کیا ہے

Samreen Waheed
03-12-2008, 11:52 PM
اور اپنا سن پیدائش صحیح بتایے3آپ کب اور کہاں پیدا ہوے

Samreen Waheed
04-12-2008, 12:40 AM
اور باقی سب ممبران بھی سوال کر سکتے ہیں

Samreen Waheed
04-12-2008, 11:55 AM
5- آپ کی تعلیم کتنی ہے

Samreen Waheed
04-12-2008, 12:01 PM
6- آپ رشتہ ازدواج سے منسلک ہو چکے ہیں یا ابھی تک آزاد پنچھی ہیں

Lubna Ali
04-12-2008, 12:09 PM
bachpan mey kia banna chahtey they or q chahtey they?

imkan
04-12-2008, 12:09 PM
اسلام علیکیم ناظرین میں عائیش آپ سب کو خوش آمدید کہتی ہوں۔ آج جس شخصیت کو مّیں انٹرویو کے لیے دعوت دے رہی ہوں ان کی میں کیا تعریف کروں
تعریف اس خدا کی جس نے امکان کو بنایا۔
ایک مجبور صحافی ، محب الوطن کالم نگار، بقول ان کے جنات بھی قبضے میں رکھتے ہیں۔اپنی منفرد انداز تحریر اور حاظر جوابی کی بنا پر نمایاں حیثیت اختیار کر چکے ہیں۔ مگر کچھ لوگوں کو ان سے شکایت بھی ہے کہ یہ ان کو زبردستی اپنے کالم پڑھنے پر مجبور کرتے اور اپنے جنات کا خوف بھی دلاتے ہیں۔ چلیے آج ان سے ان کی شخصیت کے بارے میں کچھ جانتے ہیں- جی تو امکان صاحب تشریف لایے اور ہمارے سوالات کے جواب دیجیے-

1- آپ کا اصلی نام کیا یے
عائش شکریہ آپ نے میرے سارے پول کھول دیے ہیں اور میرے سارے طریقہ واردات بھی کنگھال ڈالے ہیں مجھے کیا معلوم تھا کہ آپ عائیش کے پردے میں لپٹی کوئی کم سن بچی نہیں بلکہ خاصی ذہین محترمہ ہیں آپ کا انٹریو کا انداز سچی بات ہے اچھا لگا مجھے ایسا لگ رھا ہے جیسے امکان(رضیہ والے محاورے سے استعارہ) غنڈوں میں پھنس گئے ہوں خیر اس چنگل سے نکلنے کی ہمیں کوئی خاص ضرورت نہیں کیوں کے امکان کے جن کب کام آئیں گے آپ نے نام پوچھا ہے یہ ماضی سے روایت رہی کہ عامل صحافیوں کے دو نام ہوا کرتے ہیں آپ نے ادیبوں کے ھاں بھی دیکھا ہوگا کے انکا اصل نام کچھ ہوتا ہے اور مشھور وہ کسی اور نام سے ہوجاتے ہیں میں چونکہ عامل صحافی یعنی رپورٹر بھی ہوں اس لیے میرا اصل نام تو محمد زبیر ہے جب کے صحافت میں پیشہ وارانہ نام زبیر احمد ظہیر ہے

Lubna Ali
04-12-2008, 12:10 PM
?jin banney ka khayaal kesey aaya

우스만
04-12-2008, 12:11 PM
Aap kitnay behn bhai hain

우스만
04-12-2008, 12:11 PM
aur behn bhaion men apka konsa number hai

Lubna Ali
04-12-2008, 12:12 PM
or aap ko gher mey piyaar sey kiya kehtey hein? or q kehtey hein

우스만
04-12-2008, 12:12 PM
ghar men barron ka aap ka kitna raob chalta hai

aur choton par kitna raob hai aapka

Lubna Ali
04-12-2008, 12:14 PM
aap ney education kitni hey?

Lubna Ali
04-12-2008, 12:14 PM
nalaeeq student they ya achey bachey waley student?

Lubna Ali
04-12-2008, 12:16 PM
one urdu mey kesey aana howa

Lubna Ali
04-12-2008, 12:16 PM
geo dekhney key elawa or kiya kertey hein ??? yani ...........hahaha

Lubna Ali
04-12-2008, 12:17 PM
one urdu mey most favourite member kon hey aap ka

imkan
04-12-2008, 12:17 PM
2-آپ کا نک کیا ہے
میرا نک نیم امکان ہے یہ دراصل میرے کالموں کے عنوان امکانات سے لیا گیا ہےجب ون اردو پر ہم داخلہ کی کوشش میں مصروف تھے تو ہم نے امکانات کو اختیار کرنے کی لاکھ کوشش کرلی مگر یہ ہو کر نہ دیا تب ہم نے امکانات سے ملتا جلتا نام امکان رکھا امکانات میں مستقبل کے تجزیہ کے معنی موجود ہیں ہم نے اپنے سر درد ی جیسی خطرناک بیماری پیدا کرنے والے کالموں میں مستقبل کی جانکاری دینے کی کوشش ہمیشہ کی ہے آپ نے نجومیوں کو فٹ پاتھ پر دیکھا ہو گا بس ہمارے تجزیے کو بھی آپ نجومیوں والی بھڑک ہی سمجھ لیں

Samreen Waheed
04-12-2008, 12:19 PM
امی ابو کے فرمانبردار بچے ہیں یا گستاخ

Lubna Ali
04-12-2008, 12:19 PM
mirror dekhtey hein to kia sochtey hein?

Lubna Ali
04-12-2008, 12:21 PM
favourite food...fruit...vegetable........drink

Samreen Waheed
04-12-2008, 12:22 PM
بھوک لگے تو کیا کرتے ہیں

Lubna Ali
04-12-2008, 12:24 PM
?kis qism key log aap ko pasand hein....

imkan
04-12-2008, 12:26 PM
اور اپنا سن پیدائش صحیح بتایے3آپ کب اور کہاں پیدا ہوے
ابو کی سینہ بہ سینہ روایت اور انکی تحریری یاداشت کے مطابق ہماری پیدائش 17 جنوری 1979کو آزاد کشمیر کے دارلاحکومت مظفر آباد کے نواحی علاقے منڈگراں میں ہوئی جب ہمارے ابو بسلسلہ ملازمت یہاں مقیم تھےیہ علاقہ مظفر آباد سے 25کلومیٹر وادی کوٹلہ میں واقع ہے

Lubna Ali
04-12-2008, 12:33 PM
ap ka pasandeeda topic konssa hey jis per aap sab sey ziyadha likhna pasand kertey hein

imkan
04-12-2008, 12:34 PM
5- آپ کی تعلیم کتنی ہے
تعلیم ہماری یوں سمجھیں نہ ہونے کے برابر ہے پہلے یہ سلسلہ چھوٹ گیا تھا اس سال ہی آزاد کشمیر یونیورسٹی سے بڑی مشکل سے بی اے کیا ہے اور جس سبجکٹ کی وجہ سے خوشی خوشی امتحان دیا اس میں اتفاقا نمبر کم ہیں ویسے بھی پاکستان کی سیاسیات ہی اسی ہے اس لیے ہمارے سیاسات میں نمبر کم ہیں عربی اور فارسی علوم بھی پڑھے ہوئے ہیں انگریزی خطرناک حد تک کمزور ہے اتنی بھی نہیں جتنا آپ کو شک پڑے گا آپ کو ہماری تعلیم کی کمی پر زیادہ پھولنے کی ضرورت نہیں یہ سلسلہ جاری رہے گا

سمر
04-12-2008, 12:40 PM
السلام علیکم
کیا آپ باقاعدہ طور پر کسی جریدے یا اخبار سے منسلک ھیں

سمر
04-12-2008, 12:47 PM
ذرد صحافت کو آپ کس طرح دیکھتے ھیں اور اس کا تدارک کیسے ممکن ھے؟

سمر
04-12-2008, 12:49 PM
کیا آپ نظریاتی صحافت کے قائل ھیں؟

imkan
04-12-2008, 12:49 PM
bachpan mey kia banna chahtey they or q chahtey they?
ہمیں ڈاکٹر ی وکالت اور صحافت یہ تنیوں شعبے بچپن سے پسند تھے ڈاکٹر کی ہمدردی اور وکیل کا سماعت کے دوران بحث اور جرح کا انداز یہ سب کچھ ہمارے لیے پرکشش تھا اور صحافت کی اثر انگیزی بھی متاثر کن تھی ان تنیوں کو اکٹھا نہیں کیا جاسکتا تھا مگر صحافت ایک ایسا واخد پیشہ ہے جسے اگر ٹوٹ کر چاہا جائے اور محنت کی جائے تو تمام شعبوں کی اور نہ سہی کم از کم بنیادی معلومات تو حاصل ہو جاتی ہیں اس لیے ہم نے جسے آسان سمجھا یہ سب سے مشکل فیلڈ نکلی مگر ہم اسی کے ہو کررہ گئے 1999کا ون دن جس دن ہم نے کسی پیشہ وارنہ ہفت روزہ میں لکھنا شروع کیا اور آج کا دن ہماری آج محبت صحافت ہی ہے

سمر
04-12-2008, 12:51 PM
کیا آپ سمجھتے ھیں کہ اس دور میں بھی صحافی غیر جانبدار رہ سکتا ھے؟

سمر
04-12-2008, 12:53 PM
پاکستان کی صحافت کا موازنہ جدید دنیا کی صحافت سے کس طرح کرتے ھیں؟

imkan
04-12-2008, 12:59 PM
aur behn bhaion men apka konsa number hai
ہم بہن بھائیوں میں سب سے بڑے ہیں اس لیے رعب وغیرہ ہماراہی چلتا ہے امی ابو بھی اب عزت کرتے ہیں ابو سے ہم آج بھی ڈرتے ہیں بچپن میں ایک دو بار کان پکڑا کر ابو نے مرغا بنا یا تھ اس کے علاوہ کھبی ابو نے مارا نہیں ہمارے ابو بھی اب ھمیں ادب سے بلاتے ہیں اس پر ہم کئی بار احتجاج بھی کیا مگر یہ روش انہوں نے ترک نہیں کی امی سے چھوٹا موٹا جگڑا بھی ہو جاتا ہے چونکہ اولاد نسبتا ماں کے زیادہ قریب ہوتی ہیں ہماری امی خاصی رعب دار خاتون ہیں ابو ہمارے تو ایسا لگتا ہے ان کو امی ہونا چاہیے تھا کیونکہ بہت نرم ہیں یہ سوال خاصے ممبر نے کیا ہے اس لیے ہم نے کوشش کی ہے سب کو مشترکہ جواب دے دیا جائے لبنا کو جواب بھی اس میں موجود ہے

Samreen Waheed
04-12-2008, 01:00 PM
یہ سلسلہ جاری بھی رہنا چاہیے جیسا کہ حکم ہے پنگھوڑے سے قبر تک علم حاصل کرو

تعلیم ہماری یوں سمجھیں نہ ہونے کے برابر ہے پہلے یہ سلسلہ چھوٹ گیا تھا اس سال ہی آزاد کشمیر یونیورسٹی سے بڑی مشکل سے بی اے کیا ہے اور جس سبجکٹ کی وجہ سے خوشی خوشی امتحان دیا اس میں اتفاقا نمبر کم ہیں ویسے بھی پاکستان کی سیاسیات ہی اسی ہے اس لیے ہمارے سیاسات میں نمبر کم ہیں عربی اور فارسی علوم بھی پڑھے ہوئے ہیں انگریزی خطرناک حد تک کمزور ہے اتنی بھی نہیں جتنا آپ کو شک پڑے گا آپ کو ہماری تعلیم کی کمی پر زیادہ پھولنے کی ضرورت نہیں یہ سلسلہ جاری رہے گا

imkan
04-12-2008, 01:14 PM
السلام علیکم
کیا آپ باقاعدہ طور پر کسی جریدے یا اخبار سے منسلک ھیں
جی میں باقاعدہ طور پر 1999سے اس فیلڈ میں ہوں کراچی کے ہفت روزہ میگزین فاتح انٹرنیشل سے وابستہ ہوا تھا یہ ہفت روزہ تکبیر کے نامی گرامی لوگوں نے شروع کیا تھا جب ہم اس میں آئے تو پہلی ٹیم تبدیل ہو چکی تھی اچھا میگزین تھا 2002تک ہم اس کے ساتھ رہے ہمیں ہفتے میں دو رپورٹیں دینا ہوتیں تھیں اور ہمارا ماہانا معاوضہ 4ہزار روپے تھا اس کے ساتھ ہی 2001 میں ہم کراچی سے نکلنے والے روزنامہ اسلام سے وابستہ ہوگے اور بطور اسٹاف رپورٹر اس سے وابستہ ہوئے اب 8سال ہونے کو ہیں یہاں ہماری رپورٹینگ کا دائرہ کار مزہب اور سیاست ہے ہماری خصوصی مہارت رلیجس مذہبی امور ہیں ہماری خبریں ہفت روزہ ضرب مومن بھی شایع کرتا رہا ہے

Samreen Waheed
04-12-2008, 01:18 PM
امکان صاحب سے گزارش ہے کہ سوالات کے جواب ترتیب سے دیں

Samreen Waheed
04-12-2008, 01:26 PM
Arey kidher ge Imkan sahib

Samreen Waheed
04-12-2008, 01:26 PM
is tarah bina bataye interview chor ker jana Adaab k khilaaf hai

imkan
04-12-2008, 02:04 PM
6- آپ رشتہ ازدواج سے منسلک ہو چکے ہیں یا ابھی تک آزاد پنچھی ہیں

ہماری کوشش ہے کہ ان سوالوں کے جوابات دیں جن سے کسی کو فائدہ ہو اب ہمارے رونے دھونے سے تو کسی کو فائدہ نہیں ہو سکتا مگر سوالات کا کیا جائے رھی بات شادی کی تو یہ واقعی ہی رونے کی بات ہے امکان بھائی کی شادی نہیں ہو سکی باوجود بسیار کوشش کے ہم نے اس سلسلہ میں پاکستان کے تمام مسالک کے جیدہ جیدہ متبرک مذھبی شخیصیات سے دعائیں بھی کروئیں مگر اللہ کے ہاں اندھیر تو نہیں ہو سکتی دیر ہی ہے چونکہ حج کی خیبریں بھی ہماری ذمہ داری رہے ہیں اس لیے کئی حج آرگنائزر دوست ہیں ان میں کئی ایک نے حجر اسود میں کئ ایک مقامات پر دعائیں کی ہیں اس کا اتنا فائدہ ضرور ہوا کہ ایک ناممکن رشتہ ممکن ہو گیا ہے ہونے والی محترمہ جن کا غالب امکان ہے ہماری کزن ہیں مگر شادی میں خاندانی روکاوٹیں بدستور حائل ہیں امید ہے کے ایک دوسال میں یہ معامل حل ہو جائے گا اور ہم ایک مذہبی ذمہ داری سے عہدہ بر آہو سیکیں گے اسباب کی دنیا میں ہم نے کوئی کسر نہیں چھوڑی مگر ہوگا وہ ہی جو خدا کو منظور ہوگا چونکہ امکان بھائی دراصل خود امکان پر لٹک رہے ہیں یہ ان کے نک نام کے ساتھ کیسا بر محل حسن اتفاق ہے غالبا آپ لوگوں کو امکان کی ایک اور وجہ معلوم ہو گی ہو گی

Samreen Waheed
04-12-2008, 02:09 PM
Imkan sahib hamari dua hai d0 saal k bajey 2 month mei hi ap ka mamla hal ho jaey Aye nazreen sub mil ker Imkan sahib ke liye Ijtamai dua karein


ہماری کوشش ہے کہ ان سوالوں کے جوابات دیں جن سے کسی کو فائدہ ہو اب ہمارے رونے دھونے سے تو کسی کو فائدہ نہیں ہو سکتا مگر سوالات کا کیا جائے رھی بات شادی کی تو یہ واقعی ہی رونے کی بات ہے امکان بھائی کی شادی نہیں ہو سکی باوجود بسیار کوشش کے ہم نے اس سلسلہ میں پاکستان کے تمام مسالک کے جیدہ جیدہ متبرک مذھبی شخیصیات سے دعائیں بھی کروئیں مگر اللہ کے ہاں اندھیر تو نہیں ہو سکتی دیر ہی ہے چونکہ حج کی خیبریں بھی ہماری ذمہ داری رہے ہیں اس لیے کئی حج آرگنائزر دوست ہیں ان میں کئی ایک نے حجر اسود میں کئ ایک مقامات پر دعائیں کی ہیں اس کا اتنا فائدہ ضرور ہوا کہ ایک ناممکن رشتہ ممکن ہو گیا ہے ہونے والی محترمہ جن کا غالب امکان ہے ہماری کزن ہیں مگر شادی میں خاندانی روکاوٹیں بدستور حائل ہیں امید ہے کے ایک دوسال میں یہ معامل حل ہو جائے گا اور ہم ایک مذہبی ذمہ داری سے عہدہ بر آہو سیکیں گے اسباب کی دنیا میں ہم نے کوئی کسر نہیں چھوڑی مگر ہوگا وہ ہی جو خدا کو منظور ہوگا چونکہ امکان بھائی دراصل خود امکان پر لٹک رہے ہیں یہ ان کے نک نام کے ساتھ کیسا بر محل حسن اتفاق ہے غالبا آپ لوگوں کو امکان کی ایک اور وجہ معلوم ہو گی ہو گی

imkan
04-12-2008, 02:18 PM
?jin banney ka khayaal kesey aaya
جن کو ساتھ رکھنا یا خود جن بننا اس معاملے کو امکان بھائی کی مجبوری سمجھ کر معاف کردیا جائے وجہ یہ ہے امکان بھائی کو کالم تو پڑھانے تھے نا آپ نے دیکھا ہو گا چیٹ روم میں امکان سلام دعا کے بعد کالم کی بات کرتے ہیں یہ بات ان لوگوں کو خاص طور پر معلوم ہے جن کا امکان سے واستہ پڑ چکا ہے اصل معاملہ یہ کہ ہم نے کالم ُپڑّھانے کی منصبوبہ بندی کی اور یہ دیکھا کہ اس فورم پر خواتین کی تعداد زیادہ ہے اور اصل قاری بھی یہ ہی لوگ ہیں ہم نے عورتوں کی نفسیات سے کام لیا عام طور پر خواتین جنات وغیرہ سے ڈرتی ہیں اس لیے ہم نے کسی کو منتیں کر کے کالم پڑھائے کسی کو ڈراکر کسی کو حاضر جوابی سے متاثر کیا تو یہ سب کالم پڑھانے کے طریقے تھے ہم نے ان خواتین اور بچوں کو اتنا ڈرایا کہ اگر گھر میں بلی بھی برتن گرادے لوگ مان جائیں کے امکان بھائی کے جن آئے تھے سچ تو یہ ہے امکان بھائی بھی جنوں سے اتنا ڈرتے ہیں جنتا کوئی سب سے زیادہ بزدل خاتوں ڈر سکتی ہےمگر اب ایسا نہیں ہے جن اس مجبوری کو سمجھ چکے ہیں اور وہ انسانوں کی طرح اتنے بے رحم بھی نہیں کہ کسی کا ساتھ نہ دے سکیں جن اب امکان بھائی کے دوست بن چکے ہیں

imkan
04-12-2008, 02:28 PM
امی ابو کے فرمانبردار بچے ہیں یا گستاخ
دنیاکا کوئی شخص یہ نہیں کہ سکتا کہ وہ امی ابو کا گستاخ ہےایسے لوگوں کو علامات سے پہچانا جاتاہے جو لوگ کسی ایک جگہ ٹک کر کام نہ کریں اور کوئی کام مستقل نہ کریں ھر اچھی جگہ سے کام چھوڑ کر بھاگ جائیں عام طور پر یہ کسی ماں باپ کے نافرمان کی نشانی ہوتی جن لوگوں کو ماں باپ کی بدعا ہو ان کا کوئی ٹکانہ نہیں ہو تا یہ کسی مخصوص شعبے کی بات نہیں مگر ہے سچ اس لحاظ سے ہم تو نافرمان نہیں ہیں صحافت میں زیادہ سے زیادہ اداروں سے وابسگتی سے صحافتی تجربے میں اضافے کا باعث سمجھی جاتی ہے مگر اس کے باوجود ہم ایک ہی جگہ 8سال سے ہیں اگر کسی ایک جگہ جم کر کام کرنا ماں پاپ کی فرمان براداری کی علامت ہے تے تو بتائیے ہم سا فرمان بردار کون کون ہو

imkan
04-12-2008, 02:43 PM
one urdu mey kesey aana howa

اردو کالموں کی ویب سائٹ کو گوگل پرسرچ کررہے تھے کہ اس دوران ون اردو پر نظر پڑ گئی اس میں جانکنے کی کوشش کی تو نہ دیکھ سکے پھر داخلہ لیا تو امکانا ت کا اندراج نہ ہوا تو امکان سے کام چلا لیا شروع میں صرف کالم پوسٹ کرنے آتے تھے اور چلے جاتے تھے زیادہ قارئین کی تعداد نہ ہو سکی تو تشویش ہوئی تھوڑا تھوڑا تعارف کرتے گئے اور پھر جب فرصت ملتی گی آتے گئے شروع میں بہت ڈرتے تھے اب تو جنات کو ساتھ لے کر دھڑلے سے آتے ہیں

سمر
04-12-2008, 02:54 PM
مذھبی جرائد سے منسلک ھونے کی وجہ مذھبی رحجان ھے یا کسی کی خواھش؟

سمر
04-12-2008, 02:56 PM
بطور صحافی کبھی کسی کالم کے لکھنے پر پچھتاوا ھوا؟

سمر
04-12-2008, 02:58 PM
کبھی کسی کے خلاف لکھنے پر دھمکی ملی؟
یا کبھی ڈر لگا؟

imkan
04-12-2008, 03:05 PM
ذرد صحافت کو آپ کس طرح دیکھتے ھیں اور اس کا تدارک کیسے ممکن ھے؟

زرد صحافت کسیے آتی ہے
ابھی زیادہ پرانی بات نہیں لاھور میں ٹی وی 5 کے ایک کارکن 4ماہ سے تنخواہ نہ ملنے پر خودکشی کر بیھٹے ہیں اس افسوناک واقعے پر تمام صحافی تنظیمیں احتجاج کر رہی ہیں پاکستان میں صحافی اور اخباری مالکان یہ دو الگ مخلوق ہیں محنت کرتا کارکن ہے اور پیٹ مالک کا بھر تا جاتا ہے اخباری ملکان کروڑں سے اربوں تک جارہے ہیں اور کارکن متوسط سے غربت تک اور غربت سے خودکشی تک آگئے ہیں ٹی وی اینکر گنتی کے چند ہون گے جو اچھے معاوضے لے رہے ہیں ورنہ تو مجموعی طور پر آج بھی برا حال ہے
دوچار کے علاوہ تما م نجی چینلز کا برا حال ہے کئی بند ہوچکے ہیں اور جیو تک کی پروئیویٹ پروڈکشن کو ادائیگیاں بند ہیں پاکستان میں صحافت کی الکٹرانک ترقی کو زیادہ عر صہ نہیں گزار ٹی وی بھی ان کے ہیں جن کے اخبار ہیں تو اجارہ داری ہے کارکنوں اور مالکان کے ویج ایوارڈ کا مقدمہ کئی سال سئے سپریم کورٹ میں زیر سماعت ہے تمام مالکان ایک ہیں جب آپ پورا اور جائز معاوضہ نہیں دیں گے تو زرد صحافت تو ہوگی درسری بات جو شخص پیسے کی لاچ میپڑ جائے اس کی صحافت ختم ہو جاتی ہے کیونکہ صحافت سمجھوتے کا نام نہیں اور پیسہ سمجھوتہ ہے جب سمجھوتہ ہو گیا تو خبر ختم ہو گی صحافت میں دو چیزین ہوتی ہیں یا تو آپ نام بنائیں یا پیسہ پیسہ بنانے والے کی سا کھ خراب ہو کر اس کی صحافت بھی ختم ہو جاتی ہے نام بنانے والابھی بھوکھا نہیں مرتا مگر اسے طویل انتظار کرنا پرتا اسے بھی محنت کا پھل مل جاتا ہے مگر انتظار کم ہی لوگ کرتے ہیں جو کرتے ہیں تو ان کو عزت اتنی ملتی ہے کہ پیسہ کی اہمیت ان کی شخصیت کے سامنے کم ہو جاتی جس کا ایک فون اگر دس لاکھ کا کام کردے اسے پیسے کی کیا ضرورت ہے جس کا ایک فوں اگر کسی غریب کو لاکھوں کی رشوت سے بچادے اسے عزت کی کیاضرورت ہے ں

Meem
04-12-2008, 03:30 PM
ایک سوال میرا بھی
آپ لوگ ویج ایوارڈ کے لیئے کیا کررہے ہیں؟

Lubna Ali
04-12-2008, 03:44 PM
ایک صحافی ھونے کے ناتے آپکوکن مسائل کا سامناکرناپڑتاہے

Samreen Waheed
04-12-2008, 03:44 PM
Ap ki pehil salary kitni thi aur ap ne us ka kiya kia

Lubna Ali
04-12-2008, 03:48 PM
?کیایہ بات سچ ہے کے صحافی کی زندگی ہر وقت خطرے میں ہوتی ہے

Lubna Ali
04-12-2008, 03:56 PM
ہمارے معاشرے میں کیاصحافت ایک ایساشعبہ ہو سکتا ھے کے بندہ اپنی زندگی ارام سے گزار سکے?کیا یہ ایک اچھا کیرئر ہو سکتا ہے?

imkan
04-12-2008, 04:00 PM
nalaeeq student they ya achey bachey waley student?


ہم نالائق نہیں رہے کام چوری کا کبھی سوچا بھی نہیں اس لیے کہ ابو خود محکمہ تعلیم میں تھے ٹیچر غیر حاضری کا ابو کو بتا سکتے تھے اس ڈر سے کبھی اسکول سے غیر حاضر نہیں ہو ئے نہ جانے کیا بات پچپن سے ہم جتنا نمایاں نہ ہونے کی کوشش کرتے تھے اتنا نمایاں ہوجاتے تھے لائق پراستاذ زیادہ توجہ دیتے ہیں اور اس وجہ سے لائق بچہ نمایاں ہو جاتا کئی بار پوری کلاس کو سوال نہ آیا ہم نے بتا دیا کافی شاباش ملی مگر اس کے بعدسبق یاد کرنا ہماری مجبوری بن گیا کیونکہ سب کو امید ہوتی تھی کہ انہیں یاد ہو گا اور ٹیچر بھی ہم سے بلاجھجک پوجھ لیا کرتے ہے

Samreen Waheed
04-12-2008, 04:02 PM
اگر آپ کو وزارت سونپ دی جاے تو آپ پاکستان میں کون سی تبدیلیاں لانا چاہیں گے

imkan
04-12-2008, 04:08 PM
mirror dekhtey hein to kia sochtey hein?
شیشہ دیکھنے سے ہم اپنے آپ کو دنیا کا خوصورت آدمی سمجھنے کی غلط فھمی میں مبتلاء ہو جاتے ہیں کیونکہ کہ یہ انسان کی فطرت کہ ہر انسان اپنے آپ کو خوصورت سمھتا ہے دنیا بوڑھا سمجھے ہمیں اس سے فرق نہیں پڑتا ویسے کبھی کبھی شیشہ دیکھ کربوڑھا ہونے کا خوف طاری ہوجاتا ہے ہم عام طور پر شیشہ توجہ سے نہیں دیکتھے مگر جب راولپنڈی یا اسلام آباد میں ہو ں تو شیشہ دیکھنے کی طرف توجہ زیادہ رہتی ہے اللہ نے ہمیں کافی حدتک خوصورت بنایا ہے اس ڈر سے کہ کہیں اس پرائی امانت کو کسی کی نظر نہ لگ جائے ہم اپنی تصویر شایع نہیں کرتے لہذا آپ کو اس عظیم الجثہ صحافی کی تصویر تلاش کرنےپر بھی کہیں نہیں ملےگی

imkan
04-12-2008, 04:36 PM
کیا آپ نظریاتی صحافت کے قائل ھیں؟

بنیادی طور پر صحافت میں کوئی نظریات نہیں ہوتے صرف ایشوز ہوتے اور خاص حساس ایشوز ہی صحافت کے نظریات متعین کرتے ہیں اگر آپ آج بھارتی میڈیا کی یلغار کو دیکھیں تو پاکستان کا سارا میڈیا بھارت کے خلاف ہے اور اس مخالفت میں وہ صحافی بھی پیش پیش ہیں جنکا 24 گھنٹے ورد پاک بھارت دوستی رھا ہے وہ اس دوستی میں سیکولرازم کی اس انتہا تک چلے جاتے ہیں جہاں سے مذہب کی توھین شروع ہو جاتی مگر آج یہ لوگ بھارت کے خلاف ہیں یہ دراصل انکی حب الوطنی ہے اگر نظریات ہوں بھی تو ایشوز ان کے حاوی ہوجاتے ہیں بنیادی طور پر صحافی غیر جانبدار ہوتے ہیں اگر غیر جانبداری متاثر ہو جائے تو پیشہ وارنہ فرائض کا حق ادا نہیں کیا جاسکتا آپ جب تک اپنے مخالف فریق کو بھی اس کا کارکن بن کر سمجھنے کی کوشش نہ کریں تو آپ ا سکی بینادی سوچ کو نہین پہنچ نہیں سکتے جہاں تک مسلم میڈیا کی بات ہے یہ مغربی میڈیا کی اسلا م مخالف وار پر تو کوئی سیکولر صحافی بھی غیر جانبدار نہیں رہ سکت
آج پاکستان میں دو انتہا پسندیوں کے درمیان مقابلہ جاری ہے اور اس مقابلے کا اثر صحافت پر بھی پڑا ہے دراصل پاکستان میں سیکولر انتہا پسندی اور مذبھی انتہا پسندی کا مقابلہ جاری ہے اور صحافت بھی واضح طور پر تقسیم ہے اس وقت دو ہی قسم کے کالم نویس ہیں ایک جو سیکولر ازم کے ٹھیکیدار ہیں جو دوسرے مذہب حامی دونوں کالموں میں اپنا زور لگا دیتے ہیں اور عجیب بات ہے پاکستان کا قاری بھی ان ہی دو سمتوں میں تقسیم ہے اپ آپ کو معررف کالم نگار بنے کے لے کسی ایک حلقہ قارئین کا انتخاب کرنا پڑتا ہے عجیب اتفاق ہے پاکستان میں مقبول صحافی بھی وہ ہی ہیں جو ان دو میں سے کسی ایک کے حامی ہیں آپ اگر غور کریں تو آپ کو معلوم ہو گا مذھب مخالف لوگوں کو کم پڑھا جاتا ہے اس کی وجہ یہ کہ سیکولرازم بنیادی طور پر کوئی نظریہ نہیں دنیا کے ہر کونے میں سیکولر ازم کے اصول مختلف ہیں دوسری بات ہے مغرب کے حامی لوگ بھی پاکستان میں کم ہی ہیں ملک کی غالب آبادی پرو مذہب ہے اس لیے زیادہ کامیاب تحریریں وہ ہونگی جو پرو مذہب ہونگی

Samreen Waheed
04-12-2008, 05:11 PM
اگر انڈیا کے میڈیا پر نظر ڈالی جاے تو وہ کھل کر پاکستان کے خلاف پروپگینڈہ کرتا ہے، اس کے جواب میں ہمارے میڈیا کا انداز صرف دفاعی کیوں ہوتا ہے

imkan
04-12-2008, 05:17 PM
one urdu mey most favourite member kon hey aap ka
جس طرح خوصورتی کا معیار دنیاکے ہر خطے میں مختلف ہے اسی طرح ہر خطے میں پسند کا معیار بھی مختلف ہوتا ہے بلکل اس ہی طرح ون اردو ممبر کے حوالے سے بھی ہماری پسندیدگی کا معیار ہمارے کالم کے قاری ہیں جو ممبر یہ ثابت کرسکیں کہ انہوں نے ہمارے سارے کالم پڑھیے اور اور بعد میں سر درد کا خرچہ بھی خود برداشت کیا تو اس قربانی کے باوجود انہیں سب سے پسندیدہ ممبر نہ کہا جائے تو یہ نا انصافی ہو گی کم ازکم امکان بھائی تو ایسا نہیں کرسکتے میری پسندیدگی کے معیار پر اگر کسی کو اعتراض ہو تو وہ مجھے ذاتی پیغام دے سکتے ہیں جیسا کہ لبنا علی صاحبہ کا دعوی ہے کہ انہوں نے نیوز اردو پر موجود سارے کالم پڑ ھ لیے ہیں اور اس کے باوجود انہیں کچھ نہیں ہوا تو کالم پڑھنے پر نہیں بلکہ وہ کالم پڑھنے کے بعد سر دردی کو براداشت کرنے پر پسندیدہ ممبرز میں شمار ہونگی جو ممبر ہمارے اس معیار پر جتنا اتریں گے وہ ہمارے پسندیدہ ممبرز میں شامل ہونگے کوشش کرے میں تو کوئی حرج نہٰیں نا
جن ممبر نے زبردستی کالم پڑھے وہ اگر بتادیں تو ہم ان کے لیے بھے کوئی نی اسکیم شروع کر یں گے کچھ ممبر رشورت خور بھی ہیں جو کالم پڑہنے کا معاوضہ نقد پوائنٹ کی صورت میں وصول کرتے ہیں ان نقاپ پوشوں کا میں نام نہیں لونگا اس سے میرے قارئین کی تعداد گھٹ سکتی ے غالبا مازق اور فراز ساحل ان چند لوگوں میں شامل ہیں جنھوں نےکالم پڑھ کر مجھے پوئینٹ دیےتھے ان کی نظر کمزور ہے یا یہ لوگ زیادہ خدا
ترس واقع ہوئے ہیں
ویسے حوصلہ افزائی میں تو کئی لوگ شامل ہیں ون اردو پر سب سے پہلے یہ اطلاع آپ کے قاری زیادہ ہیں آپ مایوس نہ ہوں ہہمیں شہزاد قیس بھائی نے دی تھی اور وہ وقتا فوقتا حوصلہ افزائی بھی کرتے رہے ہیں ہم ان کے بھی اور ان تمام لوگوں کے شکر گزار ہیں جنھوں نے ہمارے کالم پڑھے اور وہ اب تک صحت یاب ہیں

سعد
04-12-2008, 05:19 PM
السلام علیکم مکان بھائی۔ مزاج کیسے ہیں؟
اب تک صحافت کے میدان میں خوشگوار ترین تجربہ کیا اور کیوں ہے؟

سعد
04-12-2008, 05:21 PM
ایک اچھے صحافی میں کیا خصوصیات ہونی چاہییں؟

imkan
04-12-2008, 05:38 PM
بھوک لگے تو کیا کرتے ہیں

ہمارے کام کی نوعیت ایشوز پر ہو تی ہے کبھی کھبی کھانے کی فرصت نہیں ملتی اور کبھی بھی کھا کھا کر برا حال ہو جاتا ہے ہم ذرا پیٹو قسم کےانسان واقع ہوئے ہیں صحافت میں آنے سے یہ شوق دوبا لا ھو گیا ہے اور بڑے بڑے ہو ٹلوں میں مزے کے کھانے ملتے ہیں اور کبھی ایسا بھی ہوتا ہے کسی بڑی تقریب میں کھانا سامنے رکھا ہو تا ہے ہم کھا نہیں سکتے کہ اس وقت سارا میڈیا کسی اہم شخصیت سے بات چیت شروع کردیتا ہے جب بات چیت ختم ہوتی تو پروگرام بھی ختم ہو چکا ہوتا دفتر بھاگنے کی جلدی ہوتی پھر مھنگے ہوٹل سے واپسی پر کسی جھونپڑا ہوٹل پر کھا کر ڈکار فائیو سٹار کی ماری جاتی ہے

Samreen Waheed
04-12-2008, 05:53 PM
صحافیوں کے بارے سنا ہے کہ پریس کانفرنس کے دوران اگر ریفریشمنت دے دی جاے تو آپ لوگ پریس کانفرنس ختم ہونے سے پہلے ھی چلے جاتے ہیں کیا یہ صحیح ہے

imkan
04-12-2008, 06:04 PM
?kis qism key log aap ko pasand hein....
ہماری کوئی پسند نہیں ہوتی آپ ہمیں جس محفل میں بٹھا دیں کوئی نہ کوئی دوستی کی راہ تلاش کرلیں گے ہمیں کبھی ایک وزیر سے ملنا ہوتا اور کبھی کسی بھنگی سے بھی بات کرنی ہوتی اس لیے ہماری کوئی ذاتی نفسیات نہیں ہوتی ہم دوسرے آدمی کی نفسیات کے مظابق پہیش آتے ہیں یہ اصول بھی کہ آپ لاکھ لوگوں کو اپنی نفسیات پر چلنےپر مجبور نہیں کر سکتے مگر آپ خود لاکھ لوگوں کی نفسیات کے مطابق چل سکتے ہیں صحافی اس ضرب المثل کا عملی نمونہ ہو تے ہیں آپ جب بھی کسی صحافی سے ملیں وہ آپ سے بات کرے گا اگر یہ پیشہ زیادہ مقبول ہے اور اسکے لوگ اچھےسمجھے جاتے ہیں تو ان میں کئ خوبیاں بھی ہوتی ہیں یہ کیا کم ہے امکان بھائی چھوٹے چھوٹے بچوں کے سوالات کا جواب دے رہے ہیں اور بھاگ بھی نہیں سکتے اس لیے کے ہمیں ھر قسم کے حالات سے سمجھوتہ کرنا ہوتا ہے

Samreen Waheed
04-12-2008, 06:07 PM
Kia mutlab chotey bachey
hum ap ko chotey bachey nazar atey hain

Lubna Ali
04-12-2008, 06:35 PM
مزاج کے کیسے ہیں ?کس بات پر سب سے زیادہ غصہ آتا ہے۔

imkan
04-12-2008, 06:56 PM
کیا آپ سمجھتے ھیں کہ اس دور میں بھی صحافی غیر جانبدار رہ سکتا ھے؟

کسی صحافی کی پہچان ہی غیر جانبداری ہے مگر اس تعریف پر مغرب جیسا آزاد میڈیا بھی ہوری طرح ہورا اتر نہیں سکتا مغربی میڈیا بھی ملکی سلامتی کے معاملات میں عام طور پر جانبدرا ہوتا دو باتیں ہوتی ہیں ایک خبر ہے یہ عام طور پر غیر جانبدار ہو تی کیونکہ اس میں کوئی تبصرہ نہیں کیا جاسکتا مگر کئی خیر یں بالخصوص بی بی سی کی کئ خبریں تبصرہ نما ہوتی ہیں واحد غیر جانبدار چیز صحافت میں اگر ہے تو وہ خبر یہ بھی مکمل غیر جانبدار نہیں ہوسکتی اصولی طور پر جانبداری سے بچنے کے لیے عام طور ہر جس کے خلاف کوئی چیز شائع کرنا ہو تو فریق ثانی کا موقف لیا جاتا جس سے خبر مساوی ہو جاتی مگر اب تو ملکوں کے خلاف شایع کیا جاتا اور فریق ثانی کے موقف کی ضرورت محسوس نہیں کی جاتی حد تو یہ ہے ذرائع کو ظاہر نہ کرنے کی شرط پر مغربی میڈیا ایس خبر یں چلاتا ہےجسے کوئی پاکستانی آفیسر ہوش کے عالم میں ایسی بات تک نہیں کر سکتا اس وقت عالمی صحافت بھی انتہاپسندی کے نرغے میں ہے
جہاں تک کالموں کا تعلق ہے تو اس میں زیادہ غیر جانبداری کی ضرورت نہیں ہوتی بس آپ اتنی جانبداری کر سکتے ہیں جو زمین حقائق کے خلاف نہ کوئی بھی اسی چیز جو عقل عام کے خلاف ہو اسی جانبداری اس کالم نگار کی مبالغہ آمیزی ہی سمجھی جائے گی اور اس کی تحریروں پر اعتماد کم ہو جائے گا یات صرف تحریر کو کامیاب بنانے کی یہ پہلو ملحوظ حاطر رہے پھر آپ کہیں بھی زیادہ جانبداری نہیں کر سکتے

imkan
04-12-2008, 07:19 PM
پاکستان کی صحافت کا موازنہ جدید دنیا کی صحافت سے کس طرح کرتے ھیں؟

پاکستان میں صحافت جو ہے اسے چند ایک کے علاوہ آپ صحافت کم ڈاکیا گیری زیادہ سکتے ہیں
زیادہ تر تو بنے بنائے پریس رپلیز پر کام چلتاہے تحقیقی صحافت ختم ہو کر رہ گی ہے پاکستان میں ایک وقت تھا جب تکبیر تھا تو اس میں تحقیقی صحافت تھی کچھ عرصے تک نواتے وقت ویکلی میگزیں ندائے ملت میں جب تک مقبول ارشد رہے تحقیقی صحافت رہی جنگ کے موجودہ انصار عباسی حامد میر ان جیسے گنتی کے چند نام ہیں یہ پاکستان کی کل تقحقیقی صحافت ہے جبکہ مغرب تحقیقی صحافت کے بانیوں میں ہے پاکستان میں غیر سرکاری طور پر اپنے صحافیوں کو باہر بھنجئے کا رواج اسرائیل حزب اللہ جنگ سے شروع ہوا ہے وہ بھی جیو کے حامد میر سمیت چند لوگ گئے تھے پاکستان میں وار رپوٹنگ کے حوالے سے بھی کوئی کام نہیں ہمارے لوگ اففانستا ن اس لئے نہیں جا سکتے کہ ان کا انشورنس نہیں ہوتا مغربی میڈیا کہ آوٹ اف بارڈر کے الاونسز الگ ہوتے ہیں اور انشورنس الگ ہوتی ہے ہم جدید صحافت کا کیا مقابلہ کریں گے ہمارے کئ نامی گرامی اخبارات کی ویب سائٹس ھی اپ ڈیٹ نہیں ہوتیں یہ المہ ہمار ھی نہیں عالم اسلام کا میڈیا کی تمام تر صحافت علاقائی اور ملکی نوعیت کی ہے عالم اسلام کے آپ60 بین الاقوامی اخبارات نہیں دکھا سکتے جنہیں عالم اسلام کا ترجمان کہا جاسکے پاکستان کی دہشت گردی کے حوالے سے تمام بڑی خیریں مغرب سے آتی ہہیں امریکہ خود حملہ کرتا اور خود ہی بتا دیتا ہے آج پاکستان کی تمام اہم خبروں کا اہم ذریع مغربی میڈیا ہے ہم موازنہ کیا کریں گے لال مسجد سانخہ میں ہمارا میڈیا بری طر ح ناکام رھا ہے اندز کیا تھا اگر میڈیا یہ راز قبل از وقت افشا کردیتا تو اتنا بڑا سانخہ پیش نہ آتا اس واقع میں میڈیا بھی حکومت کی اطلاعات پر قناعت کر کے چلتا رہا کسی بھی مذبھی رپورٹر کو اندر بھیجا جاسکتا تھا جو وھاں کی اصل صورت حال سامنے لاتا یہ معاملہ صرف ہمارا نہیں بش بھی عراق کے معاملے میں امریکا جیسے سب سے فاسٹ میڈیا کو آسانی سے بے وقوف بنا گئے

imkan
04-12-2008, 07:35 PM
مذھبی جرائد سے منسلک ھونے کی وجہ مذھبی رحجان ھے یا کسی کی خواھش؟

کسی بھی ہفت روزہ سے آغاز کرنے والے کو ایک نہ ایک دن روزنامے میں آنا ہوتا ہے یہ اتفاق تھا جب فاتح کی نئ انتظامییہ حالات نہ سنبھال سکی اور ہفت روزہ کو پندرہ روزہ تک کے آئی تب ہمیں نوکری کی تلاش تو کرنی تھی یہ اتفاق تھا ان ہی دنوں روزنامہ اسلام آگیا تھا جب ہم نے اپلائے کیا تو ان لوگون نے رکھ لیا کیا آپ کو اعتراض ہے تو میں چھوڑ دوں کیااور کسی کی خواہش کا سمجھ نہیں آیا ماظق اس کی وضاحت کردیں آج مصروف ہوں موقع ملتے ہیں جواب دونگا لوگ پرشان نہ ہون

Samreen Waheed
04-12-2008, 08:42 PM
chalein koi baat nhi abh tuk k liye itna hi kafi baki kal Inshallah aur humey bhi thora waqt mil jaey ga ap se mazeed sawalat kerny ka

سوبی
05-12-2008, 01:44 AM
واہ یہاں تو انٹرویو ہو رہا ہے وہ بھی امکان بھائی کا اور مجھے پتا ہی نہیں

۔۔۔خیر سوالات کرتی ہوں ۔۔

ون اردو پر کیسے آنا ہوا اور آپ کو یہاں آکے کیسا لگا?

اگر آپ صحافی نہ ہوتے تو کیا ہوتے?

کونسے دو کام ہیں جو کرنے کی آپ کو بہت جلدی ہو?

پن کے بعد آپکو سب سے زیادہ کیا چیز پسند ہے ?

آج کے لیے اتنے سوال کافی ہیں باقی پھر ۔۔۔

سمر
05-12-2008, 12:13 PM
زبیر بھائی آپ نے جو راہ منتخب کی ھے اس پر میرے خیال میں کسی کو بھی اعتراض کا حق نہیں ھے۔رھی بات اس طرف آنے کی کہ کس طرح آئے تو کبھی کبھی کسی دوست،عزیز یا والدین کی خوشی یا خواھش کی خاطر بھی کسی خاص ڈائریکشن کو اپنایا جاتا ھے میں بس اسی حوالے سے پوچھ رھا تھا۔

ان ہی دنوں روزنامہ اسلام آگیا تھا جب ہم نے اپلائے کیا تو ان لوگون نے رکھ لیا کیا آپ کو اعتراض ہے تو میں چھوڑ دوں کیااور کسی کی خواہش کا سمجھ نہیں آیا ماظق اس کی وضاحت کردیں

سمر
05-12-2008, 12:15 PM
صحافت میں رقابت کا کتنا عمل دخل ھوتا ھے؟

سمر
05-12-2008, 12:19 PM
ٹی وی پر کچھ ٹاک شوز میں حکومتی پالیسیوں پر تنقید کرنے پر تعصب پر مبنی نئی اصطلاح پنجابی اینکرز ایجاد ھوئی ھے، آپ اس کو کیسے دیکھتے ھیں؟

سمر
05-12-2008, 12:20 PM
کیا میڈیا پر پابندیاں ھونی چاھئیں؟

Mehero Ul Nisa Dar
05-12-2008, 02:07 PM
یہ کیا جی مہرو کہتی ہے کہ امکان صاحب یہ کب ہوا کیسے ہوئے کیوں ہوا ہاہاہاہاہاہاہا
اچھا یہ بتائیں آپ نے اپنا پہلا کالم کب کیوں اور کیسے اور کس اخبار میں لکھا ?

imkan
05-12-2008, 06:24 PM
بطور صحافی کبھی کسی کالم کے لکھنے پر پچھتاوا ھوا؟

کسی کالم لکھنے پر پچھتاوا نہیں ہوا کیونکہ ایک پروفیشنل کالم نگار کو اپنے ایک ایک حرف کی کاٹ اور مار کا اندازہ ہوتا تجزیہ کرتے وقت انتہائی محتاط انداز اختیار کیاجاتا ہے اور فریق مخالف کے نطقہ نظر پر بھی نظر ہوتی پروفیشنل صحافی کی تحریر میں فریق مخالف کو بھی ادب سے مخاطب کیا جاتا ہے ہمیں ایک کالم لکھنے کے لیے بسا اوقات ایک ماہ بھی لگ جاتا ہے ایک ایک لفظ سوچ سمجھ کر فٹ کیا جاتا ہے ہم معلومات کو زیادہ اہمیت دیتے ہیں اور آپ اگر ہمارے پرانے کالم دیکھ لیں تو آپ کو تازہ گی اور حقیقت واضح نظر آئے گی بات یہ ہے کہ زمینی حقائق کسی ملکی کی سرحدوں کی طرح ہوتے ہیں جو جلدی بدلا نہیں کرتے

imkan
05-12-2008, 07:07 PM
کبھی کسی کے خلاف لکھنے پر دھمکی ملی؟
یا کبھی ڈر لگا؟
کراچی میں سانخہ نشتر پارک کے چند دنوں بعد صدر مشرف کی سانخہ کے لوحقین اور اہلسنت علماء کرام سے ملاقات کی ایک خبر انکی کراچی آمد سے چاردن قبل دی تھی جس میں ان کی علماء کرام سے ملاقات کا مقام اور روٹ بھی دیا تھا اور یہ بھی لکھا تھا سکیوڑٹی کے پیش نظر یہ پلان تبدیل ہو سکتا ہے یہ ملاقات کراچی میں شاہراہ فیصل کے نزدیک علامہ شاہ تراب الحق کے مدرسے میں ہونا تھی اس خبر کے مطابق جس دن صدرمشرف کراچی ہنچے تھے اس دن میں بہت ڈرا اور میں نے کیونکہ اگر خدا نہ خواستہ وہ اس روٹ پر اس مدرسے میں آجاتے اور خدانہ خواستہ ان پر حملے ہوجاتا تو امکان بھائی بری طرح پھنس جاتے پھر یہ ہوا کہ صدر مشرف اس مدرسے میں نہ آئے سیکورٹی ادارروں نے کلیرینس نہ دی اور وزیر اعلی ہاوس میں علماء کرام نہ گئے کیونکہ ارباب رحیم پر دیوبندی ہونے کا الزام تھا اخر کار پھر یہ ملاقات گورنر ہاوس میں ہوئی اس طر ح کی خوفناک خبریں تو کافی ہوتی جو کسی بزدل کو ڈرپوک بنادیتی ہے آپ کے لیے ایک ہی کافی ہے

imkan
05-12-2008, 07:28 PM
[quote=Aeesh;588183]Ap ki pehil salary kitni thi aur ap ne us ka kiya kia[/quote
بری بات ثمرین سلیری کا نہیں
پوچھا کرتے چوٹی سی موٹی سی گول سی مٹول سی گڑیا یہ بچوں کا نہیں بڑوں کا کام ہے آپ کا نہیں پہلی سیلری 4ہزار تھی اب بھی اللہ کا شکر ہے نہ زیادہ ہے نہ کم ہے متوسط قسم کا آدمی ہوں کرنا کیا تھا شروع ہی سے خاصے پیٹو تھے بجٹ چلانا مشکل ہوتا تھاسلیری ملی اللہ کا شکر ادا کیا بسا اوقات سلیری سے زیادہ کام کو پسند کیے جانے کی خوشی ہوتی مجھے یہ خوشی سلیری سے زیادہ تھی چلو ہم بھی اب صحافی شمار ہونے لگیں گے

imkan
05-12-2008, 07:33 PM
?کیایہ بات سچ ہے کے صحافی کی زندگی ہر وقت خطرے میں ہوتی ہے

یہ ضروری نہیں کہ ہر وقت خطرے میں رہے یہ زندگی یہ کوئی ہیرا یا سونا نہیں مسائل ضرور ہوتے تحقیقاقی اور تفتیشی صحافیوں کو خطرہ ہوتا ہے ہم پر امن قسم کے صحافی ہیں صحافی معاشرے کا حصہ ہوتا ہے یہ معاشرے سے الگ نہیں ہوسکتا آپ اسے خطروں میں ڈال کر معاشرے سے تو نہ نکالیں پلیز سسس

imkan
05-12-2008, 07:43 PM
ایک سوال میرا بھی
آپ لوگ ویج ایوارڈ کے لیئے کیا کررہے ہیں؟


میم آپ کا سوال بہت لمبا ہے اور یہ طویل کہانی ہے کوشش تو ہورے ہیے مگر کارکن صحافیوں نے ملازمت بھی انہی اداروں میں کرنی ہوتی جن کے خلاف یہ عدالت میں ہوتے اس کام میں زیادہ تر غیر ملکی جرائد میں کام کرنے والے مقامی صحافیوں کو آگے کیاجاتا کیونکہ اس کے ادراوں سے نکالے جانے کا خوف کم ہوتا آپ کا کسی صحافی خاندان سے تعلق تو نہیں پھر بھی اس ہمدری کا شکریہ اخباری مالکان ویج بورد ایوارڈ تک کی خیر یں شایع ہونے نہیں دیتے اور ملازمین کو نکالنے جانے کی دھمکییان دی جاتی درجنوں لوگوں کو اس پاداش میں نکالا بھی گیا اخباری مالکان کا حکومت پر دباو ہوتا ہے پالیسی کااختیار تو مالکان کے پاس ہے ہوتا اور حکومت بھی ااخباری مالکان سے ڈرتی ہے یہ ایشو حکومت تب کھڑا کرتی ہے جب اس کی اخباری مالکان سے ان بن ہو جاتی اس طرح حکومت اخباری مالکان کو بلیک میل کر جوڑ توڑ کر لیتی ہے 3نوبیر 2007 کو جب حکومت نے تمام اہم اداروں پر پابندی لگا دی تھی اور اس وقت حکومت اور اخباری مالکان میں جنگ تھی یہ اچھا وقت تھا مگر حکومت بھی مخلص نہیں

imkan
05-12-2008, 08:07 PM
ایک صحافی ھونے کے ناتے آپکوکن مسائل کا سامناکرناپڑتاہے

صحافی ہوتے تو سوشل ہیں مگر اپنے خاندان کو وقت کم دیے پاتے ہیں اس حوالے سے زیادہ شکایات کا سامنا ہوتا رشتہ دار اس نہ جانے کیا کیانام دیتے ہیں لیکن یہ سچ ہے کہ صحافی خاندان کو وقت نہیں دے سکتے ان کی دوستیاں اور رشتہ داریاں آپس میں زیادہ ہوجاتی ہیں
مسائل تو بہت ہوتے ہر پیشے کی کچھ اچھایاں اور برایئاں بھی ہوتی لوگ عام طور پر سب کو ایک جیسا سمجھنے لگتے ہیں ایسا نہیں کئی ایسے بھی ہوتے ہیں جو کسی کا دباو برداشت نہیں کرتے اور کئی ایسے بھی ہوتے ہیں جو دباو میں دب جاتے ہیں

imkan
05-12-2008, 08:31 PM
ہمارے معاشرے میں کیاصحافت ایک ایساشعبہ ہو سکتا ھے کے بندہ اپنی زندگی ارام سے گزار سکے?کیا یہ ایک اچھا کیرئر ہو سکتا ہے?
کوئی بھی شعبہ ایسا نہیں ہوتا جسے صر ف کامیابی کی سیڑھی کہا جاسکے اگر آپ دنیا کے سب اچھے شعبے کا انتخاب کر لیں مگر ساری عمر لکیر کے فقیر رہیں تو آپ کیا ترفی کریں گے صحافت میں تعلیم کے ساتھ نیوز سنس ( خبر سونگے والی ناک (ذرا لمبی ہونی چاہیے اور جدید رجحانات سے واقفی ضروری ہے اپ جتنے زیادہ خود باخبر ہونگے تو لوگوں کو زیادہ معلومات دے سکتے ہیں بینادی طور پر کوئی شعبہ کامیابی کی گارنٹی نہیں ہوتا اس کا دومدار فرد پر ہوتا ہے وہ اس شعبے کو کتنا وقت دیتا ہے اور کتنی محنت کرتا ہے اس شعبے میں محنت نسبت زیادہ کرنی پڑتی ہے دنیا میں جتنے لوگ کامیاب ہوئے انہوں نے دوسرے لوگوں سے 100گنا زیادہ محنت کی تب کامیاب ہوئے اگر زہین انٹلیجنٹ ہیں اور آپ کتابی کیڑا ہیں اور آپ مطالعے کے بھوت میں مبتلاء ہیں اور آ پ کسی چیز کی بال کی کھال نکالنے کا ولولہ رکھتے ہیں تو آپ صحافی بن سکتے اور ایک طویل جدوجہد کے بعد کامیاب ہوسکتے ہیں جب سے الکٹرانک میڈیا آیا ہے صحافت بھی ماڈلنگ بن گئی ہی ان چنلز میں کئی لوگ آئے ہیں جنہیں مشہورلوگوں کے نام تک یاد نہیں ہوتے پہلے کسی صحافی کے لیے تھیوری سے زیادہ پریکٹیکل کی ضرورت ہوتی تھی آج اسے زیادہ اہمیت نہیں دی جارہے جس کی وجہ سے الکٹرانک میڈیا کا سواء چند پرگراموں کے معیار پورا نہیں
دوسری بات موقع ملنے کی آگر آپ کو کسی اخبار میں کام کرنے کا موقع نہیں ملا آپ پی ایچ ڈی ہوسکتے دانشور ہو سکتے مگر آپ صحافی نہیں کہلا سکتے آپ کو اس چکی سے پس کر نکلنا ہوگا اتناضررو ہے کہ صحافت ایم اچھا کیریر ہے دنیا کے نامی گرامی سربراہان مملکت نے صحافت کو ترجیح دی اور یہاں تک کہا اگر وہ صدرنہ ہوتے توصحافی ہوتے تو یہ پر کشش پیشہ ضرور ہے بلکہ ہم تو اس دنیا کا سب سے پرکشش شعبہ کہیں گے صحافیو کے بڑے کارنامے ہوتے ہیں پاکستان نےجس انقلاب سےجنم لیا ہے اس کی بنیاد مولانا محمد علی جوہر حمید نظامی جیسے انقلابی صحافیوں نے رکھی تھی

imkan
05-12-2008, 08:44 PM
السلام علیکم مکان بھائی۔ مزاج کیسے ہیں؟
اب تک صحافت کے میدان میں خوشگوار ترین تجربہ کیا اور کیوں ہے؟

بھائی صآحب ہماری علم کی دکان تھی مکان ہمارا کوئی نہیں البتہ اپنی محترمہ کو نہ ملنے والے مکان پر نظر ضرور ہے
رھی بات سب سے خوشگور تجربہ آپ اس انٹریو کو سمجھ سکتے ہیں یا روزنامہ جنگ میں شایع ہونے والے کالموں کو بھی خوشگوار تجربہ کہہ سکتے ہیں اس لیے کالم لکھنا دراصل انتہائی سینئر صحافیوں کا خالصتا کام سمجھا جاتا ہے مگر ہم اس لحاظ سے تو کافی کم عمر ہیں ادارتی صفحات میں روزنامہ جنگ کا معیارتمام اخباروں سے زیادہ بہتر ہے ہم اپنی باتوں سے بوڑھے صحافی لگتے ہیں مگر ہیں ابھی بڑھاپے سے بچے ہوئے بچہ نما صحافی

imkan
05-12-2008, 08:52 PM
ایک اچھے صحافی میں کیا خصوصیات ہونی چاہییں؟
کتابوں میں آپ کو بہت ساری خصوصیات مل جائیں گی مگر تجربہ کا سچ یہ کہ محنت سے بڑی کوئی خصوصیت نہیں سب سے بڑا صحافی سب سے زیادہ محنتی ہو گا ہر انسان میں کمیاں ہوتی ہیں ضرورت اور حالات انسان کو بہت کچھ سکھا دیتے ہیں کچھ چیزیں صحافت میں عملی طور پر شمولیت سے از خودسمجھ آجاتی ہیں نفسیات دان چہرہ شناس اور مطالعہ زیادہ ہو اور سیکھنا جاتنا ہو آگے بڑھنے کا جزبہ پیشے کے جدید رجحانات سے واقفیت بڑھتا رہے

imkan
05-12-2008, 08:58 PM
اگر آپ کو وزارت سونپ دی جاے تو آپ پاکستان میں کون سی تبدیلیاں لانا چاہیں گے
تبدیلیاں محض وزارت ملنے سے نہیں لائی جاسکتیں وزارت پانچ سال کی ہوتی ہے اور تبدیلی کے لیے طویل منصوبہ بندی کی ضرورت ہے پاکستان میں کوئی منصوبہ پانچ سال سے زیادہ چلتاہی نہیں ہم وزارت میں آکر صرف بیوروکریٹ سے بنا کر رکھنے کے علاوہ کچھ نہی کر سکتے کیونکہ جب ہم کچھ کریں گے تو اس ورازت کا سکریٹر ی سرکاری قوانین کا بنڈل کھول لیے گا اور جب ہمیں آپنے صحیح اختیارات کا علم ہوگا تو حکومت کا وقت ختم ہوگا تبدلی قومی شعور سے آتی ہے کوئی فرد واحد تنہا تبدلی نہیں لاسکت

imkan
05-12-2008, 09:11 PM
اگر انڈیا کے میڈیا پر نظر ڈالی جاے تو وہ کھل کر پاکستان کے خلاف پروپگینڈہ کرتا ہے، اس کے جواب میں ہمارے میڈیا کا انداز صرف دفاعی کیوں ہوتا ہے
ہمار انداز دفاعی اس لیے ہے کہ ہم چور ہیں اور ساری دنیا ہم پر شک کرتی ہے ہم نے پاکستان کے شہریوں کو خود طالبان بنایا قبائلی علاقوں میں امریکہ کو کاروئی کی اجازت دی جس کا مطلب یہ کہ ہماری فوج یہ نہیں کرسکتی جب امریکہ کاروئی کرے گا تو آپ کی خودمختیاری فوت ہو گی اب بھارت الزام لگائے تو اسے کسی قسم کی سفارتی حدود سے تجاوز کا خیال نہیں اور نہ ہی الزام کو ثابت کرنے کی ضرورت پیش آئے گی بھارت کے خلاف جب ثبوت ہمارے پاس موجود ہیں تو جب ہم ان کا اظہار پارلیمیٹ کے بند کمرے میں شرگوشی سے کریں گے تو بھارت کو اس سے مزید ہمت پیدا ہونا فطری سی بات ہے دفاعی انداز اس لیے ہمیں بھارت کی کمزوریوں کا مکمل علم نہیں آج فضا تبدیل ہوئے ہے مگر ہمارے میڈیا کا سارا
زورپوراسال انڈیا سے دوستی بڑھوانے کا ہوتا ہے جب ان حالات کی تیاری ہی نہیں تو انداز تو دفاعی نہیں ہوگا تو اور کیا ہوگا جس ملک کا صدر دشمن ملک کو خطرہ نہ سمجھے اس ملک کا میڈیا کیا کرےگا ی

imkan
05-12-2008, 09:16 PM
صحافیوں کے بارے سنا ہے کہ پریس کانفرنس کے دوران اگر ریفریشمنت دے دی جاے تو آپ لوگ پریس کانفرنس ختم ہونے سے پہلے ھی چلے جاتے ہیں کیا یہ صحیح ہے
ایش سچ بتاوآپ کا کوئی رشتہ دار صحافی تو نہیں یہ راز گھر کے بھیدی کے بغیر کوئی پھوڑ نہیں سکتا ضرور کوئی نہ کوئی ہے
پریس کانفرنس کرنے والے اتنے بھولے بھی نہیں ہوتے کے پہلے کھانا دیں اور بعد میں پریس کانفرنس کرڈالیں ان کا مقصد پریس کانفریس ہوتا اور مقصد کھانے پر ہمیشہ مقدم ہوتا مجھے تو ایسی پریس کانفرنس کی حسرت ہی رہی ہے اب تک

imkan
05-12-2008, 09:26 PM
مزاج کے کیسے ہیں ?کس بات پر سب سے زیادہ غصہ آتا ہے۔
یہ بھی کوئی پوچھے کی بات اپنے بارے میں سچ کون بتاتا ہے ہم مزاج کے نہیں مزاح کے کافی سخت واقع ہوئے ہیں کبھی بچوں کو لگتا ہے کہ ہم بھی کوئی بچہ پارٹی ہیں خواتین کو لگتا ہے کسی زمانے میں خواتین تھے اور بوڑھوں کو لگتا ہے اکہ امکان کی عمر زیادہ ہے یہ جھوٹ بولتے یں کیونکہ باتوں سے بچپن نہیں پچپن کے لگتے ہیں شادی شدہ لوگ سمجھتے ہیں موصوف امکان ایک پورے خاندان کے سربراہ ہیں بات صرف یہ کہ ہم لوگوں نے گھاٹ گھاٹ کا پانی پیا ہوتا ہے اور بس دوسرے کو سمجھنے کی ضرورت ہوتی ہم بچوں کو پیار دیتے ہیں اور بڑوں کا ادب کرتے ہیں اور فطری سے بات ہے بچے کو ہیار اور بڑوں کو ادب کی ضرورت ہوتی ہے رہی غصے کی بات یہ انسان کی پہچان ہے ایک بات جب سمجھادی ااور پھر بار بار توجہ دلانے پر بھی کوئی نہ سمجھے تو اپنی عقل پر نہں دوسرے کی کھوپٹری میں بھر ے بھوسے پر غصہ آتا ہے

imkan
05-12-2008, 09:32 PM
واہ یہاں تو انٹرویو ہو رہا ہے وہ بھی امکان بھائی کا اور مجھے پتا ہی نہیں

۔۔۔خیر سوالات کرتی ہوں ۔۔

ون اردو پر کیسے آنا ہوا اور آپ کو یہاں آکے کیسا لگا?
گوگل سے آئے تھے اردو کالم سرچ کرتے ہوئے

اگر آپ صحافی نہ ہوتے تو کیا ہوتے?
تو علامہ زبیر احمد ظہیر ہوتے

کونسے دو کام ہیں جو کرنے کی آپ کو بہت جلدی ہو?
شادی اور پیشہ وارانہ ترقی

پن کے بعد آپکو سب سے زیادہ کیا چیز پسند ہے ?
اپنے لکھے ہوئے کالم

آج کے لیے اتنے سوال کافی ہیں باقی پھر ۔۔۔
شکریہ آپ نے اج چھٹی دے دی

imkan
05-12-2008, 09:46 PM
زبیر بھائی آپ نے جو راہ منتخب کی ھے اس پر میرے خیال میں کسی کو بھی اعتراض کا حق نہیں ھے۔رھی بات اس طرف آنے کی کہ کس طرح آئے تو کبھی کبھی کسی دوست،عزیز یا والدین کی خوشی یا خواھش کی خاطر بھی کسی خاص ڈائریکشن کو اپنایا جاتا ھے میں بس اسی حوالے سے پوچھ رھا تھا۔
مازق اسلام بہت اچھا اخبار ہے اس میں کسی جاندار کی تصویر نہیں ہوتی آ س مسجد اورمدرسے میں لے جاسکتے ہیں کئی اسے لوگ جو گھر میں عام اخبار نہیں لے جاسکتے وہ بخوشی اسلام اخبار لگواتے ہیں اس اخبار نے دینے مدارس کواخبار بینی پر مجبور کردیا ہے ورنہ مدارس حالات حاظرہ سے ناواقف ہوا کرتے تھے یہ اخبار ملک کے چھ اسٹیشنوں سے سے بیک وقت نکلتا ہے اس اخبار کی خاص بات یہ ہے اس کی خبر کو سچی سمجھا جاتا لوگ اس کی خبروں پر اعتبار کرتے ہیں اور یہ کوئی نہیں کہ سکتا ہے اس اخبار کے لوگ کسی کو بلیک میل کرتے ہیں اور لوگ آپ پر اعتبار کریں گے آپ کو کوئی بلیک میلر نہیں سمجھے گا صحافی حلقوں میں بھی یہ ساکھ موجود ہے کہ اس کے لوگ ناجائز نہیں کر تے ہم سمجتھے ہیں کسی بھی انسان کی اصل طاقت اس کی ساکھ ہوتی ہے ساکھ نہیں تو کچھ بھی نہیں میں اس اخبار کو مذھبی نہیں سمجھتا کیونکہ مذبھی پر چوں میں فرقہ وایت پید کی جاتی ہے اسلام کسی مسلک کو نہیں چھیڑتا
ہاں اتنا ضرور ہے کہ ہمارے خاندان کے لوگ اس اخبار کی کمائی سے مطمئن ہیں

imkan
05-12-2008, 10:00 PM
صحافت میں رقابت کا کتنا عمل دخل ھوتا ھے؟
رقابت صرف صحافت ہی میں نہیں دنیا کے ہر شعبے میں ہوتی ہے البتہ صحافت میں شعبہ جاتی رفابت کو مخالفت کہہ سکتے ہیں مثلا میرا شعبہ میں مسلم لیگ ن کی رپورٹنگ ہے اور کسی میر ے آفس کے ساتھی رپورٹر نے مجھے پتائے بغیر خبرفائل کر دی تو اس بیٹ میں مداخلت کہا جاتا ہے اس سے کافی اختلافات پید ہو تے اس کو ہمارے پراپل چینل رول کے خلاف سمجا جاتا ہے اس سے ایک رقابت سی پیدا ہو جاتی دوسری رقابت سیاسی نظریات کی ہو سکتی ہے
جہاں تک آگے بڑھنے کی دوڑ کا معاملہ ہے اس میں روکاوٹیں بھی ہوتی ہیں مگر ایک بات اگر آپ کے کام میں کوئی رکاوٹ نہ آئے تو آپ کبھی بڑا انسان نہیں بن سکتے
رکاوٹ انسان کو آگے بڑھنے کا جزبہ دیتی ہے ان تمام شعبوں میں رقابت زیادہ ہوتی ہے جہان شہرت زیادہ ہو مگر ان اختلافات کو صحافیوں کی تنظمیں حل کرلیتیں ہیں آج کل کوئی زیادہ ہی مخالفت آنے لگی ہے ا کبھی کبھی کالموں میں بھی ایک دوسرے کی مخالفت آجاتی ہے جیسے شوبز میں رقابت زیادہ ہوتی ہے ہمارے ہاں ہھی ایسا ہوتا ہے مگر شوبز سے بہت کم

imkan
05-12-2008, 10:16 PM
ٹی وی پر کچھ ٹاک شوز میں حکومتی پالیسیوں پر تنقید کرنے پر تعصب پر مبنی نئی اصطلاح پنجابی اینکرز ایجاد ھوئی ھے، آپ اس کو کیسے دیکھتے ھیں؟
پنجابی اینکرز کا مطلب اگر یہ لیا جائے کہ یہ لوگ اردو بولتے ہیں تو ایسا لگتا ہے جسے پنجابی میں بات کررہے ہوں تو اس لحاظ سے پنجابی اینکزر کہا جاسکتا ہے اردو کی زبان وہ ہی ہوگی جو اہل زبان کی ہوگی کراچی کے لوگ پنچاب کے لوگوں کی پنچابی لہجے کو اردو نہیں سمجھ سکتے دوسری بات صحافیوں پر بھی بسا اوقات صوبائی اثرات ہوتے ہیں مثلا ہم خود تو آزادکشمیر کے ہیں مگر سندھ میں رہنے کی وجہ سے ہمارے خیالات بھی سندھ اور کراچی کے لوگوں سے قریب تر ہوسکتے ہی کیونکہ ہمارا زیادہ تعلق ان خبروں اور حالات سے رہتاہے مگر عالمی اور ملک بھر کے حالات پر نظر رکھنے والے صحافی کی سوچ علاقائی یا صوبائی نہیں ہوتی عام طور پر رپورٹروں پر صوبائی اثرات زیادہ ہوتے اہیں مگر یہ کوئی کلیہ نہیں اور عام طور پر کالم نگاروں پر ملکی اثرات زیادہ ہوتے ہیں مگر یہ بھی کلیہ نہیں
جہاں تک اینکرز کا تعلق ہے یہ کہنا کہ وہ حکومت کی مخالفت کرتے ہیں تو یہ پنجابی اینکرز ہوئے درست نہیں کیونکہ صدر مشرف پر بھی تنقید رہی ہے تنقید کسی وجہ سے بغیر نہیں ہوتی آپ مسائل حل کریں تو تنقید نہیں ہو گی صحافی کی کسی حکومت اور کسی شخص سے دشمنی یا دوستی زیادہ دیر نہیں رہتی جن کو پنجابی اینکر کہا جارہا شہباز شریف کی کوئی بھی غلط پالیسی ہو تو یہ ہی لوگ سب سے پہلے اعتراض کریں گے کیونکہ ان کو سب سے پہلے پتہ چلے گا صحافت آئینہ ہوتی ہے اور تصویر بری ہو تو آئینہ قصورارنہیں ہوتا

imkan
05-12-2008, 10:19 PM
کیا میڈیا پر پابندیاں ھونی چاھئیں؟
ماظق بھائی کیا ناراضگی ہے آپ کی ہم سے کیا ہمیں پے روزگار کرنےکا ارادہ ہے پابندی نہیں خطے کی زمینی حالات کے تحت ضابط اخلاق ہونا چاہی

imkan
05-12-2008, 10:25 PM
یہ کیا جی مہرو کہتی ہے کہ امکان صاحب یہ کب ہوا کیسے ہوئے کیوں ہوا ہاہاہاہاہاہاہا
اچھا یہ بتائیں آپ نے اپنا پہلا کالم کب کیوں اور کیسے اور کس اخبار میں لکھا ?
سب سے پہلا کالم 2001 میں روزنامہ اسلام میں اس وقت لکھا جب وہ مارکیٹ میں آنے کی تیاری میں تھا وہ چھپا ضرور مگر اسے کوئی پڑھ نہیں سکا کیونکہ ڈمی اخبار مارکیٹ میں نہیں آیا کرتی موضوع تھا غالبا امریکا کی افغانسان پر مزار شریف سے کاروائی اور طالبان کی گوریلاحکمت علمی کا تجزیہ تھا

سوبی
06-12-2008, 03:04 AM
Imkan sahib hamari dua hai d0 saal k bajey 2 month mei hi ap ka mamla hal ho jaey Aye nazreen sub mil ker Imkan sahib ke liye Ijtamai dua karein

آمین

میری اللہ سے دعا ہے کہ امکان بھائی کی شادی دو دن میں ہی ہو

جائے امکان بھائی میں نے دیکھا ہے جن کی شادی لیٹ ہو ان کی

اچانک ہو جاتی ہے تیاری کا موقع بھی نہیں ملتا ہی ہی ہی ہی،،، ;d;d

Lubna Ali
06-12-2008, 12:17 PM
آمین

میری اللہ سے دعا ہے کہ امکان بھائی کی شادی دو دن میں ہی ہو

جائے امکان بھائی میں نے دیکھا ہے جن کی شادی لیٹ ہو ان کی

اچانک ہو جاتی ہے تیاری کا موقع بھی نہیں ملتا ہی ہی ہی ہی،،، ;d;d
تو امکان بھائی تیار رہیں کبھی بھی یہ موقع آسکتا ہے

imkan
06-12-2008, 02:24 PM
امکان بھائی ! آپ خوش ہیں یا مطمئن۔
خوشی پلیٹ میں رکھ کر کبھی نہیں ملتی اسے خود بزور بازو حاصل کیا جاتا ہے خوش رہنا ایک فن ہے اور جس شخص نے مشکلات دیکھیں ہو وہ ان خوشی کے لمحات کی قدر کرتا ہے خوشی بھی خدا کی ان خاص نعمتوں میں شامل ہے جو شکر کرنے سے بڑھتی ہے خوشی کی قدر ہی اس کا اظہار تشکر ہے اس دنیا میں رہنے کے لیے خوش رہنا ضروری ہے لوگوں کے لاکھوں مسائل ہوتے ہیں وہ آپ کی خوشگور طبعیت کو دیکھ کر آپ کے قریب آئیں گےا ور یوں آپ کے حلقہ احباب میں اضافہ ہوگا حا ل جیسا بھی ہو گزرجاتا ہے اور فکر صرف مستقبل کی جانب ہو تو حال کی مشکالات ہلکی لگتی ہیں خوشی کاراز بھی یہ ہی ہے کہ آپ حال کی تکالیف کو خوشگور مستقبل کی امید پر ٹالتے جائیں تو مایوسی آپ کا کچھ نہیں بگاڑ سکتی اطمینان اور خوشی دو الگ چیزیں ہر گز نہیں اطمینان کے بغیر خوشی کا تصور کھوکھلا ہے ساری بات اطمینان کی ہوتی ہے اطمینان کا راز یہ ہے آپ جس شعبے میں ہوں اس سے آپ کا لگاو محبت اور عشق جیسا گہرا ہو تو اطمینان مل جاتا ہےعشق اور محبت میں نقصان بھی اہم ہوتا ہے اس میں منافع نہیں دیکھا جاتا جن لوگوں کی ابتدائی زندگی مشکل میں گزری ہو وہ لوگ ایک نہ ایک دن خوشحالی ضرور دیکھتے ہیں اس ٹھوس حقیقت پر مبنی سوچ سے آپ اطمینان اور خوشی دونوں کو بیک وقت حاصل کرسکتے ہیں اس لیے ہم خوش بھی ہیں اور مطمئن بھی

Lubna Ali
06-12-2008, 02:37 PM
آپ زندگی کی سب سے بڑی خواھش کیا ہے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

Lubna Ali
06-12-2008, 02:42 PM
زمانہ طالبعلمی میں کونسے مضمون سے نفرت تھی
اورکونسا بے حد پسند تھا

imkan
06-12-2008, 02:46 PM
آمین

میری اللہ سے دعا ہے کہ امکان بھائی کی شادی دو دن میں ہی ہو

جائے امکان بھائی میں نے دیکھا ہے جن کی شادی لیٹ ہو ان کی

اچانک ہو جاتی ہے تیاری کا موقع بھی نہیں ملتا ہی ہی ہی ہی،،، ;d;dسوب آپ بھی کافی دوراندیش لگتی ہیں خواتین میں دور اندیشی خال خال ہی ملتی ہے اگر ایسا ہے تو یہ خوش قسمتی کی بات ہے یہ آپ نے درست لکھا کہ اچانک شادی ہوتی ہے مگر آپ نے یہ نہیں لکھا کہ کامیاب بھی ہو جاتی وجہ اس کی یہ کہ تاخیر قدر پیدا کرتی ہے اور نہ سہی ہمیں تو کافی قدر آگئی ہے ویسے بھی عمر اس اسٹیج پر ہو جاتی ہے جہان انسان کو انسان سمجھا جاتا فرشتہ نہیں مگر سچ یہ کہ شادی آنسان کو بروقت کرنی چاہیے پھر اولاد بڑھاپے کی دہلیز میں سہارا بن جاتی ہے اللہ آپ کو خوش رکھے آپنے خرچے پر ہنستے ہوئے مطلب آپ کسی محتاج نہ ہوں

imkan
06-12-2008, 02:55 PM
آپ زندگی کی سب سے بڑی خواھش کیا ہے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ا

اس وقت سب سے بڑی خواہش یہ ہی ہے کہ ہمارا بھی نامور صحافیوں میں شمار ہونے لگے اور ہماری تحریرں انقلاب برپا کر دیں اور پاکستان کی ترقی میں اہم کردار ادا کریں اور عالم اسلام کے اتحاد کا سبب بن جائی

imkan
06-12-2008, 03:04 PM
زمانہ طالبعلمی میں کونسے مضمون سے نفرت تھی
اورکونسا بے حد پسند تھا
تاریخ اسلامیات نفسیات تعلیمی نفسیات فلسفہ اردو ادب نثر جیسے موضوعات دلچسبی کا باعث رہے ہیں سیاسیات کو سمجھنے کا جزبہ آج بھی سیکھنے جیسا ہے نفرت تو کسی مضمون سے نہیں رہی تمام کو اچھے معقول نمبروں میں پاس کرتے رہیے ہیں پرائمری تک پتہ ہی نہیں چلا اور مڈل تک ریاضی مشکل رہی

imkan
06-12-2008, 03:12 PM
or aap ko gher mey piyaar sey kiya kehtey hein? or q kehtey hein
ہمیں زبیر ہی کہا جاتا ہے گھر میں ہمارے ہا ں پیار میں نام بگاڑے نہیں جاتے

سمر
06-12-2008, 03:16 PM
آج کل اکثر کالم نگار خود تحقیق کرنے کی بجائے کالم لکھتے ھوئے غیر ملکی میڈیا کی خبروں پر انحصار کرتے ھیں کیا یہ طریقہ مناسب ھے؟

سمر
06-12-2008, 03:18 PM
آپ خود کالم نگار ھیں پاکستان کے کس کالم نگار کے کالم آپ ضرور پڑھتے ھیں؟

imkan
06-12-2008, 03:20 PM
geo dekhney key elawa or kiya kertey hein ??? yani ...........hahaha
جیو ہم کسی خاص ایشو پر دیکھتے ہیں وہ بھی نیٹ پر ہی
براہ راست دیکھنے کا اتفاق کم ہوتا ہے اس حوالے سے بدقسمتی کا فی پرانی ہے کئی پروگراموں میں ہم خود جھلک دکھلانے کو جیواور دیگرچینلز بر نمودار ہوئے مگر خود نہ دیکھ سکھے عینی شاہدیں کے بقول آپ لکھ رہے تھے سوال کررہے تھے اب تو ہم نے فیلڈ میں جانا ہی کم کردیا ہے لہذا اب تو اپنی شکل خود دیکھنے کی حسرت ہی رہے گی جس وقت کوئی پریس کانفرنس ٹی وی پر دکھلائی جاتی ہے عام طور پر وہ وقت ہمارے بھی کام کا ہوتا ہے

1UM-SiteAdmins
06-12-2008, 03:28 PM
ظہیر بھائی ۔ آپ کا انٹرویو بہت معلوماتی ھے میں بھی باقاعدگی سے پڑھ رھا ھوں۔ آپ کی زحمات کا شکریہ۔

کیا آپ کے پاس فرصت ھو گی کہ اسے ترتیب سے بھی لکھتے رھیں اور ختم ھونے پر ایک ھی مقالہ کی صورت میں شائع کر سکیں کیونکہ اس میں زیادہ آسانی سے قارئین آپ کے خیالات جان سکیں گے۔

imkan
06-12-2008, 03:29 PM
Aap kitnay behn bhai hain
ہم سب سے بڑے ہیں اور اکلوتے بھائی ہیں بہنوں پر رعب جمانے کا دل بہت کرتا ہے مگر اب وہ شادی شدہ ہیں اس لیے کسی ایسی نیک ہستی کی ضرورت ہے جو امکان بھائی کا رعب بلاکسی غصے کے مجبوری سمجھ کر برداشت کر جائیں مگر وہ محتر مہ بھی آخرامکان ہی کی کزن ہیں انکی خاندانی خود داری بھی نسل پہ نسل منتقل ہونے والی ان ڈھائی سو اوصاف میں شامل ہے جو ایک باپ سے بطور ورثہ اولاد میں منتقل ہوتی ہیں اس لیے امکان= بھائی آچانک آنے والے اس افتاد کے انتظار میں ہیں

imkan
06-12-2008, 03:39 PM
favourite food...fruit...vegetable........drink
پسندیدہ فروٹ سیب ہے اس سے چہرے کی خوبصورتی میں اضافہ ہوتا ہے کیلا کھانے سے ہمارئ تحقیق کے مطابق رنگ صاف ہوتا ہے تقریبا موسم کا ہر تازہ پھل خوشی سے کھا جاتے ہیں انناس ایک بار کھایا تھا آج تک پھولا نہیں اور پھر کھی کھانے کی ہمت نہیں ہوئی امکان پھل کو صرف جسمانی خوصورتی کے لیے کی جانے والی وہ فضول خرچی سمجھتے ہیں جس کی حالات کے مطابق ہر آدمی کو ضرورت پڑتی ہے پھل اللہ کی ایس نعمت ہیں ے جس سے جنت کی نعمتوں کا احساس بھی پیدا ہوتاہےسبزیاں کم کھاتے ہیں اصل میں ہمارا زیادہ تر کھانا ہوٹلوں پر ہوتا ہے جہاں کی سبزی معیاری نہیں ہوتی زیادہ گوشت خور واقع ہوئے ہیں دال میں دہلی ہو ئی مونگ اور لوبیہ زیادہ پسند ہے اور مفت کی دعوت میں جو ملے میزبان پر احسان کرتے کرتے سب کھا جاتے ہیں ہماری صحت کا راز ہی کھانے میں ہ

Lubna Ali
06-12-2008, 03:40 PM
ایک صحافی ہونے کے ناتے معاشرے میں آپکی زمہ داری زیادہ بڑھ جاتی ہے ۔۔ اس کا کتنا اثر اصل زندگی پر پڑتا ہے

Samreen Waheed
06-12-2008, 04:47 PM
اسلام علیکم ناظرین و حاظرین! بوجہ موسم کی خرابی کچھ دن تک میں انٹر نیٹ کی سہولت سے محروم رہوں گی دوسرا کچھ عید کی مصروفیات بھی ہوں گی سو آپ سب سے التماس ہے کہ میری غیر حاضری میں آپ سب امکان بھای کی جان نا چھوڑیے گا اور اسی طرح ان سے سوالات پوچھتے رہیے گا۔ انشا اللہ عید کے بعد ملاقات ہو گی آپ سب کو عائیش کی جانب سے عید مبارک

سمر
06-12-2008, 05:27 PM
اگر ھم میں سے کوئی صحافی بننا چاھے تو ھمیں کن صحافتی اصولوں کو مد نظر رکھنا ھو گا؟

imkan
06-12-2008, 05:43 PM
آج کل اکثر کالم نگار خود تحقیق کرنے کی بجائے کالم لکھتے ھوئے غیر ملکی میڈیا کی خبروں پر انحصار کرتے ھیں کیا یہ طریقہ مناسب ھے؟
مسلم میڈیا کیا ہے آپ کو حیرت ہو گی اسلامی ممالک کی ڈھائی سو نیوز ایجنسیاں ہیں مگر ان کا دائرہ کار علاقائی اور ملکی لیول کا ہے اور ان کا معیار بھی زیادہ بلند نہیں اس کے مقابلے میں ایسویسی ایٹیڈڈ پریس آف امریکا اے پی رائڑ برٹش ایجنسی فرانس پریس اے ایف پی یہ چند مثالیں غیر ملکی نیوز ایجنسوں کی یہ وہ نیوز ایجنسیاں ہیں دینا کا کوئی اخبار میڈیا کا ان کی سروس کے بغیر چلنا مشکل ہے دنیا کا ہر اخبار اور ہر نشریاتی ادارہ ان کی خبروں کے بغیر بین الاقوامی صحافت ناممکن ہے علافائی اخبار تو چل سکتے ہیں مگر اآج ایسے علاقائی اخبار کم ہیں جو بین االاقوامی خبروں کو جگہ نہ دیں یاہونیوز اورگوگل نیوز بھی انکی سروس لیتے ہیں اور جو لوگ ان کی سروس حاصل نہیں کر سکتے وہ ان کی چوری شدہ نیٹ پر موجود خبروں سے کام چلاتے ہیں تو کالم نویس خبر خود کہاں سے لائیں مشرق وسطی کے حوالے سے عرب میڈیا بہت فاسٹ ہے مگر ان کی اصل معلومات عربی میں ہوتی ہیں عربی سے انگریزی میں جو میں معلومات ترجمہ ہوتی ہیں وہ ناکافی ہوتی ہیں عالم اسلام کے تمام ملکی لیول کے اخبارات کی تعداد ایک ہزار بنتی ہے ان میں بین الاقوامی گنتی کے چند ہیں اور انکی مختلف زبانوں کی وجہ سے ایک دوسرے کی تحقیق سے فائدہ اٹھانا مشکل ہے اور نیٹ پر بھی اخبارات کے آن لائن اڈیشن کم ہی ہوتے ہیں پاکستان کا خبرین اور نوائے وقت جیسے آخبار مکمل آپ ڈیٹ نہیں ہوتے جناح ایکسپریس کی خبروں تک کو یونی کوڈ نہ ہونے کی وجہ سے سرچ نہیں کیا جاسکتا پاکستان میں نیوز سرچ کی سہولت صرف جنگ نے دے رکھی ہے اسیے حالات میں کالم نیویس معلومات کہاں سے لائیں دوسری بات مغربی میڈیا معلومات غلط دے یا صحیح مگر اس کی صحافت تحقیقی ہوتی ہے اپ کو ہر موضوع پر کچھ نہ کچھ مل جائے گا

imkan
06-12-2008, 06:15 PM
آپ خود کالم نگار ھیں پاکستان کے کس کالم نگار کے کالم آپ ضرور پڑھتے ھیں؟
ویسے ہماری کوشش ہوتی ہے جنگ کے کم ازکم تمام کالم نگاروں کو پڑیں تاکہ جس موضوع پر ان لوگوں نے لکھ دیا ہے ان سے ملتا جلتا کوئی ہلکہ سا اشارہ بھی ان سے میل نہ کھانے پائے اور جب جن دنوں کو کالم بارسال کرنا ہو تو یہ دیکھنا لازمی ہوتا ہے اس سے تمام لکھنے والوں کے موضوعات کا بھی اندازہ ہوجاتا مجھے سب سے زیادہ ان کالم نگاروں کے کالم اچھے لگتے جو اپنی شخصیت کو بطور دلیل پیش کر نے کی بجائے معلومات پر زیادہ زور دیتے ہیں اس لحاظ سے سب سے بڑا نام جاوید چوہدری کا آتا ہے مگر ان کے سارے کالم نہیں پڑھ سکتا جنگ میں حامد میر اور روف کلاسرہ کے کالم لازمی پڑھنے کی کوشش کرتا ہوں کیونکہ ان دونوں کے کالم معلوما تی ہوتے ہیں معلومات کا ترجمہ معلومات سے ہوتا مگر لفاظی کا ترجمہ نہیں ہوتا آپ ًمحض لفاظی سے 16سو الفاظ کا کالم لکھ سکتے ہیں مگر اگر اپ کو ترجمہ کرنے کا کہا جائے تو اس کے اصل ٰخیال کا ترجمہ چند سطریں ہونگی اس کا مطلب ہوا کہ آپ نے جو کالم لکھا ہے وہ جند سطریں ہے اور ہم ان چند سطری کالم نہیں پڑھتے

imkan
06-12-2008, 06:37 PM
ظہیر بھائی ۔ آپ کا انٹرویو بہت معلوماتی ھے میں بھی باقاعدگی سے پڑھ رھا ھوں۔ آپ کی زحمات کا شکریہ۔

کیا آپ کے پاس فرصت ھو گی کہ اسے ترتیب سے بھی لکھتے رھیں اور ختم ھونے پر ایک ھی مقالہ کی صورت میں شائع کر سکیں کیونکہ اس میں زیادہ آسانی سے قارئین آپ کے خیالات جان سکیں گے۔
شہزاد قیس بھائی یہ آپ کی حوصلہ افزائی کا نتیجہ ہے ہم پوری کوشش کریں گے کے اس میں ترتیب قائم رکھ سکیں ظاہر ہے جیسے سوالات ہونگے ویسے ہی جوابات ہونگے بعد میں اس ترتیب کی ایک صورت یہ ہو سکتی ہے تمام اہم سوالات کو ایک جگہ جمع کر دیا دیا اور انکو باقی رکھا جائے دوسری صورت یہ ہو سکتی ہے کہ اس تمام ڈیٹا کو یونی کوڈ سے ان پیچ پر منتقل کر کے مربوط کر کے پھر بونی کوڈ پر پیسٹ کر دیا جائے چونکہ میرا اتنا ہی اس بارے میں علم ہے سچی بات تو یہ کہ مجھے ترتیب والی بات کا اآسان حل نظر نہیں آرہا اس سلسلے میں اگر آپ کوئی میری تجاویز سے ہٹ کر اپنے تجربے کی بنیاد پر کوئی رہنمائی کریں تو میں ٹائم نکال کر آہست اہستہ اسے ترتیب دینے کی کوشش کرونگا مجے تو اتنا معلوم ہے کہ اس ڈیٹا کو کاپی پیسٹ کر کے دوبارہ کسی تھریڈ پر منتقل کیا جا سکتا ہے اس کے علاوہ مجھے کچھ پتہ نہیں انٹریو پسند کرنے کا بے حد شکریہ امیدکرتے ہیں آپ کے مفید مشوروں کی رہنمائی کس سلسلہ جارےی رہے گا

imkan
06-12-2008, 07:01 PM
ایک صحافی ہونے کے ناتے معاشرے میں آپکی زمہ داری زیادہ بڑھ جاتی ہے ۔۔ اس کا کتنا اثر اصل زندگی پر پڑتا ہے

ظاہر ہے صحافی بھی انسان ہوتے ہیں اور خاصے حساس ہوتے ہیں لوگوں کو تکلیف پہنچتی ہے تو اس کا اثر ہم پر بھی پڑتا ہے دل جلتا ہے اور کڑہن ہوتی ہے ہمیں ساستدانوں کی عیاری اور عوام کی سادگی کا بھی احساس ستاتاہے مگر مسائل حل کرنےسے ختم ہوتے ہیں لکھنے سے نہیں جب حکمران اثر ہی نہ لیں گے تو صحافت کیا کریے گا صحافت کا کام تو نشان دھی کرنا ہوتا ہے ان کے پاس روک ٹوک کی طاقت نہیں ہوتی جس طرح عدالتوں کا کام احکامات دینا ہوتا ہے او راس کا نفاذ کرنا نہیں ہوتا نفاذ تو پولیس کرتی ہے اس طرح صحافی نشان دھی کرسکتاہے اور کچھ نہیں کرسکتا تین شعبے بھتری کے لیے متحد ہوجائیں توانقلاب پرپا کیا جاسکتاہے ایک پولیس دوسرا وکیل ااور تیسرا میڈیا آپ نے دیکھا ہو گا کہ جب سے وکیل اور میڈا ایک ہوئے مشرف جیسے انتہائی طاقت ور اورجابر حکمران اقتدار سے ہاتھ دھو بیٹھے اب تک صرف پولیس ان کے ساتھ نہیں تھی اگر پولیس ان کے ساتھ مل جاتی تو انقلاب آج بھی پرپا ہوسکتا

Lubna Ali
06-12-2008, 07:13 PM
کوئی ایسا شخص جس سے آپ نے بہت کچھ سیکھا ہو

Lubna Ali
06-12-2008, 07:17 PM
کس موضوع پر لکھنا بہت پسند ہے

imkan
06-12-2008, 07:21 PM
اگر ھم میں سے کوئی صحافی بننا چاھے تو ھمیں کن صحافتی اصولوں کو مد نظر رکھنا ھو گا؟
اگر آپ صحافی بن گئے تو پہلا سوال یہ پیدا ہو گا ہمارا کیا بنے گا ہم جیسے لوگ جنہوں نے ساری زندگیا ں تک صحافت کو دے ڈالی ہیں کیا ہم مٹر گشت کریں گے دوسری بات یہ کہ آپ پہلے اپنی تعلیم کے بارے میں بتائیں ویسے تو مھجے آپ آدھے صحافی لگنے لگے ہیں کسی غلط فہمی کا شکار مت ہویے گا کیونکہ ہم کوئی صحافت کی اتھارٹی تو نہیں میں نے آپ کی تحریر پڑہی ہیں زوق ااچھا ہے اور شوق سے بڑھ کر کچھ نہیں روف کلاسراہ دی نیوز کے مانے ہوئے نامور سینئر رپورٹر ہیں یہ اپنی تعلیم سے فارغ ہونے کے بعد لاہور کے ایک اخبار میں گئے انہوں نے انہٰں ساری عمر کے لیے صحافت کے لیے ناکا م قرار دیا مگر اآج وہ ھی پاکستان کے سب سے بڑے اخبار جنگ کے بہترین کالم نگار اور دی نیوز کے سینیر رپورٹر ہیں غالبا لاہور کےجس اخبار مٰن وہ گئے تھے وہ بھی انگریزی کا تھا میری ساتھ ایک کورٹ رپورٹر ہیں جنکو ایک صحافت سکھانے والے ادراے نے صحافت کے لیے ناکام قراردیا تھا آج وہ شخص اخبار کی کورٹ جیسی مشکل ترین بیٹ پر کام کرہا ہے اور سینئر کورٹ رپورٹر بھی اس سے خبیرں لیتے ہیں شوق کاکا کوئی مول نہیں ہوتا اور قابلیت کسی کے ماتھے پر لکھی نہیں ہوتی ہم خود اگر اپنے بارے میں غور کریں تو کتنی ہی صلاحیتیں ایسی ہیں جنکا ہمیں علم ہی نہیں ہوتا مگر عمر او رتجربہ کے ساتھ ساتھ ان چھپی ہوئی صلاحیتوں میں نکھار آنے لگتا ہے

1UM-SiteAdmins
06-12-2008, 07:47 PM
ظہیر بھائی آداب ۔ ھر بیس ، پچیس پوسٹوں کو ساتھ ساتھ جمع آوری کرتے جائیں گے تو آسانی رھے گی۔ کیونکہ اس کی ایک ھزار سے زائد پوسٹیں ھو جانا یقینی ھے۔ بعد میں انہیں مائیکروسوفٹ ورڈ میں لے جا کر مزید کانٹ چھانٹ کی جا سکتی ھے۔ یوں آپ کی بائیوگرافی کی کتاب بھی ساتھ ساتھ تیار ھو جائے گی۔ تاھم پڑھنے والے کو بہت سہولت رھے گی اور تکراری سوالات سے بھی بچ جائیں گے۔


ایسا فارمیٹ کافی رھے گا۔

آپ کا اصلی نام کیا یے
آپ نے نام پوچھا ہے یہ ماضی سے روایت رہی کہ عامل صحافیوں کے دو نام ہوا کرتے ہیں آپ نے ادیبوں کے ھاں بھی دیکھا ہوگا کے انکا اصل نام کچھ ہوتا ہے اور مشھور وہ کسی اور نام سے ہوجاتے ہیں میں چونکہ عامل صحافی یعنی رپورٹر بھی ہوں اس لیے میرا اصل نام تو محمد زبیر ہے جب کے صحافت میں پیشہ وارانہ نام زبیر احمد ظہیر ہے

آپ کا نک کیا ہے
میرا نک نیم امکان ہے یہ دراصل میرے کالموں کے عنوان امکانات سے لیا گیا ہےجب ون اردو پر ہم داخلہ کی کوشش میں مصروف تھے تو ہم نے امکانات کو اختیار کرنے کی لاکھ کوشش کرلی مگر یہ ہو کر نہ دیا تب ہم نے امکانات سے ملتا جلتا نام امکان رکھا امکانات میں مستقبل کے تجزیہ کے معنی موجود ہیں ہم نے اپنے سر درد ی جیسی خطرناک بیماری پیدا کرنے والے کالموں میں مستقبل کی جانکاری دینے کی کوشش ہمیشہ کی ہے آپ نے نجومیوں کو فٹ پاتھ پر دیکھا ہو گا بس ہمارے تجزیے کو بھی آپ نجومیوں والی بھڑک ہی سمجھ لیں

اپنا سن پیدائش صحیح بتایے آپ کب اور کہاں پیدا ہوے
ابو کی سینہ بہ سینہ روایت اور انکی تحریری یاداشت کے مطابق ہماری پیدائش 17 جنوری 1979کو آزاد کشمیر کے دارلاحکومت مظفر آباد کے نواحی علاقے منڈگراں میں ہوئی جب ہمارے ابو بسلسلہ ملازمت یہاں مقیم تھےیہ علاقہ مظفر آباد سے 25کلومیٹر وادی کوٹلہ میں واقع ہے

imkan
06-12-2008, 08:32 PM
شہزاد قیس بھائی یہ صورت نسبتا آسان ہے اور عید کے بعداپ کے مشورے کے مطابق ایک الگ تھریڈ کھول کر اسے مختصر کرنے کی کوشش کرونگا اور اس طرز پر مزید ان سوالات کو جو محض ذاتی ہیں معلوماتی نہیں انہیں بھی نکال دونگا ان شاء اللہ ابھی ٹھوڑا سا مصروف ہوں اور مجھے ایک دو دنوں کے اندر عید پر راوپنڈی جانا ہے

HJaved
06-12-2008, 08:49 PM
شہزاد قیس بھائی یہ صورت نسبتا آسان ہے اور عید کے بعداپ کے مشورے کے مطابق ایک الگ تھریڈ کھول کر اسے مختصر کرنے کی کوشش کرونگا اور اس طرز پر مزید ان سوالات کو جو محض ذاتی ہیں معلوماتی نہیں انہیں بھی نکال دونگا ان شاء اللہ ابھی ٹھوڑا سا مصروف ہوں اور مجھے ایک دو دنوں کے اندر عید پر راوپنڈی جانا ہے

امکان بھائی انٹرویو میں تو ذاتی اور معلوماتی دونوں طرح کے سوالات ہوتے ہیں ،اسی کو انٹرویو کہتے ہیں ۔ معلومات تو کسی اور تھریڈ میں بھی آپ سے لی جا سکتی ہیں ۔اس لیے ذاتی سوالات کو ڈیلیٹ نہ کریں کہ لوگوں نے شوق سے پوچھے ہوتے ہیں ۔ کیا غلط کہا۔

imkan
06-12-2008, 09:04 PM
کوئی ایسا شخص جس سے آپ نے بہت کچھ سیکھا ہو
صحافی کس سے نہیں سیکھتا صحافی تو ہر ایک سے سیکھتا ہے آپ کو کیا معلوم ہے کے ہم آپ سے بھی سیکھ رہے ہوں صحافی کا دماغ ہر وقت چل رہا ہوتا ہے ہم جس کے قریب سے گزرتے ہیں اس پر سوالات کی بوچھاڑ کر دیتے ہیں اور بات کی تہہ تک پہنچنے کی کوشش کرتے ہیں ہم جہاں کہیں ہوں دماغ چلتا رہتا ہے ہر ایک چیز کا باریک بینی سے جائزہ لیتے ہیں ہمارے استادوں کی فہرست طویل ہوتی ایک جوتا ٹانکنے والے سے لیکر ایک وزیر مشیر تک یہ سب لوگ ہمارے غیر رسمی استاد ہوتے ہیں تاہم پہشہ وارانہ ترتیت کا جہاں تک سوال ہے اس میں بھی ہمارے پیشے کے اصول نرانے ہیں صحافت دنیا کا واحد شعبہ ہے جہاں دن بدن صلاحیت میں کمی کی بجائے اضافہ ہوتا ہمارے جو صحافی جتنا بزرگ ہوگا وہ اتنا ہی سینئر ہو گا اس شعبہ میں کوئی ریٹائرڈمنٹ نہیں ہوتی آپ نے دیکھا ہو گا ٹی وی کے ٹاک شوز میں بسا اوقات کسی بزرگ صحافی کو مدعو کیا جاتا تو ان کی عمر اتنی ہوتی ہے وہ وھیل چیئر پر بیٹھ کر آتے ہیں صحافت کی رسک والی ملازمت میں بڑھاپا بھی جلدی آتاہ
اس سے ثابت ہوا کہ ہمارے ہاں سینئر کی قدر زیادہ ہوتی ہے ہم لوگ اپنے آفسز میں موجود ساتھی دوستوں سے بھی مدد لیتے ہیں ہمارے ہاں یہ بات مقبول عام ہے کہ اخبار میں چھپ جانے والی اس ایک غلطی سے جو لاکھوں لوگوں کے سامنے ائے چند دوستوں کے سامنے اس کی تصیح زیادہ بہتر ہے اس لیے ہم لوگ سینئر سے پوچھنے میں جھجک محسوس نہیں کرتے تاہم اتنا ہوتا ہے وہ سنئر حقیقی معنوں میں سینئر ہو ہم اپنے سینئر کی سنیارٹی کو آزماتے ضرور ہیں خود میری یہ عادت رھی ہے میں نے اپنے دفتر اپنے سیکشن کے صرف سابق چیف رپورٹر سے کبھی کبھی مدد لی ہے وہ سابق چیف رپورٹر آج ایک آخبار کے ایڈیڑ ہیں ہم اپنے جونئیر سے عام طور پر پوچھتے نہیں اور اگر کوئی اس کے شعبے کا کوئی خاص معاملہ ہو تو اس سے بریفنگ لے لیتے ہیں ایک خاص بات یہ ہے دنیا کی ہر تحریر میں بھتری کی گنجائش ہوتی ہے اس لیے ہم لوگ اپنی کسی نیوز کو حرف آخر نہیں سمجھتے عام طور پر زیادہ پریشانی نئے لوگوں کو نیوز میں انٹرو کی ہوتی یہ انٹرو جو پہلی سطر میں خبر کا سارا خلاصہ ہوتاہے نئے کیا بسا اوقات پرانے لوگوں کے لیے بھی پریشانی کا باعث ہوتا ہے اس انٹرو سے ہی خبر کی سرخی اور جلی نکلتی ہے تو خلاصہ یہ ہے کہ صحافی بڑھاپے تک سیکھتا رہتا رہتا ہے

imkan
06-12-2008, 09:25 PM
امکان بھائی انٹرویو میں تو ذاتی اور معلوماتی دونوں طرح کے سوالات ہوتے ہیں ،اسی کو انٹرویو کہتے ہیں ۔ معلومات تو کسی اور تھریڈ میں بھی آپ سے لی جا سکتی ہیں ۔اس لیے ذاتی سوالات کو ڈیلیٹ نہ کریں کہ لوگوں نے شوق سے پوچھے ہوتے ہیں ۔ کیا غلط کہا۔
ہما صحافی آپ ہیں یا ہم بہت دھانسو قسم کا سوال داغ ڈالا ہے آپ نے سوال جس انداز میں آپ نے کیا ہے اس جارحانہ انداز پر آپ کو دس پوائینٹ سمیت مبارک دی جاتی ہے ٹھیک ہےجناب مگر کیا سوال جواب کو ایک پوسٹ میں کرنے کی اجازت ملے گی تاکہ اسے جامع اور مختصر بنایا جاسکے یا یوں ہی چلتا رہے اس معاملے میں آپ کی کیا رائے ہے امید ہے اب کی بار آپ کا انداز جارحانہ کم ہمدردانہ زیادہ ہوگا

اسد شیرازی
06-12-2008, 09:31 PM
ہما صحافی آپ ہیں یا ہم بہت دھانسو قسم کا سوال داغ ڈالا ہےآپ نے سوال جس انداز میں آپ نے کیا ہے اس جارحانہ انداز پر آپ کو دس پوائینٹ سمیت مبارک دی جاتی ہے ٹھیک ہےجناب مگر کیا سوال جواب کو ایک پوسٹ میں کرنے کی اجازت ملے گی تاکہ اسے جامع اور مختصر بنایا جاسکے یا یوں ہی چلتا رہے اس معاملے میں آپ کی کیا رائے ہے امید ہے اب کی بار آپ کا انداز جارحانہ کم ہمدردانہ زیادہ ہوگا

بہت اچھی بات ہے ایسا ہی ہونا چاہئے انٹرویو کو مختصر اور جامع ہونا چاہئے تاکہ قاری کی دلچسپی قائم رہے

HJaved
06-12-2008, 09:37 PM
ہما صحافی آپ ہیں یا ہم بہت دھانسو قسم کا سوال داغ ڈالا ہےآپ نے سوال جس انداز میں آپ نے کیا ہے اس جارحانہ انداز پر آپ کو دس پوائینٹ سمیت مبارک دی جاتی ہے ٹھیک ہےجناب مگر کیا سوال جواب کو ایک پوسٹ میں کرنے کی اجازت ملے گی تاکہ اسے جامع اور مختصر بنایا جاسکے یا یوں ہی چلتا رہے اس معاملے میں آپ کی کیا رائے ہے امید ہے اب کی بار آپ کا انداز جارحانہ کم ہمدردانہ زیادہ ہوگا

نہیں امکان بھائی جارحانہ تو بالکل نہیں تھا ،بس ذرا اپنی رائے بتائی تھی ۔ہیں جی :eek:۔اور بالکل ایک جگہ سوال جواب اچھا ہی ہے کہ اس سے جواب ڈھونڈنا نہیں پڑتا ۔

imkan
06-12-2008, 09:45 PM
نہیں امکان بھائی جارحانہ تو بالکل نہیں تھا ،بس ذرا اپنی رائے بتائی تھی ۔ہیں جی :eek:۔اور بالکل ایک جگہ سوال جواب اچھا ہی ہے کہ اس سے جواب ڈھونڈنا نہیں پڑتا ۔
شکریہ آپ کے سوال کا بھی انتظار رہے گا مگر سوال ویسا ہی دھماکہ خیز ہونا چاہئے

imkan
06-12-2008, 10:01 PM
کس موضوع پر لکھنا بہت پسند ہے
روایت سے ہٹ کر لکھنا مثلا مذہب کا موجودہ حالات میں دفاع مشکل ترین موضوع ہے کیونکہ رائے عامہ بسااوقات خلاف بھی ہوتی ہے اس کےعلاوہ دہشت گردی بھارت کشمیر افعانسان عالم اسلام پاکستان عوامی مسائل نت نیے موضوعات نئے خیالات اورنئی تحقیقات تاہم عام طور پر اخبارات میں حالات حاضرہ پر ہی لکھا جاتا اورکرنٹ ایشوز ہی پر سب کی توجہ غالب رہتی ہے کیونکہ کرنٹ ایشوز کے بارے میں لو گ جاننا چاہتے ہیں

HJaved
06-12-2008, 11:32 PM
شکریہ آپ کے سوال کا بھی انتظار رہے گا مگر سوال ویسا ہی دھماکہ خیز ہونا چاہئے

جی بالکل سوال تو میں پوچھوں گی ہی وہ بھی ایک نہیں بلکہ بہت سے ۔ لیکن ذرا آرام سے ۔

HJaved
06-12-2008, 11:39 PM
زرد صحافت کے بارے میں آپ کی کیا رائے ہے ?

Rose
07-12-2008, 10:24 AM
السلام علیکم

کیا یہ صحیح ہے کہ صحافی عموماً شکی مزاج ہوتے ہیں؟

Rose
07-12-2008, 10:28 AM
کیا صحافی کے لئے فیس ریڈنگ یا باڈی لنگویج کو سمجھنے کی مہارت ہونی چاہئے؟

Rose
07-12-2008, 10:32 AM
کیا ایک کامیاب صحافی کو پرنٹ یا الیکٹرونک میڈیا کے مالکان کی منشاء کے مطابق چلنا ضروری ہے؟

Rose
07-12-2008, 10:38 AM
ہندوستان میں تہلکہ ڈوٹ کام نے کرپشن کے بڑے بڑے مگر مچھوں کو بے نقاب کیا،پاکستان میں اس طرح کی صحافت کیوں نہیں ہو رہی؟

Rose
07-12-2008, 10:41 AM
صحافیوں کے لئے پاکستان کا سب سے زیادہ خطرناک اور سب سے کم خطرناک شہر کون سا ہے؟

Rose
07-12-2008, 10:45 AM
آپ کا تعلق آزاد کشمیر سے ھے تین برس قبل آنے والے آٹھ اکتوبر کے زلزلہ میں قوم کو موٹیویٹ کرنے میں میڈیا نے جو کردار ادا کیا،کیا آپ اس سے مطمئن ہیں یا سمجھتے ہیں کہ مزید کام ہونا چاہئے تھا؟

imkan
07-12-2008, 01:13 PM
زرد صحافت کے بارے میں آپ کی کیا رائے ہے ?
زرد صحافت کے حوالے سے ہم صحفہ 5 پر لکھ چکھے ہیں آپ دیکھ لیں میری رائے یہ ہے کہ جب اپ معاوضے اچھے دیں گے تو زرد صحافت نہیں ہو گی صحافی کسی کی جیب نہیں کاٹتا یہ تو آپ لوگ خود بخوشی دیتےہیں ان میں کئی رقوم تو سالانہ عید اور اہم دنوں پر ملنے والے تحائف بھی ہو تے ہیں جو بخوشی دیے جاتے ہیں صحافی کسی شریف آدمی کو بلیک میل نہیں کرتے اس لیے کہ شریف آدمی کی کوئی کمزوری نہیں ہو تی بلیک میل بھی اسے کیا جاتاہے جو بلیک منی کو سفید کرنے کی دھن میں مگن ہوتاہے دوسری بات صحافی کوئی جن نما مخلوق تو نہیں کہ انکو سب معلوم ہوتا ہے آپ کا کوئی ملازم جس کا آپ نے حق مارا ہوگا وہ ہی تو جل بھن کر صحافیوں کو بتلاتاہے آگر آپ لوگ نہ بتائیں تو صحافی خود تو جرم میں شریک تو ہیں ہوتے کہ انہیں معلوم ہو زرد صحافت کو رواج بھی سیاست دانوں نے خود دیا ہے اپنی دوستی اور خبریں لگوانے کے لیے
بسااوقات کسی صحافی کو کسی تحقیقی خبر نکالنے کے لیے خاصی رقم درکار ہوتی ہے جو وہ ادا نہیںکرسکتا عام طور پرخطرناک خبریں دینے والے بھاری رقم کا مطالبہ کرتے ہیں کسی اسکینڈل کو منظر عام پر لانے کا یہ ساراخرچہ بھی پھر ان لوگون سے نکالاک جاتا جوخود چور ہوتے ہیں صحافی عام طور خبروں کے اپنے نیٹ ورک پر بھی خرچ کرتے ہیں اور بسا اوقات سورس کے مفادات بھی پورے کرنے ہوتے ہین ہم نہیں سمجھتے کہ ذرد رقم بچون پر کوئی خرچ کرتا ہوگا

imkan
07-12-2008, 01:32 PM
السلام علیکم

کیا یہ صحیح ہے کہ صحافی عموماً شکی مزاج ہوتے ہیں؟
شک تفتیش کی بنیاد ہے دنیا کی ہر انٹلیجنس ایجنسی کی تحقیق شک سے شروع ہوتی ہے سائنس کی ہر ایجاد میں شک کا عمل دخل ہے بعنی کہ اگر ایسا ہو جائے کسی بھی تحقیق کے لیے پہلے ایک فرضی خاکہ بنایا جاتا ہے یہ فرضی اور خیالی ہوتاہے بذات خود شک مفروضے پر مبنی ہوتاہے کوئی کام یا جرم جب ہوجائے تو تو اسے ٹریس کرنے کے کہ کیسے ہوا ہوگا اس کے لیے شک کی بییاد پر مفروضے بنائے جاتے ہیں بعد میں جب تحقیق ہوتی ہے تو اصل کہانے ان ہی مفروضوں سے ملتی جلتی نکلتی ہے کئی ماہر تفتیشی تو ایسے بھی ہوتے جو جائے وقوعہ کا معائنہ کرتے ہیں مجرم کی آمد و رفت کا جائزہ لیتے ہیں اور اس بنیاد پر ایک کہانی بنیا کر تفتیش شروع کرتے تو مجرم اس خاکے کے مطابق بے نقاپ ہو جاتے بعض زہین انٹیلی جنس آفیسر خود کو مجرم بنا کر سوچتے ہیں کہ اگر وہ خود چوری کرتے تو کیسے کرتے شک تو زھانت کی علامت ہوتا ہے آپ نے جو صحافیوں پر شکی مزاح ہونے کا شک کیا یہ بھی تو زہانت ہیہے نا کسی شکی کا زہن ہی اس جانب جاسکتاہے نا ہاں یہ شک پیشہ وارانہ ہونا چاہیے گھریلو نہین ہوتا چاہیے عموما خواتین شکی مزاج شوہروں سے تنگ ہوتی ہیں اور انہیں اچھا نہیں سمجھتیں یہ ایک الگ بحث ہے اس پر ایک سوال کیا جائے تو تفصیلی جواب دیں گے ویسے روز سوال آپ کے بھی لاجواب ہیں اس سوال پر آپ کو دس پوائینٹ ملیں گے آپ ائی کیش چیک کر لینا

imkan
07-12-2008, 02:52 PM
کیا صحافی کے لئے فیس ریڈنگ یا باڈی لنگویج کو سمجھنے کی مہارت ہونی چاہئے؟
فیس ریڈنگ اور باڈی لینگوینج کی صحافیوں میں دو صورتی ہیں عام طور پر صحافیوں کی پبلک ڈیلنگ اتی ہوتی ہے کہ یہ عمر کے ساتھ یہ فن سیکھ لیتے ہیں آپ اسے یوں سمجھ سکتے ہیں کہ جس طرح دوکاندار ہوتاہے سیل مین ہوتاہے ڈاکٹر ہوتا ہے یہ لوگ بھی فیس ریڈنگ کئے ماہر ہوتے ہیں مگر انکی فیس ریڈنگ محدود ہوتی ہے آپ اس فیس ریڈنگ کو مخصوص شعبہ جاتی کہہ سکتے ہیں یہ فن پبلک ڈیلنگ اور اپنے شعبے کے سینر لوگ ان کو وقتا فو قتا بتاتے ہیں اور یوں یہ فن سینہ بہ سینہ منتقل ہوتاہے یہ مشاہدات اور تجربات ہوتے ہیں اس فیس ریڈنگ کو پیشہ وارانہ فیس ریڈنگ نہیں کہا جاسکتا صحافیوں میں عام طور پر یہ فیس ریڈنگ بدرجہ اتم موجود ہوتی ہے اور شعبہ جاتی سے زیادہ عمومی ہوتی ہے اس لیے کے انکا واسطہ عام افراد سے زیادہ پڑتاہے دوسری قسم آجاتی ہے فیس ریڈنگ کے وہ قوانیں جو صدیوں سے آزمودہ چلے آرہے ہیں اس میں تفتیشی صحافی خاصے ماہر ہوتے ہیں انہوں نےکچھ اصول خود وضح کیے ہوتے ہیں انٹیلی جنس میں یہ پر اسرار فنوں ریڈھ کی ہڈی جیسی اہمیت رکھتے ہیں میرے ایک سینئر صحافی دوست ہیں جو کسی زمانے میں دہشت گردی کے ہاہر تحقیقی صحافی رہے ہیں انہوں نے فیس ریڈنگ تو کہیں نہیں سکھی مگر وہ آنے والے کے مقصد کاانداہ لگا لیتے ہیں وہ اس فن میں انتے ہاہر ہیں کہ انٹلی جنس اہلکاروں کا چہرہ بھی پڑھ لیتے ہیں جبکہ انٹلی جنس کے لوگ عام طور پر چہرہ پڑھنے نہیں دیتے اور تاثرات چھپانے کی صلاحیت رکھتے ہیں اگر ان صحافی دوست کو دیکھا جائے تو انہوں نے فیس ریڈنگ کی کوئی عام کتاب بھی اٹھا کر نہیں دیکھی تو ثابت یہ ہوا کہ فیس رنڈنگ ضروری نہیں تاہم اضافی قابلیت ضرور ہے ایک حقیقت یہ بھی ہے کہ صحافت میں ترقی اور قابلیت کے یہ لازمی ہے اور خاص بات یہ بسا اوقات خداد صلاحیت بی ہوتی ہے جسا کے اوپر ایک صحافی دوست کا ہم نے ذکر کیا ہے ویسے آپس کی بات ہے امکان بھائی بھی اس فیس ریڈنگ میں اناڑی ہونے کی اخری حد تک ماہر ہیں ہمارا تجربہ ہے کہ عورتوں کو پڑھنا خاصا دشوار ہوتاہے کیونکہ انکے بہت سارے چہرے ہوتے ہیں خاص طورپر جب انہوں نے موٹی تہہ والا میک اپ کیا ہو ہاہاہا

imkan
07-12-2008, 03:25 PM
کیا صحافی کے لئے فیس ریڈنگ یا باڈی لنگویج کو سمجھنے کی مہارت ہونی چاہئے؟
روز آپ کے چند سوالوں سے جو اندازہ ہم نے لگایا ہے وہ حرف بحرف پیش خدمت ہے ہم صرف ایک بات کو بیناد بنا کر یہ تجزیہ پیش کریں گے آپ کے سر کے بال کالے ہیں بظاہر یہ عام سی بات ھوگی کیونکہ بال تو عام طور پر خواتین کے کالے ہی ہوتے ہیں لیکن یہ بھی تو آپ دیکھیں نا کہ مجھے تو کچھ پتہ نہیں گورے بھی تو ہوسکتے ہیں تو ہم نے کہا کے آپ کے سر کے بال کالے ہیں بعنی کے بال مجموعی طور پر ایک نظر میں کالے نظر اآئیں گے اس کی وجہ یہ کہ عام طور پر پر اسرار علوم میں دلچسبی رکھنے والے افراد کے بال کالے ہوتے ہیں اور عام افراد کے بنسبت گھنے ہوتے ہیں اگرآپ کے بال گھنے اور مکمل کالے ہیں تو آپ کوئی انتہائی نیک قسم کی مذبھی خاتوں ہو سکتی ہیں اور پردے دار بھی ہوسکتی ہیں اور بے انتہا محبت کرنے والی بہن بیٹٰی ماں ہو سکتی ہیں۔کھا نا اچھا کھانے کی عادی ہونگی اور اگر اچھا نہ ملے تو بھوکا رہنا پسند کرتی ہونگی زہانت خود آپ کے سوال سے ظاہر ہے اور سنجدگی کالے بالوں کا خاص وصف ہےکالے بال اچھی صحت اور اچھے نظٍام ہضم کی علامت ہوتے ہیں اگر آپ کی صحت اچھی ہے تو لازمی بات ہے آپ خوش مزاج بھی ہونگی کیونکہ خوش مزاح مزاح او ہسنے مسکرانے والے لوگوں کادوران خون اچھا ہوتاہے اگر آپ خوش مزاح ہیں تو حلقہ آحباب آپ کا وسیع ہو گا اگر آپ کا حلقہ احبات وسیع ہے تو لازمی بات ہے آپ میں ہمدردی کا جزبہ زیادہ ہو گا کیونکہ وسیع حلقہ احباب کو ہمدری او ر برداشت او قربانی کے بغیر قائم نہیں رکھا جاسکتا میرے خیال میں اتنا کافی ہے ہم ہپلے ہی اعتراف کر چکے ہیں کہ خواتین کی فیس ریڈنگ مشکل یہ یہاں تو فیس ریڈنگ نہیں لفظ ریڈنگ ہے اور خیال ریڈنگ ہے بحرحا ل آپ کا جو ردعمل ہو ا میں عید کے لیے چند دنوں کے لیے غائب ہوجاوں گا

imkan
07-12-2008, 03:32 PM
امکان کو لتاڑنے والے انٹریو تاڑنے والے اور سوال جھاڑنے والےتما م کرم فرماوں سے گزارش ہے کہ امکان بھائی عید پر کراچی سے راولپنڈی جارہے ہیں اس دوران امکان غیر حاضر ہونگے تکلیف کی معذرت اگر وقت ملا تو امکان اس دوران حاضر ہونے کی کوشش کریں گے جن لوگوں کو جواب نہیں دے پائے انشاء للہ واپس آکر دیں گے اس کے ساتھ ہی زبیر احمد ظہیر عرف امکان بقلم خود سب کو پیشکی عید مبارک بولتے ہیں

سمر
07-12-2008, 03:40 PM
جی امکان بھائی ھم آپ کے سنسنی خیز انٹرویو کے مکمل ھونے کا انتظار کریں گے اب تک آپ نے تمام سوالوں کے سیر حاصل جواب دئیے ھیں،امید ھے ھمارے عجیب اور مشکل سوالات کا آپ نے برا نہیں منایا ھو گا،آپ خیریت سے جائیے اور خیریت سے واپس آئیے،ھم آپ کے منتظر رھیں گے،آپ کو بھی ھم سب کی طرف سے پیشگی عید مبارک قبول ھو۔

Samreen Waheed
11-12-2008, 02:00 AM
ہمارا تجربہ ہے کہ عورتوں کو پڑھنا خاصا دشوار ہوتاہے کیونکہ انکے بہت سارے چہرے ہوتے ہیں خاص طورپر جب انہوں نے موٹی تہہ والا میک اپ کیا ہو ہاہاہا


>:(bhai ye tu zayadti hai

Samreen Waheed
11-12-2008, 02:03 AM
امکان کو لتاڑنے والے انٹریو تاڑنے والے اور سوال جھاڑنے والےتما م کرم فرماوں سے گزارش ہے کہ امکان بھائی عید پر کراچی سے راولپنڈی جارہے ہیں اس دوران امکان غیر حاضر ہونگے تکلیف کی معذرت اگر وقت ملا تو امکان اس دوران حاضر ہونے کی کوشش کریں گے جن لوگوں کو جواب نہیں دے پائے انشاء للہ واپس آکر دیں گے اس کے ساتھ ہی زبیر احمد ظہیر عرف امکان بقلم خود سب کو پیشکی عید مبارک بولتے ہیں

Allah Hafiz aur ap ko bhi Eid Mubarak
Khariat se jaye aur khariat se wapis a ker interview mukamal kijey

Rose
13-12-2008, 09:19 AM
:)
ہمارا تجربہ ہے کہ عورتوں کو پڑھنا خاصا دشوار ہوتاہے کیونکہ انکے بہت سارے چہرے ہوتے ہیں خاص طورپر جب انہوں نے موٹی تہہ والا میک اپ کیا ہو ہاہاہا


>:(bhai ye tu zayadti hai

Lubna Ali
13-12-2008, 11:52 AM
ہمارا تجربہ ہے کہ عورتوں کو پڑھنا خاصا دشوار ہوتاہے کیونکہ انکے بہت سارے چہرے ہوتے ہیں خاص طورپر جب انہوں نے موٹی تہہ والا میک اپ کیا ہو ہاہاہا


>:(bhai ye tu zayadti hai
;d;d;d;d

Samreen Waheed
14-12-2008, 03:48 PM
Imkan bhai eid guzrey arsa ho gaya per ap badastor gayab hain

imkan
16-12-2008, 12:05 PM
کیا ایک کامیاب صحافی کو پرنٹ یا الیکٹرونک میڈیا کے مالکان کی منشاء کے مطابق چلنا ضروری ہے؟
میڈیا مالکان کا جہاں تک تعلق ہے اخبار اور الیکٹرانک کی بنیادی پالیسی وہ ہی لوگ وضع کرتے ہیں کسی بھی کامیاب صحافی کو اس کے مظابق چلنا ہوتا ہے مثلا اسلام پرو مذہب ہے تو اسکی وجہ سے اسلام میں آپ کی پرو مذہب پرو اسلام خبر کو نمایاں جگہ ملے گی اس ل یے اسلام کے رپورٹر کی کوشش ہوگی کہ کوئی ایسی ہی خبر دی جائے جس کو جگہ زیادہ ملے اس وجہ سے اسلام کا زہین رپورٹر پریس کانفرنس میں کوئی ایسا سوال کرے گا جو اس کی اخبار کی پالیسی کے مطابق ہو تاکہ اس کی خبر کو نمایاں جگہ مل سکے نوائے وقت کا رپوٹر پرو پاکستان خبر نکالنے میں دلچسبی لے گا یہ اخبار کی عمومی پالسی کا اثر ہوتاہے باقی کئی خبریں ایسی بھی ہوتی ہیں جو اگر کسی اخبار کی پالیسی کے مطابق نہ ہوں اور اسے تمام اخبار شائع کریں تواسے روکا نہیں جا سکتا اخبارات میں کبھی کبھی مالکان کے خلاف بھی خبریں شائع ہو جااتی ہیں ایکپسریں میں ایک رپوٹر نے مالکان کے ایک ذیلی ادارے کےخلاف خبر شائع کردی تھی یہ ضروری نہٰں کہ ہر خگہ مالکان ہی کی چلتی ہو انہیں کئی خبروں کا علم ہی نہیں ہوتا

imkan
16-12-2008, 12:14 PM
ہمارا تجربہ ہے کہ عورتوں کو پڑھنا خاصا دشوار ہوتاہے کیونکہ انکے بہت سارے چہرے ہوتے ہیں خاص طورپر جب انہوں نے موٹی تہہ والا میک اپ کیا ہو ہاہاہا


>:(bhai ye tu zayadti hai
ثمرین آپ کو میں خواتین میں شمار نہیں کرتا آپ کو میں ننی منی گڑیا سمجھتا ہوں جب خواتین کو اپنی عمر چھپانی ہے تو آپ انکی عمر اتنی گھٹادیں کہ غصے میں آکر وہ سچ اگل دیں ایش اب اگر آپ نے بچہ پارٹی سے نکلنے کی کوشش کی تو دیکھ لو کہیں غصے میں آکر سچ نہ بولنا پڑجائے آپ میں سے جو جو خواتین ہیں اور بچوں میں انکا شمار نہیں وہ بتائیں میں میک آپ اور مختلف چہروں کے الزام سے ا نکو نکالنے کی کوشش کرونگا ھا ھا ھاھاھاھا

Lubna Ali
16-12-2008, 12:24 PM
salam imkan bhai ....itney dino baad aye aap?..... Eid kesi guzri

imkan
16-12-2008, 12:33 PM
ہندوستان میں تہلکہ ڈوٹ کام نے کرپشن کے بڑے بڑے مگر مچھوں کو بے نقاب کیا،پاکستان میں اس طرح کی صحافت کیوں نہیں ہو رہی؟
پاکستان میں ہفت روزہ تکبیر کی تحقیقی صحافت تہلکہ سے کہیں آگے رہی ہے مگر جب تک اس کے بانی صلاح الدین مرحوم رہے اس وقت تک وہ میگزین سنسنی خیز تھا حکومت کو اس کا انتظار ہوتا تھا کہ اب ہمارے خلاف نا معلوم کیا آنے والا ہے تھلکہ ڈاٹ کام کی چند خبریں آئی تھیں کرپشن ہندوستان میں ہم سے زیادہ ہے ہم بھی اس میں کسی سے کم نہیں۔ فرق یہ کہ ہندوستان نے ان خبروں پر ایکشن لیا ہمارے ہاں ایسی درجنوں خبریں شائع ہوتی ہیں ابھی کل ہی کی بات ہے ای او بی اولڈاییچ بینیفٹ میں کرپشن کی خبر جنگ نے شایع کی ہے مگر کچھ نہیں ہوگا آپ ایک سال کے اخبار اٹھا کر دیکھ لیں آپ کو سیکڑوں کرپشن کی خبریں ملیں گی مگر نوٹس نہیں لیا جاتا ا س سےصحافی کی خوصلہ شکنی ہو تی وہ خود بدنام ہو جاتا ہے آپ کے ہاں لوٹ مار کرنے والوں کے قرضے معاف کردیے جاتے ہیں انہین این ار او کے تحت آپ کلیر کر دیتے ہیں تو کرپشن کسیے بے نقاب ہو آپ کسی ایک کرپشن کیس کا بتائیں جس میں خکومت نے دلچسبی لی ہو اور وہ سیاسی انتقام سے بالا تر ہو ہماراے ہاں قومی جزبہ نہیں پہلے تو نوٹس نہں لیا جاتا اور جب لیا جائے تو وہ سیاسی انتقام ہوتاہے عبرت کی مثالیں سیاسی انتقاموں سے قائم نہیں ہوتیں

imkan
16-12-2008, 12:43 PM
صحافیوں کے لئے پاکستان کا سب سے زیادہ خطرناک اور سب سے کم خطرناک شہر کون سا ہے؟
قبائلی علاقوں کو چھوڑ کر کراچی خطرناک اور لاہور پرامن بنتا جارہا ہے اب تمام اخباری گروپوں نے اپنے ہیڈ کواٹر کراچی کی بجائے لاھور بنانے شروع کردیے ہیں قیام پاکستان سے کراچی صحافیوں کا اہم شہر رھا ہے ریڈیو پاکستان سے ٹیلی ویثزن تک اردو لہجے میڈیا کو کراچی نے دیا ہے آج بھی بی بی سی میں اردو لہجہ کراچی کا ہی ہے پاکستان کے تمام شہروں کی بنسبت کراچی کے صحافی تعداد کے لحاظ سے زیادہ ہیں اس کی وجہ آبادی بھی ہے اور مواقع بھی ہیں معیار اور ناموری میں بھی کراچی سب سے آگے رہا اس سے کسی دوسرے شہر کی نفی مقصود نہیں مگر سچ یہ ہے جس طرح آج میڈیا ہیڈکواٹر لاہور جارہے ہیں تو مواقع بھی وہاں منتقل ہونگے کراچی کا یہ نقصان صرف بدامنی اور صحافیوں پر دباو کی وجہ سے ہے

imkan
16-12-2008, 01:15 PM
آپ کا تعلق آزاد کشمیر سے ھے تین برس قبل آنے والے آٹھ اکتوبر کے زلزلہ میں قوم کو موٹیویٹ کرنے میں میڈیا نے جو کردار ادا کیا،کیا آپ اس سے مطمئن ہیں یا سمجھتے ہیں کہ مزید کام ہونا چاہئے تھا؟
زلزلہ زدہ علاقوں میں اور خاص طور پر کشمیر میں میں چار ماہ تک رہا ہوں میں جب اپنے گھر والوں کی خیریت معلوم کرنے مظفر آباد گیا تو واپسی پر میرے اخبار کے اٰیڈیٹر نے مجھے کشمیر میں تعیینات کر دیا اس حوالے سے سچ تو یہ کہ میڈیا پہلے مکمل بے خبر تھا میڈیا کی اصل علاقائی کوریچ تین دن بعد جب ہیلی کاپٹر اپریشن شروع ہوا تو اس کا آغاز ہوا یہ بھی ائی اس پی آر تک محدود تھی ہیلی کاپٹر سامان لے جاتے تھے اور ان کے ساتھ صحافی بھی وزٹ کرتے تھے میڈیا کے وسائل مدود تھے الیکٹرنک میڈیا بجلی کی معطلی کی وجہ سے قدر محدو د اور غیر موثر تھا ان کی وہ موبائل گاڑیاں جن پر سسٹم نصب ہوتا ہے صرف سڑکیں ٹوٹننے کی وجہ سے ہر جگہ نہیں جا سکتیں تھیں دوسرا میڈیا ٹیم ساری کی ساری غیر مقامی تھی تیسرا حادثات کی کوریج کے اخبارات میں عام طور پر کرائم رپورٹر عادی ہوتے ہیں الیکٹرانک میڈیا میں کسی کی بھی اسائمنیٹ لگائے جاسکتی ہے کشمیر کے مقامی صحافی متاثر تھے خبروں کا یوں اصل ذریعے ہی مقصود تھاان تمام کمزوریوں کے باوجود قوم میں تحاد یکجہتی کا جو جزبہ پیدا ہو ا یہ بھی میڈیا نے پیدا کیا میڈیا بعد میں جب زندگی معلمول پر آنے گی تو بھرپور کردار ادا کیا اتناضرور ہے ہمارا میڈیا جتنا فاسٹ ہے وہ صرف شہروں تک محدود ہے میڈیا نے ساری یلغار اسلام آباد ہوٹل پر کر دی تھی میڈیا تو رہا ایک طرف حکومت تک بے بس تھی میڈیا نشان دہی کرتا ہے مگر میڈیا نے زلزلے میں امدادی کام بھی کیا ہے اس لحاظ سے یہ کریڈٹ میڈیا کو جائے گا اگر الکٹرانک میڈیا نہ ہوتا تو دنیا بھر کو پرنٹ میڈیا انتی جلدی اور بروقت آگاہ نہیں کر سکتا تھا ساری دنیا جو امڈ کر آئی الکٹرانک میڈیا کی وجہ سے آئی

Samreen Waheed
16-12-2008, 01:30 PM
Assalam Alikum Imkan bhai welcome back
Eid Mubarak
Waisay ap ne 3 k bajey 9 din ki din kiu manai
kia ap is per roshni dal saktey hain

imkan
16-12-2008, 01:36 PM
جی امکان بھائی ھم آپ کے سنسنی خیز انٹرویو کے مکمل ھونے کا انتظار کریں گے اب تک آپ نے تمام سوالوں کے سیر حاصل جواب دئیے ھیں،امید ھے ھمارے عجیب اور مشکل سوالات کا آپ نے برا نہیں منایا ھو گا،آپ خیریت سے جائیے اور خیریت سے واپس آئیے،ھم آپ کے منتظر رھیں گے،آپ کو بھی ھم سب کی طرف سے پیشگی عید مبارک قبول ھو۔
ماظق آپ کے سوالات زیادہ تر پیشہ وارانہ رہے ہیں اور سب اچھے سوال تھے میں نے برا نہیں منایا اشتغال والا سوال تب کیا جاتا جب انٹرویو دینے والا کسی خاص بات کو چھپانا چاہتا ہو اس وقت یہ سوال کیا جاتا اس سے غصے میں آ کر وہ آصل بات اگل دیتاہے میں تو آپ لوگوں کے سامنے ہاتھ جوڑ کر جواب دے رہا ہوں ااس لیے آپ کو اشتغال انگیز سوال کی ضرورت نہیں پڑے گی

Samreen Waheed
16-12-2008, 01:50 PM
ثمرین آپ کو میں خواتین میں شمار نہیں کرتا آپ کو میں ننی منی گڑیا سمجھتا ہوں جب خواتین کو اپنی عمر چھپانی ہے تو آپ انکی عمر اتنی گھٹادیں کہ غصے میں آکر وہ سچ اگل دیں ایش اب اگر آپ نے بچہ پارٹی سے نکلنے کی کوشش کی تو دیکھ لو کہیں غصے میں آکر سچ نہ بولنا پڑجائے آپ میں سے جو جو خواتین ہیں اور بچوں میں انکا شمار نہیں وہ بتائیں میں میک آپ اور مختلف چہروں کے الزام سے ا نکو نکالنے کی کوشش کرونگا ھا ھا ھاھاھاھا

Arey nhi bhai mei bacha party mei hi theek hon waisey meri asli umer merey account mei likhi hai ap check ker sakty hain agr doubt hai tu tehkeek ker saktey hain

imkan
16-12-2008, 02:26 PM
salam imkan bhai ....itney dino baad aye aap?..... Eid kesi guzri
لبنا واعلیکم االسلام یہ میری آج تک کم سے کم چھٹی ہے میں جب ایک ہفتے کی چھٹی پر جاتا ہوں تو دو ماہ بعد واپس آتا رہا ہوں ساری دوست مجھے واپس آنے پر مبارک بار دے رہے ہیں اور آپ ہیں کہ میں آپ کو لیٹ نظر آر ہا ہوں آپ ٹھیک ہیں ورنہ ایک نیا کالم آنے والا ہے سوچ لیی

imkan
16-12-2008, 02:27 PM
Assalam Alikum Imkan bhai welcome back
Eid Mubarak
Waisay ap ne 3 k bajey 9 din ki din kiu manai
kia ap is per roshni dal saktey hain
عید کراچی سے راوپنڈی اور راولپنڈی سے مظفر آباد اور مظفر آباد سے گاوں تک سفر میں گزری ایک ہفتے کے اندر جا کر لوٹا ہوں سفر کی وجہ سے گوشت بھی ڈھنگ سے نہیں کھا پائے ریل پر جاتے ہوئے ٹکٹ نہیں ملی اور کوچ پر گئے وہ بھی لیٹ ہو گئی واپسی پر ٹرین پر آتئ وہ بی لیٹ ہو گئی عید کے دوسرے دن اڈے پر گزاری اور گاڑی شام کو ملی دوسری دن سفر اور رات مظفر ااباد میں گزاری آگے بارشیں تھیں جہاز پر اپنی جیب سے سفر نہیں کرتے عید پر کسی کو ایسا کام بھی نہیں پڑا کے ہم جہاز پر جاتے ویسے رش بھی ہیت تھا یہ ہماری عید تھی

سمر
16-12-2008, 02:27 PM
آپ کو چھٹیوں کے بعد دوبارہ خوش آمدید کہتے ھیں۔

کیا صحافی خشک مزاج ھوتے ھیں یا خوش مزاج؟

سمر
16-12-2008, 02:30 PM
کیا صحافتی ذمہ داریوں سے گھریلو زندگی ڈسٹرب ھوتی ھے؟

سمر
16-12-2008, 02:33 PM
کیا کسی بھی اھم شخصیت کی نجی زندگی میں دخل اندازی کرنا صحافتی زمرے میں آتا ھے؟

سمر
16-12-2008, 02:37 PM
صحافت کی تین خوبیاں اور تین خرابیاں آپ کی نظر میں کون کون سی ھیں؟

imkan
16-12-2008, 07:10 PM
آپ کو چھٹیوں کے بعد دوبارہ خوش آمدید کہتے ھیں۔

کیا صحافی خشک مزاج ھوتے ھیں یا خوش مزاج؟
مزاج ہر شخص کا نرالہ ہوتا ہے کسی صحافی کو نہ تو مکمل خوش مزاج کہا جا سکتا ہے اور نہ ہی مکمل خشک مزاج عام طور پر شرمیلے لوگ بھی ماحول کی وجہ سے باتونی بن جاتے ہیں ساری بات ماحول کی ہوتی ہے البتہ اتنا ضرور ہے کہ زیادہ تر صحافی خوش مزاج ہوتے خوش مزاجی ایک خوبی ہے جو کسی صحافی کی اضافی قابلیت ہے اگر آپ خوش مزاج نہیں یا آپ میں حس مزاق نہیں تو آپ جلدی کسی سے بے تکلف نہیں ہوسکتے ایک صحافی کے لیے سیاستدان یا کسی اہم شخصیت کو بے تکلف کرنا ضروری ہوتا انسان جتنا بے تکلف ہو گا تو اس سے کام کی بات کرنے میں اتنی ہی زیادہ آسانی ہوتی ہے اگر آپ خوش مزاج نہیں تو آپ کے چہرے پر مسکرائٹ ایسی ہو گی جسے کسی رونے والے کی شکل خوش مزاجی مسکرانے اور ہنسنے ہنسانے کا نام ہے اس سے چہرے کی ورزش ہوتی ہے اور اس سے چہرے کے مسام کھل جاتے پٹھے لچکدار ہو جاتے اس سے چہرے کی خوبصورتی میں اضافہ ہوتا ہے کسی صحافی کے لیے یہ سب ضروری ہے

imkan
17-12-2008, 01:16 AM
کیا صحافتی ذمہ داریوں سے گھریلو زندگی ڈسٹرب ھوتی ھے؟
یہ حالات اور ذمہ داریوں پر منحصر ہوتا ہے جو صحافی جتنا مصروف ہوگا اس کے گھر اور خاندان والے اس کے عدم موجودگی کا غیر حاضری کے اتنے ہی عادی ہو جاتے ہیں جس طرح فوجی خاندان زیادہ تر خانہ بدوشوں کی زندگی کے عادی ہو جاتے ہیں عام طور پر رپورٹر اور کالم نگار زیادہ سفر کرتے ہیں اور دوسری شعبوں کے لوگ جیسے نیوز روم کے لوگ سب ایڈیٹر وغیرہ اتنے زیادہ مصروف لوگ شمار نہین ہوتے تاہم وہ لوگ بھی راات کے کام کی وجہ سے عملا معاشرے سے کٹ ہی جاتے ہیں سالانہ چھٹیاں ہوتی ہیں جس ظرح ملازم پیشہ لوگ یا بیرون ملک رہنے والے لوگ ہوتے ہیں اس ظرح صحافی بھی ہوتے البتہ شکوے گلے زیادہ ہوتے ہیں کیونکہ خاندان سے کٹ کر رہنا بھی اچھی بات نہیں ہوتی خاص طور خاندان سے کٹ کر رہنے والوں کو بچیوں کے رشتوں میں خاصی دشواری کا سامنا ہوتا زیادہ کٹ جانے سے دوریاں پیدا ہو جاتی ہیں اس خلا ء کو پر کرنے کے لیے صحافیوں کی خواتیں اپنے خاندان سے برابر تعلق رکھتی ہیں اور یوں صحافی بھی خاندان کے حالات سے باخبر رہتے ہیں

MagicEyes
17-12-2008, 05:09 AM
جن کو ساتھ رکھنا یا خود جن بننا اس معاملے کو امکان بھائی کی مجبوری سمجھ کر معاف کردیا جائے وجہ یہ ہے امکان بھائی کو کالم تو پڑھانے تھے نا آپ نے دیکھا ہو گا چیٹ روم میں امکان سلام دعا کے بعد کالم کی بات کرتے ہیں یہ بات ان لوگوں کو خاص طور پر معلوم ہے جن کا امکان سے واستہ پڑ چکا ہے اصل معاملہ یہ کہ ہم نے کالم ُپڑّھانے کی منصبوبہ بندی کی اور یہ دیکھا کہ اس فورم پر خواتین کی تعداد زیادہ ہے اور اصل قاری بھی یہ ہی لوگ ہیں ہم نے عورتوں کی نفسیات سے کام لیا عام طور پر خواتین جنات وغیرہ سے ڈرتی ہیں اس لیے ہم نے کسی کو منتیں کر کے کالم پڑھائے کسی کو ڈراکر کسی کو حاضر جوابی سے متاثر کیا تو یہ سب کالم پڑھانے کے طریقے تھے ہم نے ان خواتین اور بچوں کو اتنا ڈرایا کہ اگر گھر میں بلی بھی برتن گرادے لوگ مان جائیں کے امکان بھائی کے جن آئے تھے سچ تو یہ ہے امکان بھائی بھی جنوں سے اتنا ڈرتے ہیں جنتا کوئی سب سے زیادہ بزدل خاتوں ڈر سکتی ہےمگر اب ایسا نہیں ہے جن اس مجبوری کو سمجھ چکے ہیں اور وہ انسانوں کی طرح اتنے بے رحم بھی نہیں کہ کسی کا ساتھ نہ دے سکیں جن اب امکان بھائی کے دوست بن چکے ہیں

salaam na mumkin bhai ,
haan bhai ham ko achi tarhaan pata hai aap nay hamaray pechay bhikaafi bhoot lagai hain ,laiken ham kuch zada hi dheet hain mene aaj tak nahi parhai ;d;d.
laiken pakka wada aik dafa parhongi zaroor ,
haan to aaap hamain yeh batain aap zabardasti kiyon sab say aap nay blogs parhwaatay hain , kya itnay bekaar hotay hain k koi parhnaa hi nahi chahta yaa aap k bhoton say sab dar gai hain aur nahi aatay parhnay ?

MagicEyes
17-12-2008, 06:24 AM
wesay bhai logon ka sar dokhaanay k baad aap dabatay bhi hain ya pehlay say hi pain kileer ka gift saath detay hain ;d

imkan
17-12-2008, 08:06 AM
کیا کسی بھی اھم شخصیت کی نجی زندگی میں دخل اندازی کرنا صحافتی زمرے میں آتا ھے؟
اہم شخصیت ملکی ہو یا مذہبی حکمران ہو یا محض سیاستدان جب اسکی شخصت اہم ہو جائے تو اس کی ذاتی اور نجی زندگی نہیں رہتی جب صدر کلنٹن پر مونیکا لوسکی کا اسکینڈل بنا تھا امریکا ایک سیکولز جہوری ملک ہے تو اس معاشرے میں اتنی بڑی بات نہ سمجی جاتی امریکیون کو صدر کا یہ جھوٹ پسند نہ آیا جب کوئی حکمران بن جائے قانوں نافذ کرنے ولا ہو تو اس کی نجی زندگی بھی عوام کی ہوتی اس کا محاسبہ لازمی ہو گا کوئی حکمران عوام کو دھوکہ دے جائے تو کیا کہا جاسکتا ہے نجی زنگدگی عام فرد کی ہوتی حکمران کی نھیں عام فرد کی نچی زندگی میں مداخلت نہیں کی جاسکتی اگر جسٹس افتخار کو نجی زندگی کے ضمن میں بیٹے کے الزام مین ہٹایا جا سکتاہے تو کوئ اور اس الزام سے بچا کیوں ہے اس سوال پر مکمل جواب اگے آتے گا

Khuloos
17-12-2008, 08:10 AM
امکان بھائی! یوں بیچ میں انٹرویو پڑھے بغیر حصہ لینے کا میرا ارادہ بھی نہیں تھا۔ ۔ اور مزہ بھی نہیں اتا۔ ۔ پر کیا ہے کہ نقد سوال کو ٹھکرانا بھی ناقدری ہوگی۔ ۔ ۔
ابھی یہ جو منتظر الزیدی کی طرف سے بش صاحب پر جوتے بازی کی گئی۔ ۔
اسے بعض حلقوں کی جانب سے صحافیانہ طرز عمل کے خلاف بھی کہا گیا۔ ۔ ۔ آپ کیا کہتے ہیں۔ ۔ کتنا مناسب اور کتنا غیر مناسب۔ ۔ اور کیوں؟

imkan
17-12-2008, 08:44 AM
امکان بھائی! یوں بیچ میں انٹرویو پڑھے بغیر حصہ لینے کا میرا ارادہ بھی نہیں تھا۔ ۔ اور مزہ بھی نہیں اتا۔ ۔ پر کیا ہے کہ نقد سوال کو ٹھکرانا بھی ناقدری ہوگی۔ ۔ ۔
ابھی یہ جو منتظر الزیدی کی طرف سے بش صاحب پر جوتے بازی کی گئی۔ ۔
اسے بعض حلقوں کی جانب سے صحافیانہ طرز عمل کے خلاف بھی کہا گیا۔ ۔ ۔ آپ کیا کہتے ہیں۔ ۔ کتنا مناسب اور کتنا غیر مناسب۔ ۔ اور کیوں؟
یہ دنیا بھر میں کسی ملکی سربراہ پر کسی صحافی کا پہلا جوتا ہے اس لیے سب صحافیوں کو عیجب لگے گا کئی صحافی تنظیمیں برا بھی منائیں گی مگر جو ہوا حیران کن حدتک حیرت انگیز ہے جزبات انسانیت کا ایک امتیازی وصف ہیں جس سے انسانیت کو الگ نہیں کیا جاسکتا اور حب الوطنی بھی صحافیوں کا خاص وصف ہے جس کا انتہائی اظہار اس واقعے سے سامنے آیا ہے جہاں تک اس اقدام کا سوال ہے یہ واقعی صحافتی اصولوں کے خلاف ہے ایسا صحافی کو نہیں کرنا چاہیے تھاحالت امن میں اصول مقدم ہوتے ہیں جزبات پر اور حالت جنگ میں جزبات اصولوں پر مقدم ہوتے ہیں جنگ اصولوں سے نہیں جزبات سے لڑی جاتی ہے عراق حالت جنگ میں اور امریکا اس پر قابض بھی ہے اس لیے یہاں آصولوں پر جزبات غالب آگئے جس صحافی نے جوتا مارا ہے وہ کوئی عام صحافی ہر گز نہیں عام صحافی امریکی صدر کی پریس کانفرس مین شریک نہیں ہوسکتے اس لیے یہ کہنا کہ انہیں یہ اصول معلوم نہ تھے درست نہ ہوگا وہ صحافی آصولوں پر جزبات کو قابو نہ رکھ سکے جہان تک اس اقدام کی پزیرائی کا سوال ہے مسمان عوام کیا مغرب نے بھی اسیے سہرایا ہے جن مغرب کے لوگوں نے اس اقدام کو سہرایا کیا وہ جزبات نہیں کیا ہے اس سے ثابت ہوا کہ جزبات کسی خاص مذہب یا قوم کی خاصیت نہیں ہوتے ان کا ااظہار کوئی بھی کرسکتاہے کوئی بھی صحافی بعد میں بنتا ہے وہ پہلے انسان ہوتاہے اور یہ انسانی جزبات کا اظہار ہے ہم پہلے بھی عرض کر چکے ہیں کہ صحافی لاکھ غیر جانت دار رہے علاقائی اور قومی اثران پر بھی ہوتا ہے حب الوطنی ایک ایسا علاقائی اور ملکی اثر ہے جس میں ہر خطے کا صحافی متلاء ہوتا اور ہر ملک صحافیوں کی حب الوطنی کو خوبی شمار کرتاہے یہ حب الوطنی میں ڈوبی ہو ئی نفرت ہے جس کا مظاہرہ ہو ا آپ اسے لاکھ براکہ ڈالیں وہ صحافی اور نہ سہی عراقی قوم کا ہیرو بن گیا ایک قوم کا ہیرو دشمن کا غدار ہوتاہے صدر بش اس صحافی پر اگر تشدد نہ ہونے دیتے تو بش ہیرو بن جاتے مگر اس کی ہڈیا ں پسلیاں تڑوا کر بش نے ثابت کر دہا ہے جوتا مارنے والا صحیح تھا

imkan
17-12-2008, 08:56 AM
salaam na mumkin bhai ,
haan bhai ham ko achi tarhaan pata hai aap nay hamaray pechay bhikaafi bhoot lagai hain ,laiken ham kuch zada hi dheet hain mene aaj tak nahi parhai ;d;d.
laiken pakka wada aik dafa parhongi zaroor ,
haan to aaap hamain yeh batain aap zabardasti kiyon sab say aap nay blogs parhwaatay hain , kya itnay bekaar hotay hain k koi parhnaa hi nahi chahta yaa aap k bhoton say sab dar gai hain aur nahi aatay parhnay ?
زبردستی پڑھانے کا مقصد ایک بار کالم کا چکسہ لگانا مقصود ہوتا ہے تحریر اور الفاظ لکھاری کی اولاد کی طرح ہوتے ہیں اولاد سے جو محبت ہوتی یہ انسان کو بار بار یاد دلاتی ہے آپ نے دیکھا ہوگا کئی لوگ اپنی اولاد کا خواہ مخواہ ہر جگہ تعارف کررہے ہوتے ہیں شاعر ادیب اور لکھاری کی کوشش ہوتی ان کی تحریر کو زیادہ پڑھا جائے

مروہ ڈار
17-12-2008, 08:12 PM
اوہو تو آپ کا انٹروویو ہو رہا ہے واہ
جی پہلے یہ بتائیں

آپ کے کتنے بچے ہں
ہاہاہہاہاہ

سوری آئی ایم کان آپ کا رئیل نیم کیا ہے بھئ

imkan
17-12-2008, 09:01 PM
اوہو تو آپ کا انٹروویو ہو رہا ہے واہ
جی پہلے یہ بتائیں

آپ کے کتنے بچے ہں
ہاہاہہاہاہ

سوری آئی ایم کان آپ کا رئیل نیم کیا ہے بھئ
بھانجوں اور بھتیجوں کی کافی تعداد ہے ہم ان ہی کو فی الحال اپنی اولاد سمجتھے ہیں اور ان میں زیادہ تر کو بیٹا کہہ کر بلاتے ہیں اللہ کی دین ہے اور اللہ کا شکر ہے جہاں تک اپنی حقیقی اولاد کا تعلق ہے فی الحال کوئی اولاد نہیں ہم قطعی مایوس نہیں کیوں کے مایوسی گناہ ہے اس لیے ہم مایوس نہیں ہوتے کوئی انسان کامل نہیں ہوتا کوئی نہ کوئی کمی رہ جاتی ہے یہ ہی انسانیت ہے مکمل اللہ تعالی کی ذات ہے انسان کا انسان ہونا ہی اس نامکمل ہونے کی علامت ہے ناکامی انسان کو بناتی ہے آگے بڑھنے کا حوصلہ دیتی ہےبس یہ ہی ایک کمی ہماری زندگی میں بھی ہے کہ ہماری ابھی تک شادی نہیں ہوئی اب آپ کو سمجھ آیا ہوگا ورنہ امکان کی علم کی دوکان کا تو آپ کو معلوم ہوگا نا;d;d;d;d

imkan
17-12-2008, 09:15 PM
صحافت کی تین خوبیاں اور تین خرابیاں آپ کی نظر میں کون کون سی ھیں؟
ہمارے خیال میں تین خوبیاں یہ ہوسکتی ہیں طاقت شہرت اور عزت اس لیے کہ طاقت اور شہرت تو حکومت اور شوبز میں بھی ہوتی ہے مگر وہاں عزت نہیں ہوتی آج کل تو جوتے بھی لگنے لگے ہیں حکمرانوں کو اور تین خامیاں دوسرے کے مسائل سامنے لاتا ہے اپنے مسائل نہیں لکھ سکتا دوسری خامی اب صحافت خدمت مشن کی بجائی صنعت بن گئی ہے تیسرا صحافت آزاد نہیں یہ مالکان کی صحافت ہے پالیسی مالکان کی چلتی ہے عوامی مسائل کی جگہ سیاست نے لے لی ہے

imkan
17-12-2008, 09:32 PM
wesay bhai logon ka sar dokhaanay k baad aap dabatay bhi hain ya pehlay say hi pain kileer ka gift saath detay hain ;d
میں غیریب آدمی ہوں دوا خرید کر نہیں دے سکتا دعا کرتا ہوں جس شخص کے کالم پڑھ کر آپ کے سر میں درد ہوتا وہ خود کتنے درد میں ڈوب کر لکھتا ہوگا کیا آپ کو اس کا اندازہ ہے کالم لکھتے وقت بساااوقات منصبوبہ بندی اور خاکہ سازی یا جملہ بندی اور کسی خاص جملہ کو کسی خاص جگہ بھٹھانے میں سوچ سوچ کر میرے سر میں بھی درد ہونے لگتا ہے اور ایک خاص بات سر درد سے انسان کو اللہ تعالی کی عطا ء کردہ دماغ کی نعمت کا احساس پیدا ہوتا ہم نے سنا ہے کہ فرعون کے سر میں کبھی درد نہیں ہوا اس سے ثابت ہوا جن لوگوں کے سر میں درد ہوتا یہ ان کے مومن ہونے کی علامت ہے اور مسلمان تو آزمائش میں آتا ہےکالم پڑھنے سے معلوم ہوگا آپ کتنے مسلمان ہیں;d;d;d;d

سمر
18-12-2008, 12:19 PM
اگر آپ کو ایک اور موقع دیا جائے تو دوبارہ آپ کیا بنا پسند کریں گے؟

سمر
18-12-2008, 12:20 PM
پاکستان میں صحافت اور صحافی کا مستقبل کیسے دیکھتے ھیں؟

سمر
18-12-2008, 12:22 PM
آج ٹی وی کے صحافی طلعت حسین کو میں کافی اھمیت دیتا ھوں،آپ صحافت کے میدان میں انھیں کیسا سمجھتے ھیں؟

سمر
18-12-2008, 12:25 PM
اگر آپ کو رپورٹنگ کے لئے افغانستان یا اعراق بھیجا جائے تو کیا آپ جانے کے لئے تیار ھو جائیں گے؟

imkan
18-12-2008, 01:27 PM
اگر آپ کو ایک اور موقع دیا جائے تو دوبارہ آپ کیا بنا پسند کریں گے؟
میں تو صحافی ہی بنوں گا بڑے بڑے ملکوں کے سربراہوں نے ملکوں کی سربراہی کے بعد بھی صحافی بننے کی تمنا کی ہے;d;d;d

imkan
18-12-2008, 01:36 PM
آج ٹی وی کے صحافی طلعت حسین کو میں کافی اھمیت دیتا ھوں،آپ صحافت کے میدان میں انھیں کیسا سمجھتے ھیں؟
طلعت حیسن پی ٹی وی سے آئے ہین تجزیہ کرتے وقت پاکستان کے زمینی حقائق کو فرموش نیں کرتے اس لیے ان کے تجزیہ جاندار ہوتاہے اور ان کی سوچ عوامی ہے مسائل پر ان کی نظر گہری ہے لگتا ہے کہ وہ خود سیلف میڈ ہیں ذاتی محنت کے بل بوتے پر ترقی کرنے والے لوگ زمینی حقائق اور اپنے ماضی کی تنگیوں کو بھولتے نہیں اس لیے ان بات مین وزن ہوتا ہے ان کی کوشش ہوتی نئی بات سامنے لائے جاتے اور نی تحقیق سامنے لائے جائے ایک کالم میں ان کا تجزیہ یوں تھا لوگوں نے گاڑیان بنکوں نے ادھار لیں اور گاڑیاں زیادہ ہیں مگر پٹرول کے پیسے نہیں موبائل تو ہیں مگر کارڈ نہیں اس سے آپ کو گہرائی کا اندازہ ہو گا

Lubna Ali
19-12-2008, 05:59 AM
کچھ اخبارات جن کی خبریں معیاری اور قابل اعتبار ھو تی ہیں ،اُن کی
اشاعت بند
ھو نے کی وجوھات کیا ھو تی،کیا یہ وجہ سیاسی ھوتی ھے یا ان کو مالی مسائل کا سامنا ھو تا ہے،،

Lubna Ali
19-12-2008, 06:03 AM
ضرب مو من کی اشا عت بند ھو نے کی وجو ھات کیا ہیں ?

imkan
21-12-2008, 03:36 PM
کچھ اخبارات جن کی خبریں معیاری اور قابل اعتبار ھو تی ہیں ،اُن کی
اشاعت بند
ھو نے کی وجوھات کیا ھو تی،کیا یہ وجہ سیاسی ھوتی ھے یا ان کو مالی مسائل کا سامنا ھو تا ہے،،
تمام دوستوں سے معذرت ہم چند دن مصروف رہیں گے تاہم آنے کی کوشش کریں گے جہاں تک لبنا آپ کے سوال کا تعلق ہے اچھے اخبار اشتہارات کے بغیر نہیں چل سکتے اور اشتہارات پر بھی طاقتور اخباروں کی اجارہ داری ہوتی ہے اشتہار اور خبر کو ملایا نہیں جاسکتا آپ نے فرنٹ اور بیک دونوں صفحات کے ایک سو بیس خبیریں تیار کرلیں پتہ چلا فرنٹ ااور بیک کا لوئر ہاف پر اشتہارات اآگئے ہیں تو آپ کو آدھی خبیرین کم کرنی ہونگی اس سے قاری متائثر ہوتا ہے اور اگر آپ نے خبر پر توجہ دی اور اشتہار کو نظر انداز کر دیا تو اپ کا اخبار تین چار ماہ چلے گا اور بند ہو جائے گا

imkan
21-12-2008, 03:39 PM
ضرب مو من کی اشا عت بند ھو نے کی وجو ھات کیا ہیں ?
ضرب مومن حکومتیں پابندیوں کا شکار رہتا ہے اور کبھی اس کی مالی حالت بھی خراب ہو جاتی ہے وجہ یہ کہ ادارہ کسی قسم کا پرافٹ نہیں کما رہا بلکہ الٹا نقصان میں جاتا ہے مگر اس کے راٹر بہت مضموں بہت مضبوط ہوتے ہیں

imkan
21-12-2008, 03:59 PM
اصل میں مصروفیت کی وجہ یہ ہے کہ مجھے ناگزیر پیشہ وارانہ ضرورت کے تحت روزنامہ اسلام کو چھوڑنا ہو گا اس معاملے میں مصروف رہوں گا مجھے ایسا کیوں کرنا ہوگا اس کی وجہ یہ ہے اسلام میں میری پیشہ ورانہ اور مالی ترقی رک گئی ہے کسی بھی ادارے میں جب ان دو ترقیوں میں سے کوئی ایک نہ رکے تو آدمی دوسری کو جھیل لیتا ہے مثلا آپ کو تنخواہ اچھی مل رہی ہو تو آپ عہدے میں ترفی نہ ہونے پر سمجھوتہ کرلیں گے اور اگر اپ کا عہدہ بلحاط تجربہ پڑھ رہا ہےتو آپ پیشہ وارانہ ترقی کی خوشی میں کم تنخواہ پر گزارہ کر سکتے ہیں آج میری صورت حال یہ ہئ ہے ہے جہاں تک میرے نام کا تعلق ہے پاکستان کے تمام اخباروں میں کالم چھپتے ہیں سواء ایکسپریس کے یہ جنگ کی وجہ سے شائع نہیں کرتا تو مجھے نام کی بجائے اب مجھے پیشہ وارنہ ترقی اور کسی اور شعبہ میں جانے کی ضرورت محسوس ہورہے ہے اس حوالے سے ایک چھوٹے سے اور کراچی کے نیے اخبار کے ادارتی صفحے کے انچارج کی ذمے دار ی کی بات چل رہی ہے جوں ہی تبدلی عمل میں اائے گی آپ کے تعارف کے لیے اخبار کا لنک فراہم کردیا جائے گا اس معاملے میں آپ سب کو اعمتماد میں لینے کی کوشش کروں گا اس حوالے سے کوئی سوال بھی آپ کھل کر کرسکتے ہیں

سمر
26-12-2008, 05:30 PM
حقیقت اگر رائے عامہ کے خلاف ھو تو کیا صحافی آرٹیکل لکھتے ھوئے مشکل محسوس کرتا ھے؟

imkan
07-01-2009, 06:12 PM
حقیقت اگر رائے عامہ کے خلاف ھو تو کیا صحافی آرٹیکل لکھتے ھوئے مشکل محسوس کرتا ھے؟
رائے عامہ کے خلاف لکھنا ہی فن ہے اس میں مشکل ضرور ہوتی مگر اسٹوری کو مضبوط بنانا پڑتا ہے تسلسل اور روانگی اور ایک کہانی سے کہ آپ اپنی بات ثابت کر سیکتے ہیں رائے عامہ کو قائل کرنا ہی تو صحافت ہے مجھے معلوم ہوتا تحریر میں رائے عامہ کو قائل کرلیتا ہوں بات دلائل کی ہوتی ہے دلائل جتنے مضبوط ہوں رائے عامہ قائل ہوئےبغیر نہیں رہ سکتی

Lubna Ali
14-01-2009, 05:25 PM
السلام علیکم ۔۔
آپ کافی دنوں سے غائب ھیں پتہ ھی نہیں چلتا کب آئے کب گئے۔۔خیر
میری پٹاری سے آپکے لئے اہک اور سوال
کسی نیک مقصد کو حاصل کرنے کے لئے آپ سفارش یا رشوت دینا کھاں تک درست سمجھتے ھیں۔۔۔کیا کبھی یہ سب کرنے کی نوبت آئی?

imkan
19-01-2009, 07:00 PM
سفارش کی کبھی ضرورت نہیں پڑی رشوت دینے کو ہم فضول خرچی سمجھتے ہیں ویسے علماء کرام نے جائز کام کے لیے رشوت کو مجبوری میں حرام نہیں کہا مگر اس سے رشوت خوروں کی حوصلہ افزائی ہوتی ہے اگر جہاں تک سفارش کا معاملہ ہے جو قابل ہے اس کو سفارش کی ضروت نہیں اور جو قابل نہیں وہ آب کی سفارش کے قابل نہیں

imkan
12-02-2009, 03:41 PM
Ap ki pehil salary kitni thi aur ap ne us ka kiya kia
پہلی سلیری ہفت روزہ فاتح انٹرنیشنل کراچی سے غالبا 1999میں لی تھی یہ ایک ہفتہ دو اسٹوریوں پر ایک ہزار روپیہ تھی اس حساب سے یہ ایک ماہ کی چار ہزار بنتی تھی اب یادنہیں کہاں خرچ کی تھی ظاہر ہے ذاتی استعمال میں آئی ہو گی

Minha Malik
12-02-2009, 04:03 PM
اگر جہاں تک سفارش کا معاملہ ہے جو قابل ہے اس کو سفارش کی ضروت نہیں اور جو قابل نہیں وہ آب کی سفارش کے قابل نہیں


ہمممم۔
معذرت کے ساتھ میں اس بات سے متفق نہیں ہوں ۔
ویسے امکان بھائی کیا آج کل کے دور میں آپ کا کیا خیال ہے یہ بات کس حد تک درست ثابت ہو گی؟؟

imkan
14-02-2009, 03:16 PM
ہمممم۔
معذرت کے ساتھ میں اس بات سے متفق نہیں ہوں ۔
ویسے امکان بھائی کیا آج کل کے دور میں آپ کا کیا خیال ہے یہ بات کس حد تک درست ثابت ہو گی؟؟
یہ میرا ذاتی عمل ہے اور لوگوں کی بات نہیں میں نے آج تک کسی کی سفارش نہیں کی جہاں تک کسی کی قابلیت کا تعلق ہے اور اس کے تعارف کی ضروت ہے میں اس کو سفارش نہیں سمجھتا سفارش ایک نااہل آدمی کو کسی جگہ کسی قابل کا حق مار کر زبردستی لگوانے کو کہتے ہیں اگر آپ قابل ہیں اور آپ کے تمام کولیگ آپ کے کام کو جانتے ہیں تو یہ تمام لوگ آپ کا تعارف ہونے پھر آپکو اپنا تعارف کروانے کی ضرورت نہی محنت سے بڑھ کر کوئی چیز نہیں دنیا میں سب سے مشکل کام محنت ہے دنیا میں محنتی افراد کی مانگ میں کبھی کمی نہیں آتی دنیا کے تمام بڑے اداروں کو آج بھی محنتی افراد کی ضرورت ہے یہ کہاں ضروری ہے آپ ہمیشہ ہی بڑے عہدے کی تلاش میں رہیں چھوٹے کام سے بھی آپ اپنے آپ کو بڑے عہدے کے لائق بنا سکتے ہیں کون ایسا کریگا میں آج جس ادارے میں ہوں وہاں میں نے کوئی سفارش نہیں کروائی مجھے آفر کی دی گہ میری تنخواہ جو مقرر ہوئی تھی پہلے ماہ ہی اس سے بّڑھ کر ملی ہے ان لوگوں نے اسے اور ٹائم کا نام دی ہے جو میرے وہم و گمان میں بھی نہیں تھا آج میں اپنے ایک شاگرد اور ایک جونیر ساتھی کے ماتحت ہوں ہمارے صحافت میں اس بات کو سب سے زیادہ معیوب سمجھا جاتاہے خود میں کئی جگہوں پر اس لیے نہیں گیا ہے وہاں میرے ماتحت تھے مجھے یہاںاپنے ماتحت بھی کوی پریشانی نہیں ایسا کون کریگا کیا آپ ایسا کروگی محنت سب کمزوریوں پر پر دہ ڈال دیتے ہے ہم خرگوش کی طرح چھلانگے مار کر سو جاتے اور کچھوا آپستہ چل کر منزل پر پہچ جاتا ہے اور محنت کسی سفارش کی متحتاج نہیں ہوتی اس پر میں مزید ایک لیکچر دینے کا ارادہ رکھتاہوں

Lubna Ali
14-02-2009, 04:05 PM
کیا یہ سچ ہے کہ صحافت میں نئے آنے والوں کو بہت مشکلات کا سامنا ہوتا ہے ۔۔۔اور کبھی کبھی کچھ سینئر لوگ نئے آنے والوں کی تحریریں یا کالمز اپنے نام سے شایع کر دیتے ہیں

imkan
16-02-2009, 01:33 PM
کیا یہ سچ ہے کہ صحافت میں نئے آنے والوں کو بہت مشکلات کا سامنا ہوتا ہے ۔۔۔اور کبھی کبھی کچھ سینئر لوگ نئے
آنے والوں کی تحریریں یا کالمز اپنے نام سے شایع کر دیتے ہیں
نئے آنے والے کو دنیا کے ہر شعبے میں وقتی مشکلات کا سامنا کرنا
پڑتاہے یہ پریشانی صرف صحافت کے ساتھ خاص نہیں ۔صحافت کا کام مشکل آپ نے جو تحریر لکھی ہے وہ آج اس شعبے میں 50سالہ تجربے والے کی تحریر جیسی کیسے ہو سکتی ہے تحریر میں تو اگر ایک غلطی رہ جاتے اخبار چھپنے کا نشر ہونے پر وہ غلطی ایک نہیں لاکھ غلطی بن جاتی ہے

imkan
16-02-2009, 01:58 PM
کیا یہ سچ ہے کہ صحافت میں نئے آنے والوں کو بہت مشکلات کا سامنا ہوتا ہے ۔۔۔اور کبھی کبھی کچھ سینئر لوگ نئے آنے والوں کی تحریریں یا کالمز اپنے نام سے شایع کر دیتے ہیں
جہاں تک سوال تحریر چوری کر کے اپنے نام لگانے کا ہے یہ کسی اناڑی کا کام ہو سکتا ہے کسی صحافی کے لیے سب سے اہم سرمایہ اس کانام ہوتا ہے کیونکہ اس کا سارا حلقہ احباب اس کے نام پر بنتا ہے اخباری فیلڈ میں بھی نام چلتاہے آپ جاوید چوہدری اور حامد میر سمیت انصار عباسی ان تمام لوگوں کو نام سے جانتے ہیں ان سے آپ کی ملاقات نہیں ہوگی کیا یہ نامی گرامی صحافی یہ برداشت کر سکتے یہں کہ ان پر تحریر چوری کا الزام لگے صحافی تو اخبارات کے دیگر تمام کالم نگاروں کو اس لیے پڑھتے ہیں کہ کہیں ان کا کوئی لفظ کسی سے ملتا جلتا نہ ہو خیال کی نقل مارنا تو بہت بڑا گناہ سمجھا جاتا ہے آپ میری مثا ل لے لیں میں ایک چھوٹے سے اخبار کے ادارتی صفحے پر ہوں جہاں کچی اور لفاظی پر مبنی تحریرں آتی ہین میرے پاس جامعہ کراچی اور وفاقی اردو یونیوریسٹی کراچی کے شعبہ صحافت کے نوجوان بچے اوربچوں کی تحریرٰں بکژت آتی ہیں آپ کو میری جانب سے اجازت ہے آپ ان سے پوچھ لیں بکثرت ایسا ہوتاہے ان تحریروں کو معیاری بنانے کے لیے میں اپنی زاتی معلومات کا اضافہ کرتاہوں خوبصورت محاور ے ڈالتا ہوں کالم کا ابتدائیہ اور اختامیہ دلچسپ بناتا ہوں جبکہ ان لوگوں کو یہ معلوم ہی نہیں کہ وہ کون ہے وہ لوگ اس بات کا شکریہ بھجواتے ہیں جو ہمارے دیگر شعبے تک پہنچتا ہے آپ ہمارے اخبار کی ویب سائٹ پر
جا کر روزانہ اس کا ادارتی صفحے چیک کر سکتی ہیں
lin yh hi (http://muqadma.com)

Lubna Ali
16-02-2009, 02:04 PM
کچھ دنوں پہلے ایک ناول کا پڑھنا ہوا تھا ان کے رائیٹر نے ہی کچھ ایسی بات کہی تھی۔۔۔کہ ان کی تحریروں کی سچی کہانی بنا کر پیش کر دیا گیا ان کا نام نہیں دیا ۔۔۔کیا ایسا ہوسکتا ہے کہ ایک نئے لکھنے والے کی تحریر میں وہی پختگی ہوں جو ایک سینئر کی تحریر میں ہوتی ہے

Lubna Ali
16-02-2009, 02:07 PM
آپ میری مثا ل لے لیں میں ایک چھوٹے سے اخبار کے ادارتی صفحے پر ہوں جہاں کچی اور لفاظی پر مبنی تحریرں آتی ہین میرے پاس جامعہ کراچی اور وفاقی اردو یونیوریسٹی کراچی کے شعبہ صحافت کے نوجوان بچے اوربچوں کی تحریرٰں بکژت آتی ہیں آپ کو میری جانب سے اجازت ہے آپ ان سے پوچھ لیں بکثرت ایسا ہوتاہے ان تحریروں کو معیاری بنانے کے لیے میں اپنی زاتی معلومات کا اضافہ کرتاہوں خوبصورت محاور ے ڈالتا ہوں کالم کا ابتدائیہ اور اختامیہ دلچسپ بناتا ہوں جبکہ ان لوگوں کو یہ معلوم ہی نہیں کہ وہ کون ہے وہ لوگ اس بات کا شکریہ بھجواتے ہیں جو ہمارے دیگر شعبے تک پہنچتا ہے آپ ہمارے اخبار کی ویب سائٹ پر
جا کر روزانہ اس کا ادارتی صفحے چیک کر سکتی ہیں
lin yh hi (http://muqadma.com)
اففففففففففف اتنا غصہ~
آپ کو ایسا لگا کہ میں آپ کو کہہ رہی ہوں
میں تو ایک جینرل سی بات پوچھ رہی تھی جو عموماً ہمارا میڈِیا دکھاتا ہے کہ نئے لوگوں کے ساتھ کیا نانصافی ہوتی ہے
جیسے نئے میوزک ڈائریکٹر کی دھنے اپنے نام سے لے لی جاتی ہیں
نئے شاعروں کے اشعار وغیرہ وغیرہ

imkan
18-02-2009, 05:22 PM
اففففففففففف اتنا غصہ~
آپ کو ایسا لگا کہ میں آپ کو کہہ رہی ہوں
میں تو ایک جینرل سی بات پوچھ رہی تھی جو عموماً ہمارا میڈِیا دکھاتا ہے کہ نئے لوگوں کے ساتھ کیا نانصافی ہوتی ہے
جیسے نئے میوزک ڈائریکٹر کی دھنے اپنے نام سے لے لی جاتی ہیں
نئے شاعروں کے اشعار وغیرہ وغیرہ
اس پر میں اتنا کہہ سکتا ہوں کہ مارو بھی اور رونے بھی نہ دو

Lubna Ali
18-02-2009, 05:43 PM
اس پر میں اتنا کہہ سکتا ہوں کہ مارو بھی اور رونے بھی نہ دو
کہیں آپ یہ تو نہیں سوچ رہے کہ میں نے اس وجہ سے لکھا کیونکہ آپ سب کو آفر کرتےء ہیں کالم لکھنے
حد ہوتی ہے بدگمانی کی بھی:(
>:(
توبہ میری اب کوئی سوال کیا تو

imkan
18-02-2009, 05:55 PM
کہیں آپ یہ تو نہیں سوچ رہے کہ میں نے اس وجہ سے لکھا کیونکہ آپ سب کو آفر کرتےء ہیں کالم لکھنے
حد ہوتی ہے بدگمانی کی بھی:(
>:(
توبہ میری اب کوئی سوال کیا تو
معزرت سوری
سوال سوال ہوتا ہے اور جواب جواب اس کا مطلب یہ نہیں ہوتا کہ اس میں پوچھی گئی بات ذاتی ہوتی ہے میں نے صحافیوں پر الزام کو دھونے کے لیے مکمل وضاحت کی تھی اور آخری بات تو میں نے مذاقا لکھی تھی آخر اتنی مزاق کی بھی اجازت نہیں کیا
سوال آپ نہیں کریں گی تو اور کون کریگا امکان بھائی کے جنات کیا بھولا دییے آپ نے
کالم تو آپ کو لکھنا پڑےگا اس طرح جان نہیں چھوٹے گی